تازہ ترین

۔70سالہ دھوکہ دہی کی سیاست نے جموں وکشمیر کو برباد کیا:الطاف بخاری

 ٹھاٹھری //اپنی پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے جموں وکشمیر کی روایتی سیاسی جماعتوں کے مایوس کن رول پر افسوس کا اظہار کیا ہے جس وجہ سے انتظامی اداروں اور عوام کے درمیان رابطہ منقطع ہواہے۔ ضلع ڈوڈہ کے ٹھاٹھری علاقہ میں منعقدہ اپنی پارٹی کے یک روزہ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے بخاری نے کہاکہ پچھلے ستر سالوں سے جموں وکشمیر کی عوام خاص طور سے نوجوانوں کو دھوکہ دہی سیاست سے ٹھگا گیا جس کو اب ختم کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا’’ انتہائی بدقسمتی کا مقام ہے کہ جموں وکشمیر کی سیاسی جماعتوں نے انتخابی مقاصد کی تکمیل کیلئے لوگوں کے جذبات کو اُکسایا اور اِس طرح کی سیاست نے خطہ کے سماجی۔ معاشی وسیاسی استحکام کو بُری طرح متاثر کیا‘‘۔ بخاری نے کہاکہ جموں وکشمیر کی سیاسی جماعتوں کی طرف سے کئے گئے سمجھوتوں کی قیمت نہ صرف لوگوں کو چکانی پڑی بلکہ اِس سے تشدد اور عدم تحفظ کو بھی

ہونزڈ میں ریسکیو اور سرچ آپریشن بند ، 19 لاپتہ افرادہنوز لا پتہ: ڈی ڈی سی چیئرپرسن کشتواڑ

جموں//تباہ کن بادل پھٹنے کے بعددچھن کے گاؤں ہونزڈ میں 19 لاپتہ افراد کو ریسکیو اور سرچ آپریشن میں کامیابی کے بغیر منسوخ کر دیا گیا ہے جبکہ بے گھر خاندانوں کی بحالی شروع کر دی گئی ہے۔ڈویڑنل کمشنر جموں راگھو لنگر کے ساتھ انتظامیہ کے سینئر عہدیداروں کے ہمراہ ضلعی ترقیاتی کونسل چیئرپرسن پوجا ٹھاکر اور سابق وزیر سنیل شرما نے دچھنکا دورہ کیا اور بے گھر خاندانوں کی بحالی کے کام کا جائزہ لیا۔ڈی ڈی سی کی چیئرپرسن پوجا ٹھاکر نے کہا کہ سرچ آپریشن ختم ہو گیا ہے کیونکہ لاپتہ 19 افراد کو تلاش کرنا انسانی طور پر ممکن نہیں تھا جو بادل پھٹنے سے پیدا ہونے والے فلیش سیلاب میں بہہ گئے ہوں گے یا بڑے بڑے پتھروں/ملبے کے نیچے دب گئے تھے۔ڈی ڈی سی کی چیئرپرسن نے کہا کہ این ڈی آر ایف اور ایس ڈی آر ایف کی ٹیمیں بھی گاؤں سے نکل چکی ہیں اور وہاں کوئی سرچ اینڈ ریسکیو آپریشن نہیں ہے۔پوجا ٹھاکر نے کہا کہ گاؤں

کشتواڑ میں قومی شاہراہ244کے توسیعی کام کا جائزہ لیاگیا

 ڈی سی کی زمین ، ڈھانچے کی تشخیص بروقت جمع کرانے کی ہدایت کشتواڑ //ڈپٹی کمشنر کشتواڑ اشوک شرما نے نیشنل ہائی وے 244 پر کام کی پیش رفت کا جائزہ لیا۔ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ تحصیلداروں اور محکموں کو ہدایت کی کہ وہ جلد سے جلد ڈھانچے اور زمین کے معاوضہ پھل لانے والے اور غیر پھل دار پودوں کی زیر التواء جائزہ رپورٹ پیش کریں۔انہوں نے این ایچ آئی ڈی سی ایل ، جنگل اور ریونیو اتھارٹیز سے کہا کہ وہ این ایچ 244 کے ساتھ ساتھ زمین کی حد بندی کے عمل کو تیز کریں اور اس کے ساتھ ساتھ باہمی تعاون کے ذریعے زیر التوا رکاوٹوں کو دور کریں۔مختلف بین محکمہ جاتی معاملات اور زمین کے زیر التوا معاملات پر تفصیلی بحث ہوئی۔  

