تازہ ترین

کھڑی بانہال کا مرکزی بازار مکمل طور خاکستر

بانہال // بانہال کی تحصیل کھڑی میں آگ کی ایک ہولناک واردات میں آڑپنچلہ مارکیٹ میں تین منزلہ رہائشی مکان ، شاپنگ کمپلیکس اور سرکاری راشن سٹور سمیت 28 دکانیں کروڑوں روپے کی مالیت کے مال و اسباب سمیت جل کر راکھ ہوگئے۔ فائر سروس سٹیشن 16 کلومیٹر دور بانہال میں ہونے کی وجہ سے جب تک آگ بجھانے والا عملہ پہنچ پاتا، کھڑی کی مرکزی مارکیٹ آگ کے شعلوں کی نذر ہوکر راکھ بن چکی تھی۔ ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ آگ بجلی شارٹ سرکٹ کی وجہ سے لگی ۔بانہال سے16 کلومیٹر دور اور ناچلانہ کے مقام پر جموں سرینگر شاہراہ سے 5 کلومیٹر دور کھڑی تحصیل ہیڈکوارٹر میں فائر اینڈ ایمر جنسی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے  مقامی لوگوں نے رضاکارانہ طور پر آگ بجھانے کی ناکام کوشش کی جس کے دوران کئی لوگ زخمی بھی ہوئے۔مقامی نوجوانوں نے جمعہ کی شب احتجاجی مظاہرے بھی کئے۔ لوگوں کا کہناہے کہ وہ کھڑی میں فائرسروس سہولی

شاہراہ پر ٹرک کھائی میں جاگرا، ڈرائیور ہلاک

رام بن//بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب جموں سرینگر قومی شاہراہ پر پیڑا کے مقام پرایک گاڑی حادثہ کاشکار ہوگئی جس کے نتیجہ میں اس کاڈرائیور ہلاک ہوگیا جس کی ابھی تک شناخت نہیں ہوسکی ہے۔حادثے میں ڈرائیور کے ساتھ اس کا ہیلپر زخمی ہواہے۔اسے نازک حالت میںضلع ہسپتال سے گورنمنٹ میڈیکل کالج وہسپتال جموں منتقل کردیاگیاہے۔پولیس نے بتایا کہ مقامی لوگوں نے اطلاع دی کہ ایک ٹرک بدھ اور جمعرات کی درمیانی رات کو شاہراہ پر پیڑا کے قریب گہری کھائی میں گرگیاتھا جس کے بعد پولیس موقعہ پر پہنچی اوراس نے ایک نعش کو پایا،جس کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔اس دوران پنکج کمار ولد سریندر کمار ساکن پنجاب کو زخمی حالت میں ہسپتا ل منتقل کیا۔ایس ایچ او چندرکوٹ وجے کوتوال نے بتایاکہ نعش کی شناخت کی جارہی ہے اور اس سلسلے میں گاڑی کے مالک سے بھی رابطہ کیاجارہاہے۔

شیطان نالہ بانہال میں ٹرک کھائی میں گرگیا،2زخمی

بانہال//سری نگر جموں شاہراہ پر ایک ٹریفک حادثے میں دوافرادزخمی ہوگئے جنہیں فوری طور بانہال اسپتال پہنچایا گیا جہاں سے شدیدزخمی ایک کو گورنمنٹ میڈیکل کالج اننت ناگ منتقل کیا گیا۔اطلاعات کے مطابق اتوار کی صبح جموں جانے والا ایک ٹرک زیر نمبربانہال سے بارہ کلومیٹر دورشیطان نالہ کے قریب سڑک سے لڑھک کر تین سوفٹ گہری کھائی میں جاگرا۔حادثے کی شدت سے ٹرک ٹکڑے ٹکڑے ہوگیااور اس میں سوار دوافراد زخمی ہوگئے ۔حادثے کی خبر سنتے ہی جواہر ٹنل اورٹھٹھار سے بانہال پولیس اورنوگام سے نوگام والنٹیئرزکے رضاکر بچائو کارروائیوں کے لئے جائے واردات پر روانہ ہوئے۔انہوں نے حادثے کی جگہ سے سخت مشقت کے بعددونوں زخمیوں کو نکالا۔حادثے میں زخمی ڈرائیور جگتارسنگھ اور معاون ڈرائیورہرویندر سنگھ ساکنان فتح گڑھ صاحب پنجاب کوایمرجنسی اسپتال بانہال منتقل کیاگیا جہاں سے ڈاکٹروں نے شدیدزخمی ہرویندرسنگھ کو گورنمنٹ میڈیکل کالج ان

