یوم جمہوریہ کے پیش نظر جموں میں بین الاقوامی سرحد پر ہائی الرٹ: بی ایس ایف

جموں// یوم جمہوریہ کے پیش نظر کسی بھی ناخوشگوار واقعے کو پیش آنے سے روکنے کے لئے بی ایس ایف نے سرحد پر ہائی الرٹ جاری کر دیا ہے۔   بی ایس ایف کے ایک ترجمان نے پیر کو اپنے ایک بیان میں کہا کہ موجودہ سیکورٹی صورتحال اور انٹلی جنس رپورٹس کے پیش نظر بی ایس ایف کو بین الاقوامی سرحد پر ہائی الرٹ پر رکھ دیا گیا ہے۔   بیان میں کہا گیا کہ نامساعد موسمی حالات کے باوجود بھی بی ایس ایف اہلکار سرحد پر بڑے پیمانے پر انٹی ٹنل ڈرائیو اور خصوصی گشت کو جاری رکھے ہوئے ہیں۔   انہوں نے بیان میں کہا کہ سرحد پر کڑی نگرانی و تسلط کو مزید مستحکم کرنے کے لئے فورسز اہلکاروں کو متحرک کر دیا گیا ہے۔   موصوف ترجمان نے اپنے بیان میں کہا کہ سرحد پر مشکوک سرگرمیوں پر کڑی نظر گذر رکھی جا رہی ہے اور ملک دشمن عناصر کی طرف سے کسی بھی نا موافق کوشش کو ناکام بنانے کے لئے

جموںوکشمیر کے نوجوانوںمیں بے پناہ صلاحیتیں موجود: ایل جی | قوم کا نام بلند کرنے کیلئے مواقع اور نمائش کے مستحق

جموں// جموں وکشمیرکے الپائن سکائر عارف محمد خان جنہوں نے بیجنگ میں سرمائی اولمپکس کیلئے کوالیفائی کیا ہے ،نے راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے ملاقات کی۔لیفٹیننٹ گورنر نے عارف خان کو ایک نادر کارنامہ اَنجام دینے پر مبارک باد دی اور سرمائی اولمپکس کوالیفائر کے لئے نیک خواہشات کا اِظہار کیا۔لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے کہا،’’ پوری قوم عارف خان کی لگن اور سپورٹس مین شپ سے متاثر ہے ۔ میں سب سے گزارش کرتا ہوں کہ اِس کا ساتھ دیں ۔ اِس کے لئے نیک تمنائیں اور اِس کی جیت کے لئے دعا کریں ۔‘‘اُنہوں نے سرمائی اولمپکس کوالیفائر کی ستائش کی جس نے جموںوکشمیر یوٹی کے نوجوانوں اور اُبھرتے ہوئے کھلاڑیوں کے لئے ایک ناقابلِ یقین مثال قائم کی۔اُنہوں نے کہا کہ جموںوکشمیر کے نوجوان بے حد باصلاحیت ہیں اور اَپنی صلاحیتوں کو ظاہر کرنے کے لئے مزید مواقع اورنمائش کے مستحق ہیں ۔ ہم

جموں صوبہ میں مزید1754کورونا سے متاثر،3فوت | جموںضلع میں1075،ڈوڈہ میں140جبکہ رام بن میں176شامل

جموں// جموں صوبہ میں کورونا کی لہر جاری ہے ۔سنیچر کو صوبہ بھر میں مزید1754افرادکورونا وائرس سے متاثر پائے گئے جبکہ مزید03لوگ اس وائرس کی وجہ سے موت کی ابدی نیند سوگئے۔ حکومتی اعدادوشمار کے مطابق جموں ضلع میں 1075، ریاسی میں 48، ادھم پور میں 115، راجوری میں 35، ڈوڈہ میں 140، کٹھوعہ میں 83، سانبہ میں 47، پونچھ میں 10، کشتواڑ میں 26 کیس رپورٹ ہوئے جبکہ رام بن میں جموں کے بعد سب سے زیادہ 176 نئے کیس رپورٹ ہوئے۔جموں ڈویژن کے 997 افراد صحت یاب ہو کر ہسپتالوں سے فارغ ہو چکے ہیں۔جموں ڈویژن میں ایکٹو پازیٹو 13233 کیس اس وقت بھی ہیں جبکہ جموں ڈویژن میںاب تک مجموعی طور پر 2249 افرادکی موت ہوئی ہے۔ڈوڈہ میںکووڈ 19 کے 140 نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیں اور 10 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق اتوار کے روز ڈوڈہ ضلع کے مختلف مقامات پر ہوئی کووڈ جانچ کے دوران 140 افراد کی ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئی ہے ج

