تازہ ترین

سکمز کے 4000ملازمین میں سے صرف 800نے ویکسین لیا

 سرینگر //شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر اے جی آہنگر نے کہا کہ کورونا وائرس کی دوسری لہر لوگوں کو کافی تیزی سے اپنا نشانہ بنارہی ہے اور اس سے بچنے کا واحد طریقہ کورونا مخالف ویکسین لینا ہے۔ ڈاکٹر آہنگر نے کہا کہ ویکسین کورونا وائرس کے اثرات کو کافی حدتک ختم کرتا ہے۔ عالمی یوم صحت کے موقع پر سکمز میں منعقد کی گئی تقریب پر ڈاکٹرآہنگر نے کہا کہ پچھلے ایک ماہ سے ایک مرتبہ پھر ایک سنگین صورتحال پیدا ہوئی ہے اور لوگ تیزی سے وائرس سے متاثر ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا ’’ گزشتہ سال کے آخر میں کورونا متاثرین کی تعداد میں کمی آئی لیکن لوگوں نے احتیاطی تدابیر کو اپنانے میں کوتاہی ، ماسک کے استعمال میں کمی اور سماجی دوری کو نظر انداز کیا ‘‘۔ڈاکٹر آہنگر کا کہنا تھا کہ ایسا محسوس ہورہا ہے کہ ایڈس، ٹی بی اور دیگروبائی بیماریوں کی طرح کورونا

سرکاری و پرائیویٹ اداروں میں ٹیکہ کاری

نئی دلی //مرکزی سرکار نے تمام ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں کے ان نجی اور سرکاری اداروں میں 11اپریل سے ٹیکہ کاری مہم شروع کرنے کا علان کیا ہے جن میں کام کرنے والوں کی تعداد 100سے زیادہ ہوگی۔ مرکزی ہیلتھ سیکریٹری راجیش بھوشن نے تمام چیف سکریٹریوں کے نام ایک خط میں لکھا ہے کہ 45سال سے زیادہ عمر کی آبادی کا ایک خاصہ حصہ ملک میں منظم اقتصادیات کا حصہ ہے اور ان سرکاری اور نجی ، پیداواری یونٹوں اور دیگر خدمات فراہم کرنے والے لوگوں کوویکسین دینا ہوگا۔انہوں نے اپنی چھٹی میں لکھا ہے کہ ویکسین تک زیادہ سے زیادہ لوگوں کیلئے رسائی ممکن ہو، اس لئے کام کرنے والی جگہوںجن میں سرکاری اور نجی دفاتر شامل ہیں ، میں بھی ویکسین سینٹر قائم کئے جائیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ ریاستیں اور مرکزی زیر انتظام علاقے نجی اور سرکاری ملازمین اور انکی انتظامیہ سے بات کرکے ٹیکہ کاری سینٹر قائم کرسکتے ہیں اور ان سینٹروں

برف و باراں کا سلسلہ تھم گیا

  کرناہ/ / وادی میں موسلادھار بارشوں اور بالائی علاقوں میں ہلکی برفباری کے بعد بدھ کی صبح سے موسم میں ٹھہرائو پیدا ہوا۔ محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ 8اپریل سے 12اپریل تک موسم خوشگواررہیگا لیکن 12اپریل کی شام سے  ایک بار پھر مغربی ہوائیں وادی میںداخل ہونگیں اور پھر 14اپریل تک وادی کے بالائی  اور میدانی علاقوں میں موسلادھار بارشیں ہونے کا امکان ہے۔محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ شمالی ضلع کپوارہ کے بعض بالائی علاقوں بشمول کرناہ، مژھل اور کیرن میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران قریب ایک فٹ تازہ برف جمع ہوئی ۔ کرناہ میں سادھنا ٹاپ پر ایک فٹ تازہ برف جمع ہوئی جس سے سڑک ایک بار پھر بند ہوگئی۔سرینگر میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 20.8 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ، میں کم سے کم درجہ حرارت 5.2 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ گلمرگ میں 5 سینٹی میٹر تازہ برف جمع ہوئی

