تازہ ترین

ناگم کولگام میںپانی کی عدم دستیابی، محکمہ آب رسانی کے خلاف لوگوں کا احتجاج

سرینگر//جنوبی کشمیر کے ناگم کولگام میں مقامی لوگوں نے پینے کے پانی کی عدم دستیابی سے تنگ آ کر متعلقہ محکمہ کے خلاف زوردار احتجاج کیا۔اس دوران متعلقہ محکمہ کے ایک افسر نے بتایا کہ گائوں میں دو روز کے اندر اندر پینے کے پانی کی سپلائی کو بحال کیا جائے گا ۔ضلع کولگام کے نوگام ڈی ایچ پورہ کی مقامی آبادی نے جمعہ کے روز سڑکوں پر نکل کر محکمہ آب رسانی کے خلاف زوردار احتجاج کیا ہے ۔مقامی لوگوں کی ایک بڑی تعداد مسجد شریف کے نذدیک جمع ہو ئے اور محکمہ کے خلاف نعرے بلند کر کے ناگم نور آباد روڑ کو کئی گھنٹوں تک ٹریفک کی نقل و حمل کے لئے بند کر دیا۔احتجاج میں شامل لوگوں نے بتایا علاقے میںپینے کا پانی کافی دنوں سے غائب ہے جس کے نتیجے میںلوگوں کو طرح طرح کے مشکلا ت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔انہوں نے بتایا آبادی نے درجنوں مرتبہ محکمہ کو اس حوالے سے مطلع کیا تاہم آج تک کوئی بھی کارروائی عمل میں نہیں

تانترے محلہ سے ہاکنار گنڈ سڑک پر8 برس سے کام بند

 کنگن //تحصیل گنڈ کے تانترے محلہ سے ہاکنار گنڈ مولوی سڑک پر گزشتہ 8 برس سے کام بند پڑا ہے جس کی وجہ سے ان علاقوں کی وسیع آبادی کے لوگوں کو گونا گو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ تانترے محلہ گنڈ سے ہاکنار تک جو سڑک محکمہ آر اینڈ بی نے تعمیر کی ہے اس پر صرف 95 فیصد کام مکمل کیا گیا لیکن جو 5فیصد سڑک کا کام باقی رہ گیا ہے اس کی تعمیر مکمل نہ ہونے سے لوگوں کو عبور ومرور میں سخت ترین مشکلات پیش آتی ہیں ۔ غلام محیٰ الدین تانترے نامی ایک شہری کے مطابق وہ اس تعلق سے کئی بار لیفٹیننٹ گورنر کے مشیروں سے بھی ملے ،جنہوں نے محکمہ آر اینڈ بی کے افسران پر لکھ کر دیا کہ سڑک پر جو 5فیصدکام ادھورہ گیا ہے اس کی تعمیر جلد شروع کی جائے لیکن اس پر بھی کوئی عمل نہیں کیا گیا ۔انہوں نے بتایا کہ اگر اس وسیع آبادی میں آگ کی واردات رونما ہوجائے تو یہاں فائر برگیڈ ک

اقامتی اسناد نائب تحصیلدار بھی اجرا کرنے کے مجاز: سنہا

سرینگر//حکومت نے جموں کشمیر کے پشتینی باشندے ہونے کی سند یافتہ لوگوں اور انکے اہل خانہ کیلئے نائب تحصیلداروں کو اقامتی اسناد اجراء کرنے کا اختیار دیدیا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کی جانب سے میٹنگ کے دوران محکمہ مال اور اوقاف کا جائزہ لینے کے دوران انہوں نے اس فیصلے کا اعلان کیا۔ میٹنگ میں صلاح کار فاروق خان،چیف سیکریٹری بی وی آر سبھرمنیم،پرنسپل سیکر یٹری مال،اور محکمہ رجسٹریشن کے انسپکٹر جنرل ڈاکٹر پون کوتوال کے علاوہ لیفٹیننٹ گورنر کے پرنسپل سیکریٹری نتیشور کمار، وقف جائیداد بورڈآف ڈائریکٹرس کے چیف ایگزیکٹو افسر مفتی محمد فرید الدین،کمشنر سروے اینڈ لینڈ ریکارڈس شہنواز بخاری اور محکمہ مال و اوقاف کے سنیئر افسران موجود تھے۔ میٹنگ کے دوران لیفٹیننٹ گورنر کو محکمہ مال کے ادارتی ڈھانچے اور امورات کی مفصل جانکاری فراہم کی گئی، انہیں جموں اور سرینگر میں اراضی بندوبست ریکاڑڈ کی سکیننگ کے

