تازہ ترین

لاک ڈاؤن کا67واںدن، وادی میں بندشوں میں بتدریج نرمی

سرینگر// ملک گیر لاک ڈائون کے 67ویں روز بدھ کو شہر سرینگر اور وادی کے دیگر کئی مقامات پر معمول سے زیادہ پرائیویٹ گاڑیوں کی آمد و رفت دیکھی گئی۔حالانکہ وادی بھر میں ہر طرح کی سرگرمیاں بند پڑی ہیں اور یہاں ہر روز کورونا متاثرین میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔بدھ کو سرینگر میں پہلی باراُن سڑکوں سے  خار دار تاریں ہٹا دی گئیں تھیں جو جنتا کرفیو کے بعد یکطرفہ بند کردی گئیں تھیں۔شہر کی ہر ایک سڑک پر گاڑیوں کی آمد و رفت جاری رہی البتہ مسافر گاڑیاں بدستور بند ہیں۔ بدھ کو سب سے زیادہ نجی گاڑیوں کی تعداد سڑکوں پر رہی اور جہانگیر چوک میں ٹریفک جام کے مناظر بھی دیکھے گئے۔لاک ڈائون کے دو ماہ سے زائد عرصے کے بعد اس تعداد میں نجی گاریوں بکی بہتات نظر آئی۔وادی کے دیگر اضلاع میں اگر چہ نجی گاڑیوں کی اتنی تعداد نظر نہیں آئی البتہ معمول کی نسبت ان میں اضافہ دیکھا گیا۔تاہم وادی کے ریڈ زون علاقوں میں کسی

قاضی گنڈ میں تاریخی چشمہ تباہی کے دہانے پر | مقامی لوگوں کا حکام پر غفلت شعاری کا الزام

اننت ناگ//قاضی گنڈمیں واقع پانزت ناگ چشمہ حکام کی عدم توجہی کے سبب تباہی کے دہانے پر پہنچ گیا ہے۔قاضی گنڈ سے محض2کلومیٹر دور اس چشمے میں گندگی کے ڈھیر جمع ہیں ۔اس چشمہ سے 35گائوں کو پینے کا پانی فراہم ہوتا ہے ۔ اس قدرتی چشمہ میںمچھلیوں کی ایک خاصی تعداد موجود ہے ۔چشمہ میں کشمیری مچھلی کے علاوہ ٹراوٹ بھی پائی جاتی ہے جس کے لئے محکمہ مچھلی پالن نے یہاں ایک سیل سنٹر بھی قائم کیا ہے ۔گل محمد گنائی نامی ایک مقامی شہری نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ گذشتہ کئی سالوں سے چشمہ میں گندگی جمع ہورہی ہے اورآلودگی میں تیزی سے اضافہ کے سبب پانی کی سطح میں کافی حد تک کمی واقع ہوئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ مقامی لوگ ہرسال چشمہ کی صفائی خود ہی عمل میں لاتے ہیں ۔ایک اور شہری نے کہاکہ وہ عرصہ درا زسے پانزت ناگ کو محکمہ سیاحت کی تحویل میں دینے کا مطالبہ کر رہے ہیں تاکہ اسکی کھوئی ہوئی شان کو بحال کیا جاسکے ۔ ناظم

دارالعلوم رحیمہ کی امدادی سرگرمیاں جاری | 2600کنبوں میں راشن کٹ اوردرماندہ طلبہ کو نقد ی فراہم ،اسکول قرنطین کیلئے وقف

