تازہ ترین

پینے کے پانی کی قلت | ویہل شوپیان میں جل شکتی محکمہ کے خلاف احتجاجی مظاہرے

 شوپیان//جنوبی ضلع شوپیان کے کئی علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی سخت قلت ہے جس کی وجہ سے آئے روز ضلع کے کسی نہ کسی علاقے سے لوگ سڑکوں پرآکر احتجاج کررہے ہیں۔ضلع کے ویہل علاقے کے لوگوں نے ضلع انتظامیہ شوپیان اور جل شکتی محکمہ کے خلاف سنیچر کوزبردست احتجاج کیا اور گھنٹوں تک شوپیان کولگام سڑک پر ٹریفک کی آمدورفت مسدود کرکے رکھ دی۔احتجاجی مظاہرین میں بچے اور خواتین بھی شامل تھیں۔انہوں نے سڑک کے بیچوں بیچ خالی برتن رکھ دئے تھے۔مظاہرین نے بتایا کہ 8سال قبل علاقے میں ایک پائپ لائن بچھائی گئی اور لوگ مسلسل فیس بھی ادا کررہے ہیں لیکن گزشتہ تین سال سے یہ علاقہ پینے کے پانی سے محروم ہے۔ لوگوں نے بتایا کہ انہیں چار کلومیٹر دورسے پانی حاصل کرنا پڑتا ہے جس کی وجہ سے علاقے کے لوگوں کا جینا دشوار ہوگیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ علاقہ ناصاف پانی پینے پر مجبور ہے اوریہی وجہ ہے کہ گزشتہ سال علاقے میں وب

کرناہ میںغرقآب ہوئے بچے کی تلاش جاری | نعش سرحد پار پہنچنے کا خدشہ

کرناہ//کرناہ میں نالہ کاجی ناگ میں غرقآب ہوئے کمسن بچے کی لاش چوتھے روز بھی نہیں مل سکی ہے جبکہ مقامی لوگوںکے ساتھ ساتھ پولیس اور ایس ڈی آر ایف کے اہلکاروں نے پورے نالے میں سرچ آپریشن جاری رکھا ہے۔خدشہ کیا جارہا ہے کہ لاش سرحد کے ا س پار پہنچ چکی ہے اور مقامی آبادی نے پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ لاش کی تلاش کرنے میں ان کی مدد کی جائے۔ عیدالاضحی کے دن کرناہ کے اری ڈل چترکوٹ کا رہنے والا 10سالہ سید کامران ولد شبیر حسین نالہ قاضی ناگ کو عبور کرنے کے دوران ڈوب گیا۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ جب بچہ نالہ میں ڈوب گیا تب بارش ہو رہی تھی اور پانی کا بہاو بھی کافی تیز تھا جس کے بعد بچے کی تلاش میں مقامی لوگوں کو کافی مشکلات پیش آئیں۔ عید کے دوسرے ہی روز بچے کو نالہ سے تلاش کرنے کیلئے ایس ڈی آر ایف کے اہلکاروں کی ایک ٹیم کرناہ پہنچی جنہوں نے ایس ایچ او کرناہ مدثر احمد کی

منشیات کے دھندے میں ملوث افراد کا سماجی بائیکاٹ ناگزیر | شاہ آباد سیول سوسائٹی کا پریس کانفرنس میں اظہار خیال

اننت ناگ // شاہ آباد سیول سوسائٹی ممبران کی جانب سے ایک ہنگامی پریس کانفرنس کا انعقاد کیا۔رسول میر آڈیٹوریم میں منعقد کئے گئے پریس کانفرنس میں اوقاف کمیٹی، ٹریڈ یونین اور سیول سوسائٹی ڈورو ویری ناگ کے ممبران شامل تھے۔انہوں نے علاقہ میں منشیات کے دھندے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس ناسور کا قلع قمع کرنے کے لئے سبھی افراد کو آگے آنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ منشیات دیمک کی طرح ہمارے نوجوانوں کو ضائع کرتی ہے لہٰذا اس پر خاموش نہیں رہ سکتے۔انہوں نے مزید کہا کہ گذشتہ کئی روز سے  ڈورو اور اسکے گردونواح میں کئی نوجوانوں کی لاشیں مشکوک حالت میں بر آمد کی گئیں اور اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ انکی موت بھی منشیات کے استعمال سے ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کی معنی خیز خاموشی سے جرائم پیشہ افراد کے حوصلے دن بہ دن بلند ہوتے جا رہے ہیں۔ انہوں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں سے گذ

