کانگڑی ثقافت کا حصہ،اس سے کورونا نہیں پھیلتا؛ طبی ماہرین

 سرینگر //جموں و کشمیر سمیت بھارت کے دیگر مرکزی زیر انتظام علاقوں اور ریاستوں میں سردی کے ایام کے دوران کورونا وائرس کو روکنے کیلئے بدھ کو نئے رہنما خطوط جاری کئے گئے ، جن میںکورونا وائرس متاثرین کو قرنطین کرنے اور اُن کے رابطوں کا پتہ لگانے کیلئے 72گھنٹوں کا وقت مقررکیا گیا ہے ۔وہیں وادی میں وبائی بیماری کے ماہرین کا کہنا ہے کہ دوران قرنطین کورونا وائرس مریضوں کوگرمی کیلئے ایئر کنڈیشنروں اور بلووروں کا استعمال کرنے سے گریز کرنا چاہئے تاہم کورونا وائرس مریض گرمی کیلئے کشمیر کانگڑی کا استعمال کرسکتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کشمیری کانگڑی ثقافت کا حصہ ہے اور اس سے کورونا وائرس بھی نہیں پھیلاتا ہے۔کشمیر میں وبائی بیماریوں کے ماہر اور ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر نثارلحسن کہتے ہیں کہ کانگڑی ثقافت کا حصہ ہے اور سردیوں میں گرمی فراہم کرکے یہ لوگوں کی جان بچاتی ہے۔ڈاکٹر نثارالحسن&nbs

روشنی ایکٹ| سی بی آئی کا سابق وزیر اوردیگراں کیخلاف معاملہ درج

نئی دہلی//حکام کے مطابق مرکزی تفتیشی ادارے ’سی بی آئی‘نے جموں کشمیرکے سابق وزیرتاج محی الدین کو مبینہ طور تجاوزکی گئی جنگلاتی اراضی کو غیرقانونی طور روشنی ایکٹ قانون کے تحت اپنے نام کرانے پر کیس درج کیا ہے۔تاج محی الدین کے علاوہ سابق ریاست جموں کشمیرکے سابق کانگریسی وزیرمحمدرمضان ٹھوکر،شوپیان کے سابق ڈپٹی کمشنرمحمدیوسف زرگر،اس وقت کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرحفیظ اللہ شاہ،اس وقت کے اسسٹنٹ کمشنرمال غلام حسن راتھراور اس وقت کے تحصیلدار کے خلاف بھی معاملہ درج کیاگیا ہے۔ حکام کے مطابق سی بی آئی کومرکزی زیرانتظام علاقہ جموں کشمیرکے انسدادرشوت خوری ادارے اینٹی کورپشن بیوروکی طرف سے ایک شکایت موصول ہوئی،جو اب ایف آئی آرکاحصہ ہے ۔اس وقت کے شوپیان کے تحصیلدار نے 16جون2007کوریاستی اراضی کے قابضین کومالکانہ حقوق دینے کے 190معاملات کوپروسیس کرکے ٹھاکور کی سربراہی میں ایک کمیٹی کوپیش کیا۔ک

حکومت ملک کے آئین کوبھاجپا ایجنڈے میں تبدیل کرکے یوم آئین منا رہی ہے:محبوبہ

سرینگر//بلال فرقانی// پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے مرکزی حکومت پر’’ ملک کے آئین کو اپنے ایجنڈے میں تبدیل کرکے’’ یوم آئین‘‘ منانے کا الزام عائد کیا۔اس دوران انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہند کشمیری لیڈروں کو ہراساں کر رہی ہے۔سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر محبوبہ مفتی نے پیغام درج کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہند ملک کے آئین کو بی جے پی کے ایجنڈے میں تبدیل کرکے یوم آئین منا رہی ہے،جس پر میں حیران ہو ں۔انہوں نے کہا کہ ملک میں ایسے غیر آئینی قوانین بنائے جا رہے ہیں جس سے ہٹلر کی حکومت بھی شرمسار ہورہی ہوگی۔ انہوں نے تحریر کیا’’ یہ حیران کن ہے حکومت ہند’’یوم آئین‘‘ منا رہی ہے،اگرچہ انہوں نے پہلے ہی اس کو بی جے پی کی جانب سے لوگوں کو تقسیم کرنے کے ایجنڈے میں تبدیل کیا ہے،سی اے اے(شہری ترمیمی قان

