جموں و کشمیر میں 1148 مثبت کورونا معاملات درج

جموں// جموں و کشمیر میں کورونا واٸرس کے ایک ہزار سے زاٸد کیسز رپورٹ کیے گیے ہیں۔    تفصیلات کے مطابق جموں و کشمیر آج 1ہزا 148 نئے مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ جموں ڈویژن سے 640 اور کشمیر سے 508 کوویڈ 19 کے مثبت معاملات سامنے آٸے ہیں۔   جموں ڈویژن سے 02 کووڈ اموات کی اطلاع ملی ہے۔

کشمیر میں اومیکرون کی دستک |8 مثبت معاملات رپورٹ

سری نگر// جموں و کشمیر میں کویڈ کے نٸے ویرینٹ اومی کرون کے8 مثبت ماملات درج کٸے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ضلع بارہ مولہ کے اوڑی علاقے میں حاملہ خاتون میں کورونا کے نئے ویرنٹ اومیکرون کی تشخیص ہوئی وہیں جی ایم سی اننت ناگ میں3 معاملات مثبت پاٸے گٸے ہیں، جموں میں 4 مثبت معاملات رپوٹ ہوٸے ہیں۔   سرکاری ذرائع نے بتایا کہ چند روز قبل خاتون کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد اُس کے سیمپل مزید جانچ کی خاطر دہلی لیبارٹری روانہ کئے گئے ۔   اُن کے مطابق منگل کے روز مذکورہ خاتون کی رپورٹ موصول ہوئی جس میں یہ پایا گیا کہ خاتون اومیکرون ویرنٹ کا شکار ہوئی ہے۔   انہوں نے کہاکہ مذکورہ خاتون کے سیمپل 20 دسمبر 2021 کے روز جانچ کی خاطر لیبارٹری روانہ کئے گئے اور منگل کے روز اُس کی رپورٹ موصول ہوئی ہے۔   اُن کے مطابق اومیکرون ویرنٹ میں مبتلا خاتون

ایڈونچر ٹورزم کو فروغ دینے کے لئے حکومت انتہائی متحرک:ڈائریکٹر ٹورزم کشمیر

  سری نگر// وادی کشمیر میں ایڈونچر سیاحت کو فروغ دینے کے لئے حکومت انتہائی متحرک و سرگرم ہے اور اس کے لئے نئے ٹیکنگ روٹس کی نشاندہی کی جا رہی ہے۔   محکمہ سیاحت کشمیر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر غلام نبی یتو نے یو این آئی کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم اب ایڈونچر ٹورزم کے لئے نئے ٹریکنگ روٹس کو کھول رہے ہیں۔   انہوں نے کہا: ’وادی کشمیر میں ایڈونچر ٹورزم کے فروغ کے لئے نئے ٹریکنگ روٹس کو کھولا جا رہا ہے جن کی پہلے نشاندہی نہیں ہوئی تھی تاکہ زیادہ سے زیادہ غیر ملکی سیاح یہاں آسکیں‘۔   ان کا کہنا تھا کہ مشہور زمانہ گلمرگ اور پہلگام کے علاوہ کشمیر میں گریز، توسہ میدان اور بنگس وادی ایڈونچر ٹورزم کی نئی جگہیں ہیں۔   موصوف ناظم سیاحت نے امید ظاہر کی کہ غیر ملکی سیاح ان نئےروٹس کی ٹریکنگ کرنا ضرور پسند کریں گے۔   ان

بانڈی پورہ میں 15 ملازمین کے کووِڈ19 ٹیسٹ مثبت | جموں و کشمیر بینک کی دو شاخیں بند

  بانڈی پورہ//شمالی کشمیر کے بانڈی پورہ ضلع میں حکام نے منگل کو جموں اور کشمیر بینک کی دو شاخوں کو عوامی لین دین کے لیے 15ملازمین کا کویڈ-19 کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد بند کر دیاگیا ہے۔   سرکاری عہدیدار نے بتایا کہ ضلع کے مین بازار میں مین برانچ سمیت جموں و کشمیر بینک کی دو برانچوں کو ملازمین کے کویڈ ٹیسٹ مثبت آنے عوامی لین دین کے لیے بند کر دیا گیا۔   ایک اہلکار نے بتایا، ’’جبکہ رابطہ کا پتہ چل رہا ہے، کچھ ملازمین کو قرنطینہ سے گزرنے کے لیے کہا گیا ہے‘‘۔   دریں اثنا، ضلع میںکویڈ-19کی تعداد منگل کو 63 فعال کیسوں کے ساتھ 10,223 تک پہنچ گئی۔  

