تازہ ترین

بانہال میں کووڈ کے بڑھتے معاملات،ڈپٹی کمشنر رام بن کا دورہ بانہال

بانہال // کووڈ انیس کی وبا سے متاثرین کی بڑھتی تعداد کے پیش نظر ڈپٹی کمشنر رام بن مسرت الاسلام نے اتوار کوبانہال کا دورہ کیا۔ ان کے ہمراہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر رام بن ہربنس شرما، ایس ڈی ایم بانہال ظہیر عباس اور ڈی ڈی سی کونسلر بانہال امتیاز احمد کھانڈے بھی تھے۔ڈپٹی کمشنر رام بن مسرت نے بانہال میں زیر تعمیر ہسپتال عمارت میں کووڈانیس مریضوں کیلئے کئے جارہے انتظامات کا جائزہ لیا اور بلاک میڈیکل افسر بانہال ڈاکٹر رابعیہ خان سے تفصیلی جانکاری لی۔ انہوں نے کسکوٹ اور عشر کے علاقوں کا بھی دورہ کیا۔ اس موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے مسرت الاسلام نے بتایا کہ ضلع رام بن میں سب سے زیادہ کووڈانیس مثبت کیسوں کی تعداد سب ڈویڑن بانہال سے آرہی ہے اور اس کیلئے یہاں زیر تعمیر ہسپتال عمارت میں پچاس بیڈوں کا انتظام کیا گیا ہے اور اس کیلئے پانی اور بجلی کا کنکشن مہیا کروایا گیا ہے۔ انہوں نے

کوروناکرفیو سے دوسرے روز بھی بازاروں میں سناٹا

کشتواڑ//کورونا کرفیو سے ایتوار کو بھی ضلع کے سبھی علاقوں میں بندشیں عاید رہیں جسکے سبب عام زندگی متاثر رہی جس دوران دوکانیں ، تجاراتی مراکز ،ٹرانسپورٹ مکمل بند رہااور لوگ کی بڑی آبادی گھروں میں ہی محدود ہوکررہ گئی جبکہ صرف ضروری خدمات کیلئے ہی لوگوں کو اجازت دی گئی۔ جہاں صبح سات بجے سے دس بجے تک سبزی، دودھ و گوشت کی دوکانیں کھلی رہیں تاہم بازاروں میں دوسرے روز بھی بڑی کم تعداد میں دوکانیں کھلیں جبکہ لوگوں کی آواجاہی بھی بہت کم دیکھی گئی۔ ادویات کی دوکانیں دن بھر کھلی رہیں جبکہ ضروری کاموں کیلئے ہی لوگوں نے بازار کارخ کیا۔ جگہ جگہ پولیس و پیرا ملٹری فورس کو تعینات کیا گیاتھا جو ہر آنے و جانے والی گاڑیوں کی پوچھ تاچھ کے بعد ہی انھیں جانے کی اجازت دے رہے تھے۔قصبہ کے ساتھ دیگر علاقہ جات جن میں چھاترو ، مغل میدان، پاڈر ، ٹھکرائی ، درابشالہ و بونجواہ میں  بھی کورونا کرفیو کا نفاد عمل

ڈوڈہ میں دوسرے روز بھی کورونا کرفیو نافذ رہا

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میں مسلسل دوسرے روز بھی کرونا کرفیو نافذ رہا جس دوران ایمرجنسی سروسز کو چھوڑ کر دیگر سبھی کاروباری ادارے بند رہے جبکہ ٹریفک نظام معطل رہا۔ اس دوران قصبہ ڈوڈہ کے ساتھ ساتھ، بھدرواہ ،ٹھاٹھری ،عسر و گندوہ بھلیسہ میں پولیس و سیکورٹی فورسز کی نفری بھی تعینات رہی۔سیول سوسائٹی نے کرونا کرفیو کے دوران نجی گاڑیوں کی آمدورفت بحال رہنے پر تشویش ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ مسافر بردار گاڑیاں اگر چہ بند رہتی ہیں لیکن نجی گاڑیوں کی آمدورفت متواتر جاری رہتی ہے اور انہیں کسی قسم کی پوچھ تاچھ نہیں ہوتی ہے۔ اس دوران متعدد سبزی فروشوں نے آج دوسرے روز بھی کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ کرونا کرفیو کے دوران انہیں مالی نقصان کاسامنا رہتا ہے۔جعفر حسین نامی ایک سبزی فروش نے کہا کہ سبزیاں و پھل مہنگے داموں میں خریدتے ہیں لیکن دن بھر دوکانیں بند رہنے سے بڑی تعداد میں سبزیاں و پھل خراب ہو رہے ہیں اور انہیں

