موجودہ دور میں سرکاری اور انتظامی سطح پر عوام کی کہیں شنوائی نہیں: فاروق عبداللہ

File Image

یو این آئی

سرینگر// جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ این سی ایک مضبوط اور مستحکم عوامی تحریک ہے جس کو لوگوں نے اپنی عظیم قربانیوں اور گرم گرم لہو سے سینچاہے۔
انہوں نے کہا کہ اس جماعت کو ہمیشہ عوام کی پشت پناہی اور تعاون حاصل رہا ہے جس کی بدولت یہاں لوگوں کے بنیادی اور جمہوری حقوق واگزار ہوئے۔
ان باتوں کا اظہار موصوف نے پارٹی ہیڈ کواٹرپر ایک تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔
ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ اس وقت جموں وکشمیر کے عوام سخت ترین مشکلات اور مصائب سے دوچار ہیں، بے روزگاری عروج پر ہے، لوگ بنیادی ضروریات سے محروم ہیں، سرکاری اور انتظامی سطح پر عوام کی کہیں شنوائی نہیں، ایسے میں ضروری ہے کہ ہم لوگوں کی آواز ہر سطح پر اُجاگر کریں۔
انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ موصوف عوامی خدمات کیساتھ ساتھ نیشنل کانفرنس کی مضبوطی کیلئے کام کریں گے اور ہر حال میں خود کو عوام کیلئے وقف رکھیں گے۔
چودھری محمد اکرم نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس میں شمولیت اختیار کرنے پر مسرت اور اطمینان کا اظہار کیا اور کہاکہ نیشنل کانفرنس محض ایک سیاسی جماعت نہیں بلکہ ایک تحریک ہے۔
اسی جماعت کے طفیل عوام کو غربت، افلاس اور شخصی راج کی غلامی نصیب ہوئی ۔ اس جماعت نے پسماندہ اور پچھڑے ہوئے طبقوں کی زندگی بہتر بنانے کیلئے جو کام کیا ہے وہ ناقابل فراموش ہے۔ میری تین پیڑیاں کانگریس کیساتھ منسلک رہیں لیکن میری دلی خواہش تھی کہ میں نیشنل کانفرنس میں آکر عوام کی خدمت میں اپنا کردار نبھاﺅں۔
انہوں نے کہا کہ ہمیں اس وقت تخریبی حربوں اور تقسیمی عناصر سے ہوشیار رہنا ہے ، جموں وکشمیر کی انفرادیت، اجتماعیت اور تشخص کو برقرار رکھنے کیلئے ہمیں سازشی عناصر سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے۔