جموں وکشمیر میں مزید 6253 افراد کورونا میں مبتلا، سات فوت

سری نگر//جموں وکشمیر میں اتوار کے روز مزید 6253 افراد کی رپورٹ پازٹیو آئی ہے جبکہ سات مریض فوت ہوئے ۔   سرکاری ذرائع نے اعدادوشمار ظاہر کرتے ہوئے بتایا کہ سری نگر میں اتوار کے روز 1464افراد کی رپورٹ پازٹیو آئی ہے، بارہ مولہ میں 564، بڈگام میں 590، پلوامہ میں 150، کپواڑہ میں 344، اننت ناگ میں 578، بانڈی پورہ میں 261، گاندربل میں 320، کولگام میں 174اور شوپیاں میں 54افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی۔   جموں ضلع میں 1075افراد کی رپورٹ اتوار کے روز مثبت آئی ہے، اُدھم پور میں 114، راجوری میں 35، ڈوڈہ میں 140، کٹھوعہ میں 83، سانبہ میں 47، کشتواڑ میں 26، پونچھ میں 10، رام بن میں 176اور ریاسی میں 48افراد کی رپورٹ پازٹیو آئی ہے۔   دریں اثنا لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ کووِڈ ۔19ہیلپ لائین نمبرات پر رابطہ قائم کرسکتے ہیں تاکہ اُنہیں ضرورت پڑنے پر صحیح طبی مش

وادی کشمیر کو بیرون دنیا کے ساتھ جوڑنے والی قومی شاہراہ بند

سری نگر// وادی کشمیر کو بیرون دنیا کے ساتھ جوڑنے والی سری نگر۔جموں قومی شاہراہ اتوار کے روز ٹریفک کی نقل وحمل کے لئے بند رہی۔   ٹریفک حکام کی وساطت سے یو این آئی کومعلوم ہوا ہے کہ قومی شاہراہ پرپنتھال اور دوسرے کئی مقامات پر پسیاں گر آنے اور دیگر کئی مقامات پر مٹی کے تودے گرنے کے باعث شاہراہ کو اتوار کے روز ٹریفک کی نقل وحمل کے لئے بند رکھنے کا فیصلہ لیا گیا ۔   انہوں نے کہا کہ مسافروں کے تحفظ کے پیش نظر اتوار کو شاہراہ پر کسی بھی گاڑی کو چلنے کی اجازت نہیں دی گئی۔   اُن کے مطابق رام بن اور رامسو کے درمیان کئی مقامات پر بھی مٹی کے تودے گر آئے ہیں جن کو ہٹانے کی خاطر کام جنگی بنیادوں پر شروع کیا گیا ہے۔   ذرائع نے بتایا کہ پنتھال کے نزدیک پسیاں گر آنے کے سبب ایک مال بردار ٹرک پھنس کر رہ گئی ہے جس کو وہاں سے نکالنے کی خاطر ہنگامی بنیادو

اب ماہ رواں کے آخر تک موسم خشک رہنے کا امکان ہے : سونم لوٹس

سری نگر//محکمہ موسمیات کے سربراہ کا کہنا ہے کہ 24 جنوری سے موسم میں بہتری آئے گی اور ایک ہفتے تک موسم خشک رہے گا۔   یو این آئی اردو کے ساتھ گفتگو کے دوران محکمہ موسمیات کے سربراہ سونم لوٹس نے کہاکہ اتوار کے روز جنوبی کشمیر کے کئی علاقوں میں تازہ برف باری ہوئی ہے۔   انہوں نے بتایا کہ پہاڑی علاقوں میں درمیانی درجے کی برف باری ریکارڈ ہوئی جبکہ شہر سری نگر سمیت وادی کے دیگر میدانی علاقوں میں بارشیں ہو ئی ہیں۔   اُن کے مطابق 24 جنوری سے موسم میں بہتری آنے کا امکان ہے ۔   انہوں نے بتایا کہ وادی کشمیر میں ایک ہفتے تک موسم خشک رہے گا، فی الحال موسم میں تبدیلی آنے کا کوئی امکان نظر نہیں آرہا ہے۔   بتادیں کہ جنوبی کشمیر میں سنیچر اور اتوار کی درمیانی رات کو برف باری ہوئی جس وجہ سے کئی علاقوں میں معمولات زندگی درہم برہم ہو کر رہ گئی