جمو ں سر ینگرقومی شا ہراہ کو چا ر گلیا روں والی سڑک بنا نے کا کام جاری

رام بن //تمام اصولوں اور ضابطوں کو با لاے طاق رکھ کر نیشنل ہائی وے ا تھارٹی آف انڈیا کی جانب سے مو جو دہ جموں سرینگر قومی شاہراہ کو ضلع رام بن میں ناشری سے بانہال تک چارگلیا رو ں و الی شا ہراہ بنانے کے لئے متعلقہ محکمے اور ٹھیکیداروں کی ملی بھگت کی وجہ سے مقا می لوگوں کے مطا بق ماحو لیات کو سب مل کرناقابل تلافی نقصان سے دوچار کر رہے ہیں اور متعلقہ محکموں کے سر براہاں آنکھیں موندکر بیٹھے ہوئے ہیں۔ لوگوں کا الزام ہے کہ ہا ئی وے اٹھارٹی آ ف انڈ یا اور نجی ٹھیکہ دار دریا ئے چناب، بشلری نالہ اور دوسرے ندی نا لوں میں پہاڑوں سے کاٹا گیاملبہ مٹی اور پتھر بغیر کسی قانونی خوف کے د ر یا بر د کر رہے ہیں جس کی وجہ سے ضلع میں رام بن سے با نہال تک ما حو لیا ت کو نا قابل تلا فی نقصانان پہنچ رہا ہے جس کی وجہ سے آبی ذخا ئر، آبی حیا تیا ت، سبزہ زاروں،پیڑ پودوں کو بالکل نا پیدکر دیا گیا ہے اور حکام ک

چیرجی پل کی فوری مرمت کا مطالبہ

کشتواڑ//سیاسی و سماجی کارکنان جوگیندرن بنڈاری نے پکل ڈول ہائیڈروالیکٹرک پروجیکٹ کمپنی پر کارکنوں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالنے کے لئے افکان کمپنی پر سوال اٹھائے۔ انھوں نے بتایا کہ پکل ڈول مینجمنٹ کو انھوں نے کئی مرتبہ چیرجی پل کی مرمت کی مانگ کی لیکن پروجیکٹ  انتظامیہ نے اس کی کوئی پرواہ نہیں کی جس کے نتیجے میں چیرجی پل پر بڑا حادثہ ہوتے ہوتے ٹل گیااور آئندہ کسی بھی ناخوشگوار حادثے سے بچنے کیلئے انھوں نے انتظامیہ سے مانگ کی کہ چیرجی پل پر بھری ہوئی ڈمپرز اور ہیوی مشینریوں کو بند کیا جائے اور اس پل کی فوری مرمت کی جائے ۔ 

خطہ چناب میں سڑک حادثات کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ،ذمہ دار کون؟

