تازہ ترین

دور افتادہ علاقوں میں عرصہ دراز سے کام کررہے سیزنل ٹیچر ذہنی تنائو کا شکار | محکمہ پر منظور نظر لوگوں کو فائدہ پہنچانے کا الزام،ناانصافی نہیں ہو گی، پرانے سینٹر بحال رہیں گے ،:سی ای او ڈوڈہ

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے دور افتادہ علاقوں میں پچھلے ایک دہائی سے کام کررہے سیزنل ٹیچروں نے متعلقہ محکمہ و فرضی ایسوسی ایشن کی طرف سے انہیں ہراساں کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ عرصہ دراز سے وہ قلیل سے وسائل کے باوجود اپنی خدمات انجام دے رہے ہیں تاہم محکمہ کے کچھ ملازمین اپنے منظور نظر لوگوں کو فائدہ پہنچا کر انہیں نظر انداز کررہے ہیں۔ان کا مزید کہنا ہے کہ ایسوسی ایشن کے نام پر کچھ افراد اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرکے انہیں پریشان کرتے ہیں۔کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے ایک وفد نے کہا کہ وہ پچھلے گیارہ برسوں سے پہاڑی علاقوں میں گوجر بکروال و دیگر طبقہ کے لوگوں کے بچوں کو تعلیم دیتے ہیں جہاں پر رہنے سہنے کا کوئی معقول انتظامات نہیں ہوتے ہیں لیکن آج کچھ افراد محکمہ کے ساتھ ملی بھگت کرکے اپنے منظور نظر لوگوں کو آگے لا رہے ہیں۔وفد میں شامل چوہدری محمد صابر نے کہا کہ وہ غریب گھرانے س

ڈوڈہ کے بالائی علاقوں میں دوسرے روز بھی بارشیں | عوامی زندگی مفلوج، رابطہ سڑکیں خستہ حال، پانی، بجلی و سڑک رابطہ کو ہنگامی بنیادوں پر بحال کرنے کا مطالبہ

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے بالائی علاقوں میں دوسرے روز بھی بارشوں کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری رہا جس کے باعث معمولات زندگی متاثر ہوئی۔اطلاعات کے مطابق جمعرات کو ڈوڈہ ضلع میں موسم دو پہر تک ابرآلود رہا اور سہہ پہر کو بالائی علاقوں میں بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو آخری اطلاع ملنے تک جاری ہے۔اس دوران بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ بھلیسہ ،بونجواہ و گندنہ سے متعدد عوامی وفود نے کشمیر عظمیٰ کوبتایا کہ گذشتہ روز کی تباہ کن بارشوں سے فصلوں و پھلوں کو بھاری نقصان پہنچا ہے جبکہ سینکڑوں کنال زرعی اراضی کو نقصان پہنچا ہے اور درجنوں مقامات پر عارضی پل بہہ گئے ہیں۔ڈی ڈی سی کونسلر کاہرہ معراج الدین ملک نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ تباہ کن بارشوں سے معمولات زندگی متاثر ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈوڈہ ضلع کے بالائی علاقوں میں پانی، بجلی و سڑک رابطیمتاثر ہوئے ہیں اور کئی رہائشی مکانات میں پانی داخل ہوا ہے۔ڈی ڈی سی کونسلر نے

ریاسی ضلع میں بارشوں کے باعث درجنوں رہائشی مکانات کو نقصان،فصلیں بھی تباہ | چسانہ میں مکان گرنے کی وجہ سے چار بکریاں اور ایک بھینس ہلاک،سڑکیں بحال

ریاسی//گزشتہ روز طوفانی بارشوں کے باعث درجنوں رہاشی مکانات کو نقصان پہنچا ہے اور فصلیں بھی گر کر تباہ ہوگئی ہیں۔واضح رہے کہ ریاسی ضلع کے دور دراز علاقہ جات ارناس،درماڑی،مہور،چسانہ اور گلابگڑھ کے درجنوں دیہات میں کافی مالی نقصان ہوا ہے۔اس کے علاوہ ان دیہات میں فصلیں بھی تباہ ہوگئیں ہیں۔کشمیر عظمیٰ کو درجنوں دیہات سے اطلاعات موصول ہوئی ہیں کہ ان دیہات میں کئی ایک رہاشی مکان گر گئے ہیں اور کافی مالی نقصان ہوا ہے۔اسی دوران چسانہ کے ٹھنڈا پانی ڈھوک سے اطلاع ملی ہے کہ وہاں پر غلام نبی نامی شخص کا مکان گرنے کی وجہ سے 4 بکریاں اور ایک بھینس ہلاک ہوگئی۔گزشتہ روز شدید بارشوں کی وجہ سے تغیانی نالوں اور پسیاں آنے کی وجہ سے تمام سڑکیں بند ہوگئیں تھی اسی دوران آج مہور کے ٹرانسپورٹ ایجنٹ نزیر احمد نے کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آج شام تک سڑکوں کو بحال کر دیا گیا ہے۔مقامی لوگوں نے انتظامیہ

