تازہ ترین

ہانگل کی تعداد بڑھانے پر توجہ مرکوز کی جائے

جموں//جموں کشمیرکے لیفٹینٹ گورنر منوج سنہا نے بدھوار کو محکمہ جنگلات کو داچھی گام کی قومی پارک میں ’ہانگل‘کی تعداد میں اضافہ کرنے پرتوجہ مرکوزکرنے پرزوردیتے ہوئے کہا کہ اس جگہ کومحدود تعداد میں سیاحوں کیلئے کھول دینا چاہیے۔سنہا یہاں 98فارسٹ گارڈوں کی پاسنگ آوٹ پریڈ پرسلامی لے رہے تھے۔سوئل کنزرویشن اسکول جموں کے32ویں بیچ ،فارسیٹ گارڈ ٹرینگ اسکول جموں کے56ویں بیچ ،اور کشمیر فارسٹ اسکول بانڈی پورہ کے66ویں بیچ نے عالمگیر وباء کے باوجود کامیابی کے ساتھ اپناکورس مکمل کیا۔لیفٹینٹ گورنر نے محکمہ جنگلات سے کہا کہ وہ داچھی گام پارک کو ایک سیاحتی مقام کے طور بنانے کے امکانات کو تلاش کریں ،جموں میں مانسراور سرنسر جھیلوں کو تحفظ فراہم کرنے اورہرسال لاکھوں مہاجر پرندوں کے مسکن آبی ذخائر کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے اقدام کریں ۔سنہا نے پوچھا کہ پانچ روز قبل میں نے داچھی گام کادورہ کیا،وہاں

پنچایتی اداروں کا دیہی ترقی میں کلیدی رول :بصیر خان

 کٹھوعہ//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیربصیر احمد خان نے کہا کہ موجودہ حکومت نے پنچایتی راج اداروں کو بااختیار بنانے کے لئے اقدامات اُٹھائے ہیں تاکہ جمو ں وکشمیرکے دیہی علاقوں کی ہمہ جہت تعمیر و ترقی یقینی بن سکے۔مشیر بسوہلی اور کٹھوعہ میں پنچایتی راج اداروں کے منتخبہ نمائندگان کے ساتھ تبادلہ خیال کر رہے تھے۔مشیر نے کہا کہ ضلع ترقیاتی کونسل ، بلاک ڈیولپمنٹ کونسل اور پنچایتوں کے منتخبہ ارکان کا دیہی علاقوں میں اثاثوں کی منصوبہ بندی میں بڑا کردار ہے ۔انہوں نے کہا کہ سہ سطحی نظام قائم کیا گیا تاکہ مقامی آبادی کی ضروریات کے مطابق دیہی علاقوں کی ترقی یقینی بن سکے۔واٹر سپورٹس سینٹر اور ٹورسٹ ریسیپشن سینٹر کے لئے جگہ کا معائینہ کرتے ہوئے مشیر نے کہا کہ سال بھر میں کثیر تعداد میں سیاحوں کے لئے بسوہلی میں سیاحتی ڈھانچے کو تیار کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت بسوہلی مصوری اور مقامی پشمینہ کی بڑے پیما

کرشنا ڈابہ ہلاکت کیخلاف جموں میں تاجروں کا احتجاج

 جموں //سری نگر میں ایک کرشنا ڈابہ کے مالک کے بیٹے کے حالیہ قتل کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے تاجروں کے ایک گروپ نے بدھ کے روز وادی کشمیر میں کام کرنے والے غیر مقامی تاجروں کی حفاظت اور سلامتی کا مطالبہ کیا۔تاجروں نے نہرو مارکیٹ میں مہرا کے قتل کے خلاف مظاہرہ کیا اور حکومت سے اپیل کی کہ حملہ آوروں کی جلد سے جلد شناخت کی جائے۔ویئر ہائوس ٹریڈرس فیڈریشن کے جنرل سکریٹری دیپک گپتا نے بتایا "کشمیر میں ملی ٹنٹ غیر مقامی تاجروں کو نشانہ بنا رہے ہیں ، یہ اچھی علامت نہیں ہے ۔جس طرح سے کشمیر میں باہر سے آنے والے تاجروں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ، خوف کی فضا پیدا کی جارہی ہے"۔انہوںنے کہاکہ اگست 2019 میں آئین کے آرٹیکل 370 کو منسوخ کرنے کے بعد حکومت پورے ملک کے تاجروں اور صنعت کاروں کو جموں و کشمیر میں سرمایہ کاری کے لئے مدعو کررہی ہے تاہم اس طرح کی صورتحال میں وادی میں کون آئے گا۔گپتا

کانگریس میں اٹھا بھوال تھمنے کا نام نہیں لیتا

جموں//کانگریس پارٹی کے رہنماؤں نے راجیہ سبھا میں سابق قائد حزب اختلاف غلام نبی آزاد کی حمایت میں نکل کر اپنے قائد کا پتلا جلانے کے اقدام کی مذمت کی۔شاہنواز چودھری کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کانگریس کے رہنما اور سابق ممبر اسمبلی اکرم چودھری کے ساتھ قانون ساز کونسل کے سابق ڈپٹی چیئرمین جہانگیر میر نے غلام نبی آزاد کا دفاع کیا۔میر نے کہا "وہ(آزاد ) کبھی بھی کانگریس پارٹی یا تقسیم کے خلاف بات نہیں کرتے ہیں " ۔میر نے کہا کہ وہ ایک بہت اہم سیاسی رہنما ہیں جو مہاتما گاندھی کے پیروکار ہیں۔ان کا کہناتھا’’یہ آزاد کے خلاف سپانسرڈ احتجاج تھا اور میں اس کی مذمت کرتا ہوں‘‘۔ان کاکہناتھا کہ لوگوںخاص طور پر کانگریس پارٹی میں پتلا جلانے کے اقدام کے خلاف غم و غصہ پایا جاتا ہے۔میر نے کہا کہ "آپ پارٹی کے آئین کے خلاف جانے پر شاہنواز کے خلاف کارروائی د

تمام طبقوں کی بہبود حکومت کی اولین ترجیح:منوج سنہا | اَپنی پارٹی کی خواتین شاخ کی صدر اورسیاسی کارکن لیفٹیننٹ گورنر سے ملے

جموں//جموںوکشمیر اَپنی پارٹی کی خواتین شاخ کی صوبائی صدر محترمہ نمرتا شرما نے یہاں راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے ملی ۔محترمہ نمرتا شرما نے لیفٹیننٹ گورنر کو خواتین کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا جن میں خواتین کو ابااختیار بنانے کے لئے سیاسی ریزرویشن اور سماجی و معاشی ترقی کے دیگر مسائل ان کے ساتھ اُٹھائے۔اُنہوں نے خواتین کے لئے قائم کی گئی سیلز کو مستحکم بنانے ، کونسلنگ اور قانونی امداد مراکز قائم کرنے ، خواتین کی بہبود کے لئے کمیٹیاں تشکیل دینے ، لڑکیوں کے لئے ہائیرسکینڈری سطح تک مفت تعلیم فراہم کرنے اور جموںوکشمیر کے صنعتی شعبے میں خواتین کی شمولیت کو حوصلہ افزائی جیسے مانگیں پیش کیں۔دریں اثنا سیاسی کارکن اشفاق الرحمان پوسوال بھی لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے ملے اور انہیں گجر بکروال طبقے کے فلاحی مسائل پر مشتمل ایک یاد داشت پیش کی ۔جن میں اس طبقے کے لئے ریزرویشن، خانہ بدوشوں

تازہ ترین