وزیر اعظم مودی 20 فروری کو جموں میں عوامی ریلی سے خطاب کریں گے: جتیندر سنگھ

عظمیٰ ویب ڈیسک

جموں// وزیر اعظم کے دفتر میں ریاستی وزیر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی 20 فروری کو جموں و کشمیر کے اودھم پور ضلع میں ایک ریلی سے خطاب کریں گے۔
جتیندر سنگھ منگل کو شہید کیپٹن تشار مہاجن ریلوے سٹیشن پر کٹرہ-دہلی وندے بھارت ایکسپریس ٹرین کے سٹاپیج کو دیکھنے کے لیے اپنے پارلیمانی حلقہ اودھم پور کا دورہ کر رہے تھے۔
اودھم پور اور کٹھوعہ ریلوے سٹیشنوں پر درمیانی فاصلہ کی سپر فاسٹ ایکسپریس ٹرین کا مختصر سٹاپ علاقے کے لوگوں کی سہولت کے لیے متعارف کرایا گیا تھا۔
وزیر نے اودھم پور میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا، “ہم چاہتے ہیں کہ وزیر اعظم انتخابی ضابطہ اخلاق کے آغاز سے پہلے جموں و کشمیر کا دورہ کریں۔ ان کے پروگرام کو 20 فروری کو حتمی شکل دے دی گئی ہے جس دوران وہ مختلف پروجیکٹوں کا آغاز کریں گے اور ایک عوامی اجلاس سے بھی خطاب کریں گے”۔
اپنے دورے کے دوران، وزیر اعظم سانبہ کے وجے پور میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (AIIMS)، ضلع ریاسی میں دریائے چناب پر دنیا کے بلند ترین ریلوے پل، اودھم پور میں دیویکا پروجیکٹ، آئی آئی ایم جموں اور شاہ پور-کنڈی ڈیم پروجیکٹ کا افتتاح کریں گے۔
مودی بانہال-سمبڑ سیکشن 33 کلومیٹر سے زیادہ کا افتتاح کرنے کا بھی امکان ہے جو ٹرین آپریشن کے لیے تیار ہے، عہدیداروں نے مزید کہا کہ کشمیر کو ملک کے باقی حصوں سے ٹرین کے ذریعے جوڑنے کے ڈریم پروجیکٹ کو زیرِ التواءکاموں کو مکمل کرنے کے لیے ڈیڈ لائن مئی میں مقرر کی گئی ہے۔
وزیر نے کہا کہ جموں و کشمیر، خاص طور پر اودھم پور ہمیشہ وزیر اعظم کی ترجیحی فہرست میں رہا ہے جنہوں نے ماتا ویشنو دیوی کے مزار پر ‘درشن’ کے بعد اپنی 2014 کی انتخابی مہم کا آغاز کیا تھا۔ انہوں نے اودھم پور اور کٹھوعہ میں وندے بھارت ٹرین کو روکنے کے لیے لوگوں کے مطالبے کو قبول کرنے کے لیے وزیر ریلوے کا شکریہ بھی ادا کیا۔
وزیر نے کہا، ”وزارت ریلوے نے ہمارا مطالبہ مان لیا اور ہم ان کے شکر گزار ہیں۔ اودھم پور، جس میں شمالی کمان کا ہیڈکوارٹر ہے، اگلے دو سے تین مہینوں میں کشمیر کو ملک کے باقی حصوں سے ٹرین کے ذریعے جوڑنے کے بعد ایک اہم موڑ کے طور پر ابھرنے والا ہے”۔
انہوں نے کہا کہ اودھم پور ریلوے سٹیشن کو ترقی کے لیے امرت ریل سٹیشن کے زمرے میں شامل کیا گیا ہے۔
اُنہوں نے مزید کہا کہ اسی طرح کٹھوعہ ضلع ہماچل پردیش اور پنجاب کی سرحدوں سے متصل ہے اور نئی پہل (وندے بھارت کا روک) نوجوانوں ، خاص طور پر طلباءکو سہولت فراہم کرنے کے علاوہ صنعت اور تجارت کو فروغ دے گا۔