’لاقانونیت اور جنگل راج جیسی صورتحال ‘

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر اور ممبر پارلیمنٹ محمد اکبر لون نے کہا کہ ایک طرف ملک 71واں یوم آئین منا رہا ہے، وہی دوسری جانب بدقسمتی سے 5اگست 2019 کے بعد جموں و کشمیر کے لوگوں کو تمام آئینی اور جمہوری حقوق سے محروم کردیا گیا ہے اور اس عمل سے پورے جموں و کشمیر میں ایک غیر یقینی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔کے این ایس کے مطابق انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر میں اس وقت کسی قسم کی قانون کی پاسداری نہیں ہے جبکہ یہاں پر لاقانونیت اور جنگل راج جیسی صورتحال پیدا کرکے زبردستی قوانین ٹھوسے جارہے ہیں۔انکا کہنا تھا کہ جس ملک میں آئین اور جمہوریت کو بالا تر سمجھا جاتا تھا آج اسی آئین کی سنگین خلاف ورزی کی جارہی ہے۔اکبر لون   نے کہا کہ جموں کشمیر کا رشتہ ہندستان کے ساتھ دفعہ 370اور35 اے کے تحت ہی ہوا تھا اور اس قانون کو ملک کے دونوں ایوانوں نے بھی منظور کیا تھا جبکہ ہندوستان کے اس وقت ک

کشمیر یونیورسٹی میں بیداری پروگرام کا انعقاد

سرینگر // کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد نے جمعرات کے روز کہا کہ ترقی اور ماحولیاتی تحفظ کیلئے ایک دوسرے کے ساتھ  مل کر کام کرنا چاہئے ۔یوم آئین کے موقع پر کشمیر یونیورسٹی میں بیداری پروگرام کے انعقاد پر اپنے خطاب میں انہوں نے ماحولیاتی چیلنجوں اور پریشانیوں کو دور کرنے کیلئے اجتماعی کوششوں پر زور دیا۔تقریب میں وائس چانسلر مہمان خصوصی کے فرایض انجام دے رہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ پائیدار ترقی پر دنیا بھر میں توجہ دی جارہی ہے ، جو ترقیاتی سرگرمیوں اور ماحولیاتی تحفظ کے مابین ٹھیک توازن کو یقینی بنانے سے ہی ممکن ہے۔جنگلات کی کٹائی ، بارش سے آنے والے سیلاب ، آب و ہوا کی تبدیلی اور آلودگی کے مسائل کا ذکر کرتے ہوئے پروفیسر طلعت نے منصوبہ سازوں ، تعلیمی اداروں ، غیر سرکاری تنظیموں اور شہریوں کی مشترکہ کوششوں پر زور دیاتا کہ ماحولیاتی تباہی کو روکنے کیلئے سائنسی اور ما

بھارت کا آئین دنیا کا سب سے اچھا آئین : پروفیسر معراج الدین

گاندربل//سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے محکمہ ڈائریکٹوریٹ اسٹوڈنٹس ویلفیئر فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام گرین کیمپس میں "قومی ماحولیات کے تحفظ اور بہتری کیلئے شہریوں کے فرائض" پر ایک ویبنار کا اہتمام کیا گیا  جس میں کشمیر یونیورسٹی اور وزارت انصاف نے تعاون فراہم کیا۔سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے شعبہ قانون نے بھی یوم آئین منانے کے تحت تولہ مولہ کیمپ میں پروگرام کا انعقاد کیا ۔ تقریبات کے دوران آف لائن اور آن لائن دونوں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے، سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین میر نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ ہندوستان کا آئین دنیا کے سب سے اچھے آئین میں شمار ہوتا ہے۔ ہندوستان عدلیہ ملک کے ہر علاقے میں زات پات،نسل،رنگ،صنف اور مذہب سے بالاتر ہوکر شہریوں کے حقوق اور آزادی کے تحفظ میں قابل ستائش کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئین میں درج کردہ اخلاقی ذمہ داریو

