آسیہ اور نیلوفر کی دسویں برسی | لواحقین ہنوز انصاف کے منتظر

 شوپیان// شوپیاں ضلع میں آسیہ اور نیلوفر کی گیارویں برسی پر اُن کے اہل خانہ آج بھی انصاف کے منتظر ہیں اور قاتلوں کو سزا دینے کا مطالبہ کررہے ہیں۔بتادیں کہ دس سال قبل آج ہی کے دن بون گام شوپیاں کی رہنے والی آسیہ اور نیلوفر کی لاشیں رنبی آرا نالے سے بر آمد ہوئی تھیں۔ دونوں خواتین، جو رشتے کے لحاظ سے بھابھی اور نند تھیں، کی مبینہ طور پر قتل سے قبل آبرو ریزی کی گئی تھی اور اس واقعے سے وادی بھر میں احتجاجوں اور ہڑتالوں کی شدید لہر چلی تھی اور ضلع شوپیان میں مسلسل 47 دنوں تک ہڑتال کی گئی۔واضح رہے کہ جنوبی قصبہ شوپیان کی 17 سالہ آسیہ جان اور ان کی بھاوج نیلوفر شکیل 29مئی2009 کو سہ پہر کے وقت لاپتہ ہوئی تھیں اور اگلے روز صبح دونوں کی لاشیں رمبی آراء  سے بر آمد ہوئیں۔یہ دونوں اپنے باغ میں گئی تھیں اور لوٹتے وقت لاپتہ ہو گئی تھیں۔پوسٹ مارٹم رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ آسیہ اور

پہلگام بازار میں غیر قانونی دکان منہدم

اننت ناگ//میونسپل کمیٹی پہلگام نے بازار میں غیر قانونی طور تعمیر کیاگیا دکان منہدم کیا ۔کمیٹی کے صدر رئیس احمد لون کے مطابق اُنہیں یہ شکایت موصول ہوئی کہ قصبہ کے بازار میں غیر قانونی طور پر چائے کی دکان تعمیر کی گئی ہے جس پر فوری کارروائی کرتے ہوئے دکان کو منہدم کیا گیا ۔  

کہلیل ترال میں جواں سال ڈرائیور فوت

سرینگر// ترال میں دماغی نس پھٹ جانے سے جواں سال ڈرائیور موت کی آغوش میں چلا گیا۔لعل پورہ کہلیل ترال کے سو مو ڈارئیور مشتاق احمد شیخ ولد عبد الغنی گزشتہ رات اچانک بیمار ہوااور اسے فوری طور پر ہسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹروں نے اسے سرینگر منتقل کرنے کی ہدایت دی۔ مشتاق احمد دو روز تک زیر علاج رہنے کے بعد جمعہ کوفوت ہوا۔ مذکورہ شہری کی موت کی جبر جونہی آبائی گائوں پہنچی تو وہاں کہرام مچ گیا۔مشتاق احمد شریف النفس اور ملنسار تھا۔ قابل ذکر ہے جہاں مشتاق احمد کی وفات پر مسلمان اشک بار تھے وہی سکھ فرقے کے لوگ بھی مغموم نظرآئے۔خیال رہے کہ ڈرائیور سے وابستہ افراد گزشتہ سال5اگست سے طرح طرح کی مشکلات سے دوچار ہیں جہاں وہ سخت ذہنی پریشانیوں میں مبتلا ہیں۔    

