تازہ ترین

سرحد پر 62کلو ہیروئن ، 2چینی پستول اور 100 راونڈ ضبط

جموں//بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) نے رات کے دوران پاک بھارت سرحد پر ارنیہ میں 62کلو ہیروئن ضبط کی جو بی ایس ایف کے مطابق سرحد پار سے سمگل کی جارہی تھی۔ بی ایس ایف کے دستوں نے سرحد پار سے مشتبہ نقل و حرکت کا مشاہدہ کیا جس پر یہ کارروائی عمل میں لائی گئی۔بی ایس ایف جموں فرنٹیئر کے انسپکٹر جنرل این ایس جموال نے بتایا ’’صبح 2بجے کے لگ بھگ بین الاقوامی سرحد پر پائپ اور منشیات کے ساتھ تین سے چار افرادکے منتقل ہونے کی اطلاع ملی ، ہمارے پاس پہلے سے انٹیلی جنس رپورٹ موجود تھی اور پولیس اور بی ایس ایف دونوں کی وجہ سے اسمگلنگ کوشش ناکام بنادی گئی‘‘۔یہ منشیات اسمگل کرنے کی اپنی نوعیت کی پہلی کوشش تھی جس کو پلاسٹک کے تھیلے میں چھپایا گیا تھا اوراسے رسی سے اور پائپ کے ذریعہ منتقل کیاگیا۔ ا?ئی جی بی ایس ایف نے بتایا کہ اہلکاروں نے 62پیکٹ ہیروئن (فی کلو) ، دو چینی ساختہ پست

ماہرین کی مرکزی ٹیم کا میڈیکل کالج جموں واودھم پور کا دورہ

جموں//حکومت ہند کے ذریعہ جموں پہنچنے والی ایک اعلیٰ سطحی مرکزی ٹیم نے سنیچر کے روزگورنمنٹ میڈیکل کالج و ہسپتال جموں اور اودھم پور ضلع ہسپتال دورہ کیا جہاں کووڈ 19 متاثرہ مریضوں کے اضافے کے پیش نظر آکسیجن کی کمی کی اطلاعات کے درمیان پیدا ہونے والی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ڈائریکٹر این سی ڈی سی ، نئی دہلی کے سربراہ ڈاکٹر ایس کے سنگھ ، این ڈی سی ڈی میں جوائنٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر تنزین اور دیگر ماہرین پر مشتمل ٹیم نے کورونا صورتحال کا باریکی سے جائزہ لیا۔ڈاکٹر وجے ہڈا اور ڈاکٹر مہیش پر مشتمل ٹیم نے جی ایم سی جموں کا دورہ کیا اور پرنسپل ڈاکٹر نصیب چند ڈنگرا ، انتظامیہ اور ڈاکٹروں سے صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے ایک میٹنگ کی۔ہسپتال کے ایک عہدیدار نے بتایا’’ہم نے ڈاکٹروں اور نرسوں سمیت عملے کی کمی کے بارے میں مطالبات پر روشنی ڈالی گئی کیونکہ عملہ کے بہت سارے ارکان متاثر ہوئے ہیں اور و

کووڈ-19 معاملات میں اضافہ

جموں / نیشنل کانفرنس کے صوبائی صدر دیویندر سنگھ رانا نے کووڈ۔ 19 کے معاملات میں اضافہ کی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ناکافی انفراسٹرکچر سہولیات کے پیش نظر جموں میں میڈیکل ایمرجنسی کے اعلان کرنے کا مطالبہ کیا۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ مجموعی طور پر منظر نامہ انتہائی سنگین ہے اور اس میں خوش فہمی کی کوئی گنجائش نہیں ہے جو تباہ کن ثابت ہوسکتی ہے جب تک کہ قیمتی جانوں کو بچانے کے لئے کوئی ہنگامی اور فعال ردعمل شروع  نہ کیا جائے۔ انہوں نے ہسپتالوںمیں مریضوں کو علاج معالجے کے لئے بستر نہ ملنے یا آکسیجن اور وینٹیلیٹر کی کمی کی وجہ سے پریشان کن اطلاعات کا حوالہ دیا اور بتایا کہ حالات بہت ہی خطرناک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو ایسی ابھرنے والی صورتحال کی پیشگی توقع کرنی چاہئے تھی اور ہر ہسپتال میں زیادہ سے زیادہ بیڈوں کی نشاندہی کرکے ، نجی اسپتالوں اور نرسنگ ہومز میں کم سے کم ایک ہزار بسترو