ڈوڈہ //وادی چناب کے شہر و گام کی رابطہ سڑکوں پر سڑک حادثات کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے کہیں پر ڈرائیور کی لاپرواہی، تو کہیں خستہ حال سڑک اور اکثر و بیشتر حادثات حکام کی عدم توجہی کے سبب رونما ہوتے ہیں جس میں قیمتی جانوں کا ضیاع ہوتا ہے۔ بڑھتے ہوئے سڑک حادثات پر سیول سوسائٹی ممبران نے اپنی خاموشی توڑتے ہوئے موجودہ سرکار کے ساتھ ساتھ سابق حکومتوں کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ڈوڈہ کشتواڑ بٹوت قومی شاہراہ سمیت اندرونی دیہات کی پچاس فیصدی رابطہ سڑکیں حفاظتی دیواروں، نکاسی نظام اور نوے فیصدی شاہراہوں پر کرش بیرئر کا انتظام نہیں ہے۔ڈوڈہ کے نامور سماجی کارکن و قلمکار اشتیاق احمد دیو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ خطہ چناب میں سڑک حادثات کے لئے انتظامیہ، تعمیراتی ایجنسیاں، ڈرائیور و عام لوگ برابر کے شریک ہیں۔انہوں نے کہا کہ جہاں ان سڑکوں پر ٹریفک کی متواتر چیکنگ نہیں

مزید خبرں

کورونا سے ایک بزرگ خاتون کی موت کشتواڑمیں مزید علاقے مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار عاصف بٹ  کشتواڑ//کورونا وائرس سے ایک اور خاتون کی موت واقع ہوئی۔ تفصیلات کے مطابق کشتواڑ سے تعلق رکھنے والی خاتون جنکا ایک ہفتہ قبل کورونا مثبت آیا تھا جسکے بعد انکی صحت مزید بگڑگئی تھی اور انھیں گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں منتقل کیا گیا تھا جہاں آج صبح انکی موت واقع ہوئی۔ جسکے بعد انکی تدفین کیلئے انھیں کشتواڑ لایا گیا اور دیرشام انکی آخری رسومات کو ایس او پی کے تحت انجام دیا گیا۔وہی کورونا وائرس کے مزید بڑھتے ہوے معاملات کے چلتے انتظامیہ نے قصبہ کے مزید کچھ علاقوں کو مائیکرو کنٹینمنٹ زون قراد دیا ہے۔ قصبہ کے ہیڑیال ، تند و پولیس لائن کے کچھ علاقوں کو مائیکرو کنٹینمنٹ زون قراد دیا گیا۔ ضلع ترقیاتی کمشنر کی جانب سے جاری کئے گئے حکمنامے کے مطابق گرامین بنک ہیڑیال سے فشریز دفتر بن آستان تک جب

شاہراہ پر پسی گر آئی،6گھنٹے تک ٹریفک بند

 بانہال //شاہراہ پر پسی گر آنے سے 6گھنٹے تک گاڑیوں کی آمد و رفت بند رہی جس کے بعد سینکڑوں مال اور مسافر بردار گاڑیاں کئی کئی گھنٹوں تک ٹریفک جام میں پھنسی رہیں۔ گزشتہ رات ماروگ کے علاقے میں ایک پسی گر آئی تھی جس کی وجہ سے ڈگڈول ، رامسو اور بانہال کے درمیان ٹریفک جام کا یہ سلسلہ ہفتے کی صبح سے شام تک شدت کے ساتھ جاری رہا۔ ٹریفک کنٹرول یونٹ رام بن نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ رام بن کے ماروگ علاقے میں گزشتہ رات ایک پسی گر آئی تھی جس کی وجہ سے گاڑیوں کی آمدورفت کم از کم چھ گھنٹے تک بند رہی اور بھاری ٹریفک پسی کے دونوں طرف جمع رہا۔ انہوں نے کہا کہ ٹریفک جام پر قابو پایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتوار کے روز موسم کی بہتری کی صورت میں دربار مو ملازمین اور مسافر بردار گاڑیوں کو وادی کشمیر کی طرف آنے کی اجازت دی جائے گی۔ اس دوران سہ پہر بعد سرینگر سے جموں جانے والا ایک ٹرک ناچلانہ اور