جموں ضلع میں 300 سے زیادہ ڈاکٹر،نیم طبی عملہ کے ممبران کورونامثبت

جموں//محکمہ صحت کے 300 سے زیادہ ڈاکٹر اور پیرا میڈیکل عملہ کے ممبران، جو جموں ضلع میں مختلف مقامات پر لوگوں کے نمونے لینے والی ٹیموں کا حصہ تھے،کااپنا کووڈ 19ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔محکمہ صحت کے ایک عہدیدار نے کہا کہ ضلع بھر میں محکمہ صحت کی جانب سے 53 سے زائد ٹیموں کی تعیناتی کے ساتھ نمونے لینے کا عمل تیز کردیا گیا ہے۔ عہدیدار نے کہا کہ ٹیم کے بہت سے ارکان جو مختلف جگہوں سے کووڈ کے مشتبہ مریضوں کے نمونے لیتے ہیں ،وہ بھی وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ان کا کہناتھا’’محکمہ صحت کے 300 سے زیادہ ڈاکٹر اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے ارکان وائرس سے متاثر ہوئے ہیں‘‘۔انہوںنے بتایا کہ وہ ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملے کے ارکان کو شفٹوں میں تعینات کر رہے ہیں۔ان کا کہناتھاکہ "سات دن کی تنہائی اور طبی دیکھ بھال کے بعدڈاکٹر اور عملے کے دیگر ارکان ڈیوٹی جوائن کر رہے ہیں اور وائرس سے متاثرہ دیگر

جموں یونیورسٹی میںآج سے دوبارہ کام کاج بحال ہوگا

 جموں//جموں یونیورسٹی کئی دنوں تک بند رہنے کے بعدآج یعنی پیر سے اپنا کام دوبارہ شروع کرنے جا رہی ہے۔یونیورسٹی کے رجسٹرار نے کیمپس میں کووڈ 19 مثبت کیسوں میں اضافے کے بعد ملازمین سے 21 جنوری 2022 تک گھر سے کام کرنے کا حکم جاری کیا تھا۔یونیورسٹی کے ایک عہدیدار نے رجسٹرار کے حکم کا حوالہ دیتے ہوئے تصدیق کی کہ یونیورسٹی آج یعنی پیر سے کھل رہی ہے۔ان کاکہناتھا"یونیورسٹی آج یعنی 24 جنوری 2022 سے تمام ضروری کووڈ ایس او پیز کے بعد تمام کووڈ 19 منفی ملازمین کی مکمل حاضری کے ساتھ اپنا معمول کا کام دوبارہ شروع کر دے گی۔ اس سلسلے میں جے اینڈ کے حکومت/یونیورسٹی کی طرف سے دیگر ہدایات جای کی گئی ہیں‘‘۔خیال رہے کہ کیمپس کو اس وقت بند کر دیا گیا تھا جب جانچ کے تین دنوں میں تقریباً 44 کووڈ 19 مثبت کیس بشمول سکالر، پروفیسر اور دیگر عملے کے ارکان بشمول وائس چانسلر سیکرٹریٹ کے ایک ا

جتیندر سنگھ نے اپنے لوک سبھا حلقہ میں کووڈ صورتحال کا جائزہ لیا | ادھم پورہ ،ڈوڈہ ،کشتواڑ ،رام بن اور ریاسی میں کھیل سرگرمیوں پرہدایات جاری

 جموں//مرکزی وزیر مملکت جتیندر سنگھ نے اتوار کو کورونا وائرس کی تیسری لہر کے تناظر میں اپنے لوک سبھا حلقہ میںکووڈ19 وبائی صورتحال اور دیگر متعلقہ امور کا عملی طور پر جائزہ لیا۔انہوں نے ادھم پور۔کٹھوعہ۔ڈوڈہ لوک سبھا حلقہ کے ڈپٹی کمشنروں، ڈی ڈی سی چیئرپرسنز اور ایس ایس پیز کے ساتھ میٹنگ کی۔سنگھ نے ریئل ٹائم اپڈیٹس کے لیے اضلاع میں ڈیش بورڈ کی دستیابی اور کام کے بارے میں دریافت کیا اور معاملات میں اضافے سے نمٹنے کے لیے تازہ ہدایات بھی جاری کیں۔ضلع کلکٹر، ایس ایس پیزکٹھوعہ، ادھم پور، ڈوڈہ، ریاسی، کشتواڑ، اور رام بن کے ڈی ڈی سی چیئرمین دیگر ضلعی عہدیدار جائزہ میٹنگ میں شامل ہوئے۔وزیر کو بتایا گیا کہ تیسری لہر میں زیادہ تر کیس غیر علامتی یا ہلکے علامات والے ہیںاورفلو جیسی علامات جو چار سے پانچ دن تک رہتی ہیں اور پھر ختم ہو جاتی ہیں۔سنگھ نے اس بات پر زور دیا کہ خوش فہمی کی کوئی گنجائش نہ

تازہ ترین