جموںمیںعارضی ملازمین نے لنگر لنگوٹے کس لئے | 12اکتوبر کو راج بھون گھیرائو کیلئے ’آئو چلو کشمیر‘ کی کال

جموں//جموں و کشمیر کیجول لیبرز یونائیٹڈ فرنٹ (جے کے سی ایل یو ایف) نے 2 اکتوبر کو راج بھون کا گھیرائو کرنے کیلئے ’آئو چلو کشمیر‘‘ کی کال دی ہے۔ تنظیم کے صوبائی صدرعمران پرے نے کہا’’ہم نے لکھنپور سے 19سرکاری محکموں کے عارضی ملازمین کے لئے’ آئوچلو کشمیر‘کال دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے گذشتہ کئی سال سے زیر التوا مطالبات کو پورا کرنے کے لئے گاندھی جینتی کے موقعہ پر گاندھیائی طرز کے احتجاج کو اپنایا ہے۔پرے نے کہا کہ 23 ستمبر کو عارضی ملازمین لکھن پور سے اپنا مارچ شروع کریں گے اور کٹھوعہ ، سانبہ ، جموں ، راجوری ، پونچھ ، ادھم پور ، رام بن ، ڈوڈہ اورکشتواڑکے ملازمین پیدل سفر کرتے ہوئے سرینگر جاتے ہوئے دوسرے ساتھیوں کے ساتھ ملیں گے۔ پرے نے دعویٰ کیا کہ وہ پیدل ہی سرینگر کی طرف مارچ کریں گے۔ان کاکہناتھا’’لگ بھگ 10000اعارضی ملازمین یکم

کورونا انتظامات میں مدد کے لئے مرکزی وفد جموں کا دورہ کرے گا

نئی دہلی// جموں میں کورونا وائرس (کوویڈ 19) کے حالیہ معاملوں کے پیش نظر مرکزی وزارت صحت وخاندانی بہبود نے ایک اعلی سطح کے مرکزی وفد کو وہاں بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزارت صحت نے جمعہ کے روز کہا کہ اس دو رکنی وفد میں دہلی کے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس(ایمس) کے پلمونری کریٹیکل کیئر کے پروفیسر ڈاکٹر وجے ہڈا اور نیشنل سینٹر فار ڈیزیزکنٹرول (این سی ڈی سی) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر سوجیت کمار سنگھ شامل ہوں گے۔ یہ مرکزی وفد جموں کے ضلع مجسٹریٹ اور محکمہ صحت کے عہدیداروں سے ملاقات کرنے کے ساتھ ہی بخشی نگر اور گاندھی نگر کے اسپتالوں کا دورہ کرے گا۔

خوبصورتی سے مالا مال ریاسی

ریاسی//ضلع ریاسی کے دور دراز علاقہ جات میں کئی ایک خوبصورت جگہیں ہیں تاہم یہ علاقے محکمہ سیاحت کی نظروں سے اوجھل ہیں۔سب ڈویڑن مہور کے درجنوں مقامات جن میں لپری ٹاپ،اچنی،سنگڑی،سونا بگا،دیول مرگ،انسی ٹاپ،تھائی مرگ، اڑیتل، نکن ٹاپ،آگشی،لیون گلی وغیرہ سیروتفریح کے لحاظ سے اعلیٰ درجہ رکھتے ہیں۔اگرچہ گول گلابگڑھ کو قدرت نے اپنے حسن جمال سے نوازا ہے اور گول گلابگڑھ کی حسین پہاڑیاں اپنی مثال خود بیان کرتی ہیں لیکن اس علاقہ کی طرف کبھی بھی کسی حکومت کی جانب سے اس علاقہ کو سیاحتی نقشے پر لانے کیلئے توجہ نہیں دی۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ بدقسمتی کی بات تو یہ ہے کہ ریاسی  کے دور دراز علاقہ جات میں سڑک کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے یہ علاقہ جات پچھڑے ہوئے ہیں اور ان مقامات کی خوبصورتی کی کوئی قیمت نہیں ہے۔علاقہ میں درجنوں ایسے خوبصورت مقامات ہیں جہاں پر دور دور سے سیاح ا?سکتے ہیں لیکن سڑک کی سہو