پولیس افسر کو رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کرنے کا دعویٰ

  سری نگر// انٹی کورپشن بیورو(اے سی بی) کا کہنا ہے کہ اس کی ایک ٹیم نے ایک پولیس افسر کو ٹرک ڈرائیور سے رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں  گرفتار کیا ہے۔   بیورو نے اپنے ایک بیان میں تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ انٹی کورپشن بیورو کو اپنی ہلپ لائن سے ایک شکایت موصول ہوئی جس میں الزام لگایا گیا کہ پولیس اسٹیشن کپوارہ میں تعینات ایک اسسٹننٹ سب انسپکٹر ایک ٹرک ڈرائیور سے گاڑی اور اس کے دستاویزات، جن کو پولیس نے ایک حادثے کے سلسلے میں ضبط کیا تھا، کو عدالت سے ریلیز کرانے کی خاطر ایک رپورٹ تیار کرنے کے لئے رشوت کا مطالبہ کر رہا ہے۔   بیان کے مطابق شکایت کنندہ کا کہنا تھا کہ اس کی ٹرک 29 نومبر 2021 کو ہیری کپوارہ میں ایک حادثے کا شکار ہوگئی جس کے بعد اس ضمن میں پولیس اسٹیشن کپوارہ میں ایک کیس درج کیا گیا۔   اے سی بی نے اپنے بیان میں کہا کہ تحقیق

وادی میں ٹھٹھرتی سردی سے لوگ بے حال، گلمرگ میں درجہ حرارت منفی 10.6ریکارڈ

  سری نگر//حالیہ بھاری بر باری کے بعد وادی کشمیر ٹھٹھرتی سردی کی لپیٹ میں ہے جس نے لوگوں کا جینا دو بھر کر کے رکھ دیا ہے۔   وادی کے مشہور سیاحتی مقامات گلمرگ اور پہلگام سرد ترین جگہیں رہیں جہاں کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی10.6 ڈگری سینٹی گریڈ اور منفی10.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔   ادھر محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے مطابق وادی میں 16 جنوری تک موسم مجموعی طور پر خشک رہنے کا امکان ہے۔   انہوں نے کہا کہ اس دوران اگرچہ دن کے درجہ حرارت میں بہتری واقع ہوگی تاہم رات کے کم سے کم درجہ حرارت میں بتدریج گراوٹ درج ہونے کا ہی امکان ہے۔   گرمائی دارلحکومت سری نگر میں کم سے کم درجہ حرارت0.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جہاں گذشتہ شب بھی یہی درجہ حرارت ریکارڈ ہوا تھا۔   سری نگر میں 18دسمبر کو رواں موسم کی سرد ترین

کپواڑہ جیل میں 33 سالہ قیدی کی موت

  سری نگر//شمالی کشمیر کے بارہمولہ ضلع کے سوپور کے سیاد پورہ علاقے کا ایک 33 سالہ ملزم، جو اپنے بھائی کے ساتھ ڈسٹرکٹ جیل کپواڑہ میں بند تھا، منگل کو آدھی رات کے قریب فوت ہو گیا۔   تفصیلات کے مطابق ملزم خورشید احمد وانی ولد غلام محمد وانی ساکن سیاد پورہ سوپور، جو آئی پی سی کے تحت درج ایک کیس ایف آئی آر نمبر 52/2021 سیکشن 363, 498 اور 109 کے تحت 5 اکتوبر 2021 سے جیل میں بند تھا۔    ذرائع نے بتایا کہ خورشید کی طبیعت کافی عرصے سے ٹھیک نہیں تھی اور گزشتہ نصف شب کے قریب ان کے بھائی جو کہ اسی کیس کے سلسلے میں جیل میں بند ہیں، نے وہاں تعینات پولیس اہلکاروں کو مطلع کیا جس کے بعد ہسپتال کے محکمہ صحت کے اہلکار وہاں پہنچ گئے۔   جیل حکام نے اسے سب ضلع ہسپتال کپواڑہ منتقل کیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔    واضح رہے کہ