بغلیہار پن بجلی پروجیکٹ کے ڈیلی ویجروں اور نیڈ بیس ورکروں کا احتجاج

بانہال//ضلع رام بن کے بغلیہار پن بجلی پروجیکٹ میں کے ساتھ کام کرنے والے ایک سو سے زائد ڈیلی ویجروں اور نیڈ بیس ورکروں نے نوکریوں کو باقاعدہ بنانے اور چھ مہینے سے بند پڑی تنخواہوں کی واگزاری کیلئے احتجاجی مظاہرے کئے ۔ چندرکوٹ میں پار ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے دفتر کے احاطے میں احتجاجی کرنے والے کا کہنا ہے کہ روزانہ کروڑوں کی آمدن دینے والے بجلی پروجیکٹ پر بیشتر کام ڈیلی ویجروں اور نیڈ بیس ورکروں سے لیا جارہا ہے جبکہ پندرہ سالوں سے کام کرنے والوں کی مستقلی اور چھ مہینے سے بند تنخواہوں کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے۔احتجاجی مظاہرین نے بتایا کہ پی ڈی سی میں بارہ سے پندرہ سال سے کام کرنے والے ہنر مند اور غیر ہنرمند ورکروں سے تمام کام لیا جاتا ہے لیکن پار ڈیولپمنٹ کارپوریشن اس سے کام سے قطع نظر ورکروں سے ناروا سلوک کر رہی ہے۔آل ڈیلی ویجروں اور نیڈ بیس ورکروں یونین بغلیہار کے صدر عبادت علی نے

۔15 کلومیٹر ملک پورہ۔ منو سڑک خستہ حال

ڈوڈہ //15 کلومیٹر کے فاصلے سے ملکپورہ منو سڑک کی خستہ حالی سے سینکڑوں نفوس پر مشتمل آبادی کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے مقامی لوگوں نے کہا کہ پندرہ کلومیٹر میں سے صرف پانچ کلومیٹر تک ہی تار کول بچھائی گئی ہے جبکہ سات کلومیٹر کی حالت انتہائی ناگفتہ بہہ بن گئی ہے۔سرپنچ پنچائت چوہدری نورمحمد سرپنچ چلی پائیں نے کہا کہ یہ سڑک 8 گاؤں کو بیرونی دنیا سے جوڑتی ہے اور سڑک کی خستہ حالی سے نہ صرف مقامی مسافر بردار گاڑیوں بلکہ عام راہگیروں کو بھی سفر کرنے میں کافی دقتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملہ کو متعدد بار متعلقہ حکام کی نوٹس میں لایا لیکن کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا۔ بی ڈی سی چیئرمین چلی چوہدری مخو بیگم نے چلی تا کٹھہ سڑک کی خستہ حالی و ہڈل سڑک کی تعمیر میں سست روی برتنے پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پسماندہ طبقوں کی فل

رام بن میں زراعت ، اس سے وابستہ شعبوں کے پیداواری منظر نامے کا جائزہ

رام بن //ڈپٹی کمشنر رام بن مسرت الاسلام نے زراعت اور اس سے وابستہ شعبوں کے پیداواری منظر نامے کا جائزہ لیا ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ ضلع نے ایک ڈسٹرکٹ ون پروڈکٹ (او ڈی او پی) سکیم کے تحت اپنی برآمدی صلاحیت کو دریافت کرنے کے لیے شہد کی پیداوار 4500 کوئنٹل سے بڑھا کر 9000 کوئنٹل کرنے کا ہدف رکھا ہے۔ ڈی سی نے پرنسپل سکریٹری کی طرف سے جاری ہدایات پر عمل درآمد میں مختلف محکموں کی طرف سے پیش رفت کا نقطہ وار جائزہ لیا۔ڈی سی نے چیف ہارٹیکلچر آفیسر کو ہدایت کی کہ 50 شناخت شدہ مستحقین کی فہرست ڈائریکٹر ہارٹی کلچر ، جموں کو فوری طور پر ارسال کریں تاکہ انہیں سولر ڈرائر یونٹ فراہم کیا جاسکے جو اناردانہ کو میکانائزڈ خشک کرنے کا راستہ ہموار کرے گا۔سی ایچ او نے اجلاس کو بتایا کہ محکمہ نے نوجوانوں کو زراعت اور باغبانی پر مبنی کاروباری سرگرمیوں کی ترغیب دینے کے لیے انفارمیشن ، ایجوکیشن اینڈ کمیونیکیشن (

مزید خبریں

حلقہ انتخاب رام کے کئی دیہات سڑک رابطہ نہ ہونے کی وجہ سے دشوار گزار زندگی جینے پر مجبور  براڑگڑی ، باٹسول ،کسلہ ، اہمہ دردہی اور کھوڑا کی دس ہزار کے قریب آبادی کو گونا گوں مشکلات کا سامنا محمد تسکین بانہال//زمینی رابطے سے تحصیل اکڑال سے منسلک اور بلاک اور تحصیل کی نسبت سے رام بن کا علاقہ براڑ گڑی بنیادی سہولیات سے محروم ہے اور رسل و رسائل کیلئے رابطہ سڑک کی کمی نے اس دور افتادہ پہاڑی علاقے کے ہزاروں لوگوں کو کسمپرسی کی دلدل میں دھکیل رکھا ہے۔ بلاک رام بن کی پنچایت سیری بی کے علاقہ براڑگڈی ، کسلہ ، باٹسول اور سب ڈویژن رامسو کی پنچایت سوجمتنہ کے درداہی ، اہمہ اور کھوڑا کے علاقوں کو سڑک رابطے سے جوڑنے کیلئے ابھی تک کسی بھی قسم کے اقدامات نہیں کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے عام زندگی بری طرح سے متاثر ہے۔مقامی رضاکار فاروق احمد نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ علاقہ براڑ گڑی ، کسلہ، با