تازہ ترین

اریکشن پمپ چالو نہ کرنے کا شاخسانہ | نارواو بارہمولہ میں دھان کی فصل تباہ

بارہمولہ// نارواور بارہولہ میں زرعی اراضی کی سینچائی نہ ہونے کی وجہ سے کئی کنال اراضی پر پھیلی دھان کی فصل تباہ ہوگئی ہے۔ لوگوں کاکہنا ہے کہ شیری پٹرول پمپ کے نزدیک زہو علاقے میں رات کے دوران شاہ کھاتہ اریگیشن پمپ کو چالو نہیں کیا جارہا ہے جس کے نتیجے میں اراضی کو پانی سپلائی برابر نہیں مل رہی ہے جس کے نتیجہ میں دھان کی فصل سوکھ گئی ہے ۔ایک مقامی شہری بلال احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ہے کہ اگر پمپ کو رات کے دوران چالو نہیں کیا گیا تو ان کی سال بھر کی کمائی ضائع ہوگی ۔ مذکورہ شہری نے کہا کہ گر چہ انہوں نے کئی مرتبہ متعلقہ محکمہ کو اس معاملے کے بارے میں آگاہ کیا کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ کسانوں نے گورنر انتظامیہ سے اس معاملے میں فوری طور پر مداخلت کرنے کی اپیل کی ہے۔ ادھر زوگیار کے زمینداروں کاکہناہے کہ محکمہ اریگیشن کی غفلت شعاری کی وجہ سے سینکڑوں کنال اراضی پر پھیلی دھان کی فصل تبا

لام برین میں پانی کی قلت کیخلاف احتجاج

سرینگر//لام برین نشاط میں پینے کے صاف پانی کی قلت کیخلاف خواتین نے مظاہرے کئے۔ زیارت سعید رحمان صاحب کے قریب متعدد خواتین جمع ہوئیں اور سڑک پر رکاوٹیں کھڑی کرکے محکمہ جل شکتی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے۔مظاہرین کاکہناہے کہ پچھلے ایک ماہ سے لام برین میں پانی کی شدید قلت ہے جس کے سبب عوام کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مظاہرین نے کہاکہ انہوںنے کئی مرتبہ محکمہ جل شکتی کے عملہ سے پانی کی قلت کے بارے میں آگاہ کیا لیکن کوئی ٹھوس کارروائی نہیں کی گئی جس کے نتیجہ میں وہ سڑکوں پر احتجاج کرنے کیلئے مجبور ہوگئے۔ ایس ایچ او او نشاط نے مظاہرین کو یقین دہانی کرائی کہ پانی کی عدم دستیابی کو حل کرنے کیلئے متعلقہ محکمہ کو آگاہ کیاجائیگا جسکے بعد خواتین پُرامن طور پر منتشر ہوئیں۔  

پی ایچ سی بونیار میں پانی کی شدید قلت | طبی عملہ،بیمار اور تیمارداربرہم

اوڑی//پرائمری ہیلتھ سنٹر بونیار میں پانی کی شدید قلت کی وجہ سے طبی عملے اور مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے۔اسپتال میں تعینات عملے کے مطابق گزشتہ ایک ماہ سے اسپتال میں شدید پانی کی شدید قلت پائی جا رہی ہے اور محکمہ جل شکتی کوئی کارروائی نہیں کر رہا ہے۔کووڈ-19 کے پیش نظر اسپتال میں تعینات عملے اور مریضوں کے ساتھ آئے لوگوں کو نزدیکی نالوں سے پانی لانا پڑتا ہے۔ عملہ اورمریضوں کاالزام ہے کہ ہسپتال کے بیت الخلاء بھی پانی کے بغیر گندے پڑے ہیں۔متعلقہ محکمہ کے ایک آفیسر نے بتایا کہ خشک سالی کی وجہ سے پانی میں کمی ہوئی ہے تا ہم پی ایچ سی بونیار میں آج پانی بحال کیا گیا۔  

شیری بارہمولہ اور ٹنگمرگ میں جوتے کی دکان اور لکڑی کاکارخانہ خاکستر

 بارہمولہ // شیری نارواو بارہمولہ اور ٹنگمرگ میں آگ کے واقعات میں جوتے کادکان اور لکڑی کاکارخانہ خاکستر ہوگیا ۔ شیری مین مارکیٹ میں جمعرات کو دوران شب ارشاد احمد بٹ کے ’بٹ برردرس ‘ جوتے کی دکان سے اچانک آگ نمودار ہوئی جس نے دیکھتے ہی دیکھتے دوکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔ لوگوںاور فائر سروس عملہ نے آگ پر قابو پالیا۔ آتشزدگی میں لاکھوں روپے مالیت کے جوتے جل گئے۔ شیری پولیس تھانہ میں اس ضمن میں کیس درج کیاگیا ہے اور آگ کی وجہ شارٹ سرکٹ بتائی جارہی ہے۔ ادھررتنی پورہ ٹنگمرگ میں نماز جمعہ کے وقت محمد ایوب میر ولد غلام محمد میر کے لکڑی کے کارخانہ میں اچانک آگ نمودار ہوئی جس سے کارخانہ اور مزید دو رہائشی کمرے خاکستر ہوگئے ۔فائر سروس ٹنگمرگ اور مقامی لوگوں کی بر وقت کاروائی سے آگ پر فوری قابو پایا لیا گیا۔  