کشتواڑ میں21پولیس اہلکار مثبت

کشتواڑ//جمعہ کو ریپڈ سمپلنگ کے دوران 21پولیس اہلکاروں کے نمونے مثبت پائے گئے جس کے بعد ایس ایس پی دفتر کو سینی ٹائزیشن کیلئے دور روز کیلئے بند کردیا گیاہے۔ ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ جمعہ کو محکمہ صحت کے اہلکاروں نے ایس ایس پی دفتر میں کورونا کے نمونے حاصل کئے اور انکی ریپڈ سپملنگ کی گئی جس دوران دفتر میں تعینات  100کے قریب پولیس اہلکاروں کے نمونے حاصل کئے گئے جن میں سے 21کے نمونیمثبت پائے گئے۔اس کے بعد متاثرہ اہلکاروں کو آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ دفتر سینی ٹائزیشن کیلئے دوروز تک بندرہے گااوردیگر اہلکاروں کو احتیاطی اقدامات کرنے تاکید کی گئی ہے۔جن افراد کے نمونے مثبت آئے ہیں ان میں کسی بھی شخص کو کھانسی، بخار یا زکام کی کوئی شکایت نہیں تھی جس سے زیادہ ہی تشویش پائی جارہی ہے۔  

پینے کے پانی کی قلت

کشتواڑ//قصبہ کشتواڑ کے وارڈنمبر 4و دھوبی محلہ میں پانی کی عدم دستیابی سے عوام کوسخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مقامی مردو زن نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ انہیں پچھلے دس روز سے پانی کی شدید قلت ہے جسے وہ پانی کی بوند کو ترس رہے ہیں۔خواتین نے میڈیا کو بتایا کہ ہ پانی خرید کر لاتے ہیں جبکہ محکمہ جل شکتی ان سے مفت میں فیس وصول کررہاہے اور وہ ٹینکر منگوانے پر مجبور ہیں۔ان کاکہناتھاکہ تعمیری کام کے دوران پانی کی پایپیں ٹوٹ گء ہیں اور گندہ پانی انکے ٹینکوں میں چلاجاتاہے اور وہ اسے ہی پی رہے ہیں جس میں مٹی اور دیگر گندگی مل جاتی ہے ان کاکہناتھاکہ اگرچہ محکمہ کے ملازمین کو بتایاجاتا ہے لیکن وہ بہانے بازی کرتے ہیں اور سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیاجارہا۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں اس وقت وبائی بیماری پھیلی ہوئی ہے اور انتظامیہ ہر ممکنہ سہولت کی فراہمی کی باتیں کررہی ہے لیکن زمینی سطح پر سبھی دعو

جموں سرینگر شاہراہ 10گھنٹے بعد بحال

بانہال// جموں سرینگر شاہراہ پر شیر بی بی کے علاقے میں جمعرات کی دوپہر بعدپتھر گر آئے اور یہ سلسلہ 10گھنٹے تک جاری رہا۔ شیر بی بی کے علاقے میں جاری فورلین شاہراہ کے کام کے دوران بھاری پتھر شاہراہ پر گر آئے تاہم بعد میں ٹریفک کو قریب دس گھنٹے بعد بحال کر دیا گیا۔جمعرات کو وادی کشمیر سے مال اور مسافر بردار گاڑیوں کو مقررہ اوقات کے دوران قاضی گنڈ ذگ پار کرکے جموں کی طرف جانے کی اجازت تھی جبکہ دوپہر بعد فورسز کی گاڑیوں اور ٹرالروں کو وادی کی طرف چھوڑ دیا گیا۔ تین بجے کے بعد ادہمپور سے وادی کشمیر کی طرف جانے والی گاڑیوں کو چھوڑ دیا گیا۔    