سیاسی لیڈران نے جو وعدے کئے انہیں پورا نہیں کیا

 سرینگر// اپنی پارٹی کے سربراہ و سابق وزیرسید الطاف بخاری نے جمعرات کوبتایا یہاں کے سیاسی قائدین نے72سال تک لوگوں کوصرف وہ خواب دکھائے ہیں جو وہ کبھی کر نہیں سکے ہیں۔انہوںنے بتایاجھوٹی سیاست اور جذباتی نعروں کو دور ختم ہوا اب سچ کی سیاست کا دورشروع ہوا اور سچ ہی چلے گا۔کشمیر نیوز سروس( کے این ایس ) کے مطابق انہوں نے کہایہاں کے قائدین نے آج تک یہاں جذباتی سیاست کی ہے، جس میں ہمارے نوجوان نے اپنی زندگیاں کھوئی اور کچھ حاصل نہیں ہوا ہے ۔الطاف بخاری نے کہا کہ یہاں کے لیڈران کو عوام سے معافی مانگ کر سیاست سے دستبردار ہونا چاہے کیوں کہ وہ آج تک عوام کو سبزباغ دکھاکر گمراہ کر رہے ہیں ۔سابق وزیر نے گپکار عوامی اتحاد میں شامل لیڈان کا نام لئے بغیر اشارہ کرتے ہوئے بتایا کہ ہم نے آج تک بہت بار ان لوگوں کا اتحاد دیکھا ہے ۔انہوں نے بتایا یہ کشمیر کی بقا ء کیلئے نہیں بلکہ یہ کرسیوں کیلئے اتح

نیشنل کانفرنس اور قیادت کیخلاف لگائے جارہے الزامات بے بنیاد: پارٹی لیڈران

سرینگر//جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، سینئر لیڈران عبدالرحیم راتھر، محمد شفیع اوڑی، صوبائی صدور ناصر اسلم وانی، دیوندر سنگھ رانا،خواتین ونگ کی ریاستی صدر شمیمہ فردوس، اراکین پارلیمان محمد اکبر لون اور حسنین مسعودی نے بی جے پی کی طرف سے نیشنل کانفرنس اور اس کی قیادت پر لگائے جارہے بے بنیاد اور منگھڈت الزامات کو بی جے پی جماعت کی بوکھلاہٹ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی قیادت میں جموں و کشمیر کے تینوں خطوں کی سیاسی جماعتوں کے مشترکہ پلیٹ فارم عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ کی مضبوطی نئی دلی اور ناگپور کی دیواریں ہلا کر رکھ دی ہیں۔ اس اتحاد کو جموں ، کشمیر اور لداخ میں جس طرح عوامی حمایت حاصل ہوئی ہے اس سے بھاجپا اور اس کی پوری قیادت گھبراہٹ اور بوکھلاہٹ کی شکار ہوگئی ہے اور اب یہ لو گ اپنی پروپیگنڈا مشینری کا استعمال کرکے نیشنل کانفرنس اور اس