بانڈی پورہ//کووِڈ 19کی عالمگیر وباء کی وجہ سے لاک ڈائون کے نفاذ کے دوران دارالعلوم رحیمہ نے ضرورت مند اور مفلوک الحال کنبوں میں بلالحاظ مذہب وملت سینکڑوں کھانے کے کِٹ ،اور ماسک تقسیم کرنے کے علاوہ بیرون جموں کشمیر درماندہ طلبہ کو واپس گھر پہنچے میں نقدی رقم فراہم کی ۔ایک بیان کے مطابق دارالعلوم رحیمیہ کی ریلیف سیل نے موجودہ وبائی صورتحال میں 2600 مفلوک الحال کنبوں میں راشن کِٹ تقسیم کئے جبکہ عید کے موقعہ پر بھی335کٹ تقسیم کئے گئے ۔ریلیف سیل نے مختلف اسپتالوں میں عام لوگوں میں6500ماسک تقسیم کئے۔بیرون جموں کشمیر درماندہ95طلبہ کو نقدامدادفراہم کرکے گھر پہنچنے میں مدد کی گئی ۔بیان کے مطابق اس کے علاوہ دارالعلوم رحیمیہ کی سرپرستی میں چل رہے فیض عام اسکول کو بانڈی پورہ میںقرنطین مرکز میں تبدیل کیاگیا۔ ریلیف سیل نے وادی میں لاک ڈائون کے روزاول سے ہی امدادی سرگرمیوں کو شروع کیا۔بانڈی پورہ میں

پینے کے پانی کی عدم دستیابی | وائل گاندربل کی آبادی مشکلات سے دوچار

گاندربل//وائل گاندربل میں پینے کے صاف پانی کی عدم فراہمی کی بدولت آبادی کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو جل شکتی محکمہ کی جانب سے پچھلے ایک ماہ سے صبح آٹھ بجے پانی کی سپلائی منقطع کردی جاتی ہے اور بعد دوپہر تین بجے بحال کردی جاتی ہے ۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ محکمہ کے اس طرز عمل سے انہیں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ متعلقہ محکمہ کے ملازمین کو اس پریشانی سے آگاہ کیا گیا لیکن ایک ماہ گزرنے کے باوجود بھی معاملہ جوں کا توںہے۔انہوں نے چوبیس گھنٹے بلا خل پانی سپلائی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔  

ریگی پورہ کے لاپتہ طالب علم کی لاش بر آمد | ہمارا بیٹا قتل کیا گیا ہے،لواحقین کا احتجاج

کپوارہ//ریگی پورہ کپوارہ کے 22سالہ لاپتہ نوجوان کی لاش کو پولیس نے وگہ بل کاری ہامہ سے بر آمد کیا۔لاش کا پو سٹ مارٹم کرنے کے بعد اُسے لواحقین کے سپرد کیا گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ 22سالہ فا ضل احمد میر ساکنہ ریگی پورہ کپوارہ22مئی کو اپنے گھر سے نکل کر لاپتہ ہوگیا جس کے بعد ان کے اہل خانہ نے پولیس تھانہ میں ایک گمشدگی رپورٹ درج کرائی ۔پولیس کے مطابق عید کے روز ان کی لاش کو وگہ بل کاری ہامہ سے بر آمد کیا گیا ۔پولیس نے اس سلسلے میںاُس کے 3ساتھیوںاعجاز احمد میر ،اشفاق احمد ملک اور سہیل دھوبی کو حراست میں لیکر ان سے پوچھ تاچھ شروع کی ۔پولیس نے معاملہ کی نسبت ایک کیس زیر یف آئی آر نمبر 118/2020درج کر کے تحقیقات شروع کی ۔اس دوران مہلوک طالب علم کے لو احقین نے ریگی پورہ میں احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ وہ بی سی اے کی ڈگری کررہا تھا اور ایک ماہ قبل کورونا وائرس کے خوف سے گھر لوٹا تھا۔انہوں نے کہ

