تازہ ترین

بمنہ، پلوامہ اور شوپیان میں تلاشیاں ، چھاپے

 سرینگر+شوپیان //سیکورٹی فورسز نے ہمدانیہ کالونی بمنہ میں شبانہ جبکہ پلوامہ اور شوپیان میں کئی دیہات کا محاصرہ کیا اور تلاشیاں لیں۔اس دوران پلوامہ میں 3 نوجوانوں کو احتیاطی حراست میں لیا گیا۔سنیچر کی شام گئے قریب ساڑھے 9بجے 2آر آر ، سی آر پی ایف اور پولیس نے ہمدانیہ کالونی بمنہ کا محاصرہ کیا اور مخصوص رہائشی مکانوں کی تلاشی کاروائی شروع کی۔ رات دیر گئے تک یہ سلسلہ جاری تھا۔ اس دوران 55آر آر کے علاوہ پولیس ٹاسک فورس نے پلوامہ کے گلزارپورہ اور حجام محلہ پنگلنہ کی بستیوں کاسنیچر کی صبح محاصرہ کیا۔ دوران محاصرہ مکانوں کی تلاشی کے علاوہ مشکوک مکینوں کے شناختی کارڈ چیک کئے گئے۔ تین گھنٹے کی کارروائی کے بعدمحاصرہ ختم کیا گیا۔ 44 آر آر اور ایس او جی پلوامہ نے  دربگام پلوامہ میں جمعہ کی شام ایک مخصوس محلے کا گھیرائو کیا اور تلاشی کارروائی عمل میں لائی۔اس دورانرئیس احمد میر ولد

جامع مسجد کے منبر و محراب کی خاموشی افسوسناک

سرینگر//وادی کشمیر کے تاریخی تجارتی انجمن بیوپار منڈل مہاراج گنج نے میرواعظ محمد عمر فارو ق کی نظربندی ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔اپنے ایک بیان میں بیوپار منڈل نے سنیچروار کوایک بیان میں حکومت پر زور دیا ہے کہ گزشتہ 18 ماہ سے خانہ نظر بند میرواعظ کی نظر بندی کو بلا کسی تاخیر کے ختم کیا جائے تاکہ وہ اپنے مذہبی فرایض کو انجام دیں سکیں۔بیان میں کہا گیا ہے ’’یہ المیہ ہے کہ میرواعظ کی نظر بندی سے لاکھوں مسلمانان کشمیر کے عقیدت کے مرکز جامع مسجد کے منبر و محراب کو کئی ماہ سے خاموش رکھا جارہا ہے‘‘۔بیان میں حکومت پر زور دیا گیاکہ آنے والے متبرک ایام کے دوران میرواعظ کی نظر بندی کو ختم کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر کے سب سے بڑے مذہبی پیشوا کی مسلسل نظر بندی ہر لحاظ سے نا قابل قبول ہے لہٰذا معراج اور رمضان المبارک کی آمد کی مناسبت سے میرواعظ کی فوری رہائی کو یقینی بنایا جا