دل کا دورہ پڑنے سے سیاح کی موت

گلمرگ// مہاراشٹر کے ایک سیاح کی وادی کشمیر کے مشہور سیاحتی مقام گلمرگ کے ایک لگژری ہوٹل میں دل کا دورہ پڑنے سے موت ہو گئی۔      پولیس ذرائع نے بتایا کہ ممبئی کے ایک 65 سالہ سیاح نے سینے میں درد کی شکایت کی۔ اسے ہوٹل سے پرائمری ہیلتھ سنٹر گلمرگ منتقل کیا گیا جہاں پہنچنے پر ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا۔    اس کی شناخت تیج پال ولد امبالال شا کے طور پر ہوئی ہے۔ 

شوپیان میں انکائونٹر ختم | 2مقامی ملی ٹینٹ جاں بحق

 شوپیان// جنوبی ضلع شوپیان میں سنیچر دن بھر کی مسلح تصادم آرائی میں 2مقامی ملی ٹینٹ جاں بحق جبکہ ایک رہائشی مکان کو شدید نقصان پہنچا۔پولیس کے مطابق انہیں کلبل مانتری بگ حرمین نامی ایک چھوٹے سے گائوں میں 2ملی ٹینٹوں کی موجودگی کی اطلاع ملی جس کے بعد آپریشن کا فیصلہ کیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ34آر آر ،سی آر پی ایف 178 بٹالین اور پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے ضلع ہیڈکوارٹر سے قریب 15 کلومیٹر کی دوری پر واقع  مذکورہ بستی کو سنیچر کی دوپہرمحاصرے میں لیا اور گائوں کی مکمل ناکہ بندی کر کے تلاشیوں کا آغاز کیا گیا۔مقامی لوگوں کے مطابق تلاشی کرنے کی غرض سے جب فورسز اہلکار بستی میں داخل ہوئے تو ملی ٹینٹوں نے منظور احمد راتھر ولد گلہ راتھر کی رہائش گاہ میں پناہ لی اور سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کی جس کے بعد مختصر وقت تک گولیوں کا تبادلہ ہوتا رہا۔پولیس نے بتایا کہ فورسز نے ملی ٹینٹوںک

ڈی جی پی نے 20پولیس اہلکاروں کے بچوں کے حق میں وظیفہ منظور کیا

جموں//پولیس اہلکاروں کے بچوںکا حوصلہ بڑھانے اور ان میں مسابقتی امتحانات میں حصہ لینے کوفروغ دینے کیلئے پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے 20بچوں کے حق میں1.28لاکھ روپے کا وظیفہ منظور کیا۔ اس میں7200روپے کی رقم فی کس سات بچوں کے حق میں منظور ہوئی جنہوں نے بارہویں جماعت کے سالانہ امتحان میں90فیصد سے زیادہ نمبرات حاصل کئے تھے۔ اسی طرح6300روپے فی کس کے حساب سے 13بچوں میں بھی وظیفہ منظور کیا گیا جنہوں نے بارہویں جماعت کے سالانہ امتحان میں80 سے90 فیصد تک نمبرات حاصل کئے تھے۔

ماحولیاتی طورحسا س خطوں کیلئے زونل ماسٹر پلان

سرینگر// حکومت نے ماحولیاتی طور حساس خطوں کیلئے زونل ماسٹر پلان تیار کرنے کیلئے ضلعی سطح کی کمیٹیوں کا قیام عمل میں لایا،جن کی کمان متعلقہ ضلع ترقیاتی کمشنروں کو سونپی گئی ہے۔ عمومی انتظامی محکمہ کی جانب سے اس سلسلے میں ایک آرڈر جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ  وزارت ماحولیات، جنگلات و تبدیلی آب ہوا کی جانب سے جن علاقوں کی نشاندہی کی گئی ہے،ان حساس علاقوں کے ماسٹر پلان کو زون سطح پر تیار کیا جائے گا۔ ضلعی سطح کمیٹیوں میں متعلقہ ضلع ترقیاتی کمشنر چیئرمین ہونگے جبکہ متعلقہ وائلڈ لائف وارڈن، جموں کشمیر پولیوشن کنٹرول کمیٹی، محکمہ دیہی ترقی و پنچایتی راج، محکمہ زرعی پیدوار و بہبود کاشتکار،محکمہ جل شکتی(آبپاشی و  فلڈ کنٹرول) محکمہ صنعت و حرفت اور چیئرمین کی طرف سے متعلقہ ضلع کے ڈگری کالج میں شعبہ لائف سائنس کا ایک فیکلٹی رکن اس کمیٹی کے ممبران ہو نگے۔ آرڈر میں کہا گیا کہ