اولڈ ائر پورٹ میں فوجی اہلکار کی کود کشی

سرینگر//سرینگرسے متصل رنگریٹ علاقے میں جمعہ کی صبح ایک فوجی اہلکار نے مبینہ طور پر خود کشی کر کے اپنا کام تمام کر دیا۔ اولڈ ایئر پورٹ رنگریٹ میں ایک فوجی اہلکار لانس نائیک اوم پرکاش  نے دوران ڈیوٹی اپنی سروس رائفل کا استعمال کر کے خود پر گولی چلائی اور زندگی کا خاتمہ کردیا۔پولیس نے اس سلسلے میں کارروائی شروع کی ہے۔  

وادی میں جموں سے بھی زیادہ گرمی

سرینگر//کشمیر وادی میں غالباًپہلی بار جموں کے مقابلے میں گرمی کی شدت زیادہ ہے ۔ جہاں جمعہ کے روز جموں میں دن کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت33.7ڈگری سیلشس ریکارڈ کیاگیا وہیں سرینگر میںدرجہ حرارت 34.3تک جاپہنچا۔سرینگر میں ہوا میں نمی کا تناسب 108فیصد رہا۔کپواڑہ ضلع میں سب سے زیادہ گرمی ریکارڈ کی گئی جہاں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 35.4ڈگری سیلشس ریکارڈ کیاگیا۔کپوارہ میں ہوا میں نمی کا تناسب 152فیصد تھا ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق قاضی گنڈمیں 32.3،پہلگام میں 28.9،ککر ناگ میں 30.9،سیاحتی مقام گلمرگ میں 24.5،جموں خطہ کے جموں ضلع میں 33.7،بانہال میں 31.6،کٹرہ میں 28.5،بھدرواہ میں 33.2درجہ حرارت ڈگری سیلشس ریکارڈ کیاگیاہے۔ ڈائریکٹر سونم لوٹس نے کشمیرعظمیٰ کو بتایاکہ آنے والے دنوں میں وادی میں موسم خشک اور گرم رہے گا۔انہوں نے کہاکہ اگلے کچھ روز تک وادی میں بارشوں کا کوئی امکان نہیں ۔ &

پولیس پر حملے کے بعدشہر میں سیکورٹی بڑھا دی گئی

سرینگر//نوگام حملے کے بعدوادی میں15اگست کے پیش نظر سیکورٹی کو مزید سخت کیا گیا ہے،جبکہ اہم مقامات کے گردو نواح میں سیکورٹی میں اضافہ کیا گیا ہے۔ نوگام میں جنگجویانہ حملے کے بعد سرینگر سمیت وادی کے دیگر علاقوں میں سیکورٹی کو مزید متحرک کیا گیا اور گاڑیوں کی چیکنگ کا سلسلہ تیز کیا گیا۔آئی جی کشمیر کا کہنا ہے کہ ایجنسیوں کو یہ معلومات ملی ہے کہ جنگجو کسی بھی جگہ حملہ کرسکتے ہیں۔شہر میں جگہ جگہ ناکے لگائے گئے اور راہگیروں و گاڑیوں کی چکینگ کی گئی۔ لال چوک کو پہلے ہی سیل کیا گیا ہے جبکہ جمعہ کو شہر سرینگر میں ہر طرح کے کاروباری و تجارتی مراکز بند تھے، گاڑیاں بہت کم دیکھی گئیں۔ وادی میں15 اگست کے حوالے سے بڑی اور مرکزی تقریب سونہ وار کے کرکٹ اسٹیڈیم میں منعقد ہوگی،جہاں لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا پرچم کشائی کریں گے جبکہ مارچ پاسٹ پر سلامی لینگے۔ کرکٹ اسٹیڈیم کو فوجی چھانی میں تبدیل کر دیا گیا

۔15 اگست کے موقعہ پر لیفٹینٹ گورنر کی عوام کو مبارکباد | ’جموں وکشمیر کے عوام نے مذہبی بنیادوں پر تقسیم کی کوششوں کو مسترد کردیا‘

