ملک کو مضبوط اپوزیشن کی ضرورت:فاروق عبداللہ

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے سربراہ فاروق عبداللہ نے کہا کہ غلام نبی آزاد نے کانگریس سے استعفیٰ اس لئے دیا ہے کیونکہ انہیں پارٹی سے عزت اور محبت نہیں مل رہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک کو ایک مضبوط اپوزیشن کی ضرورت ہے۔
فاروق عبداللہ نے کہا، “کانگریس اس وقت حیران رہ گئی جب 32 لیڈروں نے اسے خط لکھا۔ لیکن ایسا اس سے پہلے ہوا اور کانگریس مضبوط ہو کر سامنے آئی۔ ملک کو مضبوط اپوزیشن کی ضرورت ہے”۔
نیشنل کانفرنس کے سربراہ نے کہا، “میں نے آزاد کا خط نہیں پڑھا ہے۔ لیکن یہ صحت کی وجوہات کی وجہ سے نہیں ہے۔ وہ ماضی میں بیمار تھے لیکن وہ اب صحت یاب ہو گئے۔ میرے خیال میں یہ ایک سیاسی معاملہ ہے”۔
نیوز ایجنسی اے این آئی کی ایک خبر کے مطابق، فاروق عبداللہ نے کہا،” لیکن کانگریس کی تاریخ میں ایسا پہلے بھی ہوا ہے، اس سے کانگریس مزید مضبوط ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو مضبوط اپوزیشن کی ضرورت ہے۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ غلام نبی آزاد اندرا گاندھی کے وقت سے کابینہ وزیر تھے۔ اس وقت بھی وہ سونیا گاندھی کے بہت قریبی تھے۔ مجھے بہت افسوس ہے کہ ایسا کیا ہوگیا کہ غلام نبی آزاد کو اتنا بڑا فیصلہ لینا پڑا”۔
بتا دیں کہ سینئر کانگریس لیڈر غلام نبی آزاد نے آج کانگریس کی بنیادی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا ہے، جن کے بعد درجن بھر کانگریس لیڈران بشمول سابق وزرا اور ممبر اسمبلی نے بھی اپنے استعفے کانگریس قیادت کو سونپ دیے ہیں۔
آزاد، ان 23رہنماؤں کے گروپ میں سے ایک تھے جو کانگریس میں قیادت کی تبدیلی اور کانگریس پارٹی کے ہر بڑے فیصلے کے لیے گاندھی خاندان پر انحصار نہ کرنے کے بارے میں آواز اٹھا رہے تھے۔