،اک ڈاؤن کا69واںدن 10ویں جمعہ بھی نماز کے اجتماعات منعقد نہ ہوسکے

سرینگر// ملک گیر لاک ڈائون کے 69 ویں روز جمعہ کو وادی بھر میں بندشوں کی صورتحال میں سختی رہی۔جمعہ اجتماعات خدشات کے پیش نظر حکام نے شہر سرینگر کیساتھ ساتھ وادی کے دیگر قصبوں میں بندشیں سخت کیں جس سے آواجاہی میں مشکلات پیش آئیں۔ سہ پہر تک لوگوں کی آمد و رفت میں عام دنوں کی نسبت بہت کمی دیکھی گئی اور نجی ٹراسپورٹ بھی اس تعداد میں نہیں چلا۔ لیکن سہ پہر کے بعد نجی غاریوں کی آمد و رفت میں اضافہ ہوا اور لوگوں کی آمد و رفت بھی بڑھ گئی۔اس دوران مرکزی جامع مسجد سمیت وادی بھر کی بڑی مساجد، خانقاہوں،  امام باڑوں میں نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہوسکے۔وادی میں 10ویں جمعہ بھی اجتماعات پر پابندی رہی البتہ دیہات میں جمعہ اجتماعات ممکن بنائے گئے اور بہت ساری جگہوں پر باجماعت نماز ادا کی گئی۔لیکن مجموعی طور پر حکومتی احکامات پر سکٹی سے عملدر آمد کیا جارہا ہے۔جمعہ کو سرینگر میںایک بار پھر

کورونا وائرس سے بچائو کیلئے احتیاطی تدابیر ناگزیر : صدر جمعیت اہلحدیث

سرینگر//جمعیت اہلحدیث کے صدر پروفیسر غلام محمد بٹ المدنی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرین کی تعداد میں اضافہ تشویشناک ہے اور قطعی حفاظتی اور احتیاطی اقدامات سے پہلو تہی نہیں کرنی چاہیے۔ کنگن کے کئی علاقوں میں حالیہ ایام میں انتقال کرنے والی کئی شخصیات کے لواحقین اور علاقہ کے مکینوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر جمعیت نے کہا کہ’ فی الوقت وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں آئے روز اضافہ فکر مندی اور پریشانی کاباعث بن رہا ہے اور ہمیں اس تعلق سے کسی بھی خوش یا غلط فہمی کا شکار ہو کر قطعی حفاظتی اور احتیاطی اقدامات سے پہلو تہی نہیں کرنی چاہیے‘۔ انہوں نے بٹہ پورہ، ٹنگھ چھتر، اکہال، کرہامہ ینگورہ گاندربل اور دوسرے مقامات پر مساجد کمیٹیوں اور جمعیت اکائیوں کے ذمہ داروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پسماندہ اور غربت کی لکیر سے نیچے گذر بسر کرنے والے لوگ مسلسل لاک ڈاؤن سے زیادہ متاثر نظر آرہے

قاضی گنڈ میں 2مویشی چور گرفتار

اننت ناگ//قاضی گنڈ پولیس نے 2مویشی چوروں کوگرفتار کیا ہے ۔پولیس کے مطابق رمیس مہندر ساکنہ راجوری خانہ بدوش نے پولیس اسٹیشن قاضی گنڈمیں شکایت درج کی کہ اُس کے مویشی چوری ہوگئے ہیں پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ۔ دوران تحقیقات پولیس نے اُویس احمد کھانڈے ساکنہ قاضی گنڈ اور امتیاز احمد پرے ساکنہ کولگام کو گرفتار کرکے چرائے گئے مویشی برآمد کئے ۔ پولیس نے آٹو زیر نمبرJK018 4514کو بھی ضبط کیا ہے۔  