پٹن میں تلاشیاں| چاڑورہ میں شبانہ کریک ڈائون

  بارہمولہ /فیاض بخاری/شمالی کشمیر کے پٹن علاقہ میںایک گائوں کا 12گھنٹے کے بعد محاصرہ ختم کیا گیا۔ فورسز کو ایک مصدقہ اطلاع ملی تھی کی پٹن کے گوہیوہ گائوں میں کچھ جنگجو چھپے بیٹھے ہیں، جس کی بنا پر جمعہ علیٰ صبح 29 آر آر، پولیس اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیموںنے ایک وسیع علاقے کو  پوری طرح سیل کیا اورتلاشی کارروائی شروع کی جو شام دیرگئے تک جاری رہی ۔ ذرائع کے مطابق جنگجوئوں کو تلاش کرنے کی خاطر ڈرون کیمروں کا استعمال بھی کیا گیا۔ ۔ تاہم گائوں میں کوئی قابلِ اعتراض چیز برآمد نہیں ہوئی جس کے بعد تلاشی کارروائی ختم کی گئی۔ادھر بڈگام کے  چاڑورہ علاقے میں جمعہ شام دیر گئے 50آر آر اور پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے پتھ یار سرسیار اور بٹہ پورہ دیہات کا محاصرہ کیا اور دونوں بستیوں کی بڑے پیمانے پر ناکہ بندی کر کے روشنیوں کا انتظام کیا گیا۔ رات گئے تک دونوں دیہات میں آپریش

بالاکوٹ اور گریز سیکٹروں میں شدید گولہ باری

مینڈھر+بانڈی پورہ//پونچھ کے بالاکوٹ سیکٹرمیں مسلسل دوسرے روز بھی ہندوپاک افواج کے مابین فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہواجس کے نتیجہ میں ایک خاتون زخمی ہوگئی۔ادھر گریز سیکٹر میں بھی دن بھر گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان لیفٹیننٹ کرنل دیونندر آنند نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے بالاکوٹ کے علاقے میں اشتعال انگیزفائرنگ اور گولہ باری کی جس پر بھارتی فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کی ۔گزشتہ روز بھی بالاکوٹ میں شدید فائرنگ اور گولہ باری ہوئی تھی جس کی وجہ سے فوج کا ایک اہلکار زخمی ہوا تھاجبکہ کم از کم دس رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچا تھا۔جمعہ کی صبح فوج کے بم ڈسپوزل اسکوارڈ نے بالاکوٹ کے دیہات میں پڑے چار 120 ملی میٹر کے مارٹر شیلوں کوناکارہ کردیا۔ پاکستانی فوج نے جمعہ کی شام 4 بج کر 40 منٹ پر بالاکوٹ علاقے میں اشتعال انگیز فائرنگ اور شلنگ کی اوراس دوران کانگا گلی ، ہمیر پور

این آئی ٹی سرینگر میں زیر تعلیم طلاب کا انتظامیہ سے سوال | جب ہوسٹل کا استعمال نہیں کیا، تو فیس کیوں بھریں

سرینگر//نیشنل انسٹی چیوٹ ٹیکنالوجی سرینگر (این آئی ٹی)میں زیر تعلیم طلبہ نے جمعہ کو انتظامیہ کے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ کورونا بحران کے ابتدائی مہینوں کے ہوسٹل فیس کو معاف کریں کیونکہ ہوسٹل سہولیات کا استعمال کووڈ۔19مریضوں نے کیا ،جنہیں یہاں کورنطین میں رکھا گیا تھا۔ این آئی ٹی سرینگر میں زیر تعلیم طلبہ کے ایک وفد نے بتایا کہ کووڈ ۔19کی وبا کشمیر میں پھیلنے کیساتھ ہی تعلیمی اداروں کو بند کردیا جبکہ ہاسٹل میں قیام پذیر طلبہ کو گھر جانے کا حکم دیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ اُسی وقت طلبہ نے ہوسٹل خالی کیا اور گھروں کو لوٹ گئے جبکہ سے لیکر وہ ہوسٹل کا استعمال نہیں کررہے ہیں ۔انہوں نے کہا ’ کئی ہوٹلوں اور تعلیمی اداروں کو کورنطین مراکز میں تبدیل کیا گیا ،جن میں این آئی ٹی بھی شامل ہے ‘۔ تاہم اب این آئی ٹی انتظامیہ نے طلبہ سے ہوسٹل فیس کا تقاضا کیا ،جو کہ طلبہ کیلئے باعث تش

بارہمولہ میں 6 کروڑ روپے مالیت کی منشیات برآمد | 4 افرادپولیس کی گرفت میں ،بڈگام میںبھی سمگلر گرفتار

بارہمولہ // جموں وکشمیر پولیس نے منشیات کے خلاف کارروئی تیز کر دی ہے ۔جمعہ کو بارہمولہ پولیس نے کروڑوں روپے مالیت کی منشیات(کوکین) ضبط کرکے 4 افراد کو گرفتار کرلیا ہے، جبکہ بڈگام پولیس نے بھی ایک منشیات فروش کو گرفتار کر کے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے ۔ایس ایس پی بارہمولہ عبدالقیوم نے جمعہ کو ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ منشیات فروشوں کے بارے میں ایک خفیہ اطلاع پولیس کو ملی تھی جس کے بعد پولیس کی ایک ٹیم نے بارہمولہ اوڑی شاہرہ پر خانپورہ پُل کے قریب ناکہ لگایا جس دوران ایک گاڑی کو روک کر اس کی تلاشی لی گئی، گاڑی سے براؤن شوگر برآمد کیا اور کار میں سفر کرنے والے 4 افراد کی گرفتار ی عمل میں لائی۔ انہوں نے کہا کہ مشتبہ افراد کو گرفتار کرکے اْن سے پوچھ تاچھ کی جس دوران گرفتار شدگان نے منشیات کے 6 پیکٹوں کا پتہ بتایا۔ان پیکٹوں میں منشیات (کوکین) جیسی چھ کلو گرام اشیاء پائی گئی جس کی

