تازہ ترین

نئی میڈیا پالیسی کیخلاف سرینگر میں صحافیوں کا احتجاجی مظاہرہ

سرینگر//صحافیوں کے ایک گروہ نے پیر کے روز حکومت کی نئی میڈیا لیسی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔احتجاجی صحافیوں کا مطالبہ تھا کہ مذکورہ پالیسی کو فوری طور واپس لیا جائے۔ ’جے اینڈ کے میڈیا گلڈ‘ کے بینر تلے صحافیوں کا ایک گروہ پریس کالونی میں جمع ہوا اور نئی میڈیا پالیسی کو ہدف تنقید بنایا۔ انہوں نے بینر اٹھارکھے تھے جن پر نئی میڈیا لیسی کیخلاف نعرے درج تھے۔ احتجاجی صحافیوں کا کہنا تھا کہ نئی میڈیا پالیسی کا مقصد صحافت پرپابندیاں عائد کرنا ہے۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ یہ پالیسی صحافیوں اور صحافتی اداروں کیخلاف ہے۔ انہوں نے مذکورہ میڈیا پالیسی کی فوری واپسی کا مطالبہ کیا۔  

پیرباغ میں نکاسیٌ آب کے سٹیشن کی جگہ تبدیل کرنے کی مانگ

سرینگر//پیر باغ علاقے کے لوگوں نے علاقے میں نکاسیٔ آب کے اسٹیشن کے مقام کو لیکر مخالفت کرتے ہوئے سرینگر میونسپل کارپوریشن سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسٹیشن کی جگہ کو تبدیل کریں۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ موجودہ نکاسی آب کی سکت بہت کم تھی،اور وہ موثر طریقے سے علاقے میں نکاسی آب کو ٹھکانے لگانے کے قابل نہیں تھا۔ مقامی لوگوں نے کہا کہ نئے اسٹیشن کی تعمیر پر کافی تبادلہ خیال کیا گیا،جبکہ نیا اسٹیشن علاقے میں داخل ہونے کی جگہ تعمیر کرنے کا منصوبہ ہے جو ان ضوابط کی خلاف ورزی ہے کہ اس طرح کے اسٹیشن علاقے کے عقب میں بنائے جائے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ موجودہ جگہ اس پروجیکٹ کیلئے چھوٹی ہے،تاہم حکام نے اس پروجیکٹ کو اسی جگہ تعمیر کرنے کیلئے ہری جھنڈی دکھائی ہے۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ جس جگہ کا انتخاب کیا گیا ہے وہ تکنیکی لحاظ سے معقول نہیں ہے،اور اس سے علاقے کی صورت بھی مسخ ہوگی۔ ان کا کہنا تھا ک

لچھمن پورہ بٹہ مالو اور ملحقہ علاقوں میں پانی کی شدید قلت،لوگ پریشان

سرینگر //لچھمن پورہ بٹہ مالو اور ملحقہ علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے جس کے نتیجے میں لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مقامی لوگوں نے متعلقہ محکمہ پر غفلت شعاری کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ گرمیوں کے ان ایام میں آبادی پانی کی ایک ایک بوند کیلئے ترس رہی ہے جبکہ کئی بار محکمہ کو اس بارے میں آگاہ کرنے کے باوجود بھی اس سلسلے میں کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ مقامی خواتین کا کہنا ہے کہ انہیں نہ صرف پینے کیلئے دکانوں سے بند بوتلوں کا پانی خریدنا پڑرہا ہے بلکہ دوسرے محلوں میں پانی لانے کیلئے جانا پڑتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اکثر جیسے ہی گرمیاں شرو ع ہوتی ہیں تو انہیں پانی کی سپلائی سے محروم رکھا جاتا ہے ۔لچھمن پورہ کے لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے پانی کی قلت کیخلاف متعدد بار احتجاج کیا اورمعاملہ انتظامیہ کی نوٹس میں بھی لایا کہ علاقے کے لوگوں کو پانی فراہم کیا جا

پینے کے صاف پانی کا غلط استعمال | ہارون میں موٹر پمپ اور پائپیں ضبط

سرینگر//ارشاد احمد//ہارون میں محکمہ جل شکتی نے پینے کے صاف پانی کے غلط استعمال پر کارروائی کرتے ہوئے موٹر پمپ اور سینکڑوں پائپوں کو ضبط کیا ہے۔ ہارون،شالیمار،نشاط،تیل بل سمیت دیگر علاقوں کے شہریوں کاکہنا ہے کہ پینے کے صاف پانی کی قلت سے انہیں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مذکورہ علاقوں کے لوگوں کاالزام ہے کہ کئی ہفتوں سے پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی ہے۔ محکمہ جل شکتی نے لوگوں کی شکایت کا نوٹس لیتے ہوئے ٹیم تشکیل دی جنہوںنے ہارون میں گھر گھر جاکر متعدد موٹر پمپ اور سینکڑوں پائپوں کو ضبط کیا۔ انجینئر آفاق چشتی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ جو لوگ پینے کے صاف پانی کو باغیچوں میں سینچنے، گاڑیاں دھونے، پارکوں کو پانی دینے اور تعمیراتی کاموںمیں استعمال کرتے ہوئے پائے گئے ، ان پر جرمانہ اور ٹیکس لگانے کا منصوبہ ہے۔ انہوںنے کہاکہ پینے کے صاف پانی کے بے دریغم غلط استعمال کرنے کی اجازت نہی

سرینگر کے نوجوان وکیل کوبرطانیہ کی شیوننگ اسکالرشپ عطا

سرینگر// سرینگر کے ایک نوجوان وکیل حسنین خواجہ کو برطانوی حکومت کے عالمی پروگرام ’شیوننگ اسکالرشپ‘ عطاکی گئی ، جس کیلئے ہر سال دنیا بھر سے ہزاروں افراد درخواست دیتے ہیں۔سی این آئی کے مطابق تعلیمی میدان میں جموں کشمیر کا نام اس وقت ایک بار پھر روشن ہوا جب  سرینگر کے ایک نوجوان وکیل حسنین خواجہ کو برطانیہ کی حکومت کے عالمی پروگرام کی شیوننگ اسکالرشپ دی گئی  ۔ یہ اسکالرشپ مستقبل کے رہنماوں کو ایک موقع فراہم کرتا ہے کہ وہ پورے برطانیہ میں یونیورسٹیوں میں کسی بھی مضمون میں مکمل مالی اعانت والے ایک سال کے ماسٹر زپروگرام میں داخلہ لیں۔ہائی کورٹ میں پریکٹس کرنے والے وکیل حسنین کا انتخاب 170 ممالک کے 70ہزار درخواست دہندگان میں سے کیا گیا ۔ اب وہ دنیا بھر سے 1400 دوسرے طلبا کے ساتھ سکالرشپ حاصل کرکے کوئین میری یونیورسٹی سے ہیومن رائٹس میں ایل ایل ایم کی تعلیم حاصل کریں گے۔

تازہ ترین