ایجوکیشنل ٹرسٹ کیخلاف بدعنوانی اور اراضی پر ناجائز قبضہ کے الزامات

جموں// سنٹرل بیور آف انوسٹی گیشن (سی بی آئی) نے منگل کی صبح جموں و کشمیر کے سابق وزیر اور ڈوگرہ سوابھیمان سنگٹھن کے بانی چودھری لال سنگھ کی ضلع کٹھوعہ میں واقع رہائش گاہوں سمیت متعدد جگہوں پر چھاپے ڈالے۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سی بی آئی نے منگل کی صبح قریب سات بجے سابق وزیر چودھری لال سنگھ کی کٹھوعہ کے وارڈ نمبر دو اور راج باغ میں واقع رہائش گاہوں پر چھاپے ڈالے۔ سابق  وزیر کی کٹھوعہ رہائش گاہ پر سی بی آئی کی ٹیم تین گاڑیوں میں پہنچ گئی تاہم ان چھاپوں میں جموں و کشمیر پولیس شامل نہیں تھی۔ذرائع نے بتایا کہ سی بی آئی نے لال سنگھ کی رہائش گاہوں کے علاوہ دوسری متعدد جگہوں پر بھی چھاپے ڈالے اور کچھ چیزیں بالخصوص کاغذات اپنی تحویل میں لے لئے۔ سی بی آئی نے 25 جنوری کو چودھری لال سنگھ کے زیر انتظام ایک ایجوکیشنل ٹرسٹ کے خلاف بدعنوانی اور اراضی پر ناجائز قبضہ کرنے کے الزامات کی تحقیق

کٹھوعہ میں سابق وزیر لال سنگھ کے گھر پر سی بی آئی کا چھاپہ

سرینگر//سینٹرل بیورو آف انوسٹی گیشن(سی بی آئی ) نے منگل کو کٹھوعہ میں سابق وزیر چودھری لال سنگھ کے گھر پر چھاپہ مارا۔ حکام کے مطابق سی بی آئی کی چھاپہ مار کارروائی آج صبح سویرے عمل میں آئی۔ سی بی آئی لال سنگھ کی سربراہی میں چلنے والے ایک تعلیمی ٹرسٹ کو لیکر رشوت ستانی معاملے کی تحقیقات کررہی ہے۔یہ کیس گذشتہ برس ماہ جون میں درج ہوا تھا۔ لال سنگھ نے 2018میںبھارتیہ جنتا پارٹی سے علیحدگی اختیار کرنے کے بعد ڈوگرہ سوابھیمان سنگٹھن نامی تنظیم کی بنیاد ڈالی ۔  

سی آر پی ایف اہلکار کا سخت ترین اقدام | اہلیہ کوہلاک کرنے کے بعد خود کو بھی گولی ماردی

جموں//ایک دلخراش واقعہ میں جموں ضلع کے گھروٹا علاقے میں آپسی ناخوشگوار تعلقات کی وجہ سے سی آر پی ایف کے ایک اہلکار نے اپنی اہلیہ کو گولی مار کر خود کوبھی ہلاک کردیا۔اس واقعہ میں اسکی اہلیہ کی بہن اور اور اسکی بیٹی زخمی ہوئیں۔ایس ڈی پی او اکھنور اجے شرما نے بتایا کہ 166بٹالین سے وابستہ سی آر پی ایف اہلکارمدن سنگھ چب جو ڈی آئی جی سی آر پی ایف کے ساتھ بطور پرسنل سیکورٹی آفیسر (پی ایس او) تعینات تھااوروہ بن تالاب میں گروپ سنٹر سے منسلک تھا،نے اپنی اہلیہ کو ہلاک کرنے کے بعد اپنی زندگی کا بھی خاتمہ کردیا۔ انہوں نے بتایا’’اس جوڑے کے آپسی تعلقات ناخوشگوار تھے اور اختلافات کے سبب اس کی اہلیہ اپنی بہن کے گھر چلی گئی‘‘۔پولیس افسر نے بتایا’’سی آر پی ایف اہلکار سول کپڑوں میں ایک کے رائفل کے ساتھ بہن کے گھر گیا اور اس نے اپنی اہلیہ دیپتی رانی کو گولی مار ک