پاکستان کے ساتھ دوستی کے خواہشمند | مرلی دھرن کا اسلام آباد پرسازگارماحول پیدا کرنے پرزور

سرینگر//پاکستان کے ساتھ دوستانہ ماحول بنانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے مرکزی وزیر مملکت برائے امور خارجہ وی مرلی دھرن نے کہا کہ بھارت پاکستان کے ساتھ معمول کے ساتھ دوستانہ تعلقات استوار کرنے کی خواہش رکھتا ہے لیکن اسلام آباد کو شدت پسندی کے خلاف قابل اعتماد اور ایک سازگار ماحول پیدا کرنا ہوگا۔سی این آئی کے مطابق پاکستان کے بارے میں بھارت کی موجودہ خارجہ پالیسی پر راجیہ سبھا میں وزیر  نے کہا کہ بھارت پاکستان کے ساتھ معمول کے دوستانہ تعلقات کی خواہش رکھتا ہے لیکن اسلام آباد کو قابل اعتماد اقدام کرکے ایک سازگار ماحول بنانا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اپنے کنٹرول میں آنے والے کسی بھی خطے کو کسی بھی طرح سے بھارت کے خلاف سرحد پار سے ہونے والی عسکریت کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جانی چاہئے ۔وزیر نے کہا کہ حکومت کی مستقل کاوشوں کے نتیجے میں پاکستان سے پیدا ہونے والی شدت پسن

سینٹرل یونیورسٹیوں میں داخلہ ،سہ روزہ امتحانات شروع

گاندربل//سینٹرل یونیورسٹی کشمیرکا ملک بھر کی دیگر وسطی یونیورسٹیوں کے اشتراک سے تین روزہ سنٹرل یونیورسٹیوں کا مشترکہ داخلہ ٹیسٹ (CUCET-2020) جمعہ کے روز شروع ہوا۔داخلہ امتحان کیلئے یونیورسٹی نے تمام مناسب انتظامات کئے تھے اور کووِڈ - 19 کے رہنما خطوط  پر عمل کیا گیا۔اس موقع پر عملہ نے احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لئے سینیٹائزرز سمیت تمام لازمی سامان مہیا رکھاتھا اور طلباء  میں سماجی دوری کے اصولوں پر عمل کیا گیا۔ وائس چانسلر ، پروفیسر معراج الدین میر نے ڈائریکٹر داخلہ ، پروفیسر پروین پنڈت کے ہمراہ داخلہ ٹیسٹ مراکز کی نگرانی اور معائنہ کیا اور ٹیسٹ کے انعقاد میں شامل تمام افراد کے کردار کو سراہا۔ حفاظتی انتظامات کو یقینی بنانے میں یونیورسٹی کے ہیلتھ سنٹر کے عملے نے بھی کلیدی کردار ادا کیا۔CUCET -2020 میں 14 مرکزی یونیورسٹیوں اور چار ریاستی یونیورسٹیوں

مزید خبریں

قالین بافی شعبے کی بحالی کیلئے لائحہ عمل پر غور و خوض  | کمشنر سیکرٹری محکمہ صنعت و حرفت کی سربراہی میں اجلاس منعقد    سرینگر //جموں وکشمیر میں قالین بافی شعبے کو درپیش مشکلات پر قابو پانے کیلئے کمشنر سیکرٹری محکمہ صنعت و حرفت منوج کمار دویدی نے جمعہ کو ایک میٹنگ کی صدارت کے دوران شعبے کی بحالی کیلئے کئی اقدامات پر غور و خوض کیا ۔ سپیشل سیکرٹری صنعت و حرفت، منیجنگ ڈائریکٹر جے اینڈ کے ہینڈ لوم اینڈ ہینڈی کرافٹس کارپوریشن ، ڈائریکٹرہینڈی کرافٹس اینڈ ہینڈلوم کشمیر ، ڈائریکٹر آئی آئی سی ٹی ، ڈپٹی سیکرٹری کے علاوہ دیگر متعلقہ اعلیٰ افسران نے بھی میٹنگ میں شرکت کی۔روایتی صنعتوں جنہوں نے غیر ملکی بازاروں میں اپنے لئے ایک خاص مقام پیدا کیا۔ ان کے فروغ پر زور دیتے ہوئے سیکرٹری صنعت وحرفت نے قالین بافی شعبے کی بحالی کیلئے مستقبل کے منصوبے کے بارے میں جانکاری دی۔ انہوں نے

تازہ ترین