اوڑی میں پہاڑی طلبہ کیلئے 60لاکھ روپے وظیفہ کی رقم لیپس

 اوڑی/ /اوڑی میں پہاڑی بولنے والے طلبہ کیلئے 60لاکھ روپے کاتعلیمی وظیفہ حکام کی کوتاہی سے لیپس ہوگیاہے اور اب یہ محکمہ تعلیم اور محکمہ مال اس کاالزام ایک دوسرے پر تراش رہے ہیں۔ اس دوران نیشنل کانفرنس نے وظیفہ ضائع ہونے کی وجوہات جاننے کیلئے اس کی تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیاہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ تعلیمی زون اوڑی میں پہاڑی طلبہ کے لئے 31لاکھ روپے کا وظیفہ منظور ہواتھا جبکہ بونیارزون اورچندن واڑی زون کیلئے بالترتیب 14 لاکھ 60 ہزار اور 13 لاکھ 86 ہزار روپے منظور ہوئے تھے۔زونل ایجوکیشن افسر اوڑی میں تعینات ایک ملازم نے بتایا کہ اگرچہ اوڑی زون کے تمام اسکولوں کے طلبہ کی دستاویزات وقت پر متعلقہ تحصیلدار کے دفتر میں تصدیق کیلئے جمع کرائے گئے تھے ،تاہم متعلقہ تحصیلدار نے ان دستاویزات کی تصدیق نہیں کی،جس کی وجہ سے یہ رقومات ضائع ہوگئے۔اس ملازم نے یہ بھی بتایا کہ تحصیلدارنے وہ دستاویزات

سرکاری عمارتوں پر ترنگے کی پرچم کشائی

سری نگر//جب ہم برسراقتدار تھے،تو کوئی لیڈر پارٹی چھوڑ کرنہیں جاتا تھا لیکن مشکل حالات میں وہ کس دبائوکے تحت پارٹی چھوڑرہے ہیں اس کی جواب وہ ہی دے سکتے ہیں۔اس بات کااظہار پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کی صدر محبوبہ مفتی نے کیا۔ محبوبہ مفتی نے پی ڈی پی سے لیڈران کے استعفیٰ پر بات کرتے ہوئے کہا،’’'جب ہماری جماعت اقتدار میں تھی تو ہم نے اُن کو ایم ایل سی بنایا، راجیہ سبھا کے لئے نامزد کیا اوروزیر بنایا۔ تب سب کچھ ٹھیک ٹھاک تھا‘‘۔ان کا مزید کہنا تھاِ’’'آج پارٹی مشکل میں ہے ، پورے جموں و کشمیر کے لئے مشکل وقت ہے تو ایسے وقت میں وہ کس دبائو کے تحت یا کس لالچ کے تحت جا رہے ہیں اس کے بارے میں میں کچھ نہیں بتا سکتی بلکہ وہی لوگ کچھ بتا سکتے ہیں‘‘۔محبوبہ مفتی نے ایک اور سوال کے جواب میں کہا کہ پورے ملک بالخصوص جموں و کشمیر میں اختلاف رائے رکھنا ایک ج

مشیربھٹناگر کادورہ نون ون

اننت ناگ//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر نے  پہلگام کے نون ون بیس کیمپ کا دورہ کیا اور شری امر ناتھ جی یاترا۔ 2021 کے انعقاد کیلئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لیا ۔ مشیر کے ہمراہ ڈی ڈی سی چیئر مین اننت ناگ ، سی ای او پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی ، اسسٹنٹ کمشنر ریونیو اننت ناگ ، ایڈیشنل ایس پی ، سی آر پی ایف افسران اور دیگر اعلیٰ افسران تھے ۔ مشیر بھٹناگر نے  افسران پر زور دیا کہ وہ یاتریوں کیلئے تمام ضروری انتظامات کو یقینی بنائیں ۔ انہوں نے افسران کو ہدایت دی کہ یاتریوں کو صاف ستھری اور حفظانِ صحت سے متعلق ٹائیلٹ کی سہولیات کو یقینی بنائیں اور تمام متعلقہ محکموں پر زور دیا کہ وہ ہر کیمپ پر صفائی ستھرائی کی مناسب سہولت کو یقینی بنائیں اور گپھا تک جانے والے راستے کی صفائی ستھرائی کو برقرار رکھیں ۔ انہوں نے کہا کہ سالڈ ویسٹ منیجمنٹ کے ذریعے کچرے کو مناسب طور پر ٹھکانے لگان

