تازہ ترین

جموں وکشمیر کی ترقی اور اچھی حکمرانی میں تشدد بڑی رکاوٹ :الطاف بخاری

کشتواڑ//اپنی پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے کہا ہے کہ مختلف صورتوں میں تشدد نے جموں وکشمیر میں امن، خوشحالی اور اچھی حکمرانی کو بُری طرح متاثر کیا ہے۔ بخاری چوگان میدان میں منعقدہ پارٹی کے یک روزہ کنونشن سے خطاب کر رہے تھے جس میں کثیر تعداد میں مقامی لوگوں نے شرکت کی۔ نوجوانوں سے تشدد کا راستہ ترک کر کے خطہ میں امن واستحکام میں اپنا تعاون پیش کرنے کی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ’’مسلح تشدد نے ترقی، امن اور اچھی حکمرانی پر منفی اثرات مرتب کئے ہیں جس سے عوامی ادارے کمزور ہوئے اوربدعنوانی کا ماحول پیدا ہوا‘‘۔ بخاری نے کہاکہ امن وہم آہنگی جموں وکشمیر میں ترقی وخوشحالی کے لئے ناگزیر ہے، گذشتہ روز سرینگر میں نوجوان پولیس افسر جو ابھی پروبیشن پر تھا کا سفاکانہ قتل کیاگیا۔ اِس سانحہ نے صرف اکیلے اُن کے خاندان کو تکلیف نہیں پہنچائی بلکہ کشمیر میں پہلے سے اذیت ناک ص

مرکزی وزیر مواصلات کا ریاسی دوہ، عوامی رسائی کیمپ کا انعقاد | حکومت ناقابل ِ رسائی مقامات تک پہنچنے کیلئے پُر عزم: اشونی وشنو

ریاسی //جموں و کشمیر میں مرکزی وزراء کے ذریعہ عوامی آؤٹ ریچ کے وزیر اعظم کے اقدام کے تحت مرکزی وزیر ریلوے اور مواصلات اشونی وشنو نے ریاسی ضلع میں عوامی آؤٹ ریچ پروگرام طلب کیا ۔ ڈی ڈی سی چیئر مین ریاسی صراف سنگھ ناگ ، وائس چیئر پرسن ڈی ڈی سی ریاسی ساجدہ قادر ، صدر میونسپل کمیٹی کٹرہ ومل اندو ، سیکرٹری آئی ٹی جے اینڈ کے امیت شرما ، ضلع ترقیاتی کمشنر ریاسی ایس چرندیپ سنگھ ، ایس ایس پی شلیندر سنگھ ، ڈی ڈی سی ممبران ، بی ڈی سی کے چیئر پرسن ، پی آر آئی کے منتخب نمائندوں کے علاوہ دیگر اہم شخصیات بھی پروگرام میں موجود تھے ۔ مرکزی وزیر نے مختلف محکموں کی طرف سے لگائے گئے نمائشی سٹالوں کا معائینہ کیا جو کہ جے کے آر ایل ایم کے تحت تعاون یافتہ سیلف ہیلپ گروپس( ایس ایچ جی ) کی اپنی سرگرمیوں ، سکیموں اور ہاتھ سے تیار کردہ مصنوعات کی نمائش کرتے ہیں ۔ انہوں نے خواتین ایس ایچ جی کی ان ممبران ک

سب ڈویژن بانہال اور رامسو کے درجنوں دیہات ہنوز منقطع | سڑکوں رابطوں کی عدم موجودگی سے ہزاروں لوگوں کی زندگی دشوار

بانہال // صوبہ جموں میں وادی چناب کے پہاڑی ضلع رام بن میں محکمہ تعمیرات عامہ اور محکمہ  کی طرف سے اب تک  سینکڑوں دیہی علاقوں کو سڑک رابطوں سے جوڑا گیا ہے لیکن سرکار اور تعمیراتی محکموں کی عدم توجہی کی وجہ سے ابھی بھی درجنوں دیہات اور پہاڑی علاقوں میں سڑک رابطے نہ ہونے کی وجہ سے لوگ دشوار گزار زندگی جینے پر مجبور ہیں اور ضلع کے ہزاروں لوگوں سے جڑے سڑک رابطوں کی تعمیر کے مسائل سالوں سے حل ہونے کا نام ہی نہیں لے رہے ہیں۔ ضلع رام بن میں سب ڈویژن بانہال اور سب ڈویژن رامسو  کے درجنوں علاقوں اور پنچایتوں میں آج بھی رسل و رسائل کا تمام نظام انسانوں اور خچروں کی پیٹھ پر لادھ کر لانے سے ہی چلتا ہے اور سڑکوں کا نہ ہونا معمول کی زندگی کو اثر انداز کر رہا ہے۔ پیر پنجال پہاڑی سلسلے کی اونچی چوٹیوں پر آباد بْزلہ ، ترگام، آکھرن ، تراگن ، گوجر بستی بنکوٹ ، اہمہ دردہی ،براڑ گڑی ، پوگل