وزیرداخلہ’’معمول کے حالات‘‘کی تشریح کریں:سجاد لون

سرینگر //پیپلزکانفرنس کے چیئرمین سجاد لون نے وزیرداخلہ سے کہا ہے کہ وہ ’’معمول کے حالات‘‘ کی وضاحت کریں۔وہ وزیرداخلہ کے اِس بیان کہ جموں کشمیرمیں ’’حالات کے معمول پرآنے کے بعدریاستی درجہ بحال کیاجائے گا‘‘،پراپنے ردعمل کا اظہار کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے لوگ جو آج خاموش تماشائی  بنے بیٹھے ہیں ، خود بے بسی کا مزہ چکھیں گے ۔سجاد لون نے سوالیہ انداز میں کہا کہ کیا ہم واقعی میں وفاقی حکومتی نظام میں’’معمول کے حالات‘‘کی آڑ میں اقتدار کی کرسی پر براجمان رہ سکتے ہیں؟سجاد لون نے اپنے ٹویٹر اکائونٹ پر لکھا ہے کہ معمول کے حالات کے فقدان کی آڑ میں ریاستی درجہ کی بحالی کو روکنا نہ صرف جموں کشمیر کے لوگوں بلکہ ہندوستان کے وفاقی نظام کی بھی توہین ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان کے لوگ جو آج جموں کشمیر کے حو

گڈ گورننس کے دعوے زمینی حقائق کے برعکس:تاریگامی

 سری نگر// جموں و کشمیر کے لیے گڈ گورننس انڈیکس جاری کرنے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے،کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (مارکسسٹ)رہنما یوسف تاریگامی نے ہفتے کے روز کہا کہ جموں و کشمیر میں گڈ گورننس اور ترقی کے دعوے زمینی حقائق کے برعکس ہیں۔ اچھی حکمرانی کے بنیادی اصولوں میں سے ایک لوگوں کی شرکت اور نمائندگی ہے، ایک ایسا حق جس سے جموں و کشمیر کے لوگوں کو مسلسل محروم رکھا جارہاہے۔انہوں نے کہا کہ ایسے فہرست جاری کرنے کا مقصد صرف حکومت کی مدد کرنا ہے۔ تاہم، خستہ حال سڑکوں کی زمینی حقیقت، بجلی کی فراہمی، پینے کے پانی کی عدم دستیابی کے ساتھ ساتھ بڑھتی بے روزگاری،سماجی بے چینی متضاد تصویر کی عکاسی کر رہی ہے۔ گڈ گورننس کے لیے احتساب کلیدی ہے جس کے لیے آزادی صحافت، آزادی اظہار کو یقینی بنانا سب سے اہم ہے۔ حکومت کو سب سے پہلے عوام کے ان حقوق کو بحال کرنا چاہیے جو بدقسمتی سے ان سے محروم رکھے جارے ہیں۔

گڈ گورننس کے دعوے کھوکھلے:کانگریس

سری نگر// حکومت کی طرف سے جموں و کشمیر میں گڈ گورننس کے دعوے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے اس دعوے کو کھوکھلا اور گمراہ کن قرار دیا ہے۔ کے این ایس کے مطابق پارٹی نے جموں و کشمیر کو ریاست کا درجہ بحال کرنے کے وزیرداخلہ کے دعوے پر بھی سوال اٹھایا اور کہا کہ اصل مسائل سے توجہ ہٹانے کے مقصد سے اس مسئلے کو کب تک پس پشت ڈالا جائے گا۔جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے جموں و کشمیر میں گڈ گورننس کے دعوے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے اسے کھوکھلا اور گمراہ کن قرار دیا ہے۔ پی سی سی نے کہا کہ جموں و کشمیر کو ہر محاذ پر بے پناہ نقصان اٹھانا پڑا ہے، جو کہ جموں و کشمیر میں ترقیاتی فنڈز کے غیر استعمال ہونے کی نشاندہی کرتا ہے۔جے کے پی سی سی نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ جموں و کشمیر نے ترقیاتی فنڈز کا تقریبا 50 فیصد سپرد کر دیا ہے، جو کہ تاخیر کے فیصلے اور غلط پالیسیوں