جواہر ٹنل سے برآمد اسلحہ سانبہ میں ڈرون سے گرایاگیا:ڈی جی پی

جموں//جموں وکشمیر پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے کہاہے کہ کولگام میں سیکورٹی فورسز کے ذریعہ برآمد کئے گئے اسلحہ کو پاکستان نے ڈرون کے ذریعہ سانبہ سیکٹر میں گرایا تھا۔پولیس سربراہ نے کہا’’زمینی مشاہدے سے پتہ چلتا ہے کہ پاکستان نے اس سرنگ کا استعمال شدت پسندوں کو بھیجنے کے لئے کیا ہے، اسلحہ اور گولہ بارود کی بازیابی سے متعلق تحقیقات سے انکشاف ہوا ہے کہ یہ ہتھیار پاکستان کے ذریعہ سانبہ سیکٹر میں ڈرون کے ذریعہ استعمال کئے گئے‘‘۔دلباغ سنگھ سانبہ گئے ہوئے تھے جہاں انہوں نے بی ایس ایف کے ذریعہ حال ہی میں دریافت کی گئی سرنگ کا معائنہ کیا۔ انہوں نے دریائے بسنتر کے قریب وجے پور میں سیکورٹی انتظامات کا بھی جائزہ لیا جبکہ انہوں نے مقامی پولیس عہدیداروں سے بات چیت کی۔صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد ڈی جی پی نے کہا’’پاکستان سے اس طرف دراندازی کی سہولت کے لئے سرنگ کھودی

جموں میں 16513 مثبت معاملات

جموں//جموں صوبہ میں 8577فعال مثبت کیسوں کے ساتھ مجموعی طور پر 16513 مثبت معاملات رپورٹ ہوئے ہیں اور ایک 4سالہ لڑکے سمیت کووڈ 19 وبا پھیلنے کے بعدسے اب تک 143 افراد کی موت ہوگئی ہے۔انتظامیہ کی جانب سے بے ترتیب اور ٹارگٹ سیمپلنگ شروع کرنے کے بعد صوبہ میں مثبت معاملات میں اضافہ ہوا۔زیادہ تر مثبت کیس جموں کے ضلع سے سامنے آئے ہیں جہاں اب تک 7947 افراد وائرس سے متاثر ہوئے۔ اس کے بعد ادھم پور میں 1398 ، راجوری 1364 ، اور کٹھوعہ میں 1285 معاملات ہیں۔ضلع سانبہ میں 1037 ، رام بن 794 ، ڈوڈہ 732 ، پونچھ 821 ، ریاسی 570  اور کشتواڑ میں 565 کیس رپورٹ ہوئے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ضلع رام بن کو ریڈ زون میں رکھاگیاہے جبکہ ڈوڈہ اور کشتواڑ اضلاع گرین زون میں ہیں۔سنیچر کے روز صوبہ بھر میں چھ اموات ہوئیں جن میں سے چار کا تعلق ضلع جموں سے ہے۔علاوہ ازیں جموں میں 250 مثبت معاملات ریکارڈ ہوئے جو گزشتہ روز کے

