فاروق عبداللہ نےحزب اختلاف وفد کیساتھ صدرِ ہند سے ملاقات کی

یو این آئی

سری نگر// جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے حزب اختلاف کے وفد کے رکن کی حیثیت سے صدر جمہوریہ ہند محترمہ دوپدی مرمو سے ملاقات کی اور منی پور اور ہریانہ میں ہونے والے فرقہ وارانہ فسادات کے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔
انہوں نے ریلوے پولیس اہلکار کی طرف سے چن چن کر اپنے افسر سمیت 4افراد کو ہلاک کرنے اور نوح ہریانہ میں امام مسجد کی بہیمانہ ہلاکت اور مسجد کو نذر آتش کرنے کے سنگین معاملوں کو حل کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور کہا کہ ان واقعات کے اغراض و مقاصد اور حقائق سے عوام کو واقف کرانا انتہائی ضروری ہے۔
ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے صدرِ ہند سے کہا کہ منی پور اور ہریانہ جیسے واقعات ملک کے اتحاد کو ختم کر دے گا اور ایسے واقعات ملک کی تباہی اور بربادی کا سبب بن سکتے ہیں ۔
انہوں نے کہا کہ آئین ہند کے تحت ملک کے سبھی باشندوں کو اظہارِ رائے کیساتھ ساتھ اپنی اپنی مذہبی آزادی کا حق ہونا چاہئے اور سبھی طبقوں اور مذاہب سے تعلق رکھنے والے لوگوں کیساتھ یکساں سلوک روا رکھا جانا چاہئے۔
انہوں نے صدرِ ہند سے اپیل کی کہ منی پورہ اور ہریانہ میں مذہبی فسادات پھیلانے والوں کیخلاف سخت سے سخت کارروائی ہونی چاہئے۔