انجینئر رشید کی درخواست ضمانت پر سماعت 22 جون تک ملتوی

File Image

عظمیٰ ویب ڈیسک

نئی دہلی// دہلی کی پٹیالہ ہاؤس کورٹ نے منگل کو عبدالرشید شیخ عرف انجینئر رشید کی طرف سے دائر درخواست ضمانت کی سماعت پانچ دن کے لیے ملتوی کر دی۔
ایڈیشنل سیشن جج پٹیالہ ہاؤس کورٹ، چندر جیت نے دونوں طرف کے وکیلوں کی مکمل دلائل سننے کے بعد اگلی سماعت 22 جون (تک ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا۔
عدالت نے این آئی کہا کہ وہ تاریخ بتائے جس دن انجینئر رشید بطور ممبر لوک سبھا حلف لینے والے ہیں۔
این آئی اے کے وکیل نے استدعا کی کہ اگر ملزم (انجینئر رشید) کو (عبوری) ضمانت دی جاتی ہے، تو ‘اس سے اسی طرح کے الزامات کا سامنا کرنے والے دوسروں کے لیے راستہ کھل جائے گا’۔
56 سالہ سیاست دان غیر قانونی سرگرمیوں کی روک تھام کے قانون (یو اے پی اے) کے تحت عسکری فنڈنگ ​​کے الزام میں پانچ سال سے زیادہ عرصے سے دہلی کی تہاڑ جیل میں بند ہیں۔
انہوں نے بارہمولہ لوک سبھا حلقہ سے نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ، جے کے پی سی کے سجاد لون اور جے کے پی ڈی پی کے فیاض احمد میر میدان کو شکست دے کر بطور آزاد امیدوار جیت درج کی۔
قابل ذکر ہے کہ پارلیمنٹ کا پہلا اجلاس 24 جون سے شروع ہو کر 3 جولائی کو ختم ہونے والا ہے۔
دوسری طرف لوک سبھا سپیکر کے عہدے کا انتخاب 26 جون کو ہونا ہے۔