! نقاسیٔ آب کا نظام سدھرنے کا نام نہیں لیتا

 وادی میں گزشتہ دنوں جو برف باری اور بارشیں ہوئیں اُس نے ایک بار پھر شہر سرینگر میں ناقص ڈرینج سسٹم کی قلعی کھول کررکھ دی ہے۔پانی سے نہ صرف سڑکیں اور گلی کوچے زیر آب آگئے بلکہ شہر کے متعدد علاقوں میں سڑکوں پر پانی جمع ہونے کی وجہ سے رہائشی مکانات اور تجارتی عمارات کی بنیادوں کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ پیدا ہوا ہے۔ اندونی گلیوں میںہر سُو پانی جمع ہونے کے نتیجہ میں کئی علاقوں میں عبور و مرور ناممکن بن چکا تھا۔گائوں دیہات میں صورتحال زیادہ ہی سنگین ہے۔ سوشل میڈیا پر کئی ایسے ویڈیو وائرل ہوئے ہیں ، جنہیں دیکھ کر شرم آتی ہے۔1980میں ڈرینج سسٹم سے منسلک محکمہ ،جسے اربن اینوائرنمنٹل انجینئر نگ ڈیپارٹمنٹ ( UEED)پکا را جاتا ہے ،کے قیام کے ساتھ ہی اس محکمے نے شہر سرینگر میں ڈرینج سسٹم اور انتظام بدرو کیلئے ایک جامع پروجیکٹ رپورٹ تیار کرلیا جسے عملانے کیلئے حکومت کی طرف سے منظوری بھی ملی تھ

تازہ ترین