گاندھی جی کو صرف کشمیر میں بھائی چارے اور روشنی کی کرن نظر آئی: فاروق عبداللہ

یو این آئی

سری نگر// جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس کی جانب سے آج شیر کشمیر بھون جموں میں گاندھی جینتی کے سلسلے میں ایک تقریب منعقد ہوئی، جس میں آنجہانی شری موہن داس کرم چند گاندھی کو154ویں برسی پر خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

تقریب کی صدارت صدرِجموں وکشمیر نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کی، جس میں معاون جنرل سکریٹری اجے سدھوترا، صوبائی صد رایڈوکیٹ رتن لعل گپتا، اعجاز جان، چودھری سریندر، ستونت کور ڈوگرہ، بابو رام پال، شیخ بشیر احمد، سردار ہربن سنگھ اور دیگر عہدیداران بھی موجود تھے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے گاندھی جی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ گاندھی جی کی اَن تھک کوششوں اور قربانیوں کی بدولت ہی ہندوستان انگریزوں کی غلامی سے آزاد ہوا۔

انہوں نے کہا کہ آنجہانی گاندھی جی ہمیشہ عدم تشدد کے حامی رہے اور تشدد کیخلاف رہے۔ انہوں نے ذات پات، اونچ نیچ کیخلاف تحریک شروع کی اور ہمیشہ آئین اور جمہوریت کی بالادستی کے وکیل رہے۔

انہوں نے کہاکہ گاندھی جی کے مشن کو اپنانا وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ ملک میں فرقہ پرستی کے بڑھتے ہوئے رجحان سے اقلیتوں اور پسماندہ طبقوںسے تعلق رکھنے والی آبادی عدم تحفظ کا شکار ہوگئی ہے جو ملک کی آزادی اور سالمیت کیلئے باعث تشویش ہے۔

ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ ملک کے بٹوارے کے وقت جب چہارسو خون کی ندیاں بہائی جارہی تھیں گاندھی جی کو اُس وقت بھی کشمیر میں بھائی چارے اور مذہبی ہم آہنگی کی کرن نظر آئی۔ اس موقعے پر سابق وزیر اعظم ہند آنجہانی لال بہادر شاتری کو بھی خراج عقیدت پیش کیا گیا۔