اُدھمپور میں گاڑی کھائی میں جاگری،خاتون اور نوزائد بچہ سمیت 3از جان

سرینگر//ضلع اُدھمپور میں ہفتہ کو ایک گاڑی سڑک سے لڑھک کر گہری کھائی میں جاگری جس کے نتیجے میں تین افراد جاں بحق جبکہ پانچ زخمی ہوگئے۔مرنے والوں میں ایک 26سالہ خاتون اور اس کا نو زائد بچہ بھی شامل ہے۔  یہ حادثہ دھانس گاوں میں پیش آیا اور باور کیا جاتا ہے کہ گاڑی ایک موڑ پر ڈرائیور کے قابو سے باہر ہوگئی جو حادثے کا سبب بنا۔ اطلاعات کے مطابق یہ گاڑی چنانی سے آرہی تھی۔ اس حادثے میں پانچ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جنہیں اسپتال پہنچایا گیا ہے۔ جاں بحق افراد میںشانو دیوی، اُس کا نوزائد بچہ اور ایک50سالہ شہری شامل ہیں۔  

شرما کا جموں میں عوامی دربار ،عوامی مسائل سے آگاہ

جموں//لفٹینٹ گورنر کے مشیر کے کے شرما نے آج عوامی رابطہ پروگرام منعقد کیا جس میں زائد 100 لوگ اُن سے ملے جن میں 22 وفود اور 38  افراد بھی شامل تھے جنہوں نے انہیں اپنے مسائل سے آگاہ کیا ۔ آل جموں و کشمیر ساکھشر بھارت مشن ، ٹریڈر فیڈریشن وئیر ہاوس ، لداخ میں تعینات +2 لیکچراروں کی ایسوسی ایشن ، بھارتیہ سکھشا سمتی کمیٹی جے اینڈ کے ، جے اینڈ کے کالج ٹیچرز ایسوسی ایشن کے وفود اُن سے ملے۔ اس کے علاوہ مختلف اضلاع بشمول کٹھوعہ ، راجوری ، ریاسی ، ڈوڈہ ، سانبہ ، کشتواڑ ، ادھمپور سے آئے وفود بھی مشیر سے ملے اور انہیں سڑک رابطہ سہولت ، پانی اور بجلی کی سپلائی ، جے ڈی اے سے متعلق معاملات ، تبادلوں ، امداد ، معاوضہ اور واجبات کی واگذاری ، گلی کوچوں اور نکاسِ آب نظام سے متعلق دیگر مسائل اور مانگیں پیش کیں ۔ مشیر نے عوامی اہمیت کے حامل چند مسائل کے ازالہ کیلئے موقعہ پر ہی متعلقہ حکام کو ہدای

چیف سکریٹری نے جن ابھیان کیلئے جاری تیاریوں کا جائزہ لیا

جموں//چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے جمعرات کو جَن ابھیان کیلئے جاری تیاریوں کا جائزہ سیکرٹریوں کی کمیٹی میٹنگ کی صدارت کرنے کے دوران لیا۔دوران میٹنگ بتایا گیا کہ 20 روزہ طویل جَن ابھیان بیک ٹو وِلیج پروگرام سے قبل 10ستمبر کو شروع ہو رہا ہے اور اس کا مقصد سرکاری مشینری کو فعال اور متحرک بنایا جاسکے جو کام کاج کووِڈ کے سبب سست روی کا شکارہوا ہے۔چیف سیکرٹری نے انتظامی سیکرٹریوں کو فیلڈ اہلکاروں کو مختلف عوامی رسائی سرگرمیوں سے متعلق پوری جانکاری دینے کے لئے کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ 14ویں مالی کمیشن ضلع پلان او رسٹیٹ پلان کے تحت اِلتوا ٔمیں پڑے کاموں کو فوری طور شروع کرنے کے لئے کوششیں کی جانی چاہئیں۔ اِس کے علاوہ تکمیل کے مختلف مراحل میں مختلف جاری کاموں میں سرعت لائی جانی چاہئے ۔ اِنتظامی سیکرٹریوں کو اپنے افسروں کو فیلڈ کاموں کے لئے ڈیوٹی روسٹر کے مطابق تعینا ت کرنے کے لئے کہا، تاکہ ع