باباریشی آتشزدگان سے اظہار یکجہتی

ٹنگمرگ // نیشنل کانفرنس وفد نے باباریشی گلمرگ جاکر وہاں گذشتہ دنوں ہولناک آگ سے متاثر ہوئے لوگوں کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کیا ۔ وفد میں پارٹی کے معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال، شمالی زون صدر و رکن پارلیمان محمد اکبر لون،حسنین مسعودی اور مقامی عہدیداران موجود تھے۔ اُن کے ہمراہ تحصیلدار اور مختلف محکموں کے اعلیٰ حکام بھی تھے۔ وفد نے اس واردات میں مکمل طور پر خاکستر ہوئے دکانوں کا معائنہ کیا۔ پارٹی وفد نے حکومت سے اپیل کی کہ متاثرین کی فوری بازآبادکاری کیلئے اقدامات کئے جائیںاور ایک شاپنگ کمپلیکس تعمیر کرکے ان دکانداروں کودکانیں فراہم کی جائیں اور ان سے آسان قسطوں پر دکانوں کی رقم وصول کی جائے۔ اس کے علاوہ متاثرین کیلئے فوری طور پر ڈیزاسٹر فنڈ میں سے امداد فراہم کی جائے۔ رکن پارلیمان حسنین مسعودی نے موقعہ پر ہی صوبائی کمشنر کے ساتھ رابطہ کیا اور انہیں تمام پہلوئوں کی جانکاری دی اور م

صحت مند دنیا کی تعمیر بنیادی ضرورت: تاریگامی

  سری نگر//عالمی یوم صحت  کے موقع پر ، سی پی آئی (ایم) کے رہنما یوسف تاریگامی نے ایک بہتر اور صحت مند دنیا کی تعمیر کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ہر ایک کی زندگی اور کام کی صورتحال اچھی صحت کے لئے موزوں ہونی چاہیے۔کورونا وائرس وبائی بیماری نے کافی لوگوں کو غربت اور کھانے کی عدم تحفظ کی طرف دھکیل دیا ہے اور صنفی ، معاشرتی اور صحت کی عدم مساوات کو بڑھاوا دیا ہے۔ایک بیان میں تاریگامی نے کہا چونکہ عالمی یوم صحت 2021  کوویڈ .- 19 وبائی مرض کے دوران منایا جارہا ہے ، اس لئے صحت کی عدم مساوات کے خاتمے کے لئے عملی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ، ایک سال تک جاری رہنے والی عالمی مہم کے تحت لوگوں کو ایک بہتر اور صحت مند دنیا کی تعمیر کے لئے متحد کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں کووِڈ۔19 کے مثبت معاملات  میں حالیہ اضافہ تشویشناک ہے کیوں کہ حالیہ دنوں میں کورونامعاملات پچھلے سال کے

کووِڈ- 19کی دوسری لہر پہلی سے زیادہ بدتر ہوگی

سرینگر//کشمیرمیں کووِڈ- 19کی دوسری لہر کے دوران ڈاکٹر س ایسوسی ایشن کشمیر نے خبردارکیا ہے کہ نئی لہر پہلے سے بھی زیادہ خطرناک اوربدترثابت ہوسکتی ہے۔ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر نثار الحسن نے کہا ،’’وباء کی دوسری لہر یں ہمیشہ سخت ہوتی ہیں۔ایک بیان میں انہوں نے کہا ،’’ہم نے ماضی میں دیکھا ہے کہ کیسے 1918میں سپینش فلو کے وباء کی دوسری لہرپہلی سے زیادہ مہلک ثابت ہوئی تھی ۔پہلی لہر موسم بہار میں شروع ہوئی تھی جو نسبتاًمعمولی تھی لیکن دوسری لہرموسم خزان میں شروع ہوئی جس نے پچاس کروڑ لوگوں کومتاثر کیاتھااوردنیابھرمیںپانچ کروڑ لوگ اس سے ہلاک ہوئے تھے۔انہوں نے کہا کہ کووِڈ- 19اسی طرز پرچل رہا ہے۔ امریکہ اور یورپ میں کورونا کی دوسری لہرپہلے سے زیادہ شدید تھی۔انہوں نے مزیدکہاکہ اس وقت کشمیر کووِڈ کی دوسری لہر کی پکڑ میں ہے اور کورونا کے معاملات اور اسپتالوں میں داخلوں ک