بانہال بارہمولہ ریلوے میں بچھائی جانے والی تانبے کی تار چوری

سرینگر// ریلوے پولیس کشمیر(جی آر پی کے) نے ہفتہ کوریلوے حکام کی طرف سے ایک نجی فرم کے ذریعے نصب کی جا رہی’’ او ایچ ای ‘تانبے کے تار کو لوٹنے میں ملوث 21 ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ’جی آر پی کے‘، ہرمیت سنگھ نے بتایا کہ 21 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ ان کے پاس سے 388 کلوگرا  ائو ایچ ای تار کی چوری شدہ املاک بھی برآمد کی گئی ہے جس کی مالیت 3لاکھ 56ہزا572 روپے ہے۔ ریلوے حکام آر ایس انفرا پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی کے ذریعے ’ائو ایچ ای‘ تانبے کی تار ستمبر 2021سے بارہمولہ سے بانہال تک بچھا رہی تھی۔ مذکورہ کمپنی کی طرف سے بتایا گیا کہ رات کے اوقات میں نامعلوم چوروں نے یہ وارداتیں کیں۔ ائو ایچ ای تانبے کے تار کی چوری سوپور، پٹن، بڈگام، سرینگر اور بجبہاڑہ علاقوں میں کی گئی۔کمپنی کی تحریری رپورٹ پر کیسوں کا اندراج

ایمپلائز پروڈنٹ فنڈ آرگنائزیشن میں احسن طورکام جاری

جموں//ایمپلائزپروڈنٹ فنڈ کے علاقائی دفترجموں میں کورونا کی تیسری لہر کے پیش نظر گھر سے کام کرنے کاطریقہ اپنایاگیا ہے۔حالیہ مشکل دنوں میںجب اختتام ہفتہ کالاک ڈائون نافذ کیاگیا،ایمپلائزپروڈنٹ فنڈ جموں کشمیراورلداخ نے کام کو احسن طریقے سے انجام دیااورکئی افسروں نے شفٹوں میں کام کیا۔لچکدار کام نے ہمیں حالیہ مہینوں میں کئی سنگ میل مکمل کرنے میں مدددی۔ای ایف پی اونے جموں اور کشمیر کے دفاتر سے پنشن فارم جاری کرنے کا عمل شروع کیا ہے جو پہلے امرتسر میں ہوتا تھا۔اس سے پنشن کے حصول میں واقعی سہولت پیدا ہوئی ہے ۔جنوری کے ماہ میں دس پی پی اوز،للت شرما،پنکج کمار،بندیاکوہلی،میجرسنگھ،بودھ راج،غلام احمد بٹ،راجیش مہتہ،شنڈے رام،گوری شنکر،اورسبھاش چندرشرماکے حق میںجاری کئے گئے۔اسی طرح رقومات جمع کرنے میں بھی اضافہ ہوا ہے اور جموں میں دسمبر2021میں75لاکھ روپے اور سرینگر میں50لاکھ روپے جمع کئے گئے۔یہ ایک مثب

پریس کلب عمارت کی الاٹمنٹ کی منسوخی غیرجمہوری:سوز

سرینگر//سابق مرکزی وزیرپروفسیر سیف الدین سوز نے انتظامیہ سے تاکید کی ہے کہ وہ کشمیرپریس کلب کی عمارت چھیننے کے حکم کو واپس لیں کیوں کہ اس سے انتظامیہ کو کوئی فائدہ نہیں ہوگابلکہ صرف بدنامی حاصل ہوگی۔ ایک بیان میں سوز نے کہا، ’’ہندوستان کو دنیا میں ایک جمہوری ملک مانا جاتا ہے اور اس ملک کو جمہوریت کے طور تسلیم کرنے کے پیچھے ایک بنیادی وجہ یہ ہے کہ اس ملک میں میڈیا یعنی ذرایع ابلاغ کو اظہار خیال کرنے کی آزادی ہے۔ اس آزادی کو چھیننے کا کام جو بھی کرے گا ،وہ ہندوستان کی جمہوری نظام کے خلاف کام ہوگا‘‘۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ریاستی انتظامیہ نے پریس کلب کی الاٹمنٹ کو منسوخ کر کے نہ صرف غیر جمہوری کام کیا ہے بلکہ ہندوستان کی جمہوریت پر بھی داغ لگادیا ہے۔کیا ریاستی انتظامیہ یہ چاہتی ہے کہ کشمیر کا میڈیا انتظامیہ کے حق میں گیت گاتے رہیں؟۔اگر ہندوستان ایک جمہوری مل