اننت ناگ میں نقلی لیب ٹیکنیشن گرفتار

اننت ناگ//اننت ناگ میں پولیس نے نقلی لیب ٹیکنشن کو گرفتار کیا ہے ۔پولیس نے ہاشم منظور وگے نامی خود ساختہ لیب ٹیکنشن کو اُس وقت گرفتار کیا جب مذکورہ شخص مریضوں کو دھوکہ دے خون کر نمونے حاصل کررہا تھا۔پولیس کے مطابق مذکورہ شخص مریضوں کو بتا رہا تھا کہ وہ ضلع اسپتال میں لیب ٹیکنشن کے طور تعینات ہے ،جس دوران وہ مریضوں کا جعلی ٹیسٹ کرکے موٹی رقم وصول کرتا تھا ۔پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے معاملے کی نسبت کیس زیر نمبر135/2020درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے ۔اس بیچ اس طرح کی شکایات مسلسل موصول ہورہی ہیں کہ ضلع میں قائم کئی سرکاری اسپتالوں میں ٹیسٹ سہولیات میسر نہ ہونے کے سبب اسپتال میں تعینات تشخیصی عملہ زبردستی مریضوں سے نمونے حاصل کرکے نجی تشخیص سنٹروں میںکام انجام دیتے ہیں جس دوران مقرر رقم سے زیادہ رقم وصول کی جاتی ہے ۔کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کئی مریضوں نے کہا کہ ڈاکٹر  مریضوں کو کئی

اننت ناگ ضلع میں لاک ڈائون میں مزید سختی | لوگوں سے احتیاطی تدابیر پرعمل کرنے کی ڈپٹی کمشنر کی تلقین

اننت ناگ//اننت ناگ ضلع میں جمعہ سے لاک ڈائون میں مزید سختی سے عمل کیا جارہا ہے ۔ضلع میں کرونا وائرس مثبت کیسوں میں مسلسل اضافہ کے ساتھ ہی جمعہ سے حکام نے وائرس پر قابو پانے کے لئے اقدامات میں شدت پیدا کردی ہے ۔لاک ڈائون کی خلاف ورزی کرنے والے کئی دکانوں کو سربمہر کیا گیا جبکہ بغیر پاس کے چل رہی گاڑیوں کو ضبط کیا گیا ہے ۔اس بیچ نئے ضلع ترقیاتی کمشنر اننت ناگ کے کے سدا نے آفسران کی میٹنگ طلب کی اور موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ڈی سی نے ضلع میں اجراء شدہ لاک ڈائون پاسزکوفوری طور منسوخ کیا  ۔ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ ضلع اننت ناگ میں مثبت کیس سب سے زیادہ ہے ،جس کی وجہ لوگوں کا احتیاطی تدابیر پر کم عمل کرنا ہے ۔ اُنہوںنے کہا اس وقت ضلع میں38علاقے ریڈ زون کے دائرے میں ہے ،جس سے آپ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ ضلع میں وائرس کس طرح تیزی کے ساتھ بڑھ رہا

مزید خبریں

تیزرفتار بھرتیوں کا مقصدبے روزگاروں کو راحت نہیں | اقامتی نظام کوعملی جامہ پہنانا:حسنین مسعودی سرینگر//تیزرفتاربھرتی عمل کے اعلان کا مقصد یہاں کے بے روزگار نوجوانوں کو راحت دینا نہیں ،بلکہ اقامتی نظام کوعملی جامہ پہناناہے۔ان باتوں کااظہار نیشنل کانفرنس کے رکن پارلیمان (ر)جسٹس حسنین مسعود ی نے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر تنظیم نوایکٹ2019جس کے تحت ریاست کااپناآئین ہونے کے باوجود جموں کشمیرکادرجہ کم کرنے کے ساتھ ساتھ اُسے تقسیم کیا گیا،غیرآئینی ہے اوریہی وجہ ہے کہ اس معاملے کے خلاف احتجاج ہوااوریہ عدالت عظمیٰ کے روبروزیرسماعت ہے۔انہوں نے کہا کہ جموں کشمیرتنظیم نو قانون پر مشتمل اقامتی نظام کے تحت (ریاستی قوانین کی اصلاح) حکم 2020 ، جموں کشمیرسول سروس (غیرمرکزیت وبھرتی )2020اورجموں کشمیرگرانٹ آف ڈومیسائل سرٹیفیکٹ (طریقہ کار) قواعد2020کا فریم ورک اور اس نظام کے تحت

تازہ ترین