ڈوڈہ میں کورونا کے5 نئے مثبت معاملات | 8 مریض صحتیاب ،311993 ٹیکے لگائے گئے

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میں کورونا وائرس کے 5 نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جبکہ8 مریض صحتیاب ہوئے ہیں ۔اس دوران اٹھارہ سال سے زیادہ کے عمر کے 81.50 فیصدی آبادی لوگوں کو ٹیکے لگائے گئے ہیں۔اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد سمٹ کر 55 رہ گئی ہے اور شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد7673 پہنچ گئی ہے جبکہ اب تک کورونا وائرس سے 131ہلاکتیں ہوئی ہیں اور 325673 افراد کو ٹیکے لگائے گئے ہیں۔ ادھر قصبہ ڈوڈہ کے محلہ و ڈوڈہ دربار ہوٹل سے لے کر آئی ٹی آئی ڈوڈہ تک مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار دیا گیا ہے۔  

داڑم میں ریلوے تعمیراتی کمپنیوں نے سڑک کوکیا کھنڈرات میں تبدیل

گول//ضلع رام بن کے سب ڈویژں گول میں ریلوے کمپنیوں کی جانب سے سڑکوں کی حالت کو دگرگوں کئے جانے پر مقامی لوگوں نے سخت تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ داڑم سے گوئی بھیمداسہ جانے والی سڑک کو 48ٹنل کے مقام پر گیمون کمپنی کی جانب سے تمام سیمنٹ کا کام سڑک کے بیچوں بیچ کیا جاتا ہے اور جو ٹنلوں سے کیمکل نکلتا ہے اُس کو بھی سڑک میں ہی ڈالا جا رہا ہے جس وجہ سے یہ سڑک کھنڈرات میں تبدیل ہو گئی ہے اور تمام بھاری برکھم مشینوں کو اسی سڑک کے بیچ کھڑا کیا ہے اور اس کی وجہ سے بھی سڑک کو کافی نقصان پہنچا ہے۔ لوگو ں کا کہنا ہے کہ جہاں ان کمپنیوں کو چاہئے تھا کہ لوگوں کے مسائل حل کرنا جو ریلوے لائن کے زد میں آئے ہیں لیکن یہ کمپنیاں اس کے بر عکس لوگوں کو مزید مصیبتوں میں ڈالتی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دو فیصد سی آر سی کا پیسہ لوگوں کی سہولیات کے لئے ان کو لگانا ہوتا ہے لیکن یہاں دس ہزار روپے

مزید خبریں

جموں کے سرمائی زون میں | بارہویں جماعت کے پرائیوٹ امتحانات شروع  بھدرواہ //12 ویں سالانہ بورڈ کے امتحانات کا آغاز پیر کے روز سرمائی زون جموں میں تمام طلباء اور ممتحن کے ساتھ ہوا جو یہاں امتحانی مراکز میں داخلے کی اجازت دینے سے پہلے ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ (آر اے ٹی) کے تابع تھے۔ پہلا آف لائن امتحان تھا جو جے کے بورڈ آف سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ (JKBOSE) جموں کے سرمائی زون میں لیا جا رہا تھا ، جس میں ڈوڈہ ، کشتواڑ اور رام بن سمیت کئی اضلاع شامل تھے۔کلاس 10 کے دو سالانہ امتحانات منگل سے سرمائی زون میں شروع ہونے والے ہیں۔ جبکہ 12 ویں کا امتحان 22 ستمبر کو ختم ہونا ہے ، پرائیویٹ طلبا کا میٹرک کا امتحان ایک دن پہلے ختم ہو جائے گا۔کشمیر کے برفانی علاقوں اور جموں کے کچھ حصوں میں سکول سرمائی زون کے زمرے میں آتے ہیں ، جبکہ جموں صوبے میں آنے والے باقی علاقے موسم گرما کے علاقے میں آتے ہیں