جموں کشمیر میں حالات بگاڑنے والوں کو بخشا نہیں جائے گا: فوجی سربراہ

سرینگر//جموں کشمیر میں حالات کو بگاڑنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی اور جو بھی اس میں ملوث پایا جائے گا ان کے خلاف کارروائی ہو گی کا دعویٰ کرتے ہوئے فوجی سربراہ جنرل منوج پانڈے نے کہا کہ سرحدوں کی حفاظت کیلئے فوج متحرک ہے اوعسکریت پسندوں کی جانب سے اُس پار ہونے والی ہر کوشش کا بھر پور انداز میں جواب دیا جائے گا ۔
تفصیلات کے مطابق نئی دلی میںجاری فوجی کمانڈروں کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فوجی سربراہ جنرل پانڈے نے کہا کہ فوج نے ہمیشہ سے ملک کی حفاظت میں صفہ اول پر موجود رہتی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ ہر محاذ پر فوج ملک کی حفاظت کیلئے ہمیشہ تیاری کی حالت میں رہتی ہے اور ہم نے پاکستان اور چین کے ساتھ لگنے والی سرحدوں پر بھی فوج کی بہادری کے واضح ثبوت دیکھیں ہے ۔
جنرل منوج پانڈے نے کہا کہ پاکستان اور چین کے سرحدوں کے ساتھ ساتھ جموں کشمیر میں حالات کو قابو میں رکھنے کیلئے فوج متحر ک ہے اور فوج نے ملک کی حفاظت میں جو قربیانیاں پیش کی ہے اس کو کوئی بھی بھول نہیں سکتا ہے ۔
فوجی سربراہ نے کہا کہ لائن آف کنٹرول چاہئے وہ پاکستان کے ساتھ لگنے والی ہو یا چین کے ساتھ ہوئے کوئی بھی کارروائی ہو گی تو اس کا بھر پور انداز میںجواب دیا جائے گا ۔ برفباری کے دوران فوجیوں کی تیاریو ں کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوںنے بتایا کہ کوئی بھی کوشش سرحد کے اُس پار سے ہو گی تو اسکو کامیاب نہیںہونے دیا جائے گا اور کسی بھی ملک کی ہمیت نہیںہے کہ وہ بھارت کے خلاف کوئی بھی مذموم حرکت کرنے کی سوچ لیں۔
فوجی سربراہ نے کہا کہ سرحدوں پر کسی بھی کارروائی کیلئے فوج ہمیشہ تیاری کی حالت میںہوتا ہے اور آگے بھی رہے گا اور اس طرح کی کوئی بھی کارروائی جس سے ملک کی سیکورٹی اور سالمیت کو نقصان پہنچے اس کو کامیاب نہی ہونے دیا جائے اور ہم لوگوں کی یقین دہانی کرتے ہیںکہ سرحدوں کو محفوظ رکھنے میںکوئی بھی دقیقہ فرگزشت نہیں کیا جائے گا ۔