سرینگر//15اگست کے موقعہ پر جموں کشمیرکے لیفٹینٹ گورنر منوج سنہا نے عوام کو مبار کباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کو بیرونی ظلم سے نجات دلانے کیلئے ان گنت مجاہدین آزادی نے قربانیاں دی ہیں ۔یہ دن ہمیں ان کی عظیم قربانیوں اور جدوجہد کو یاد کرنے کاموقعہ فراہم کرتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر ہمیشہ سے ہی بھارت کاسماجی،تہذیبی،روحانی اورسیاسی لحاظ سے اٹوٹ حصہ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ جموں کشمیرمیں ہرمذہب اورروایت کوگلے لگایا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ اس تہذیبی گہوارے کو متعددحملوں کا سامنا کرناپڑالیکن کوئی اس کومٹانے میں کامیاب نہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ مہاتماگاندھی کاعدم تشدد کافلسفہ بھارت کی آزادی کی تحریک کامشعل راہ تھااورعدم تشدد کے یہ اصول جموں کشمیر کے شناخت کے ساتھ مطابقت رکھتے تھے۔انہوں نے کہا کہ ملک کے بٹوارے کے ذمہ دار لوگوں نے اس دھرتی کو بھی مذہبی بنیادوں پر تقسیم کرنے کی کوشش ک

وزیراعظم ترقیاتی پیکیج | مشیر بصیر خان نے سیاحتی پروجیکٹوں کے کام کا جائیزہ لیا

سرینگر//لفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے جموں کشمیر میں وزیر اعظم ترقیاتی پیکیج ( پی ایم ڈی پی ) کے تحت محکمہ سیاحت کے مختلف پروجیکٹوں پر جاری کام کی پیش رفت کا جائیزہ لینے کیلئے میٹنگ طلب کی ۔   دوران میٹنگ مشیر نے پی ایم ڈی پی کے تحت محکمہ سیاحت کے مکمل کئے گئے اور جاری پروجیکٹوں کا مفصل جائیزہ لیا ۔ مشیر نے متعلقہ حکام کو پی ایم ڈی پی کے تحت جاری پروجیکٹوں کے کام میں سرعت لانے کیلئے آپس میں قریبی تال میل قائم کرنے کیلئے کہا ۔ انہوں نے مکمل کئے گئے پروجیکٹوں کی تکمیلی اسناد بھی پیش کرنے کیلئے کہا ۔ اس کے علاوہ افسروں کو متعلقہ حکام کو یوٹیلائیزیشن سرٹیفکیٹ بروقت پیش کرنے کی بھی ہدایت دی گئی ۔ مشیر نے متعلقہ سی ای اوز کو اُن کے علاقوں میں جاری پروجیکٹوں سے متعلق ہفتہ وار رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے رُکے پڑے پروجیکٹوں کی تکمیل میں درپیش رکاوٹوں کو دور کر کے اُن پر

ترال میں 2نوجوان گرفتار | جنگجوئوں کے معاونت کار ہونے کاالزام

ترال //اونتی پورہ پولیس اورسیکورٹی فورس نے مشترکہ کارروائی کے دوران ترال علاقے سے تعلق رکھنے  والے دو نوجوانوں کو گرفتار کیا ہے جن پر الزام ہے کہ وہ ایک جنگجو تنظیم کیلئے بالائے سطح پر کام کرتے تھے۔پولیس کا کہنا ہے کہ گرفتارکئے گئے معاونت کاروں میں ریاض احمد بٹ ساکن عمر آباد ترال اور محمد عمر تانترے ساکن آری پل ترالشامل ہیں۔ان کے قبضے سے قابل اعتراض مواد سمیت گولہ بارود بھی برآمد  کرنیکا دعویٰ کیا گیا ہے ۔ پولیس نے مزید کہا ہے کہ یہ دونوں معاونت کار جیش محمد کے جنگجوئوںکو ترال اور اونتی پورہ علاقے میں مدد ،ساز و سامان کے علاوہ گولہ بارود کو ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنے میں اہم کردار ادا کرتے تھے ۔تھانہ پولیس ترال نے اس سلسلے میں کیس زیر ایف آئی آرنمبر72/2020 درج کرکے اس سلسلے میں مذید تحقیقات شروع کردی۔  