اونتی پورہ اور کولگام میں خشخاش کی فصل تباہ

اونتی پورہ+کولگام//منشیات مخالف مہم کے دوران اونتی پورہ اور کولگام پولیس نے محکمہ ایکسائز کے افسران کے ہمراہ کھریو،ہاری پاریگام اور بدرو یاری پورہ کے علاقے میں 69کنال اراضی پر پھیلی خشخاش کی فصل کو تباہ کیا۔ پولیس اسٹیشن کھریو کے شار شالی علاقے میں ڈی وائی ایس پی کے ہمراہ ایس ایچ او پولیس تھانہ کھریو اور محکمہ ایکسائز کے افسران نے 30کنال اراضی پر پھیلی خشخاش کی فصل کو تباہ کیا ۔پولیس تھانہ اونتی پورہ کے ہاری پاریگام علاقے میںایس ڈی پی اونتی پورہ کے ہمراہ ایس ایچ او اونتی پورہ اور محکمہ ایکسائز کے افسران نے 5کنال اراضی پر پھیلی خشخاش کی کاشت کو تباہ کیا ۔ایس ایس پی اونتی پورہ طاہر سلیم نے کشمیر عظمیٰ کوبتایا کہ انہوں نے محکمہ مال اور ایکسائز محکمہ کے ساتھ مل کرگذشتہ چند روز کے دوران رینز پورہ،گلزار پورہ،بیگ پورہ،ٹکنہ،ریشی پورہ،پنجگام،امیر آباد،نئی بھگ،وین پانپور،چرسو،شار شالی کھریواورہ

ویلگام میں آشا ورکروں میں حفاظتی کٹ فراہم

کپوارہ// میڈیکل بلاک ویلگام رامحال میں محکمہ صحت کی جانب سے بلاک میں کام کر رہی آشا ورکروں میں حفاظتی کٹ فراہم کئے۔بلاک میڈیکل آفیسر ویلگام ڈاکٹر فرید شاہین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ بلاک میں 62 آشا ورکر کام کر رہی ہیں اور گزشتہ دو مہینوں کے دوران انہوں نے کوروناوائرس کی روکھتام کے لئے محکمہ کے ساتھ دن رات کام کیا اور محکمہ نے ان کی حفاظت کے لئے بدھ کو حفاظتی کٹ فراہم کئے تاکہ وہ اس وبائی بیماری پر روکتھام کے دوران محکمہ کو اپنا بھر پور تعاون فراہم کرسکیں۔  

ساتویں جماعت کے طالب علم نے قران حفظ کرلیا | ناروائو بارہمولہ میں خوشی کی لہر

بارہمولہ//اسلامیہ ماڈل اسکول ملہ پورہ شیری ناروائو میں زیرتعلیم ساتویں جماعت کے طالب علم سہیل احمدایتو ولدعبدالحمیدنے قرآن پاک حفظ کرلیا۔9سال کی عمر میں اس بچے نے ادارہ فرقان العلوم نامی دارالعلوم واقع آڈورہ ناروائو روزانہ سہ پہرکوجانا شروع کیاتھا،جہاں وہ قران کریم کویادکیاکرتاتھا۔دن کومروجہ تعلیم کیلئے اسکول جانا اورسہ پہرکو دارالعلوم جاناسہیل احمد کیلئے معمول بن گیاتھا۔تین سال تک اس عمل سے گزرنے کے بعد 12سالہ اس طالب علم نے قران پاک کوحفظ کرلیا اوروہ حافظ قران بن گیا۔چندروز قبل ہی دارالعلوم میں منعقدہ ایک سادہ مگرپُروقار تقریب کے دوران اس دارالعلوم کے مہتمم اوردیگر علماء نے سہیل کی دستاربندی کی اور سند بھی پیش کی ۔یوں یہ بچہ تین سال میں حافظ قران بن گیا۔ادھر اسلامیہ ماڈل اسکول کے اساتذہ کاکہناہے کہ سہیل ایک ہونہار طالب علم ہونے کے ساتھ ساتھ نہایت شریف اورفرمانبردار طالب علم ہے ۔

جی کے کمیونی کیشن کے دو ملازمین کو صدمہ

سرینگر//جی کے کمیونی کیشن سے وابستہ مشتاق احمد شاہ اور محمود احمد کے چچاشبیر احمد شاہ ولد مرحوم غلام احمدشاہ ساکن جبگری پورہ نوہٹہ بدھوار کو انتقال کرگئے۔ کشمیر عظمیٰ کے جملہ اراکین نے غمزدہ کنبے سے تعزیت اور یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔خاندانی ذرائع کے مطابق تعزیت صرف تین دن تک رہے گی اور کو ئی اجتماعی فاتحہ خوانی نہیں ہوگی۔   

تازہ ترین