بارہمولہ کے متعدد دیہات کی سڑکیں ہنوز بند | لوگو ںکو گوناگوں مشکلات کا سامنا ، ضلع انتظامیہ سے مداخلت کی اپیل

 بارہمولہ//حالیہ برفباری کے بعدضلع بارہمولہ کے متعدد دیہات مسلسل تحصیل ہیڈکواٹر سے منقطع ہیں جس کے نتیجے میں مقامی لوگوں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ نارواو بارہمولہ کے پالہ دھجی اور گوری وان دیہات کے لوگوں نے بتایا کہ گزشتہ کئی روز سے وہ تحصیل ہیڈکواٹر سے منقطع ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ان دیہات میں ایک سے دوفٹ برف جمع ہے جسکے نتیجے میں لوگوں کو کھانے پینے کے سامان لے جانے میں کا دقتوں کا سامنا ہے ۔ ادھر سرحدی قصبہ اوڑی کے نصف درجن سے زائد دیہات بشمول چرنڈہ ، بٹ گرہ، ہتھ لونگہ، دانہ موہتھل، زمور پٹن، بنالی، سلاسن، چوٹالی اور برنیٹ ابھی بھی تحصیل ہیڈ کوارٹر سے کٹے ہوئے ہیںجس کے نتیجے میں مقامی آبادی کو طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ چرنڈہ کے ایک سماجی کارکن لال حسین کوہلی نے بتایا کہ حالیہ برفباری کی وجہ سے گزشتہ چار روز سے تھاجل سے چرنڈہ سڑک رابطہ بند پڑا

شوپیان میںبرف ہٹانے کا کام مکمل، معمولات بحال

 شوپیان//میونسپل کونسل شوپیان کے ایگزیکٹیو افسر ملک سہیل نے بتایا کہ انہوں نے برف ہٹانے کا کام پہلے ہی روز شروع کیا اور پیر کی شام تک گلی کوچوں سے برف ہٹانے کا کام تقریباًمکمل کیا گیا۔ ضلع انتظامیہ شوپیان کی طرف سے پہلے ہی روز سے ضلع کی اہم سڑکوں سے برف ہٹانے کا کام شروع کیا گیا تاہم جاری برفباری کی وجہ سے سبھی محکموں کو کام کرنے میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا۔محکمہ پی ڈی ڈی نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پہلے ہی روز قصبہ سمیت کئی علاقوں میں بجلی کی سپلائی کو بحال کیا وہیں میونسپل کونسل شوپیان نے بھی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سڑکوں و گلی کوچوں سے برف ہٹانے کا کام شروع کیا جس سے لوگوں کو کافی حد تک راحت ملی۔ ملک سہیل نے بتایا کہ انہوں نے مشنری اورعملہ کو کام پر لگا کر برف ہٹانے کا کام پہلے ہی روز شروع کیا ۔  

اخروٹ کے بوسیدہ درخت لوگوں کیلئے خطرہ | 3اضلاع میں حکام کی طرف سے کاٹنے کی اجازت

گاندربل//وادی کشمیر کے تین اضلاع میں حکام نے ایک ہفتے کے دوران ان اخروٹ کے درختوں کو کاٹنے کی اجازت دے دی ہے جو جان و مال کے لیے خطرہ ثابت ہوسکتے ہیں۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق جنوری کے پہلے ہفتے میں وسطی کشمیر کے اسسٹنٹ کمشنر نے کشمیر کے تین اضلاع گاندربل، کولگام اور شوپیاں میں تقریباً دو درجن سے زائد اخروٹ کے درختوں کو کاٹنے کی اجازت دی تھی۔سرکاری اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ ضلع شوپیاں میں حکام نے اخروٹ کے  بیس درختوں کو کاٹنے کی اجازت دی ہے جس کے بعد ضلع گاندربل اور کولگام میں بالترتیب اخروٹ کے درخت کاٹے جائیں گے۔اس سلسلے میں جاری حکومتی احکامات کے مطابق’جموں و کشمیر پریزرویشن آف سپیشل ٹریز ایکٹ، 1969 کے سیکشن 5 کی دفعات کے تحت، تحصیل سید پورہ بالا ضلع شوپیاں کے درخواست دہندگان کو اخروٹ کے بیس درخت کاٹنے کی اجازت دی گئی ہے جوجان و مال کے لیے خطرہ ہیں۔اسی طرح کے احکا

