مودی حکومت تمام طبقات کی ترقی کیلئے پرعزم، بھاجپا کی کوششوں سے پہاڑی برادری کو انصاف ملا: رویندر رینہ

عظمیٰ نیوز سروس

جموں// بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) جموں و کشمیر کے صدر رویندر رینہ نے جمعرات کو پارٹی صدر دفتر جموں میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر کے تمام طبقات کے ساتھ انصاف کیا ہے اور تمام طبقوں کے جائز اور دیرینہ معاملات کو حل کیا جا رہا ہے۔
رویندر رینہ نے مودی حکومت کی ستائش کی، وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کا کا شکریہ ادا کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومت جموں و کشمیر اسمبلی میں ایم ایل اے کو نامزد کرنے کا تاریخی فیصلے کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس تاریخی قدم کے ساتھ خواتین، کشمیری پنڈتوں اور پاک مہاجرین کو جموں و کشمیر کی اسمبلی میں ایم ایل اے کے طور پر نامزد کیا جائے گا۔
رینہ نے کہا،”سابقہ ریاست جموں و کشمیر میں کئی برادریوں کو ناانصافی کا سامنا کرنا پڑا، لیکن ان کی آوازیں کئی دہائیوں تک سنائی نہیں دیتی رہیں۔ اب مودی حکومت نے ان برادریوں کو بااختیار بنایا ہے کیونکہ اب نامزد ایم ایل اے جموں اور کشمیر کی اسمبلی میں اپنے کمیونٹی کے مسائل کی نمائندگی کر سکیں گے”۔
رویندر رینہ نے کہا کہ ان طبقات کو اس وقت کے دوران بے شمار مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جن میں پی او جے کے یا کشمیر سے بے گھر طبقات بھی شامل ہیں اور اب مودی حکومت نے انہیں انصاف فراہم کیا ہے۔
رینہ نے کہا،” مودی حکومت نے ان نظر انداز طبقات کے لیے خلوص نیت سے کام کیا ہے، جس کے لیے ہم وزیرِ اعظم مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ مودی حکومت ‘ سب کا ساتھ ، سب کا وکاس ، سب کا وشواس‘ کے مشن میں یقین رکھتی ہے اور ہر طبقے کے لیے کام کیا ہے، ان کے ساتھ انصاف کیا ہے”۔
اُنہوں نے مزید کہا کہ خواتین یہاں 33 فیصد ریزرویشن کے ساتھ مزید بااختیار ہونے کا احساس کریں گی۔ پاک پناہ گزین اب بااختیار محسوس کر رہے ہیں۔ گوجر -بکروال ، گڈی-سپی کو فاریسٹ رائٹس ایکٹ، ایس سی ایس ٹی ایٹروسٹیز ایکٹ، اور سیاسی ریزرویشن دیا گیا ہے۔ 2009 میں، این سی، کانگریس اور پی ڈی پی نے ان لوگوں کے خلاف سازش کی اور گجر-بکروالوں کو پیچھے دھکیلتے ہوئے بین الاضلاع بھرتیوں پر پابندی لگائی۔
رینہ نے کہا کہ مودی حکومت کی کوششوں سے پہاڑی برادری کو انصاف ملا۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ ان کا ریزرویشن کسی اور کمیونٹی کا کوٹہ نہیں چھین سکے گا، یہ واضح کرتے ہوئے کہ گجر-بکروالوں کے 10فیصد ریزرویشن میں کوئی کمی نہیں کی جائے گی۔
او بی سی کمیونٹی، جس میں تقریباً 40 ذیلی ذاتیں شامل ہیں، کو بھی انصاف ملے گا، جو اس سے قبل این سی، کانگریس اور پی ڈی پی حکومتوں کے ذریعے 70 سال تک مجرمانہ ناانصافی کا شکار رہی تھیں۔ اسی طرح مودی حکومت کی مضبوط قوت ارادی سے والمیکی برادری کو بھی اب انصاف ملے گا۔
رویندر رینہ نے جموں و کشمیر کے تمام باشندوں کی جانب سے مودی حکومت کے فیصلے کی ستائش کی اور اس تاریخی فیصلے کے لیے پی ایم مودی اور امیت شاہ کا شکریہ ادا کیا۔
مودی حکومت نے درحقیقت جموں و کشمیر میں ان تمام طبقات کو انصاف دلایا ہے، جنہیں بنیادی بنیادی حقوق سے بھی محروم رکھا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ مودی کی قیادت والی حکومت نے ہر علاقے اور ہر مذہب کے ہر فرد کی فلاح و بہبود کے لئے کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور مودی حکومت کی پالیسیوں پر پختہ اعتماد کے ساتھ جموں و کشمیر کے باشندوں نے یہاں آنے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو ووٹ دینے کا ارادہ کر لیا ہے۔