پرانے ضلع ڈوڈہ کو پہاڑی درجہ دیاجائے :نیشنل کانفرنس

بانہال//نیشنل کانفرنس ضلع رام بن نے پرانے ضلع ڈوڈہ کو پہاڑی درجہ دینے کی مانگ کی ہے۔پارٹی کے لیڈران نے کہا کہ اس خطے کے لوگ دور افتادہ علاقوں میں بستے ہیں جو پہاڑی درجہ کے مستحق ہیں۔کمیونٹی ہال میں یک روزہ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے این سی لیڈران نے کہا’’ان علاقوں کے مکین جن میں اکثریت مقامی بولی بولتی ہے جس میں پوگلی، سراجی ، بھدرواہی وکشتواڑی بولیاں شامل ہیں، کو پہاڑی زبانوں کے دائرہ کار میں لایا جائے اور انہیں ریزرویشن کے فوائد فراہم کئے جائیں‘‘۔ضلع صدر سجاد شاہین نے متعدد سیاسی کارکنوں سمیت مختلف پارٹیوں کے 2 منتخب پنچوں بشمول بانہال کے علاقے پوگل پرستان کے نوجوانوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے نوجوانوں کو تبدیلی کا حصہ بننے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ جموں وکشمیر ایک مشکل دور سے گزر رہاہے جہاں ایک طرف نوجوانوں کو پشت بہ دیوار لگایاجارہاہے وہیں دوسری طرف لوگوں کی سیاسی ،

جموں سرینگر شاہراہ کی خراب حالت پر لوگوں کا احتجاج

رام بن//جمعرات کو رام بن میں نجی تعمیراتی کمپنی ،ضلع انتظامیہ اور نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا کے خلاف جموں سرینگر شاہراہ پر مظاہرے ہوئے ۔ضلع رام بن کے متعدد مظاہرین مزدوروں ، دکانداروں اور ضلع کانگریس کمیٹی کے ممبروں نے الزام عائد کیا کہ نجی ٹھیکیدار اور ذیلی ٹھیکیدار ضلع میں لاک ڈائون مدت کے دوران ماحولیاتی قوانین کی ہدایات کی خلاف ورزی کررہے ہیں۔مظاہرین جو بس اسٹینڈ رام بن میں جمع تھے، نے الزام لگایا کہ نجی ٹھیکیدار کمپنی اور نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا پولوشن کنٹرول بورڈ اور نیشنل گرین ٹریبونل کے طے شدہ قواعد و ضوابط پر عمل پیرا ہونے کا دعویٰ کررہی ہے لیکن حقیقت میں صورتحال اس کے برعکس ہے۔ ناشری سے بانہال تک ٹھیکیدار کمپنی اور سب ٹھیکیدارکمپنیوں نے تباہی مچادی ہے اور دریائے چناب اور ندی نالوں میں ملبہ پھینکاجارہاہے۔مظاہرین نے کہاکہ شاہراہ کی حالت انتہائی خراب ہے اور اس کی مر