صرف سکولوں کو بند کرنے کی منطق سمجھ سے بالاتر

سرینگر// نیشنل کانفرنس نے کووِڈ- 19 کی تشویشناک صورتحال سے نمٹنے میں حکومت کی غیر سنجیدگی پر زبردست برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انتظامیہ صرف اور صرف ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر تشہیر بازی کیلئے لیپاپوتی پر مبنی اقدامات کررہی ہیں جبکہ زمینی سطح پر اس وبائی بیماری کی روک تھام کیلئے کوئی بھی ٹھوس اقدام نہیں کیا جارہا ہے۔ پارٹی کے ترجمان عمران نبی ڈار نے کہا کہ حکومت ایسا تاثر دینے کی کوشش کررہی ہے کہ سکولوں کو بند کرکے تمام خطرات ختم ہوگئے ہیں اور پارکوں و  مارکیٹوں کے رش، کوچنگ سینٹروں اورسرکاری تقریبات کے اہتمام سے کووِڈ- 19 کا پھیلائو نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ حقیقت تو یہ ہے کہ صرف سکولوں میں ہی کسی حد تک ایس او پیز پر عملدرآمد ہوتا ۔ اس کے علاوہ دور دراز اور دیہی علاقوں میں پہلے سے ہی مڈل سکولوں میں بچوں کی تعداد قلیل ہوتی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ صرف سکولوں کو بند کرنے کی

ڈگری کالج ترال کیلئے صرف480نشستیں

  ترال// سب ضلع ترال میں قائم 8ہائر سکنڈری سکولوں سے کامیاب ہوئے سینکڑوں طلباء کے لئے ڈگری کالج ترال کو محکمہ اعلی ٰ تعلیم کی جانب سے کل480نشستیں فراہم کی گئی ہیں جس کی وجہ سے سب ضلع کے سینکڑوں طلباء کایہاں داخلہ نہیں ہوسکا اور علاقے کے غریب گھرانوں کے بچوں کے لئے تعلیم کے دروازے بند ہوئے ہیں ۔علاقے سے تعلق رکھنے والے طلباء نے بد ھ کے روز بتایا کہ پہلے یونیورسٹی ویب سائٹ جہاں پر وہ ایڈمشن کرتے تھے ،کئی روز خراب رہی ۔ انہوں نے بتایااب جب وہ ٹھیک طرح سے چل رہی ہے تو انہیں بتایا گیا ہے کہ ہمیں جتنے بچوں کو داخلہ دینا تھا ،وہ مکمل ہوا ہے جس کے بعد کسی بھی طالب علم کو ترال کالج میں داخلہ نہیں مل سکتا ہے ۔تبسم نامی ایک طالبہ نے بتایا ترال کالج ہمارا نزدیکی کالج ہے جہاں ہم تعلیم حاصل کر سکتے ہیں ۔انہوں نے بتایا اب ان کی نظر اونتی پورہ اور پلوامہ کے کالجوں پر تھی تاہم اونتی پورہ میں

لال پتی کنگن پاور کنال سے پانی کا اخراج

کنگن//لال پتی گنڈ کنگن میں پاور کنال سے پانی اخراج ہونے کی وجہ سے مقامی بستی میں خوف وہراس کا ماحول پیدا ہوگیا ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق 23مارچ 2014 میں بھی کلو محلہ نیو کالونی گنڈ میں دوران شب پاور کنال میں ایک بھاری پتھر گرآیا اور پورا پانی رہائشی مکان کے اندر داخل ہوگیا جس کی وجہ سے دو مکان مکمل طور پر تباہ ہوگئے تھے اور کئی مکانوں کو جزوی نقصان بھی پہنچا تھا۔ لوگوں نے اُس وقت بھی پاور کنال کی مرمت اور فینسنگ کا مطالبہ کیا تھا لیکن آج تک اس کی طرف کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ سال 2011 میں اگرچہ پاور کنال کی مرمت 12کروڑروپے کی لاگت سے کی گئی تھی مگر لوگوں نے غیرمعیاری مواد استعمال کرنے کا الزام کیا تھا۔لوگوں کا کہنا ہے کہ یہی وجہ ہے کہ آج بھی کنال میں کئی جگہوں سے پانی کا اخراج ہورہا ہے۔ مقامی لوگوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ اگرپاور کنال کی جلد مرمت نہیں کی گئی تو کوئی