روشنی ایکٹ مستفیدین کے خلاف کارروائی منصفانہ

سرینگر// بی جے پی نے اس بات کی وضاحت کی کالعدم شدہ روشنی اسکیم کے تحت مستفیدین کے خلاف کاروائی غیر منصفانہ نہیں ہے،تاہم جموں کشمیر میں کورپشن کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا۔ بھاجپا کے قومی ترجمان شہنواز حسین نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ جموں کشمیر میں اقتدار کے دوران نیشنل کانفرنس اور پی ڈی پی کے لیڈروں نے اس اسکیم سے فائدہ اٹھایا۔ انہوں نے کہا’’روشنی اسکیم کے تحت مستحقین کے خلاف کاروائی غیر منصفانہ نہیں ہے، کاروائی اور تحقیقات ان سب کے خلاف ہو رہی ہے جنہوں نے اس سے فائدہ اٹھایا،اور براہ مہربانی اس کو جموں کشمیر یا مسلمانوں یا ہندوئوں کے ساتھ منسلک نہ کریں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں ایسی کوئی بھی سیاسی جماعت نہیں ہے جس نے روشنی اسکیم سے فائدہ نہیں اٹھایا۔اس معاملے پر نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ پر نشانہ باندھتے

کپوارہ میں چناوی مہم میں سجاد لون کی شرکت

کپوارہ// ضلع ترقیاتی کونسل کے انتخابات کے پہلے مرحلے کیلئے کی جارہی انتخابی مہم جمعرات کی شام کو اختتام پذیر ہوئی۔انتخابی مہم میں پیپلز الائنس کے ترجمان اور پیپلز کا نفرنس کے چیئرمین سجاد غنی لون نے بھی شرکت کر کے الائنس کے اُمیدوار ایڈوکیٹ مسرت کے حق میں مہم چلائی اور مختلف مقامات پر جلسوں سے خطاب کیا۔کرالہ پورہ ،ٹنگڈار اور کلاروس حلقوں میں اُمیدواروں نے گھر گھر مہم چلائی اور انہیں ووٹ دینے کی اپیل کی۔ٹنگڈار حلقہ سے 13 کلاروس سے 6 اور کرالہ پورہ سے 10 امیدوار میدان میں کھڑے ہیں۔اس مرحلے کے لئے 28 نومبر کو ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔دن بھر امیدواروں نے اپنی مہم ،میں تیزی لائی اور رائے دہندگان کو اپنی طرف لبھانے کی بھر پور کوشش کی۔پیپلز الائنس کی اُمیدوار ایڈوکیٹ میر مسرت کیلئے الائنس کے ترجمان اور پیپلز کانفرنس کے چیئرمین سجاد غنی لون نے مہم میں حصہ لیا اور لوگوں سے خطاب کے دوران کہا کہ وہ گپ

بند سڑکوں کا شاخسانہ

کپوارہ // حالیہ بھاری برف باری کے بعد شمالی کشمیر کے سرحدی علاقوں جن میں کیرن اور مژھل شامل ہیں کی سڑکیں ہنوز بند ہیں جس کی وجہ سے ان علاقوں کے در ماندہ مسافر ووٹ ڈالنے کی غرض سے اپنے اپنے منزلوں کی طرف پیدل چلے پڑے ہیں۔مژھل کے درماندہ مسافر ایک روز قبل کپوارہ میں اس بات کو لیکر احتجاج کر رہے تھے کہ ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات کیلئے انہیں کلاروس او ر کمریال میں ووٹ ڈالنے کا حق دیا جائے ،تاہم ضلع انتظامیہ نے ایسا نہیں کیا۔جمعرات کی صبح کو مژھل سے تعلق رکھنے والے در ماندہ مسافر زیڈ گلی مژھل تک گاڑی میں گئے تاہم گلی پر بھاری برف باری کی وجہ سے وہ ز یڈ گلی سے مژھل کیلئے پیدل روانہ ہوئے۔اس دوران بھاری برف باری کی وجہ سے کیرن میں الیکشن مہم چلانے کے دوران پھنسے درماندہ اُمیدوار جمعرات کے روز پاترو کیرن سے فرکیاں گلی تک پیدل واپس آئے۔ایک آزاد امید وار رفیقہ بیگم نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ ا

