جموں و کشمیر میں مکمل امن قائم؛ غیر ملکی سیاحوں میں 59 فیصد اضافہ: ایل جی سنہا

عظمیٰ ویب ڈیسک

سری نگر// جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے منگل کو کہا کہ جموں وکشمیر میں امن قائم ہوتے ہی ایک طویل وقفے کے بعد غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں اضافہ ہوا ہے کیونکہ یوٹی میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں 59 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ کچھ ممالک کی جانب سے نافذ کی گئی منفی سفری ایڈوائزری جلد ہی ہٹائے جانے کی امید ہے۔
ایل جی منوج سنہا نے بخشی سٹیڈیم سرینگر میں یوم آزادی کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس سال اب تک 1.27 کروڑ سیاحوں بشمول غیر ملکیوں نے جموں و کشمیر کا دورہ کیا۔ “اعداد و شمار میں غیر ملکیوں کی ایک خاصی تعداد بھی شامل ہے۔ اس سال ہم نے غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں 59 فیصد اضافہ دیکھا ہے۔ کامیاب جی-20 اجلاس نے جموں و کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے میں مدد کی۔ مئی میں سری نگر میں منعقدہ جی-20 ٹورازم ورکنگ گروپ میٹنگ میں 27 ممالک کے شرکاءایک مثبت پیغام لے کر واپس گئے “۔
اُنہوں نے کہا، “جموں و کشمیر کو امن اور فطرت کی خوبصورتی کی جگہ کے طور پر پہچانا جا رہا ہے”۔
انہوں نے کہا کہ اس سال کی امرناتھ یاترا نے نہ صرف ملک کے عقیدت مندوں کو بلکہ غیر ملکی یاتریوں کو بھی اپنی طرف متوجہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ آج جموں و کشمیر اپنی تبدیلی اور پرامن ماحول کے لیے پہچانا جاتا ہے۔ “مجھے یقین ہے کہ کچھ ممالک کی طرف سے جموں و کشمیر پر عائد منفی ٹریول ایڈوائزریز جلد ہی ختم کر دی جائیں گی”۔
لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ انتظامیہ اس بات کو یقینی بنانے کی پوری کوشش کر رہی ہے کہ عام آدمی بغیر کسی دباو¿ اور پریشانی کے اپنی مرضی کی زندگی گزار سکے۔ “جب میں نے جموں و کشمیر میں بطور لیفٹیننٹ گورنر جوائن کیا تھا، تین سال پہلے، میں نے کوئی وعدہ نہیں کیا تھا اور اس کے بجائے کہا تھا کہ میں وعدے پورے کرنے آیا ہوں”۔
انہوں نے کہا کہ ان کی انتظامیہ جموں و کشمیر کے ہر شہری کے چہرے پر مسکراہٹ دیکھنے کی کوشش کر رہی ہے۔ “ہم جموں و کشمیر کو امن، خوشحالی اور ترقی کے لیے پرعزم ہیں۔ آج، نئی سڑکیں، ریل لائنیں، بجلی کے نئے منصوبے، ہوائی اڈے کے ٹرمینلز، سنیما ہال، ریور فرنٹ آرہے ہیں جبکہ بہت کچھ کام ہونے والا ہے”۔
ایل جی نے مزید کہا کہ یوٹی میں انتظامیہ جموں وکشمیر کے 1.30 کروڑ لوگوں کے مستقبل کی تشکیل کے لیے کام کر رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسز دہشت گردی کے تابوت اور اس کے ماحولیاتی نظام میں آخری کیل ٹھونکنے کے لیے سخت محنت کر رہی ہیں۔ پڑوسی ملک کی حمایت یافتہ دہشت گردی نے معاشرے کے لیے کینسر کا کام کیا۔ ہم جموں و کشمیر کو دہشت گردی سے پاک جگہ بنانے کے لیے پرعزم ہیں۔
ایل جی نے سرحدوں کی حفاظت کرتے ہوئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے سیکورٹی فورسز کے جوانوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر کے پہاڑ جوانوں کی انمول قربانیوں کے گواہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج میں شہیدوں کو سلام پیش کرتا ہوں اور ان کے اہل خانہ کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ پورا جموں و کشمیر اور قوم ان کے ساتھ کھڑی ہے۔
جموں و کشمیر میں تبدیلی کے بارے میں بات کرتے ہوئے، ایل جی نے کہا کہ اس سال 1.27 کروڑ سیاحوں نے جموں و کشمیر کا دورہ کیا جبکہ امرناتھ یاترا پرامن طریقے سے جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ 34 سالوں میں پہلی بار محرم کے جلوس کو روایتی راستوں سے گزرنے کی اجازت دی گئی۔
انہوں نے کہا، “کشمیر میں گھروں میں قیام، خیمہ کی سہولیات، جبکہ فلم پالیسی، اور سیاحوں کے لیے 300 نئے سیاحتی مقامات کا افتتاح جموں و کشمیر کی گواہی ہے”۔
ایل جی نے کہا کہ جموں و کشمیر حکومت نوجوانوں کو مختلف شعبوں میں بہترین کارکردگی کا ہر ممکن موقع فراہم کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر میں روزانہ 20 لاکھ ای ٹرانزیکشن ہوتے ہیں جو اسے ڈیجیٹل طور پر تبدیل شدہ جگہوں میں سے ایک بناتا ہے۔ ایل جی نے کہا کہ آزادی کا امرت کال جو 2047 میں ہوگا، جموں و کشمیر کو ملک کے بہترین اور ترقی پسند مقامات میں شمار کیا جائے گا۔