تیسرے ہفتے بھی کورونا کرفیو سے عام زندگی مفلوج

 کشتواڑ//ضلع کشتواڑ میں کورونا وائرس کے معاملات پر قابو پانے کیلئے انتظامیہ کی طرف سے لگائے گئے کورونا کرفیو س تیسرے ہفتہ بھی عام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی جسکے سبب لوگ گھروں میں ہی محدود ہوکر رہ گئے۔ جمعہ کی شام سات بجے لگے کورونا کرفیو کا اثر سنیچر کو بھی دیکھنے کو ملا۔جس دوران دوکانیں ، تجاراتی مراکز ،ٹرانسپورٹ مکمل بند رہااور لوگ گھروں میں ہی محدود ہوکررہ گئے جبکہ صرف ضروری خدمات کیلئے ہی لوگ باہرنکلے۔ جہاں صبح سات بجے سے دس بجے تک سبزی، دودھ و گوشت کی دوکانوں کو کھولنے کی اجازت تھی تاہم بازاروں میں بڑی کم تعداد میں دوکانیں کھلی جبکہ لوگوں کی آواجاہی بھی بہت کم دیکھی گئی۔ ادویات کی دوکانیں دن بھر کھلی رہیں جبکہ ضروری کاموں کیلئے ہی لوگوں نے رخ کیا۔ وہی جگہ جگہ پولیس و پیرا ملٹری فورس کو تعینات کیا گیاتھا جو ہر آنے و جانے والی گاڑیوں کی پوچھ تاچھ کے بعد ہی انھیں جانے کی اجازت د

رام بن ہسپتال میں کووڈمثبت حاملہ خاتون کی زچگی

بانہال// ضلع ہسپتال رام بن میں داخل کی گئی ایک حاملہ خاتون کا کووڈ ٹیسٹ مثبت آئے کے بعد اسے آپریشن کے زریعے ڈیلیوری کرائی گئی ہے اور بچہ اور زچہ صحتمند ہیں۔ ڈیلیوری کے بعد ڈاکٹروں نے نوزائیدہ بچے کا بھی (آر اے ٹی) ٹیسٹ کرایا جو منفی آیا ہے۔ مثبت آئی حاملہ خاتون کا یہ اوپریشن ڈاکٹر عصمت بشیر رونیال اور ان کی ٹیم نے انجام دیا جس میں کووڈ کے رہنما اصولوں کی مکمل پاسداری کی گئی۔ خاتون مریضہ کی شناخت تسلیمہ بیگم عمر 24 سال زوجہ عاشق علی ساکنہ سنگلدان کے طور کی گئی ہے۔میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ضلع ہسپتال رامبن ڈاکٹر عبدالحمید زرگر نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ماں اور بچہ صحتیاب ہیں اور یہ اپنی نوعیت کا پہلا ایسا آپریشن ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوزائیدہ بچے کا (آر اے ٹی) ٹیسٹ کروایا گیا جو منفی آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آپریشن ماہر ڈاکٹر اور پیرا میڈیکل اسٹاف کی ٹیم کے ذریعہ کروایا گیا تھا جس میں کووڈ

ڈوڈہ میں کرونا کرفیو نافذ رہا

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میں آج کرونا کرفیو نافذ رہا جس دوران ایمرجنسی سروسز کو چھوڑ کر ٹریفک کی نقل و حرکت معطل رہی جبکہ بازار بھی بند رہے۔تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جمعہ کی شام جاری حکمنامہ کے تحت ہفتہ کے روز ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری ،عسر و گندوہ میں نجی کاروباری ادارے مکمل طور پر بند رہے جبکہ ٹریفک نظام معطل رہا۔اس دوران سبزی ،چکن ،گوشت ،بیکری و دودھ سپلائی کرنے والی دوکانیں دس بجے تک ومیڈیکل دوکانیں دن بھر کھلی رہیں۔انتظامیہ نے لوگوں سے ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کرنے کی اپیل کی ہے۔ ادھر متعدد سبزی فروشوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ دن بھر دوکانیں بند رہنے سے بڑی مقدار میں سبزیاں خراب ہو رہی ہیں اور انہیں مالی خسارے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے حکام سے اس فیصلے پر نظرثانی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔  