کے اے ایس افسران کی سینارٹی کا معاملہ

جموں//جموں وکشمیر حکومت نے 2004 سے 2008 کے بیچوں کے 97 کے اے ایس افسران ، جن میں سے 38 سبکدوش ہوچکے ہیں ، کو ہدایت کی ہے کہ وہ جموں اور سرینگر سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ اپنی سماعت کے لئے کمیٹی کے سامنے حاضر ہوں۔38 ریٹائرڈ افسران سمیت 97  نے اپنے اعتراضات داخل کردیئے ہیں۔اس سلسلے میں محکمہ عمومی انتظامی کی طرف سے ایک نوٹیفکیشن جاری کیاگیاہے جس کے مطابق ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ ذاتی طور پران کے اے ایس افسران کی سماعت ہوگی جنہوں نے سینارٹی لسٹ کے حوالے سے اعتراضات جمع کروائے ہیں۔یہ کمیٹی جموں وکشمیر ایڈمنسٹریٹو سروس کے ممبروں کی سنیارٹی لسٹ کے حوالے سے موصول ہونے والے اعتراضات کے ازالے کے لئے تشکیل دی گئی تھی ، جو یکم جنوری 2004 سے یکم دسمبر 2008 کے دوران جموں و کشمیر انتظامی خدمات کے ٹائم اسکیل پرمقرر ہوئے۔کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ 97 افسران کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ ذاتی طور پر

بیک ٹو ولیج کا تیسرا مرحلہ | ہرپنچایت کیلئے 10 لاکھ روپے کی منظوری

جموں//محکمہ عمومی انتظامی نے جموں وکشمیر میں تیسرے مرحلے کے تحت بیک ٹو ولیج کے کاموں پر عمل درا?مد کے لئے ہر پنچایت کو 10 لاکھ روپے کی گرانٹ کی منظوری دی۔جی ڈی اے کی جانب سے 2 اکتوبر سے 12 اکتوبر 2020 ء  تک شروع ہونے والے مجوزہ بیک ٹو ولیج پروگرام کے پیش نظر جاری کردہ حکم میں لکھا گیا ہے ’’ان پنچایتوں میں کھیلوں کی کٹوں کی خریداری کے لئے خاص طور پر 2000 روپے رکھے جائیں گے‘‘۔جی اے ڈی نے تمام ضلع افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنی پوسٹنگ کی جگہ پر موجود رہیں تاکہ متعلقہ اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو لوگوں کی شکایات کو دور کرنے کے لئے مدد مل سکے۔محکمہ کے جاری کردہ حکم میں کہا گیا ہے ’’بیک ٹوولیج تیسرے مرحلے کے پروگرام کے دوران میڈیکل ایمرجنسی کے بغیر کسی بھی طرح کی چھٹی کی منظوری نہیں دی جائے گی‘‘۔اس کے علاوہ تمام انتظامی سکریٹریوں کو ہدایت کی

رگھوناتھ ، رامیشور اور پنج بختر مندروں میں حاضری دی

جموں//لفٹینٹ گورنر گورنر منوج سنہا نے رگھوناتھ ، رامیشور اور پنج بختر مندروں میں حاضری دی اور وہاں شردھالوؤں کیلئے دستیاب سہولیات کا جائیزہ لیا ۔ انہوں نے مندروں میں حاضری دی اور جموں کشمیر یو ٹی کیلئے امن ، ترقی اور خوشحالی کیلئے پرارتھنا کی ۔ لفٹینٹ گورنر نے تاریخی رگھوناتھ بازار اور ریذیڈنسی روڈ علاقے کا پیدل دورہ کر کے مقامی لوگوں ، دکانداروں ، تاجر انجمنوں کے عہدیداران بشمول رگھوناتھ بازار ایسوسی ایشن اور کنک منڈی ایسوسی ایشن کے عہدیداران کے ساتھ تبادلہ خیال کیا ۔ انہوں نے کووِڈ 19 وباء کے سبب لوگوں اور تاجر طبقے کو درپیش مشکلات کے بارے میں جانکاری حاصل کی ۔ لوگوں کی آراء کو ایک جوابدہ اور فعال انتظامیہ کیلئے لازمی قرار دیتے ہوئے لفٹینٹ گورنر نے لوگوں کو آگے آ کر اپنے مسائل اور شکایات پیش کرنے اور انتظامیہ کی کارکردگی سے متعلق باقاعدگی سے اپنی رائے پیش کر کے ترقیاتی عمل میں فع

