کٹھوعہ انکاﺅنٹر میں گینگسٹر ہلاک، زخمی پولیس افسر علاج کے دوران از جان

عظمیٰ ویب ڈیسک

جموں// گورنمنٹ میڈیکل کالج (جی ایم سی) ہسپتال کٹھوعہ کے قریب پولیس کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ایک انتہائی مطولب گینگسٹر کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ہے، جس دوران ایک پولیس افسر بھی مارا گیا ہے۔
واقعہ میں زخمی پروبیشنری سب انسپکٹر دیپک شرما، جسے انکاونٹر کے دوران سر پر چوٹ لگی تھی، علاج کے دوران فوت ہو گیا، واقعہ میں ایک خصوصی پولیس افسر (ایس پی او) بھی زخمی ہوا ہے۔
پولیس ترجمان نے بتایا کہ ایک خفیہ اطلاع پر کاروائی کرتے ہوئے، پولیس اہلکاروں کی ایک ٹیم نے گینگسٹر واسودیو کا پیچھا کیا، جو رام گڑھ پولیس تھانہ میں درج ایک قتل کیس کے اہم ملزم ہے، جس کے نتیجے میں منگل کی رات تقریباً ساڑھے دس بجے گورنمنٹ میڈیکل کالج ہسپتال کے قریب فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔
اُنہوں نے مزید کہا کہ واسودیو انکاونٹر میں مارا گیا جبکہ اس کا ایک ساتھی زخمی ہوا ہے۔
سب انسپکٹر دیپک شرما کے سر میں چوٹیں آئیں تھیں جبکہ 40 سالہ سپیشل پولیس آفیسر انیل کمار کو بھی چوٹیں آئیں ہیں۔
ترجمان نے بتایا کہ انہیں ابتدائی طور پر کٹھوعہ کے جی ایم سی ہسپتال میں داخل کرایا گیا اور بعد میں انہیں پٹھانکوٹ کے امندیپ ہسپتال منتقل کیا گیا۔ بدھ کی صبح علاج کے دوران شرما کی موت ہوگئی۔
انہوں نے مزید کہا کہ پولیس افسر کی لاش کو کٹھوعہ کے جی ایم سی ہسپتال لے جایا گیا ہے۔
ایکس پر ایک پوسٹ میں، ایل جی منوج سنہا نے کہا،”میں پی ایس آئی دیپک شرما کی بہادری اور بے مثال ہمت کو سلام کرتا ہوں، جنہوں نے کٹھوعہ میں ایک انتہائی مطلوب گینگسٹر کو بہادری سے لڑتے ہوئے اور مار گرا کرعظیم قربانی دی۔ ان کی عظیم قربانی ہمارے دلوں میں نقش رہے گی۔ شہید دیپک شرما کے اہل خانہ سے دلی تعزیت”۔
اُنہوں نے مزید کہا، “قوم شہید کے خاندان اور جموں و کشمیر پولیس کے ساتھ یکجہتی کے ساتھ کھڑی ہے، جن کی لگن، دلچسپی اور ہمت مختلف چیلنجوں اور مخالفین سے لڑتے ہوئے ہمیں متاثر کرتی رہتی ہے۔ ہمارے شہید کے خون کے ہر قطرے کا بدلہ لیا جائے گا اور ہم خوف سے پاک جموں و کشمیر بنانے کے لیے پرعزم ہیں”۔