تازہ ترین

ہستی میں ایسا فرد کیا با بخت نہیں ہے؟

رحلت کا مری گو کہ ابھی وقت نہیں ہے جینے کا مگر دیر تک بھی بخت نہیں ہے راہِ عدم کا سلسلہ ہے ازل سے دراز آسان سفر ہے یہ مگر مفت نہیں ہے ذی فہم جو بھی چھوڑ دے یادوں کے ہیولے ہستی میں ایسا فرد کیا بابخت نہیں ہے لازم یہی ہے امر تم نپٹائو سب شتاب آلس کو میاں چھوڑیئے اب وقت نہیں ہے شاہ و گدا کا آخرش مقسوم ہے اَجل تابع ہے ان کے سلطنت پر وقت نہیں ہے یہ کھیل سب ہے گردشِ لیل و نہار کا چھوڑا اجل نے تاج اور تخت نہیں ہے مدت سے درِ دوست پہ سجدہ گزار ہوں ملتا مگر عُشّاقؔ وہ دل سخت نہیں ہے   عُشّاق ؔکِشتواڑی صدر انجُمن ترقٔی اُردو (ہند) شاخ کِشتواڑ موبائل نمبر؛ 9697524469  

قطعات

جوانی میں کی ہے بہت سینہ کاوی رہی ہے مگر شومئی قسمت ہی حاوی سرِعام دُکھڑا سنانے کو اپنا بنا ہوں یہ دیکھو میں اپنا ہی راوی  ��� طبیعت میری ہے یارو مر نجانِ مرنج دُکھ ہوتا مجھے ہے گر پہنچے کسی کو  رنج میں دُنیا میں چاہتا ہوں سب کا ہو بھلا پسند ہے وہ جو پہنچائے نا کسی کو رنج ��� جب آدمی کو دبوچ لیتا ہے بُڑھاپا دُکھتا ہے پھر اس کا سارا ہی سراپا بنتا چِڑ چِڑا پن مزاج کا حصہ یکسر ہی بدل جاتا ہے پھر آپ اور آپا ��� آغوش کا پروردہ جب طوطا چشمی کرے ایسا لگے دل و جگر میںجیسے کوئی نیزہ بھرے ایسا نہیں ہے دُنیا میں وِشواس گھات کوئی جب آخری ایام میں اولاد رہے پرے   غلام نبی نیّرؔ کولگام، کشمیر،موبائل نمبر؛9596047612      

تازہ ترین