جگتی ٹاؤن شپ میں کشمیری پنڈتوں کے مسائل سنے

جموں//لفٹینٹ گورنر منوج سنہا نے جگتی ٹاؤن شپ کے دورے کے دوران کہا کہ معاشرے کے ہر طبقے کی فلاح و بہبود اور جموں کشمیر کے عوام کے حقوق کا تحفظ یو ٹی حکومت کی اولین ترجیح ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر میں ترقی کا نیا باب شروع کرنے کیلئے موجودہ حکومت یکساں اور کلہم ترقی کے ایجنڈا پر کام کر رہی ہے ۔ جگتی ٹاؤن شپ کے رہایش پذیر لوگوں نے لفٹینٹ گورنر کو کشمیری پنڈت طبقے کی فلاح و بہبود سے متعلق مختلف معاملات کے بارے میں جانکاری دی جن میں کشمیری پنڈتوں کی مستقل باز آباد کاری ، امدادی رقم میں اضافہ ، کشمیری پنڈتوں کو صنعتکاری اور تجارت اور کشمیر میں اُن کی املاک کو ہوئے نقصان کے معاوضے کے طور پر مالی پیکیج کی مانگ کی ۔ انہوں نے کشمیر میں اُن کی املاک کی بازیافت کی بھی مانگ کی ۔ جگتی ٹاؤن شپ میں رہ رہے لوگوں نے لفٹینٹ گورنر کو مانگوں کی ایک یاداشت پیش کرتے ہوئے مختلف اہمیت کے حامل مسائل اُ

نقلی ادویات سے 11بچوں کی موت کا معاملہ

جموں//قومی انسانی حقوق کمیشن (این ایچ آر سی) نے پیر کے روز جموں و کشمیر انتظامیہ کو دسمبر2019 کے دوران اور امسال جنوری میں ادھم پور ضلع میںغیر موزون دوائیاں کھانے کی وجہ سے فوت ہونے والے 11 بچوں کے اہل خانہ کو معاوضے کے لئے  وجہ بتائو نوٹس جاری کیا ہے۔چیف سکریٹری سے چار ہفتوں کے اندر وضاحت دینے کیلئے کہا ہے۔نوٹس میںکہا گیا ہے کہ کمیشن ہر بچے کے لواحقین کو تین لاکھ روپے معاوضے کی ادائیگی کی سفارش کیوں نہیں کرے گا۔جموں کے سماجی کارکن سوکیش سی کھجوریہ کی جانب سے کی جانے والی شکایت کا جائزہ لیتے ہوئے NHRC نے’مجرم عہدیداروں‘ کے خلاف بھی کارروائی کی ایک رپورٹ طلب کی ، جس کی وجہ سے اس طرح کی غفلت ہوئی ہے۔کھجوریہ نے اپنی درخواست میں ضلع کی تحصیل رام نگر کے مختلف علاقوں میں غفلت برتنے والے سرکاری اہلکاروں کے خلاف کارروائی اور متاثرہ کنبوں کیلئے معاوضہ طلب کیا ہے جو اپنے بچوں ک

ایس ایچ او اکھنور سمیت6اہلکار کورونا مثبت ظاہر،پولیس سٹیشن بند

سرینگر//جموں صوبے کے پولیس حکام نے ہفتہ کو پولیس سٹیشن اکھنور اُس وقت بند کرنے کے احکامات صادر کئے جب مذکورہ تھانے کے سٹیشن ہاوس آفیسر (ایس ایچ او) سمیت6اہلکار کورونا وائرس میں مبتلاءپائے گئے۔  سب ڈویژنل پولیس آفیسر اکھنور اجے شرما کا حوالہ دیتے ہوئے نیوز ایجنسی کے این او نے لکھا کہ اکھنور پولیس سٹیشن اور پلن والا پولیس پوسٹ کواگلے احکامات تک بند کیا گیا ہے۔ اکھنور پولیس سٹیشن میں تعینات ایس ایچ او سمیت چھ اہلکار اور پلن والا پوسٹ میں تعینات تین اہلکاروں کے کورونا ٹیسٹ رپورٹ گذشتہ روز مثبت ظاہر ہوئے تھے۔

تازہ ترین