منریگا ملازمین کی ہڑتال بدستور جاری

کشتواڑ//گزشتہ 25روز سے ایم جی نریگا کے ملازمین کی ضلع کے مختلف حصوں میں اپنی مانگوں کو لیکر ہڑتال جاری ہے۔انہیںمقامی بلاک چیئرمین و سرپنچوں و پنچوں کی بھی حمایت مل رہی ہے۔اس ہڑتال کے سبب بلاک دفاتروں میں کام کاج مکمل ٹھپ ہے اور لوگوں کو سخت مشکلات سے دوچار ہونا پڑرہاہے۔ یہ ملازمین جاب پالیسی و مستقلی کی مانگ کررہے ہیں۔ سب ڈویڑن پاڈر میں احتجاج کررہے ملازمین کی حمایت میں بی ڈی سی چیئرمین و مقامی سرپنچ بھی شامل ہوئے جنہوں نے لیفٹنٹ گورنر سے انکے جائز مطالبات کو حل کرنے کی اپیل کی۔ مقامی بی ڈی سی چیئرمین نے کہا کہ محکمہ میں جی آر ایس،کمپیوٹر آپریٹر، پی او، ٹیکنیشن کافی عرصہ سے کام کررہے ہیں جو اپنے جائز مطالبات کاحل چاہتے ہیں لیکن ان کی مانگ کو پورا نہیں کیاجارہا۔ مقامی سرپنچ نے بتایا کہ وہ محنت و لگن سے کام کررہے ہیں اور انکے مطالبات بھی جائر ہیں، اگرمطالبات پورے نہ ہوئے تو بھی وہ انکی

ایل اے سی پر اپاچی ہیلی کاپٹروں کی دن بھر گردش | کشتواڑ میں خوف و ہراس،جنگی طیارے دن بھر گردش کرتے رہے

کشتواڑ//ایل اے سی پر ہند ۔چین تنائو کے بیچ دوسرے روز بھی بھارتی فوج کے جنگی طیارے دن بھر فضا میں گردش کرتے رہے جس سے کشتواڑ کے عوام میں خوف پیدا ہوا۔کل دوپہر کو بھارتی فوج کے اپاچی طیاروں کو پہلی بار دن میں دیکھا گیا جس سے مقامی لوگوں میں ہرطرف بحث شروع ہوگئی۔ اس سے قبل اس طرح جنگی طیاروں کو کبھی نہیں دیکھا گیا تھا۔دیر رات گئے گیارہ بجے دوبارہ قریب دو گھنٹے تک یہ طیارے فضا میں دیکھے گئے ، جس دوران طیاروں نے وہاں لینڈنگ بھی کی۔یہ  ہیلی پیڈ فوج کی زیرنگرانی میں ہے جس سے مقامی لوگوں میں تشویش پیدا ہوگئی۔منگل کی صبح پھر سے دو اپاچی طیارے فضا میں گردش کرتے پائے گئے جنہوں نیپوریضلع کے ساتھ ساتھ لداخ سے لگنے والے پاڈر علاقے تک بھی اڑان بھری تاہم فوج یا فضائیہ کے حکام سے اسکی تصدیق نہ ہوسکی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ایل اے سی پر ہند وچین تنائو کا نتیجہ میں فوج اس طرح کی مشق کررہی ہے جبکہ ضلع

رام بن میں ٹاٹا سومو کھائی میں جاگری | 22سالہ نوجوان ہلاک

بانہال // ضلع رام بن کی سڑکوں پر سڑک حادثوں کا سلسلہ جاری ہے اور تازہ  سڑک حادثے میں  شاہراہ پر سے واقع ماروگ۔ سلہ رابطہ پرٹاٹا سومو کے ایک حادثے میں ایک بائیس سالہ نوجوان لقمہ اجل بن گیا ہے۔ بتایا جاتاہے کہ لقمہ اجل بنے نوجوان نے گاڑی کے مالک فاروق احمد سے پوچھے بغیر ہی اتوار اور پیر کی درمیانی شب باگنہ ا?لسی گائوں میں اس کھڑی ٹاٹاسومو نمبر JK-14B 1900  کو کسی اور چابی سے نکال لیا اور دوسرے گائوں کی طرف جانے کے دوران یہ گاڑی رابطہ سڑک سے لڑھک کر قریب پانچ سو فٹ گہری کھائی میںگری۔اس حادثے کے نتیجہ میں اس گاڑی میں سوار بائیس سالہ راکیش سنگھ ولد کلدیپ سنگھ ساکن باگنا ا?لسی کی موت ہوگئی۔ ٹاٹا سومو ڈرائیور فاروق احمد ولد محمد رمضان ساکن ا?لسی باگنہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ انہوں نے پیر کی صبح جب گذشتہ رات اپنی جگہ پر کھڑی کی گئی ٹاٹا سومو کو موجود نہ پایا تو انہوں نے پولیس

