تازہ ترین

تشکیلِِ معاشرہ خواتین کے بغیرناممکن

 عورت نرمی، شفقت ،وفا ، ممتا کی جذبات سے گندھی ربِ کائنات کی خوبصورت تخلیق ہے اور اسلام وہ واحد مذہب ہے، جس نے عورت کو خاص مقام ومرتبہ عطاکیا ہے۔ کبھی اس کی قدموں تلے جنت رکھ کر اس کی عظمت کو چارچاند لگائی تو کبھی نازک آبگینہ کا لقب دے کر اس کی لطافت کوسراہا گیا اوراس کے ساتھ نرمی کی برتائوکی تلقین کی گئی۔ لیکن عورت کو اس کی اصل مقام ومرتبہ پر فائز رکھنے کے لئے مردکو قوّام کی صورت میںاس پر ایک درجہ زیادہ عطا کیا گیا جو اس کی محافظت اورمعیثت کاذمہ دار ہے۔ مر دکو اپنی اس ذمہ داری کا احساس دِلانابھی ایک عورت ہی کی ذمہ داری ہے کیونکہ مرد عورت ہی کی زیر تربیت ہوتا ہے۔ یوں ایک عورت معاشرے کوبگاڑ نے یاسنوارنے کی طاقت اپنے اندر رکھتی ہے کیونکہ بچے کی پہلی درس گاہ اس کے ماں کی گود ہے، بچہ جو کچھ وہاں سے سیکھتا ہے وہی اسکی شخصیت کی بنیاد بنتا ہے اور معاشرہ اس کاعکس پیش کرتا ہے لہٰذا معاشرے

موسمِ گرما میں باغبانی کیلئے مفید مشورے

 موسم گرما میں کرنے کے بہت سے کام ہوتے ہیں اور کئی پلان بھی بنائے جاتے ہیں۔ اس موسم میں اپنی مصروفیت سے کچھ وقت نکال کر باغبانی کی طرف توجہ دیں، جو آگ برساتے سورج، بڑھتے ہوئے درجہ حرارت اور جھلسانے والی دھوپ کی شدت میں کمی کا احساس دلاتی ہے اور آپ راحت محسوس کرتی ہیں۔ جمالیاتی ذوق رکھنے والی خواتین گھر میں باغیچے کی اہمیت و افادیت سے بخوبی واقف ہوتی ہیں لیکن اس شوق کی تکمیل انھیں موسم گرما میں مشکل معلوم ہوتی ہے۔ آج ہم اپنی تحریر میں کچھ ایسی تجاویز کا ذکر کرنے جارہے ہیں، جو موسمِ گرما میں باغبانی کے دوران پیش آنے والی مشکلات میں آپ کے لیے سود مند ثابت ہوں گی۔ گھا س سے متعلق امور سلیقے اور قاعدے قرینے کے ساتھ منظم کیے گئے باغیچے میں گھاس ناگزیر ہوتی ہے لیکن جب موسم گرم ہونے لگتا ہے تو گھاس پات اْگنے لگتی ہے۔ یہ عمل اکثر اوقات آپ کے باغ کی خوبصورتی پر بھی اثر انداز ہو

بچوں کو ’نہ‘ کہنا بھی ضروری ہے !

 بچے ضد کرتے ہیں اور ضد کرتے کرتے رونے لگتے ہیں، بچوںکو روتا دیکھ کر والدین ان کی ہر وہ فرمائش بھی پوری کردیتے ہیں، جو بعد میں بچوں اورخود والدین کیلئے پریشانی کا باعث بن جاتی ہے۔والدین اپنی ذمہ داریاں خوب نبھاتے ہیں یا نبھانے کی کوشش کرتے ہیں لیکن بچوں کو ’’ نہ ‘‘ کہنا ان کے لیے سب سے مشکل مرحلہ بن جاتاہے۔ سونے سے پہلے بچے نے کینڈی مانگ لی تو آپ نہ کہنے کے بجائے اسے دے دیتی ہیں تاکہ دن کا آخری کام آرام سے انجام دے کر بچہ سو جائے لیکن آپ شاید اس بات سے بیخبر ہیں کہ وہ کینڈی بچے کے دانت میں کیڑا پیدا کرسکتی ہے۔ اس قسم کی ضدسے بچانے کیلئے آپ کو ’’ نہ‘‘ کہنا ہے اور یہ کب کب کہنا ہے، آئیں ہم آپ کو بتاتے ہیں۔ وقت پر سونا اورجاگنا بیڈ ٹائم کیلئے آپ کو ہر حال میں سختی کرنی ہے چاہے، بھلے سے تعطیلات ہوں تب بھی! اگر آپ کا بچہ

شیر خوار بچوں کی صحت کا خیال رکھیں

مائیں بچوں کی صحت کے لیے ہمیشہ پریشان رہتی ہیں۔ایسے میں اگر بات ہو شیر خوار بچوں کی صحت کی تو ان کی فکر میں اور بھی اضافہ ہو جاتا ہے۔معمولی بیماریوں یا تکلیف کے لیے بچوں کو ڈاکٹر کے پاس لے کر جانا یا دوائیں کھلانا ان کی صحت کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے۔اس سے کہیں بہتر ہے کہ برسوں سے آزمودہ گھریلو ٹوٹکوں سے استفاہ حاصل کیا جائے۔بچوں کے چھوٹے چھوٹے مسائل کے لیے چند احتیاطی تدابیر اورگھریلو ٹوٹکے درج ذیل ہیں۔ طاقت کے لیے جائفل کو تین گلاس پانی میں آٹھ سے دس منٹ تک اْبالیں اور اس پانی کو بچوں کے دودھ میں استعمال کریں۔بچوں کی جسمانی مضبوطی کے لیے اور ان کی ہڈیاں مضبوط کرنے کے لیے تیل اور دودھ کی کریم سے بچوں کا مساج کریں۔چھوٹے بچوں پر موسمی بیماریاں جلد اثر انداز ہوتی ہیں۔لہٰذا انہیں نزلہ ،زکام سے محفوظ رکھنے کے لیے زعفران کو پانی میں بھگو دیں اور یہ پانی ان کے سینے پر لگائیں۔چھوٹے بچے

تازہ ترین