بی جے پی نے لوک سبھا انتخابات کا سنکلپ پتر ’مودی کی گارنٹی 2024‘ جاری کیا

یو این آئی

نئی دہلی// بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے آج لوک سبھا انتخابات کے لئے اپنا سنکلپ پتر’مودی کی گارنٹی 2024‘ جاری کیا اور ملک میں غریبوں کی فلاح و بہبود کی اسکیموں اور ترقی یافتہ ہندوستان کے عزم کو عملی جامہ پہنانے کا روڈ میپ جاری کیا ہے بی جے پی کے مرکزی دفتر کی توسیعی عمارت میں منعقدہ ایک پروگرام میں وزیر اعظم نریندر مودی نے بی جے پی کے صدر جگت پرکاش نڈا، مینی فیسٹو کمیٹی کے چیئرمین راج ناتھ سنگھ، وزیر خزانہ نرملا سیتارامن کی موجودگی میں یہ سنکلپ پتر جاری کیا۔ سنکلپ پتر کے اجراء کے بعد، وزیر اعظم مودی نے غریبوں، نوجوانوں، کسانوں اور خواتین کے چار زمروں میں سے ایک ایک شخص کو یہ سنکلپ پتر سونپا۔
وزیر اعظم مودی نے کہا کہ 10 برسوں میں بی جے پی نے اپنے منشور کے ہر نکتے کو گارنٹی کے طور پر زمین پر اتارا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے منشور کے تقدس کو پھر سے قائم کیا ہے۔ یہ سنکلپ پتر وکست بھارت کے چار مضبوط ستون – یووا شکتی، ناری شکتی، غریب اور کسان ا ن سبھی کو بااختیار بناتا ہے۔ ہماری توجہ وقار اور معیار زندگی اور سرمایہ کاری کے ذریعے ملازمتوں پر ہے۔ گزشتہ 10 سال خواتین کے وقار اور ان کے واسطے نئے مواقع کے لئے وقف رہے۔ آنے والے 5 سال ناری شکتی کی نئی شمولیت کے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ غریبوں کے لیے مفت کھانے کی اسکیم مزید پانچ سال تک جاری رہے گی تاکہ وہ کسی وجہ سے دوبارہ غربت کی دلدل میں نہ پھنس جائیں۔
بی جے پی صدر نڈا نے کہا کہ 10 سال اس بات کا ثبوت ہیں کہ مودی کی گارنٹی، گارنٹی پوری ہونے کی گارنٹی ہے۔
اس سنکلپ پتر میں پارٹی نے کہا ’’بھارتیہ جنتا پارٹی’علم- (غریب، نوجوان، کسان اور خواتین )‘ کو لے کر آگے بڑھ رہی ہے اور 2047 تک ایک وکست بھارت کی تعمیر کا عہد لے رہی ہے۔ ایک ایسا شخص جو آج بھروسے کا مترادف بن چکا ہے… کیونکہ مودی کی گارنٹی ہی گارنٹی پوری ہونے کی گارنٹی ہے۔ آنے والے 5 سال بھی خدمت، گڈ گورننس اور غریبوں کی فلاح و بہبود کے ہوں گے، یہ مودی کی گارنٹی ہے۔‘‘
اس سنکلپ پتر کو تیار کرنے کے لیے وکست بھارت سنکلپ رتھ یاترا کے دوران موصول ہونے والی تجاویز، مختلف تنظیموں اور افراد سے موصول ہونے والے مشورے اور نمو ایپ اور آن لائن میڈیم کے ذریعے موصول ہونے والی تقریباً 15 لاکھ تجاویز کو یکجا کیا گیا ہے۔ ان تجاویز کی اقتصادی فزیبلٹی کا مطالعہ کرنے کے بعد، ایک 360 ڈگری جائزہ لیا گیا اور منتخب تجاویز کو یکجا کرکے 24 موضوعات میں درجہ بند کیا گیا۔ ایک بار پھر، ان میں سے دس موضوعات کو غریبوں کی فلاح و بہبود اور سماجی ترقی کے زمرے میں رکھا گیا ہے اور 14 موضوعات کو ترقی یافتہ ہندوستان کے زمرے میں رکھا گیا ہے۔
تقریب سے وزیر اعظم نریندر مودی کے علاوہ راج ناتھ سنگھ اور بی جے پی صدر نڈا نے بھی خطاب کیا۔