جموں سرینگر شاہراہ دوبار بند ہونے کے بعدبحال

بانہال // جموں سرینگر قومی شاہراہ رام بن اور بانہال کے سیکٹر میں گذشتہ آدھی رات کو ہوئی بارشوں کے نیچے میں پنتھیال سمیت کئی مقامات پر پتھروں کے گر آنے کی و جہ سے گاڑیوں کی آمدورفت کئی گھنٹوں تک بند رہنے کے بعد پیر کی صبح سات بجے دوبارہ بحال کی گئی۔اس دوران جموں سے وادی کشمیر کی طرف ٹریفک کو نکالنے کا عمل شروع کیا گیا۔پیر کی دوپہر بعد بانہال سے آٹھ کلومیٹر پہلے شیر بی بی کے علاقے میں زیر تعمیر فورلین شاہراہ پر بھاری پتھر ایک پسی کی صورت مین شاہراہ پر گر آئے اور گاڑیوں کی آمدورفت ایک بار پھر کئی گھنٹوں کیلئے بند کردینا پڑی۔ تاہم بعد میں پیر کی شام پانچ بجے شیر بی بی کے مقام گر ا?ئے بھاری پتھروں کو فورلین شاہراہ کی تعمیراتی کمپنی کی مشینری کی مدد سے سڑک سے ہٹاکر شاہراہ پیر کی شام پانچ بجے سے ٹریفک کیلئے دوبارہ بحال کی گئی تھی اور جموں سے وادی کشمیر کی طرف ٹریفک بڑھ رہا تھا۔ ٹریفک حک

پتھر بھی گرتے رہے | گاڑیاں چلتی رہیں | شاہراہ پر بدترین ٹریفک جام

بانہال// سنیچر کی رات دس بجے سے جموں جانے والی گاڑیاں را م بن اور بانہال کے درمیان کئی مقامات پرجام کا شکار ہوئیں۔ ٹریفک جام اتوار کے روز بھی جاری رہا اور گاڑیاں سست رفتاری سے آگے بڑھیں۔متعدد مقامات پر زیر تعمیر فورلین شاہراہ کی خرابی ،جاری تعمیراتی کام اور گرتے پتھروں کی وجہ سے شاہراہ پر ٹریفک پچھلے دس روز سے بار بار متاثر ہوتا رہا۔تاہم دوپہر بعد سے اس میں کمی آئی۔ ٹریفک جام کی وجہ سے بانہال اور چندرکوٹ کے درمیان مسافر گاڑیوں کو پچاس کلومیٹر سے بھی کم مسافت طے کرنے کیلئے پانچ چھ گھنٹوں تک کا وقت لگا۔ کئی مسافروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ مخالف سمت سے فورسز کانوائے کے علاوہ ٹرکوں کی بڑی تعداد کو چھوڑا گیا تھا جو بانہال سے چندرکوٹ تک ٹریفک جام اور سست رفتاری کا باعث بنے۔ ڈی ایس پی ٹریفک رام بن اجے آنند نے کہا کہ وادی کشمیر سے جموں کی طرف ٹریفک جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ وادی کشمیر سے