بی ڈی سی چیئرپرسن کلاروس کپوارہ متعددپنچایتی ممبران سمیت اپنی پارٹی میں شامل

سرینگر//بلاک ڈیولپمنٹ چیئرپرسن کلاروس کپوارہ متعددپنچایتی ممبران سمیت بدھوار کو اپنی پارٹی میں شامل ہوئی۔ایک بیان کے مطابق بلاک ڈیولپمنٹ چیئرپرسن کلرسوکپوارہ عتیقہ بیگم نے ایک تقریب کے دوران متعددپنچایتی ممبران سمیت اپنی پارٹی میں شمولیت اختیارکی۔اس موقعہ پراپنی پارٹی کے سینئرنائب صدرغلام حسن میر نے ان کاخیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ اپنی پارٹی ہمیشہ جموں کشمیرکی یکسان ترقی کی خواہاں رہی ہے جہاں سبھی طبقوں کے لوگ بلا کسی امتیازامن ،خوشحالی اور بھائی چارے کے ساتھ رہیں۔انہوں نے کہا کہ اپنی پارٹی نے کبھی فرقہ پرست سیاست نہیں کی،بلکہ جموں کشمیرکے لوگوں کو ایک لڑی میں پِرویا۔انہوں نے کہا کہ تنوع میں اتحاد ہی ہماری طاقت ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ اہم وقت ہے کہ مرکزی سرکار جموں وکشمیر کا ریاستی درجہ بحال کرے تاکہ انتخابات کا جمہوری عمل جلد سے جلد یہاں شروع ہوسکے۔ انہوں نے نئے ساتھیوں سے عوامی بہبود کے

لڑکی سے زیادتی کا معاملہ

اننت ناگ //قاضی گنڈ  میں پولیس نے ایک پولیس اہلکار سمیت 4 افراد کو لڑکی کی عصمت دری کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔پولیس اسٹیشن  قاضی گنڈ کو ایک شکایت موصول ہوئی، جس میں  شکایت کنندہ نے کہا کہ بونی گام قاضی گند میں اس کی بیٹی (نام مخفی) کو تین افراد نے زیادتی کا نشانہ بنایا ہے اور اس شرمناک واقعہ میں شبروزہ  نامی خاتون نے ملزمان کی مدد کی ہے۔یہ شرمناک واقعہ اس وقت سامنے آیا جب 17 سالہ لڑکی طبی جانچ کے لئے اسپتال گئی جہاں طبی جانچ میں بچی حاملہ پائی گئی۔ شکایت موصول ہونے کے بعد پولیس نے معاملہ کی نسبت کیس زیر نمبر 61/2021 U / S 376D ، 342 ، 109 IPC ، 4 POCSO ایکٹ قاضی گنڈ پولیس اسٹیشن میں درج کیا اور تفتیش شروع کردی۔دوران تفتیش شکایت درست پاکر پولیس نے شرمناک کام میں ملوث چار ملزمان ظہور احمد میرسابق فوجی اہلکار ، اعجاز احمد شاہ ، کفایت احمد ملک اور شبروزہ کو گرفتار ک

کشمیریونیورسٹی میں دوروزہ ویبنار

سرینگر//کووِڈ- 19نے لوگوں کے ذہنی صحت پرمنفی اثرات ڈالے ہیں جن کی وجہ سے عالمی سطح پرمنشیات کی لت میں بہت زیادہ لوگ مبتلاء ہوئے ہیں۔ان باتوں کا اظہار کشمیریونیورسٹی کے اسلامک اسٹیڈیزشعبہ کے اہتمام سے دوروزہ ویب نار سے خطاب کرتے ہوئے ڈین اکیڈمک افیئرس پروفیسرشبیراحمد بٹ نے کیا۔’وباء اورمنشیات:ایک مذہبی تناظر‘‘موضوع پرمنعقدہ ویب نار سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسرشبیراحمد بٹ نے مزید کہا کہ وبائوں نے بنی نوع انسان کو بارباردنیا میں زندگی کے مقصدپر سوچنے پر مجبور کیاہے۔اسلامک اسٹیڈیز شعبہ کے صدر اور سمینار کے ڈائریکٹرپروفیسرمنظوراحمد بٹ نے مہمانوں اورشرکاء کاخیرمقدم کرتے ہوئے،پروگرام میں آف لائن اور آن لائن حصہ لیا۔انہوں نے سمینار کاجائزہ پیش کرتے ہوئے ایسے موضوعات پرمحققانہ تبادلہ خیال کی ضرورت پرزوردیااوراس کااہتمام کرنے کامقصدبیان کیا۔علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے شعبہ فارماکو