ٹنگمرگ میں بجلی محکمہ کے خلاف احتجاج | شیڈول کے مطابق برقی رو فراہم نہ کرنے کا الزام

ٹنگمرگ/ /سب ڈویژن ٹنگمرگ میں بجلی کی آنکھ مچولی کے خلاف صارفین نے ٹنگمرگ بازار میں خاموش احتجاج کرتے ہوئے شیڈول کے مطابق بجلی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ سب ڈویژن ٹنگمرگ میں محکمہ بجلی نے اپنے ہی شیڈول کو مذاق بناتے ہوئے صارفین کے مشکلات میں اضافہ کیا ہے۔مہاین،فیروزپورہ،چک فیروزپورہ،قاضی پورہ ،کٹہ پورہ، سولندہ،حاجی بل، وارہ پورہ، نملناراور باباریشی سے صارفین نے جمع ہوکر ٹنگمرگ بازار میں خاموش احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ انہیں شیڈول کے مطابق بجلی فراہم نہیں کی جارہی ہے۔احتجاجی صارفین نے شیڈول کے مطابق بجلی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔ ادھر ٹنگمرگ کے ڈیڑھ درجن سے زیادہ دیہات میں بجلی ٹرانسفارمر خراب ہونے سے لوگ بجلی سے محروم ہیں۔ اگرچہ محکمہ نے خراب شدہ ٹرانسفارمروں کو مرمت کی خاطر ورکشاپ لیا ہے تاہم ورکشاپ میں سست رفتار ی کی وجہ سے کئی دیہات میں بجلی کی عدم دستیابی

جموں کشمیر میں71روز بعد 4اموات

سرینگر // جموں و کشمیر میں7ماہ بعد روزانہ کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 700سے پار ہوگئی ہے۔پچھلے 24گھنٹوں کے دوران جموں و کشمیر میں کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے 46ہزار 857ٹیسٹ کئے گئے جن میں 52مسافروں سمیت مزید 706 افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ جموں و کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 3 لاکھ 45 ہزار 358تک پہنچ گئی ہے۔ اس دوران جموں و کشمیر میں 71دنوں کے بعد کورونا وائرس سے ہونے والی اموات میں بھی اضافہ دیکھنے کو ملا ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران جموں و کشمیرمیں مزید 4افراد فوت ہوگئے جن میں 3جموں جبکہ ایک کشمیر میں فوت ہوا ہے۔ جموں و کشمیر میں متوفین کی مجموعی تعداد 4544ہوگئی ہے۔ اس سے قبل یکم نومبر 2021کو جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے 4افراد فوت ہوگئے تھے۔ جموں و کشمیر میں مثبت قرار دئے گئے 706افراد میں جموں میں 345جبکہ کشمیر میں 361افراد کی رپورٹیں مثبت قرار دی گئی

برف باری کے بعد میونسپل اداروںنے اچھا کام کیا:کارڈی نیشن کمیٹی

سوپور//حالیہ برف باری کے دوران سڑکوں اورگلی کوچوںسے برف ہٹانے میں میونسپل کونسلوں اورکمیٹیوں کی کارروائیاں قابل سراہنا قرار دیتے ہوئے میونسپل اداروں کے سربراہوں نے کہا ہے کہ برف باری کے بعدلوگوںکوراحت پہنچانے میں میونسپل کونسلوں اورکمیٹیوں نے جو بروقت کارروائیاں عملمیں لائیں ،اس کاسہرا ڈائریکٹر اربن لوکل باڈیز کشمیرکوجاتاہے ۔کارڈی نیشن کمیٹی اور میونسپل اداروں کے صدورنے ایک مشترکہ بیان میں کہاکہ ڈائریکٹرموصوفہ نے کنٹرول روم قائم کرکے میونسپل اداروں کومتحرک کیا۔ انہوںنے مزیدکہاکہ ڈائریکٹر اربن کل باڈیز کشمیر نے میونسپل صدور کے ساتھ قریبی تال میل رکھ کرا س بات کویقینی بنایاکہ بازاروں اوراندرونی سڑکوں کے ساتھ ساتھ گلی کوچوں سے فوری طورپربرف ہٹائی جائے تاکہ عوام کوکسی بھی قسم کی دشواری یاتکلیف کاسامنا نہ کرناپڑے ۔بیان کے مطابق ڈائریکٹر موصوفہ کی رہنمائی میں تمام میونسپل ادارے متحرک رہے اور