ضلع ترقیاتی کمشنر کشتواڑ کا دیر رات ہسپتال کا معائنہ کیا

کشتواڑ// ضلع کشتواڑ میں طبی سہولیات کی کارگردگی کا جائزہ لینے کے لئے ضلع ترقیاتی کمشنر کشتواڑ اشوک شرما نے جمعہ کی دیر رات کو ضلع ہسپتال کشتواڑ کا اچانک معائنہ کیا اور مریضوں کو فراہم کی جارہی سہولیات و انکی دیکھ بھال کا جائزہ لیا۔ اس کے علاوہ وہاں کرونا کے انتظامات کا بھی جائزہ لیا۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے دیگر وارڈوں کے علاوہ ایمرجنسی سیکشن کا بھی معائنہ کیا جس کے دوران انہوں نے مریضوں اور دیگر عملے سے بات چیت کی تاکہ انہیں فراہم کی جانے والی مختلف خدمات کے بارے میں پتہ چلے۔ عوامی اعتماد کو ترجیح قرار دیتے ہوئے ، انہوں نے متعلقہ افراد کو ہدایت کی کہ وہ لوگوں کو کی دیکھ بھال کی معیاری خدمات فراہم کریں۔ انہوں نے دیگر انتظامات کا بھی جایزہ لیا جن میں ضروری ادویات کی فراہمی ، ہیٹنگ ، لائٹنگ اور دیگر ضروریات شامل ہیں جس کے دوران انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ ان خدمات کی فراہمی کو لاز

محکمہ جل شکتی کا ماہ صیام میں عوام کو تحفہ

گول//گول میں ان ماہ مبارک ایام کے دوران بھی محکمہ جل شکتی لوگوں کو صاف پانی فراہم کرنے میں ناکام ہوا ہے اور آج عوام کو دوروز بعد گندہ پانی تحفہ کے طو رپر دیا گیا جس وجہ سے لوگ کافی پریشان ہوئے ۔ گزشتہ روز شدید بارشوں کے بعد سب ڈویژن کے صدر مقام و ملحقہ جات میں لوگوں کو پانی سپلائی نہیں کیا گیا اور آج جب پانی سپلائی کیا گیا تو گندہ پانی سپلائی ہوا جو نا قابل استعمال تھا ۔ گول کی عوام کو اس بات پر سخت خوشی محسوس ہوئی تھی کہ کئی سالوں کے بعد ہسپتال کے نزدیک بورویل کا کام مکمل ہوا اور ایک دن اس بور ویل کا پانی عوام کو دیا گیا لیکن اُس کے بعد اس بور ویل کو مکمل طور پر مقفل کیاگیا ۔ اس بور ویل کا پانی گول صدر مقام و ملحقہ جا ت کے عوام کو فراہم ہوتا ہے لیکن محکمہ کی آنا کانی کی وجہ سے عوام سب کچھ ہونے کے با وجود بھی پانی کی بوند بوند کے لئے ترس رہے ہیں ۔ وہیں محکمہ پر یہ بھی سوال اُٹھتا ہے

ڈوڈہ میں تیسرے روز بھی بارش و ژالہ باری

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میں سنیچردوپہر تک موسم سازگار رہنے کے بعد پھر سے بارش و ژالہ باری کا سلسلہ شروع ہوا جو دیر شام تک جاری رہا جس کے نتیجے میں درجہ حرارت میں نمایاں کمی واقع ہوئی اور سردی کی شدت میں اضافہ ہوا۔میدانی علاقوں میں تین روز سے جاری بارشوں و پہاڑوں پر تازہ برفباری سے معمولات زندگی متاثر ہوئی۔اس دوران رابطہ سڑکوں کی حالت مزید ناگفتہ ہو گئیں۔ بارشوں کے باعث ڈوڈہ، بھدرواہ و بھلیسہ و ٹھاٹھری کے کئی علاقوں میں پانی و بجلی نظام متاثر ہوا۔