انتظامیہ کی کارکردگی میں روزبہ روزتنزلی:نیشنل کانفرنس

سرینگر// نیشنل کانفرنس نے کہا ہے کہ گذشتہ4برسوں سے عوامی حکومت کی غیر موجودگی میں انتظامیہ کی کارکردگی میں ہر گزرتے دن کیساتھ تنزلی آتی جارہی ہے ،جس کی وجہ سے یہاں کا ہر ایک شعبہ بری طرح متاثر ہوا ہے، لیکن ملک اور دنیا کو دکھانے کیلئے گُڈ گورننس کے دعوے کئے جارہے ہیں اور بارے میں تقریبات کا انعقاد کیا جارہاہے۔  پارٹی ترجمان عمران نبی ڈار نے کہا کہ انتظامیہ صرف ذرائع ابلاغ میں دیکھنے کو ملتی ہے اور انتظامیہ کی کارروائی صرف کاغذی گھوڑے دوڑانے تک ہی محدود ہے جبکہ زمینی سطح پر عوام کا کوئی پُرسانِ حال نہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعمیر و ترقی کا کہیں نام و نشان نہیں اور لوگوں کی راحت کاری اب محض تصویریں کھنچواکر ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر مشتہر کرنے تک محدود ہوکر رہ گئی ہے جبکہ حقیقی معنوں میں عوام کی راحت رسانی کے گنے چُنے اقدامات ہی ہورہے ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ انتظامیہ کی بے حسی کی وجہ

ہندوارہ میں وائلڈ لائف محکمہ نے ریچھ پکڑلیا

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ میں برف باری سے قبل ہی جنگلی جانورو ں نے انسانی بستیو ں کا رخ کیا ہے اور اب ضلع کے متعدد علاقوں میں جنگلی جانورو ں کی مداخلت سے مقامی لوگ پریشانی میں مبتلا ہیں ۔ اس دوران وائلڈ لائف محکمہ نے ہفتہ کے روز ہندوارہ میں ایک ریچھ کو پکڑنے میں کامیابی حاصل کی جس کے نتیجے میں لوگو ں نے را حت کی سانس لی ۔سراج پورہ ہندوارہ کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ ایک ریچھ نے گزشتہ ایک ہفتہ سے علاقہ میں اودھم مچادی تھی جس کی وجہ سے مقامی آ بادی سخت پریشان تھی اور ریچھ کی موجود کی کی وجہ سے چلنے پھرنے میں خوف محسوس کر رہے تھے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ آ بادی میں ریچھ کی موجودگی کی اطلاع محکمہ وائلڈ لائف کو دی گئی جس کے بعد انہو ں نے ریچھ کو پکڑنے کے لئے ضرروری اقدامات کے تحت علاقہ میں جال بچھا دئے اور ہفتہ کے روز ایک پنجرہ بھی نصب کیا جس کے دوران ریچھ پنجرے میں پھنس گیا ۔محکمہ وائلڈ لا

ڈاکٹر درخشاںاندرابی نے جامع مسجد جموں کا دورہ کیا

سرینگر//مرکزی وزارت برائے اقلیتی امور کی چیئرپرسن اور بی جے پی کے قومی ایگزیکٹو ممبر ڈاکٹر درخشاں اندرابی نے جموں کے تالاب کھٹیکاں میں واقع مرکزی جامع مسجد کمپلیکس کا دورہ کیا اور وہاں وقف امداد سے جاری تعمیراتی عمل میں پیش رفت کا جائزہ لیا۔ ڈاکٹر اندرابی کے ساتھ جموں و کشمیر وقف کے چیف ایگزیکٹو افسر ڈاکٹر جہانگیر، جامع مسجد کے ایڈمنسٹریٹر مدثر وانی اور سینئر صحافی اور سماجی کارکن سہیل کاظمی بھی تھے۔ ڈاکٹر اندرابی نے جاری ترقیاتی کاموں کا معائنہ کیا اور جموں میں کمپلیکس کو قومی سطح کے مذہبی سیاحتی مرکز کے طور پر تیار کرنے کے لیے فنڈز کے انتظام اور مستقبل کے منصوبوں پر تبادلہ خیال کیا۔ سی ای او ڈاکٹر جہانگیر نے انہیں کام کی پیش رفت اور مجوزہ منصوبوں کو شروع کرنے کی ضروریات سے آگاہ کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر درخشاں اندرابی نے انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے فنڈز کی کمی ک

ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم کا ہدف

سرینگر//وادی کشمیر میں ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم کو گائوں گائوں پہنچانے کی خاطر ڈائریکٹر جنرل کی سربراہی میں افسران کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ منعقد ہوئی جس دوران اس اسکیم کے بارے میں سبھی اضلاع کے افسران کو رپورٹ پیش کرنے کے احکامات صادر کئے گئے۔ ڈائریکٹر جنرل نے اس موقع پر بتایا کہ ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم سے باغ مالکان کی کمائی دوگنی ہو جائے ۔ ڈائریکٹر جنرل ہارٹی کلچر اعجاز احمد بٹ کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ منعقد ہوئی جس میں سبھی اضلاع کے چیف ہاٹی کلچر افسر نے شرکت کی۔ میٹنگ کے دوران ڈائریکٹر جنرل نے ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم کے بارے میں افسران سے تبادلہ خیال کیا۔ انہوںنے کہاکہ اس اسکیم کو گائوں گائوں پہنچانے کی خاطر زمینی سطح پر اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ کے پاس ہائی ڈینسٹی درختوں کی کوئی کمی نہیں ہے اور متعلقہ افسران اس حوالے سے ٹارگیٹ کو وقت مقرر

کپوارہ میں کورونا متاثرین کی سہولیات کیلئے تمام انتظامات کئے گئے ہیں

کپوارہ//اشرف چراغ // کپوارہ میں بھی ہر گزرتے دن کے ساتھ کو وِڈ - 19 سے متاثرہ لوگو ں کو تعداد میں اضافہ ہورہا ہے تاہم گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ محکمہ صحت کپوارہ میں اس بیماری سے لڑنے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔ تاہم لوگوں کو احتیاط برتنی ہے اور انہیں محکمہ صحت کی جانب سے جاری ہدایت نامہ پر مکمل عمل کرناہوگا ۔ان باتو ں کا اظہار چیف میڈیکل آ فیسر کپوارہ ڈاکٹر بشیر احمد تیلی نے کیا ۔چیف میڈیکل آفیسر کا کہنا ہے کہ لوگوں کو ہر ممکن طبی سہولیات بہم پہنچانے کے لئے غیر معمولی انتظامات کئے گئے ہیں تاہم انہو ں نے لوگو ں سے اپیل کی ہے کہ وہ ماسک کا ہر حال میں استعمال کریں اور غیر ضروری طور بھیڑ بھاڑ والی جگہو ں میںجانے سے پرہیز کریں اور ہر مقام پر دو گز کی دوری بنائیں رکھیں تاکہ اس عالمگیر وبا کی زنجیر کو تو ڑ دیا جائے گا ۔چیف میڈیکل آفیسر نے  مزید کہا کہ محکمہ صحت کی طبی ٹیموں کو

مزید خبریں

پردیش کانگریس صدرکا وزیراعلیٰ پنجاب کو مکتوب کشمیری طلاب کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے سرینگر//جموں کشمیرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدر غلام احمدمیر نے جمعہ کو پنجاب کے وزیراعلیٰ کوایک مکتوب روانہ کیا جس میں کشمیر ی طلاب جو پنجاب میں زیرتعلیم ہیں،کے تحفظ اور سلامتی کو یقینی بنانے پرزوردیا گیا۔میر نے کشمیری طلاب پر ایک ہجوم کی طرف سے وحشیانہ حملہ کرنے کی تحقیقات کرنے کا بھی مطالبہ کیااوراس میں ملوث افراد کے خلاف کڑی سے کڑی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔مکتوب میں غلام احمد میر نے پنجاب کے وزیراعلیٰ پر زوردیا کہ وہ موہالی میں کشمیری طلبہ پر کئے گئے حملے کے معاملے کوذاتی طور دیکھیں اورملزموں کے خلاف سخت کارروائی کریں۔میر نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے اس پر شدیدناراضگی کااظہار کیا۔     اسکندر پورہ میں چوروں نے 20بھیڑیں چُرالیں   ارشاد احمد   بڈ

تازہ ترین