انتظامی مشینری …بہتری ہنوز دُور است!

سرما کی کٹھن سردی کے دوران کشمیر سے ناطہ توڑ کر جموں کی گرم ہوائوں میں اس بار8ماہ گزارنے کے بعد بالآخرسرینگر میںسیول سیکریٹریٹ کھل گیا ۔اس موقعہ پر لیفٹنٹ گورنر نے انتظامی سیکریٹریوں کی ایک میٹنگ طلب کی جس میں اُن سے کہاگیا ہے کہ وہ عوامی مسائل کے ازالہ کیلئے تمام اضلاع میں جانے کا پروگرام ترتیب دیں گے تاکہ برسر موقعہ عوامی مسائل کا جائزہ لے کر ان کے حل کی کوئی سبیل نکالی جاسکے ۔میٹنگ کی روداد کے حوالے سے جو سرکاری بیان جاری کیاگیا ،اُس میں انتظامی مشینری کی فعالیت کے حوالے سے زمین و آسمان کے قلابے ملائے گئے ہیں۔ اقتدار و اختیار کی اعلیٰ کرسیوں پر براجمان حضرات کے منہ سے بات نکلے توسادہ لوح عوام اسے حتمی تصور کر لیں ،شاید ایسا دنیا میں کہیں ہوتا ہو لیکن جموں و کشمیر میں بالعموم اور کشمیر وادی میں بالخصوص یہ باتیں کسی کے پلے نہیں پڑتیں ۔کشمیری عوام سیاسی طور انتہائی بالغ اور الفاظ کی

تازہ ترین