شمالی کشمیر کے کئی علاقوں میں جنگلی سور نمودار

بارہمولہ // ضلع بارہمولہ کے پہلی پورہ علاقے میں جنگلی سورکی موجودگی سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔ پچھلے کئی دنوں سے ا ن جانوروں کوعلاقے میں دیکھا جارہا ہے ۔ ادھر محکمہ وائلڈ لائف ذرائع نے بتایا کہ انہیں پہلی پورہ بونیار علاقے میں مقامی لوگوں کی طرف سے متعدد شکایات موصول ہوئی ہیں کہ پیرنیاں بمیار پیلی پورہ سڑک کے نزدیک دریائے جہلم کے کنارے سوروں کا ایک جھنڈ شام کے وقت گھوم رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ان جانوروں کی ایک ویڈیو کلپ بھی موصول ہو ئی جو سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہوئی ہے۔ انہوںنے کہا ’’ ہم نے ا پنے ملازمین کو چوکس رہنے کی ہدایت دی تاکہ ان کو پکڑا جاسکے‘‘۔ انہوں نے مزید کہاکہ یہ پہلا موقع نہیں ہے بلکہ پچھلے کچھ سالوں سے اوڑی کے کئی علاقے میں ان جانوروں کی موجودگی کی شکایات موصول ہو رہی ہیں ، پچھلے سال بونیار کے علاقے میں اس جانور کو قبرستان میں دیکھا گی

عالمی یوم صحت پر زرعی یونیورسٹی میں تقریب

گاندربل//شیر کشمیر زرعی یونیورسٹی کی جانب سے یوم صحت کے عالمی موقع پر شہامہ آلسٹینگ گاندربل میں ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔اس موقع پر ویٹرنری پیشہ سے وابستہ اراکین نے کہا کہ ویٹرنری شعبہ میں آزادی ، سالمیت ، علم اور مہارت ہونی چاہئے جس سے صارفین کو یہ یقین دہانی ہوسکے کہ ان کی اعلی خوراک کی حفاظت ، انسانی اور جانوروں کی فلاح و بہبود کے ساتھ ساتھ ماحولیاتی معیار کی توقع پوری ہوسکتی ہے۔یوم صحت منانے پر قومی اور عالمی سطح پر لوگوں ، جانوروں اور ماحولیات کے لئے زیادہ سے زیادہ صحت حاصل کرنے کے لئے متعدد مضامین کی اجتماعی کوشش کی جارہی ہیں۔ ان کی مہارت کی وجہ سے جانوروں ، انسانوں اور یہاں تک کہ ماحولیات کی صحت میں اہم کردار ادا کرتے ہیں لیکن یہ کردار اکثر نظرانداز کیا جاتے ہیں یا ان کی شناخت نہیں کی جاتی ہے۔ بہرحال ویٹرنری میڈیسن واحد پیشہ ہے جو ایک صحت کے ان تین اجزاء پر معمول کے مطابق

مزید خبرں

سیاحوں کیلئےRT-PCRٹیسٹ لازمی قراردیا جائے  ٹورسٹوں کیلئے ہوٹلوں میں قرنطین مراکزقائم کئے جائیں ٹریول ایجنٹس  ایسوسی ایشن آف کشمیرکا مطالبہ سرینگر//ٹریول ایجنٹس ایسوسی ایشن آف کشمیرنے لیفٹینٹ گورنر انتظامیہ پرزوردیا ہے کہ وادی داخل ہونے والے تمام سیاحوں کا RT-PCRٹیسٹ لازمی قراردیاجائے اور کوروناوائرس میں مبتلاء پائے جانے والے سیاحوں کیلئے انتظامی قرنطین مرکزقائم کئے جائیں۔ایک بیان میں ایسوسی ایشن کے صدر فاروق کٹھو نے کہا کہ کوروناوائرس کی وباء میں اضافے اوروادی میں سیاحوں کی بھاری آمدکے پیش نظرلازمی ہے کہ اس طریقہ کار پر عمل کرکے وائرس کے مزیدپھیلائوکوروکاجائے اورسیاحوں کو بھی جو وادی کا دورہ کرنے کے خواہاں ہو،کوایک پیغام دیاجائے۔انہوں نے کہا کہ جوسیاح کووِڈمنفی رپورٹ کے ساتھ یہاں آئیں گے،ان کاائرپورٹ پرRT-PCRٹیسٹ کیلئے نمونہ لیاجائے۔انہوں نے کہا کہ موجودہ نظام