لتر پلوامہ میں بجلی محکمہ کیخلاف احتجاج

پلوامہ// پلوامہ کے رکھ لیترمیں 63کے وی ٹرانسفامر کی باربار خرابی سے تنگ آکر لوگوں نے پلوامہ سنگم روڑ پر دھرنا دیکر زوردار احتجاج کیا ۔ احتجاج کے دوران علاقے میں کچھ وقت تک ٹریفک کی نقل و حمل متاثر رہی ۔احتجاجی میں شامل لوگوں نے بتایاکہ گائوں کی ایک بڑی آبادی کے لئے 63کے وی بجلی ٹرانسفارمرنصب ہے جو زیادہ لوڈ برداشت نہ کرنے کی وجہ سے با بار خراب ہوتا ہے۔ عوام کو سردی کے ان سخت ایام میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ مظاہرین میں شامل غلام محمد نامی ایک شہری نے بتایا کہ علاقے میںنصب ٹرانسفارمرکی ہفتے میں تین بار مرمت کرانی پڑتی ہے۔ انہوں نے کہا ’’ ہم نے محکمہ سے 100کے وی ٹرانسفارمرفراہم کرنے کا مطالبہ کیا تھا تاہم آج تک انہیں وہ فراہم نہیںکیا گیا‘‘۔ مظاہرین نے کچھ وقت تک سڑک پر دھرنا دیا جس کے بعد پولیس نے موقع پر پہنچ کر لوگوں کی یقین دہانی کرائی کہ ان کا مطال

لار گاندربل اور چندی لورہ ٹنگمرگ میں نقب زنی

گاندربل+ٹنگمرگ//گاندربل کے قصبہ لار میں دوران شب نقب زنوں نے 2دوکانوںسے سازوسامان اڑا لیا۔نقب زنوں نے عارف احمد کی بیکری دوکان اورفاروق احمد کی الیکٹرانک دوکانوں کے تالے توڑ کران میں موجود سازوسامان اور نقدی اڑالیاجبکہ دیگر دوکانیں اس واردات میں بچ گئی ہیں۔ ایس ایچ او لارارشد سلفی نے اس سلسلے میں کہا کہ وہ باریک بینی سے جائزہ لے رہے ہیں اوراس سلسلے میں ایک کیس زیر نمبر 92/2020 درج کرکے تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔ ادھر چندی لورہ ٹنگمرگ میں نقب زنوں نے دران شب ایک جنرل سٹور میں نقب لگا کر لاکھوں روپے مالیت کے سگریٹ ،خشک پھل اور نوٹوںکے ہار اڑا لئے۔ٹنگمرگ قصبے سے دو کلو میٹر دور چندی لورہ میں نقب زنوں نے بشیر احمد بٹ کی دوکان ’ لیاقت بشیر جنرل سٹور‘ کے پچھواڑے میں کھڑکی توڑ کر دوکان کے اندر رسائی حاصل کرکے دوکان میں موجود لاکھوں روپے مالیت کے سگریٹ ،خشک پھل اور نوٹوںکے ہار اڑالئ

او آئی سی وزرا ء خارجہ اجلاس

سرینگر//مغربی افریقہ میں واقع ملک ِ نائجرکے دارالحکومت نیامی میں اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ کے دو روزہ اجلاس27اور28نومبر کو منعقد ہونے جارہا ہے ،تاہم اس اجلاس میں مسئلہ کشمیر ایجنڈے کا حصہ نہیں ۔کشمیر نیوز سروس مانیٹر نگ ڈیسک کے مطابق نائجر کے دارالحکومت نیامی میں منعقدہ اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ کے 2روزہ اجلاس میں مسئلہ کشمیر کو ایجنڈے میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاض میں اعلان کئے گئے او آئی سی کے انگریزی اور عربی دونوں زبانوں میں ایجنڈے میں کشمیر کا کوئی خاص ذکر نہیں کیا گیا۔او آئی سی کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر یوسف العثیمین کے سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ27اور28نومبر کو منعقد ہونے والے اجلاس میں فلسطین کا مسئلہ، تشدد، انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خلاف جنگ، اسلامو فوبیا اور مذہب کی بدنامی، غیر رکن ممالک میں مسلمان اقلیتوں

تازہ ترین