زائد از دو ماہ بعد جموں میں تجارتی سرگرمیاں بحال

جموں// کورونا لاک ڈائون کے چوتھے مرحلے میں دی گئی نرمیوں کے تحت بدھ کو صوبہ جموں میں 63 دنوں کے بعد تجارتی سرگرمیاں مشروط طور پر جبکہ وادی کشمیر میں محدود پیمانے پر بحال ہوئیں۔جموں کے تمام بازاروں میں بدھ کو زائد از دو ماہ کے بعد رونق لوٹ آئی اور لاک ڈاؤن مرحلہ چار کے تحت تمام دکانیں کھلی رہیں۔ سڑکوں پر لوگوں اور نجی گاڑیوں کی نقل و حمل بھی جاری رہی اور لوگوں کو دکانوں پر سماجی دوری کو برقرار رکھتے ہوئے مختلف چیزوں کی خریداری کرتے ہوئے دیکھا گیا۔جموں وکشمیر میں وادی کے دس میں سے آٹھ اضلاع کو ریڈ زون کے زمرے میں رکھا گیا ہے۔ بانڈی پورہ اور گاندربل اضلاع کو آرینج زون میں رکھا گیا ہے۔ریڈ زون قرار دیے گئے اضلاع میں اشیائے خورد نوش جیسے پھل، سبزیوں اور بیکری وغیرہ کے دکانوں کو ہی محدود وقت تک کھلے رہنے کی اجازت ہوگی نیز نجی دفاتر میں صرف 33 فیصد ملازمین کی حاضری کی اجازت دی گئی ہے۔ 

تعلیمی اداروں میں داخلہ

جموں //جموں وکشمیر کے تعلیمی اداروں میں داخلہ کیلئے آج تک چلنے والی پشتنی باشندہ سرٹیفکیٹ کی جگہ اب ڈومیسائل سرٹیفکیٹ نے لے لی ہے ۔محکمہ عمومی انتظامی کی طرف سے اس سلسلے میں ایک سرکیولر جاری کیاگیاہے جس کے مطابق ’’یہ فیصلہ لیاگیاہے کہ مستقل پشتنی باشندہ سرٹیفکیٹ کی تعلیمی اداروں میں داخلوں میں ضرورت کی جگہ اب ڈومیسائل سرٹیفکیٹ نعم البدل ہوگی ‘‘۔سرکیولرکے ذریعہ تمام انتظامی سیکریٹریوں سے کہاگیاہے کہ وہ جہاں بھی ضرورت ہو فوری طور پر قوانین میںتبدیلی لائیں ۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ جموں وکشمیر تنظیم نو ایکٹ 2019کے تحت کئی آئینی تبدیلیاں عمل میں لائی گئیں اورچند روز قبل ہی حکومت نے ڈومیسائل قانون کیلئے بھی حکمنامہ جاری کرتے ہوئے جموں وکشمیر میں اس کا نفاذ کیا ۔  

شبِ قدر کے موقعہ پرلیفٹیننٹ گورنر کی مبارکباد

جموں//لفٹینٹ گورنر گریش چندر مرمو نے جموں کشمیر یونین ٹیر ٹری کے لوگوں کو شبِ قدر کے موقعہ پر مبارکباد پیش کی ۔اپنے مبارکبادی کے پیغام میں لفٹینٹ گورنر نے تمنا ظاہر کی کہ یہ مقدس رات یو ٹی کے عوام کیلئے امن و خوشحالی ، بھائی چارے ، اور یگانگت کی نوید لیکر آئے ۔ انہوں نے یونین ٹیر ٹری کے لوگوں کی خیر و عافیت کیلئے دعا کی ۔ لفٹینٹ گورنر نے موجودہ صورتحال کے پیش نظر انتظامیہ کی جانب سے جاری کئے گئے قواعد و ضوابط اور رہنما خطوط پر عمل پیرا رہنے کی لوگوں سے اپیل کی ۔     

جموں کشمیر وارد ہونے والوں کا صد فیصد ٹیسٹ کرنا لازمی

جموں//چیف سیکریٹری بی وی آر سبھرامنیم نے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹوں اور ڈسٹرکٹ پولیس سپرانٹنڈنٹوںکے ساتھ بذریعہ ویڈیو کانفرنس میں اس نوعیت کے پہلے تبادلہ خیال کے دوران کہا کہ اگرچہ لاک ڈاؤن 4.0 کے تحت لوگوں کی آوا جاہی اور معاشی سرگرمیوں کیلئے پابندیوں میں نرمی لائی جا رہی ہے تا ہم اس سطح پر ہم کسی بھی کوتاہی کے متحل نہیں ہو سکتے اور جموں کشمیر میں کووڈ 19 کے پھیلاؤ پر روک لگانے کیلئے اعلیٰ سطح پر کڑی نگرانی کو یقینی بنانا ہو گا ۔ چیف سیکریٹری مرکزی حکومت کی جانب سے لاک ڈاؤن اقدامات کے سلسلے میں جاری نئے رہنما خطوط کے سلسلے میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے تھے ۔ چیف سیکریٹری نے کہا کہ لاک ڈاؤن اقدامات کے سلسلے میں جاری رہنما خطوط پر سختی سے عمل پیرا ہونا لازمی ہے تا کہ اب تک اس ضمن کی حصولیابی کو برقرار رکھا جا سکے ۔ چیف سیکریٹری نے کہا کہ یونین ٹیر ٹری میں لاک ڈاؤن 4.0 لاگو کرنے سے پہلے ہ

تازہ ترین