کپوارہ میں نقلی ڈاکٹر گرفتار | دو ماہ سے کلنک چلا رہا تھا

کپوارہ//پولیس نے کپوارہ میں ایک پرائیویٹ کلنک پر پچھلے 2مہینے سے علاج و معالجہ کررہے ایک نقلی ڈاکٹر کو گرفتار کیا اور اس کے خلاف کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی ہے۔ مسعود احمد خان ساکن نٹی پورہ نامی مذکورہ شخص بنیادی طور پر ایک سرکاری ملازم بتایا جارہا ہے جس نے  علاج کے نام پرعام لوگوں سے رقومات بٹورنے کیلئے سب ضلع اسپتال کے نزدیک ہی ایک پرائیویٹ کلنک قائم کر کے ڈاکٹر کا بور ڈ لگا کر مریضوں کا علاج ومعالجہ کر رہا تھا۔کپوارہ پولیس کو ایک مصدقہ اطلاع ملی تھی کہ مذکورہ نقلی ڈاکٹر لوگو ں کو بیو قوف بنا کر ان سے فیس وصول کر کے انہیں دو دو ہاتھو ں سے لو ٹ رہا ہے، لہٰذاپولیس نے کلینک پر چھاپہ مارا اور سرسری پوچھ تاچھ کے بعد اسے حراست میں لیا۔پولیس کا کہنا ہے دوران تفتیش اس نے کہا کہ وہ بون اینڈ جوا ئنٹ اسپتال بر زلہ میں سینٹری انسپکٹر کی حیثیت سے کام کرتا ہے، تاہم اس بات کی تصدیق کرنا ب

ڈگڈول اور بانہال میں حادثے،3 افراد لقمۂ اجل2زخمی

بانہال// جموں سرینگر شاہراہ پر خونین سڑک حادثات جاری ہیں۔ سنیچر کی علی الصبح رام بن اور بانہال میں یکے دو حادثات میں تین افراد لقمہ اجل اور دو دیگر زخمی ہوئے ۔ پہلا حادثہ بانہال سے پانچ کلومیٹر پہلے چملواس کے نزدیک جموں سے سرینگر کی طرف آنے والے ایک ٹرک نمبر کو پیش آیا اور ٹرک سڑک سے ڈیڑھ سو فٹ نیچے کھائی میں گرا۔ٹرک میں سوار ایک نوجوان کی موت واقع ہوگئی جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے۔دونوں زخمیوں کو فوری طور ایمرجنسی ہسپتال بانہال منتقل کیا گیا۔ ٹرک کے نیچے پھنسے مہلوک نوجوان22سالہ باسط احمد ولد نذیر احمد ساکن اندروسہ پانپور ضلع پلوامہ کی  لاش کو  نکالنے میں کئی گھنٹوں کا وقت لگا۔ زخمیوں کی شناخت 19 سالہ  فرقان احمد بٹ ولد الطاف احمد بٹ  اور 25 سالہ  میسور احمد ولد بشیر احمد بٹ ساکنان اندروسہ پانپورکے طور ہوئی۔دوسرا حادثہ ڈگڈول کے علاقے میں مرغوں سے لدھی ایک ٹاٹا م

شاہراہ 10گھنٹے بند رہنے کے بعد بحال

بانہال // جموں سرینگر شاہراہ 10گھنٹے کے بعد بحال کی گئی۔ جمعرات کی شب سے ہورہی بارشوں کے نتیجے میں پنتھیال کے مقام پر گرتے پتھروں کی وجہ سے شاہراہ بند ہوئی جسے جمعہ کی دوپہر بعد دوبارہ بحال کیا گیا۔ تاہم پنتھیال میں وقفے وقفے سے پتھر گرتے رہے جس کی وجہ سے گاڑیوں کی آمد و رفت متاثر رہی۔شاہراہ بند ہونے کی وجہ سے جموں سے وادی کشمیر کی طرف چھوڑی گئی مال اور مسافر بردار گاڑیوں کو ناشری ٹنل کے آر پار مختلف مقامات پر روک دیا گیا تھاجبکہ وادی سے جموں کی طرف کسی بھی قسم کے ٹریفک کو چلنے کی اجازت نہیں تھی۔ ڈی ایس پی رام بن اجے آنند نے کشمیرعظمیٰ کو بتایا کہ گزشتہ شب سے ہورہی بارشوں کے نتیجے میں پنتھیال کے مقام پر پتھروں کے گر نے کا  سلسلہ جاری رہاجو کئی گھنٹوں تک جاری رہا اور ٹریفک جمعہ علی الصبح چار بجے سے بند کردینا پڑا ۔ انہوں نے کہا کہ جمعہ کی دوپہر بعد گرتے پتھروں میںٹھہرائو آیا او