سرحدی علاقے چھٹے روز بھی منقطع | طبی نظام ٹھپ ،مریض درماندہ،چاپرسروس کی بحالی کا مطالبہ

سرینگر // کٹھن موسمی صورتحال کے نتیجے میںکشمیر کے سرحدی علاقوں کے مکینوں کی پریشانیوں میں اضافہ ہوا ہے اور ان علاقوں کی سڑکیں حالیہ برف باری کے بعد گذشتہ 6روز سے بند پڑی ہیں جس کے نتیجے میں ان علاقوں کے سینکڑوں مسافر جن میں مریض بھی شامل ہیں ،درماندہ ہیں۔ ایسے لوگوں نے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ان علاقوں کیلئے سرما کے دوران چاپر سروس کا بندوبست کیا جائے تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔سرحدی تحصیل کرناہ کے سب ضلع ہسپتال میں ڈاکٹروں کی عدم موجودگی کی وجہ سے مریضوں کو سرینگر منتقل کیا جا رہا ہے اگرچہ گزشتہ روز تین مریضوں کو چاپر کے ذریعے سب ضلع ہسپتال سے کپواڑہ منتقل کیا گیا ،وہیں ابھی بھی 6مریض ہسپتال میں زیر علاج ہیں جنہیں سرینگر منتقل کیا جانا انتہائی ضروری ہے ۔ہسپتال میں موجود ایک ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ وہ اپنی طرف سے مریضوں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کر رہے ہیں ،لیکن ان کو سرینگ

گارڈگنڈ اننت ناگ میں سنسنی | نوجوان کی درخت سے لٹکتی لاش پائی گئی

اننت ناگ //اننت ناگ میں ایک نوجوان کی لاش درخت سے لٹکتی ہوئی پائی گئی۔ گارڈ گنڈ علاقے میں پیر کے روز نوجوان کی لاش کو ایک درخت کے ساتھ لٹکتے ہوئے پایا گیا۔متوفی نوجوان کی شناخت سجاد احمد ڈار ولد فیاض احمد ڈار ساکن میر گنڈ کھنہ بل کے بطور ہوئی ہے۔نوجوان اتوار کی شام گھر سے کسی کام کے سلسلے میں نکلا تھا جس کے بعد وہ لاپتہ ہوگیا ۔پولیس نے نعش کو تحویل میں لے کر قانونی لوازمات پوراکرنے کے بعد ورثا کے حوالے کی۔پولیس معاملہ کی چھان بین کر رہی ہے۔    

مزید خبریں

پولیس اہلکاروں کے پسماندگان  | ڈی جی پی نے 1کروڑروپے کی مالی مددمنظور کی جموں//فوت ہوئے پولیس اہلکاروں کے قانونی ورثاء کی مالی امداد کو جاری رکھتے ہوئے پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے 94لاکھ روپے کی خصوصی بہبودی امداد  اور5.4لاکھ روپے کی بہبودی امداد مارے گئے پولیس اہلکاروں اور ایس پی اوز کے پسماندگان کے حق میں منظور کی۔ایک حکم کے مطابق 22لاکھ روپے فی کس کی خصوصی بہبودی امداداسسٹنٹ سب انسپکٹرغلام حسن ، کانسٹیبل شفیق احمد، رمیزاحمدجوگزشتہ ماہ زیون میں مارے گئے،کے پسماندگان کے حق میں منظور کی۔ 22لاکھ روپے کی خصوصی امداد فالورنیازاحمدشاہ کے پسماندگان کے حق میں بھی منظور کی گئی جبکہ ایس پی اواوجن سنگھ کے پسماندگان کے حق میںچھ لاکھ روپے کی امداد منطور کی گئی۔اسی طرح مارے گئے دس پولیس اہلکاروں کے والدین کے حق میں بھی پچاس ہزارروپے منظور کئے گئے تاکہ وہ اپنا فوری خرچہ چلاسکے۔اسی طرح

تازہ ترین