مزید خبرں

کورونا کا قہر برقرار،کشتواڑ میں مزید2 افرد فوت قصبہ کے وسر، بھوپنگر و کلید مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار عاصف بٹ کشتواڑ//ضلع کشتواڑ میں کورونا وائرس سے مزید دو افراد کی موت واقع ہوئی ہے جسکے بعد کئی مقامات کو انتظامیہ نے مائیکرو کنٹینمنٹ زون قراددیا ہے۔ تفصیلات کے جمعہ کو گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں کشتواڑ سے تعلق رکھنے والی خاتون کی کورونا سے موت واقع ہوئی ۔وہیں شام کو کلید سے تعلق رکھنے والے بزرگ شخص کی ضلع ہسپتال میں کورونا سے موت واقع ہوئی جسکے بعد انتظامیہ نے وسر، کلید و بھوپ نگر کے علاقے کو مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار دیا ہے۔ضلع ترقیاتی کمشنر کی جانب سے جاری کے گے حکمنامے کے مطابق وسر ، بھپنگر کلید کے انٹری پوائنٹ پنٹتگام سے پی ڈی سی کالونی تک 300 افراد پر مشتمل آبادی کو مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار دیا گیاہے جبکہ اس علاقے سے کسی بھی شخص کو آنے یا جانے کی اجازت نہیں ہوگی او

کشتواڑ قصبے میں زنانہ پولیس کی کارروائی | خلاف ورزی کی مرتکب خواتین پر جرمانہ عائد کیا

کشتواڑ //کورونا وائرس کے پھیلائو کو روکنے کیلئے کشتواڑ پولیس نے کارروائی تیز کر دی ہے اور پولیس نے اس تعلق سے دفعہ 144نافظ کر کے پابندیاں عائد کی ہیں اور ساتھ میں لوگوں کو کورونا سے بچنے کیلئے جانکاری بھی دی جا رہی ہے ۔جمعہ کو کشتواڑ ضلع کی زنانہ پولیس نے پی ایس آئی ساکشی شرما کی سربراہی میں بازاروں اور مختلف علاقوں کا دورہ کیا جس دوران انہوں نے کورونا وائرس ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والی خواتین کے خلاف ضابطہ کے تحت کارروائی عمل میں لائی اور ان پر جرمانہ عائد کیا گیا ۔ایس ایس پی کشتواڑ شفقت حسین بٹ نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ کہ وہ ایس او پیز کی خلاف ورزی سے گریز کریں اور ساتھ میں ماسک کا استعمال اور سماجی دوریاں قائم رکھیں تاکہ مہلک بیماری کورونا وائرس کو مزید پھیلنے سے روکا جا سکے ۔انہوں نے لوگوں سے تعاون کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈائون کا نفاذ عمل میں لانے کا مقصد لوگوں کی زن

کشتواڑ میں منشیات فروخت کرنے والا شخص گرفتار

کشتواڑ // منشیات کے خلاف کارروائی جاری رکھتے ہوئے کشتواڑ پولیس نے جمعہ کو شکتی نگر علاقہ میں ایک منشیات فروش کو گرفتار کیا ہے جس کی طویل سے بھاری مقدار میں نشے اور کی چیزیں برآمد ہوئی ہیں ۔ڈی ایس پی ہیڈکواٹر کشتواڑ دیوندر سنگھ بندرال نے بتایا کہ پولیس کو منشیات کی خرید و فروخت کے حوالے سے اطلاع ملی تھی جس پر عمل کرتے ہوئے پولیس نے انسپکٹر عابد بخاری ایس ایچ او پولیس تھانہ  کشتواڑ کی سربراہی میں ایک خصوصی ٹیم تشکیل دی اور ٹیم نے شکتی نگر میں واقع منشیات فروش کی دکان پر تلاشی لی جس دوران منشیات فروش محمد اقبال ولد بشیر احمد ساکنہ کیشوان جو شکتی نگرکی گرفتاری عمل میں لائی ۔پولیس کے مطابق گرفتار کئے گے منشیات فروش سے تلاشی کے دوران  40 سٹرپس جن میں 300 نفسیاتی مادے کی 300 گولیاں، ٹراماڈول ٹیب 16 پٹی، نیگسوٹو  0.5  کی 6 پٹی، زاپز 0.25 کی 6 پٹی ، زاپز 0.5 کی 1 پٹی الزوپم

