تازہ ترین

کاروباری طبقہ کیلئے سود کی ادائیگی

 جموںوکشمیر کے لیفٹنٹ گورنر منوج سنہا کی جانب سے خستہ حال معیشت کو پٹری پر لانے کیلئے پہلے مرحلہ کے تحت 1300کروڑ روپے کا اقتصادی پیکیج صحیح سمت میں اٹھایاگیا بروقت قدم ہے۔تمام متعلقین کے ساتھ تفصیلی مشاورت کے بعدامید کی جارہی تھی کہ حکومت تجارتی طبقہ کو ضرور کوئی راحت دے گی اور ویسا ہی ہوا بھی ۔اس پیکیج کے تحت سود کی ادائیگی کا جو بندو بست حکومت نے کیا ہے ،اُس پر یقینی طور پر کاروباری حلقہ خوش ہے کیونکہ انہیں واقعی راحت ملی ہے۔سود میں چھوٹ یا سود معاف کرنا دو وجوہات کی بناء پر اہم ہے۔ پہلا یہ کہ ریزرو بنک آف انڈیا پیکیج ،جس کے تحت فقط سود کی ادائیگی کو ٹالا گیا تھااور سود کی رقم مسلسل جمع ہوتی چلی جارہی تھی،کے برعکس اس پیکیج میں حقیقی راحت کا سامان ہے ۔لاک ڈائون کی وجوہات کو دیکھتے ہوئے حکومت نے تجارتی طبقہ کے سود کا پانچ فیصد خود برداشت کرنے کا جو فیصلہ لیا ہے ،وہ مبنی بر انصاف