کیرن میں ہند پاک افواج کے درمیان گولہ باری

کپوارہ// کپوارہ کے کیرن سیکٹر میں ہندپاک افواج کے درمیان گولہ باری کاتبادلہ ہواجس کے نتیجے میںکرالہ پورہ لیکر رامحال تک لوگو ں میں زبر دست خوف و ہراس پھیل گیا ۔کیرن سیکٹر میں شام دیر گئے رات10بجے ہند و پاک افواج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے دوران ایک دوسرے کی چوکیو ں کو نشانہ بنایا۔گولہ باری کی وجہ سے کیرن کے لوگ گھرو ںمیں سہم کر رہ گئے اور اپنے مکانوں کے نچلی منزلو ں میں پناہ لی ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے گولہ باری رات کے دوران ہوئی جس کے باعث وہ کمیو نٹی زیر زمین بینکرو ںمیں پناہ نہ لے سکے۔مقامی لوگو ں نے ایک مرتبہ پھر سرکار سے مطالبہ کیا کہ وہ کیرن میں ہر کنبہ کو منفرد زیر زمین بینکر دینے کو منظوری دیں تاکہ دوران شب وہ ان بینکرو ں میں پناہ لے سکے  ۔گولہ باری کا دائر اس قدر بڑھ گیا کہ پنزگام کرالہ پورہ اور درنگیاری چوکی بل کے فوجی کیمپو ں سے توپو ں کے گولہ داغے گئے جس کے نیت

۔10ویں اور12ویں جماعتوں کاامتحان | محکمہ تعلیم کا نصاب میں 30فیصد کمی کرنے کا علان

سرینگر //جموں وکشمیر حکومت نے بورڈ آف سکول ایجوکیشن  کے زیر اہتمام ہونے والے آئندہ سالانہ دسویں اور بارہویں جماعتوں کے نصاب میں 30فیصد کی کمی کر دی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کشمیر اور سرمائی زون جموں کے طلباء جو سالانہ امتحان میں شرکت کریں گے ان سے صرف 70 فیصد سوالات کرنے کو کہا جائے گااور اس کو 100فیصد سمجھا جائے گا ۔ پرنسپل سکریٹری اسکول ایجوکیشن اصغر  سامون نے بتایا ،’’ہاں ، ہم نے دسویں ،11 ویں اور بارہویں جماعت کے نصاب کو کم کرکے صرف 70 فیصد کردیا ہے‘‘۔یہ فیصلہ کوویڈ 19 لاک ڈاؤن اور کوویڈ 19 وبائی امراض کے پیش نظر لیا گیا ہے کیونکہ مارچ سے لاک ڈائون لگنے کے بعد جموں وکشمیر میں سکول مسلسل بند پڑے ہیں۔اس سلسلے میں اصغر سامو ن نے بھی ایک ٹویٹ کیا ہے۔ حال ہی میں کشمیر عظمیٰ نے اس حوالے سے ایک خبر بھی شائع کی تھی جس میں یہ کہا گیا تھا کہ  نصاب میں کمی

گوشہ بگ پٹن میں تلاشی کاروائی

  بارہمولہ//شمالی قصبہ  پٹن کے گوشہ بگ علاقے میں جمعہ کے روز فورسز نے تلاشی کاروائی انجام دی۔ ذرائع کے مطابق فورسز کو ایک مصدقہ اطلاع تھی کہ گوشہ بگ علاقے میں کچھ جنگجو چھپے بیٹھے ہیں جس کے بعد فوج کی  29 آر آر، ایس او جی  اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے  پورے علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی کاروائی انجام دی جبکہ علاقے کی طرف تمام آنے جانے والے راستوں کو سیل کردیا گیا تھا۔ آخری اطلاعات ملنے تک فورسز کو وہاں سے کوئی جنگجونہیں ملا۔  

مزید خبرں

انتہا پسندی ناقابل قبول :اپنی پارٹی |  مہلوک پولیس اہلکاروں کے لواحقین سے اظہار یکجہتی سرینگر//’ اپنی پارٹی‘ نے جمعہ کے روز نوگام میں جنگجویانہ حملہ میں دو پولیس اہلکاروں اشفاق احمد اور فیاض احمد کی ہلاکت اور متعدد کے زخمی ہونے کے واقعہ کی کڑے لفظوں میں مذمت کی ہے۔ ایک بیان میں پارٹی ترجمان نے حملے کو غیر انسانی حرکت قرار دیتے ہوئے کہاکہ تشدد کوئی حل نہیں بلکہ ایک بہت بڑی رکاوٹ ہے اور اِس سے نفرت پھیلتی ہے ۔ترجمان نے مزید کہا کہ کسی بھی مہذب معاشرے میں سیاسی ، نظریاتی یا مذہبی محرکات سے قطع نظرتشدد وانتہا پسندی ناقابل قبول ہے۔ترجمان نے کہا کہ یہ انتہائی بدقسمتی اور دل دہلادینے والی بات ہے کہ کشمیر بے حس تشدد کے ہاتھوں قیمتی جانیں گنوا رہا ہے جس نے صرف پچھلے کئی سالوں میں عوام کی مشکلات میں کئی گناہ اضافہ کیا ہے۔حملہ میں مارے گئے اہلکاروں کے اہل خانہ سے اظہارِ یکجہت

تازہ ترین