تازہ ترین

شہرمیں بیرونی ریاستوں کے گداگروں کی بھرمار | لوگ پریشان، آمد ورفت پر روک لگانے کا مطالبہ

سرینگر// بیرون ریاستوں میں گرمی کی شدت بڑھ جانے کے ساتھ ہی وادی گلپوش میںغیر ریاستی گداگروںکی آمد بڑے پیمانے پر شروع ہوچکی ہے اور ان دنوں یہ بھکاری اسکولوں ، کالجوں ،بس اڑوںو صحت افزا مقامات کے علاوہ پیٹرول پمپوںپر وہ بھیک مانگتے نظر آ رہے ہیں۔بیرون ریاستوں میں گرمی کی شدت بڑھ جانے کے ساتھ اور وادی میں خوشگوار موسم کے ساتھ ہی بیرونی ریاستوں سے سینکڑوں بھکاری وارد کشمیر ہوچکے ہیں اور اس صورتحال کا سدباب کرنے کے لئے ریاستی سرکار اور متعلقہ حکام پر اسرار طور خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔سماج کے ذی شعور اور صاحب فکر لوگوں نے بتایا کہ ان غیر ریاستی مزدوروں اور بھکاریوں کے وارد کشمیر ہونے سے سماجی برائیوں میں اضافہ ہوتا ہے۔ ذرائع کے مطابق یہ غیر ریاستی بھکاری، لولے لنگڑے اسکولوں ، کالجوں ،بس اڈوں اور صحت افزا مقامات پر ڈھیرہ جمائے بیٹھے رہتے ہیں اوروہ عام لوگوں کے علاوہ سیاحوں و سیلانیوں کو

اپنی میرات کو قائم ودائم رکھنا ہر شہری کا فرض : مصطفی کمال

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹرمصطفی کمال نے یوم میراث کے عالمی دن پر کہا ہے کہ اپنی قوم و ملک کے میراث کو قائم و دائم رکھنا ہر ذی شعور،شہری اور عوام پر فرض ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میراث ہی ہماری سب سے بڑی بیش بہا دولت ہے۔ڈاکٹر کمال نے کہا کہ ہماری میراث جموں کشمیر کی زبانیں کشمیری،ڈوگری،لداخی،پہاڑی گوجری اور بلتی بھی میرث میں شامل ہیں۔انہوںنے کہا کہ جموں کشمیر کی وحدت اور اجتماعیت بھی ہمارا ورثہ ہے،جبکہ بزرگان دین کی مقدس زیارتیں، خانقاہیں، تاریخی مساجد، ہمارے عادل بادشاہوں کی تعمیر کردہ عمارات بھی ہمارے میراث میں شامل ہیں۔ڈاکٹر کمال نے کہا’’ بدقسمتی سے ہماری میراث کو ایک درپردہ سازش کے تحت مسخ کرنے اور نقصان پہنچانے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے،لیکن زندہ قوموں کی یہ مثال رہی ہے کہ انہوں نے اپنے میراث اور تمدن کو ہمیشہ زندہ رکھا ہے۔‘‘ انہوں نے

تازہ ترین