ڈوڈہ ضلع میں ایک سکول سے عدم شناخت لاش برآمد

جموں// صوبہ جموں کے ضلع ڈوڈہ میں پولیس نے جمعرات کو ایک پرائیویٹ اسکول سے ایک عدم شناخت لاش برآمد کی ہے۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ ڈوڈہ کے ٹھاٹری علاقے میں ایک پرائیویٹ سکول میں ایک تیس سالہ جوان کی لاش برآمد کی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ لاش کی شناخت ابھی نہیں ہوپائی ہے۔  

چناب برد ہوئی مسافر بردار گاڑی کی تلاش تیسرے روز بھی جاری

بانہال// را م بن کے نزدیک پیر کے روز کم از کم آٹھ مسافروں سمیت چناب برد ہوئی گاڑی کے مسافروں کی تلاش کا سلسلہ بدھ کے روز بھی بغیر کسی کامیابی کے جاری رہا اور گاڑی ڈھونڈ نکالنے کیلئے نزدیکی بغلیہار ڈیم سے پانی کے اخراج کے تین میں سے دو گیٹ آج بند کر دیئے جائیںگے تاکہ پانی کی کم سطح میں گاڑی کو کھوج نکالا جاسکے۔ اس کیلئے فوجی غوطہ خوروں کی ایک پیرا کمانڈوز ٹیم دریا میں تلاش کارروائیوں کیلئے بدھ کو ہی مدد کیلئے رام بن پہنچ گئی تھی لیکن مزید کچھ ساز و سامان کی ضرورت کے پیش نظر جمعرات کی صبح تک غوطہ خوروں کے ذریعہ تلاش کارروائی ملتوی کی گئی۔ ایس ایچ او رام بن سنیل شرما نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ تلاش کارروائی کا سلسلہ پولیس ، ایس ڈی آر ایف اور کیو آر ٹی رضاکاروں کی مدد سے تیسرے روز بھی جاری رہا لیکن کوئی کامیابی حاصل نہیں ہو سکی جبکہ تلاش آپریشن کوچناب کے کناروں پر بہت نیچے تک توسیع دی

جموں سرینگر شاہراہ پر جگہ جگہ ٹریفک جام

بانہال// جموں سرینگر شاہراہ پر رام بن بانہال سیکٹر میں ٹریفک جام کا سلسلہ کئی مقامات پر بدھ کے روز تیسرے روز بھی جاری رہا تاہم اس دوران سست رفتارسے سینکڑوں ٹرک شام تک جموں کی طرف نکل گئے تھے جبکہ مخالف سمت سے بھی مسافر گاڑیوں نے کشمیر کا سفر کیا اور درجنوں گاڑیاں رام بن بانہال کے درمیان ٹریفک جام میں کم رفتار سے آگے بڑھ رہی تھیں۔ بدھ کی دوپہر سے رام بن اور بانہال کے درمیان ٹریفک جام کے مناظر دیکھنے کو ملے اور ٹریفک سست رفتار سے آگے بڑھتا رہا۔ ٹریفک حکام کے مطابق اس کی وجہ سڑک کی خراب حالت اور کئی روز تک شاہراہ کے بند ہونے کے بعد ٹریفک کا بھاری دبائو ہے۔  

بھدرواہ میں سی آر پی ایف اے ایس آئی نے خود کو گولی مارکرزندگی کا خاتمہ کیا

سرینگر//سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے ایک اسسٹنٹ سب انسپکٹر نے بدھ کوبھدرواہ میں اپنی سروس رائفل سے خود کو گولی مار کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ اطلاعات کے مطابق 52سالہ امرت بھاردواج کوٹلی میں قائم بٹالین ہیڈ کوارٹر پر شبانہ ڈیوٹی انجام دینے کے بعد لوٹا اور خود کو گولی ماری۔ اُسے سب ضلع اسپتال بھدرواہ پہنچایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا۔وہ ریاست آسام کا رہنے والا تھا۔ اس ضمن میں ایک کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ ایس پی بھدرواہ راج سنگھ گوریا نے اس واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ واقعہ آج صبح سات بجے پیش آیا۔