کشمیر پر دھند ختم، اب غلام کشمیر کو آزاد کرانے کی باری: آلوک کمار

یو این آئی

نئی دہلی// وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے جموں و کشمیر میں آئین کے آرٹیکل 370 کو ہٹانے سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے آج کہا کہ اس سے متعلق ابہام کی دھند صاف ہو گئی ہے اور اب غلام کشمیر کو پاکستان کے چنگل سے آزاد کرایا جانا چاہئے۔
وی ایچ پی کے انٹرنیشنل ورکنگ پریذیڈنٹ اور سینئر ایڈوکیٹ آلوک کمار نے آرٹیکل 370 پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ یہ فیصلہ لافانی شہید ڈاکٹر شیاما پرساد مکھرجی کو ایک شکر گزار قوم کے خراج کی طرح ہے۔ آج کا فیصلہ اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ 1947-48 میں مہاراجہ ہری سنگھ کی طرف سے دستخط شدہ الحاق کا معاہدہ حتمی اور درست تھا۔ جموں و کشمیر ہمیشہ سے ہندوستان کا اٹوٹ حصہ رہا ہے اور رہے گا۔
وی ایچ پی کے لیڈر نے کہا، ’’کچھ سیاسی عزائم کی وجہ سے اس وقت کی حکومت نے آرٹیکل 370 کے ذریعے جموں و کشمیر کو خصوصی درجہ دیا تھا۔ ہندوستان کی پارلیمنٹ نے اس آرٹیکل کو ہٹا دیا تھا۔ لیکن پھر بھی اس کیس کی وجہ سے کچھ دھند تھی جو آج کے فیصلے کے بعد صاف ہو گئی۔ ہمیں یقین ہے کہ جموں و کشمیر میں ترقی کا بہاؤ اسی رفتار سے بڑھتا رہے گا۔
مسٹر آلوک کمار نے کہا، ’’اب جموں و کشمیر میں صرف ایک بڑا کام رہ گیا ہے۔ یعنی پاکستان کے چنگل سے غلام کشمیر کی آزادی۔ ہمیں یقین ہے کہ ایک مضبوط ہندوستان اور ایک پرعزم حکومت پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر کو جلد آزاد کرا سکے گی۔