کشتواڑ میں سخت بندشیں عائد

 کشتواڑ //کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات سے نمٹنے کیلئے ضلع انتظامیہ کی طرف سے لگایا گیا کورونا کرفیو دوسرے ہفتے بھی جاری رہا۔ انتظامیہ کے مطابق جمعہ کی شام سات بجے سے لیکر سوموار صبح سات بجے تک کورونا کرفیو رہے گا، جس دوران ضرروی خدمات کو چھوڑ کر سبھی طرح کی سرگرمیوں پر پابندی رہے گی ،جبکہ لوگوں سے بلا جواز گھروں سے باہر نہ آنے کو کہا گیا ہے اور خلاف ورزی کرنے والوں پر سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ کرفیو کے دوران انتظامیہ کا ساتھ دیں اور گھروں میں رہیں ۔

لاکھوں روپے خرچ کرنے کے باوجود کھار پورہ ۔ رتن باس رابطہ سڑک 8برسوں سے زیر تعمیر

 بانہال // جموں سرینگر قومی شاہراہ پر واقع کھارپورہ - رتن باس رابطہ سڑک پر لاکھوں روپے کی رقومات خرچنے کے بعد بھی مکمل نہیں کی گئی ہے اور پچھلے قریب سات سالوں سے زیر تعمیر سڑک کو تکمیل تک پہنچانے کیلئے سرکاری طور پر اقدامات نہیں کئے گئے ہیں اور زمینداروں کے اعتراض سے پانچ سال سے کام بند پڑا ہے۔شاہراہ پر واقع قصبہ بانہال میں ڈولیگام نالہ پر گنڈ عدلکوٹ پل کے پاس سے نکلنے والی یہ رابطہ سڑک کھارپورہ، شابن باس اور رتن باس کی بستیوں کو سڑک کی سہولیات فراہم کرنے کیلئے اس وقت کے کانگریس وزیر غلام محمد سروری نے منظور کی تھی اور اس کی بیشتر کھدائی کا کام بھی انجام دیا گیا ہے لیکن کچھ زمینداروں کی طرف سے اعتراضات کی وجہ پہلے کلومیٹر میں کچھ کام رہ گیا ہے۔ محمد قدافی نامی ایک شہری نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ کھارپورہ اور شابن باس کی عوام سڑک نہ ہونے کی وجہ سے سخت مشکلات کا سامنے کر رہے ہیں اور

ہلکی بارشوںکے بیچ شاہراہ قابل آمد ورفت | آج سرینگر سے جموں کیلئے ٹریفک چلے گا

بانہال // جموں سرینگر شاہراہ پر جمعہ کے روز وادی کشمیر سے مسافر گاڑیوں کو جموں کی طرف جانے کی اجازت تھی اور اودھمپور میں درماندہ مال گاڑیاں بھی وادی کشمیر کی طرف آئیں۔ اس دوران جمعہ دوپہر بعد سے بانہال میں بارشوں کا سلسلہ شام تک وقفے وقفے سے جاری تھا تاہم شاہراہ پر ٹریفک کی نقل وحرکت معمولی ٹریفک جام کے بیچ جاری تھی۔ محکمہ ٹریفک کے ذرایع کے مطابق آج سرینگر سے جموں کی طرف گاڑیوں کو چلنے کی اجازت ہو گی ۔معلوم رہے کہ جمعہ کو شاہراہ پر ٹریفک کا بھاری جام دیکھا گیا اور ساتھ میں شاہراہ پر ہلکی بارشیں بھی ہوئیں ۔