لیفٹیننٹ گورنر کا زرعی یونیورسٹی کشمیر کا دورہ ،لڑکوں کے ہوسٹل کاافتتاح | حکومت قانونِ حقِ جنگلات کے نفاذ میں انتہائی سنجیدہ :منوج سنہا

گاندربل//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے شیرکشمیرزرعی یونیورسٹی کے فیکلٹی آف فارسٹری کے 5.30 کروڑ روپے کے نئے بوائز ہوسٹل کا اِفتتاح کیا اور گاندربل ضلع کے ایس کے یو اے ایس ٹی کشمیر کیمپس بنہامہ میں10 کروڑ روپے کی لاگت سے منی واٹر شید پروجیکٹ ، 3.80 کروڑ روپے کاٹرینیز ہوسٹل اور  8کروڑ روپے کی لاگت سے اکیڈمک بلاک کا سنگ بنیاد رکھا۔اِس موقعہ پر لیفٹیننٹ گورنر نے ترقی پسند کاشت کاروں کو مبارک باد پیش کی اور’’ چمپئن فارمر ایواڑ ‘‘ کے 10 ایوارڈز کو فی کس 5,000 روپے کی چیک پیش کیں ۔اُنہوں نے زراعت اور جنگلات کی سات اِشاعتیں بھی جاری کیں۔ اِس موقعہ پر اَپنے خیالات کا اِظہار کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ حکومت نے جموںوکشمیر میں زراعت اور جنگلات کی صورتحال میں نمایاں تبدیلیاں لائی ہیں جس کی وجہ سے مذکورہ شعبے میں پیداوار ی صلاحیت ، منافع اور ملازمت میں بہتری واقع

بصیرخان کا پائین شہرکادورہ | دستگیر صاحب اورنقشبندصاحب خانقاہوںپرحاضری دی | ہاری پربت مندر میں عقیدتمندوں کیلئے سہولیات میں اضافہ کرنے پرزور

سری نگر//لفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے  سرینگر شہر کے نواحی قصبے میں دستگیر صاحب ، نقشبندی صاحب کے خانقاہوں پر حاضری دی اور ہری پربت قلعے کا دورہ کرکے وہاں محکمہ سیاحت کے زیر انتظام مختلف ترقیاتی اور بحالی کاموں کی رفتار کا معائینہ کیا ۔ کاموں کی رفتار کا جائیزہ لیتے ہوئے مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ قریبی ہم آہنگی کے ساتھ کام کریں تا کہ کاموں کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کیا جا سکے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ دستگیر صاحب ، نقشبند صاحب زیارتوں اور ہری پربت قلعے پر واقع مندر میں عقیدت مندوں کیلئے سہولیات میں اضافہ کیا جانا چاہئیے ۔ پیر دستگیر صاحب کے خانقاہ پر اپنی حاضری کے دوران مشیر نے مختلف  کاموں کی پیش رفت کا جائیزہ لیا اور حکام کو ہدایت دی کہ وہ وضو خانہ کے کام کی رفتار میں تیزی لائیں ۔ مشیر نے یہ بھی کہا کہ زیارت گاہ میں پارکنگ کی جگہ انتہائی اہمیت کی حامل ہے انہ

مزید خبریں

آئی سی ایم آر سیرو سرولنس  | پلوامہ میں61.2فیصد عام لوگوں اور 81.1فیصدصحت کارکنوں میں اینٹی باڈیز موجود پرویز احمد  سرینگر // آئی سی ایم آر کے سیرو سرولنس کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ پلوامہ ضلع میں 61.2فیصد عام لوگوں میں کورونا وائرس کے خلاف لڑنے کیلئے مدافعتی قوت (اینٹی باڈیز) پیدا ہوگئی ہیں۔ جون 2021میں آئی سی ایم آر کے سروے میں اس بات کا بھی ا نکشاف ہوا ہے کہ پلوامہ ضلع میں 81.1فیصد ہیلتھ کیئر ورکروں میں کورونا وائرس سے لڑنے کیلئے مدافعتی قوت پیدا ہوئی ہے۔ انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ(آئی سی ایم آر) نے کورونا وائرس پر نظر رکھنے کیلئے جون 2021میں  قومی سطح پر عام لوگوں میںکورونا وائرس کے خلاف پیدا ہونے والے دافع جسم کا پتا لگانے کیلئے پہلے سے ہی ملک کے 70اضلاع میں 3سروے مکمل کر لئے ہیں۔ 6سال سے زیادہ عمر کے لوگوں پر کئے گئے اس سروے کے چوتھے دور میں

تازہ ترین