ڈوڈہ ضلع میں کورونا کے 24نئے مثبت معاملات | 8 مریض صحتیاب ،197668افراد نے ٹیکے لگائے

ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع سے آج کورونا وائرس کے 24 نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیں اور 8مریض شفایاب ہوئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق جمعرات کو ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری،گندوہ و عسر میں ہوئی کوڈ جانچ کے دوران 24 افراد کی ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئی ہے جنہیں ہوم قرنطینہ میں رکھا گیا ہے اور آٹھ مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد 83 و صحتیاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 7020 پہنچ گئی ہے اور اب تک ضلع میں کورونا وائرس سے 124 اموات ہوئیں ہیں جبکہ 197668 افراد کو ٹیکے لگائے گئے ہیں۔  

موئلہ ،سلبلہ کا وفد ایس ڈی ایم گول سے ملاقی | گول سلبلہ روڈ کی حالت کو بہتر بنانے اور آبِ نکاس کاکیامطالبہ

گول//آئے روز گول سلبلہ روڈ پر شدید بارشوں کی وجہ سے نالیاں نہ ہونے کی وجہ سے یہ سڑک کھنڈرات کی شکل اختیار کر گئی ہے جس وجہ سے بارشوں کا پانی لوگوں کی زرعی اراضی اور رہائشی مکانات میں جا رہا ہے جس سے لوگوں کو کافی نقصانات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے ۔ اس سلسلے میں آج موئلہ اور سلبلہ کا ایک وفد زیر صدارت سرپنچ گول بی روشن دین ایس ڈی ایم گول غیاث الحق سے ملاقی ہوا اور اس سڑک کی صورتحال سے باخبر کیا ۔ وفد نے کہا کہ یہاں گاڑیوں کی دور کی بات یہاں اس سڑک پر انسانوں کو چلنا بھی دشوار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آئے روز بارشوں کا سارا پانی لوگوں کے زرعی اراضی اور رہائشی مکانات میں چلا جاتا ہے کیونکہ نالیوں کی حالت نہایت ہی ابتر ہے ۔ وفد نے کہا کہ گول سے سلبلہ تک جگہ جگہ جہاں تعمیراتی میٹریل نالیوں اور سڑک کے بیچ میں ڈالا گیا وہیں نالیوں میں بہت زیادہ ملبہ پڑا ہوا ہے اور ایسا دکھائی دے رہا ہے کہ اس سڑک

مزید خبریں

نوجوان تحفظات سے باہر آئیں | رضاکارانہ طو ردلچسپی رکھنے والے نوجوان متوجہ ہوں:ایس ڈی ایم گول زاہد بشیر گول//سب ڈویژن کے ہر پنچایت میں یوتھ کلب بنانے ہیں جس میں پندرہ سال سے پنتیس تک کے نوجوان جو میں لڑکے و لڑکیاں دونوں شامل ہیں رضا کارانہ طو رپر شامل ہو سکتے ہیں اور لوگوں میں یہ تحفظات پائے جارہے ہیں کہ یہاں پر سرکاری سطح پر نوکریاں لگا رہے ہیں جس وجہ سے نوجوان بے خبر ہیں لیکن ایسا نہیں ہے یہ جو دلچسپی رکھنے والا نوجوان ہو وہ رضا کارانہ طور پر اس یوتھ کلب کا حصہ بن سکتا ہے ۔ ان باتوں کا اظہار کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے ایس ڈی ایم گول غیاث الحق نے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ہم نے متعلقہ بی ڈی اوز کو مطلع کیا تھا کہ وہ ہر پنچایت میں یوتھ کلب بنائیں ۔انہوں نے کہاکہ کم سے کم بارہویں پاس ہونا چاہئے اور حد کوئی نہیں جو جتنا پڑھا لکھا ہو گا وہ بہتر ہے اور کمپیوٹر جاننے

تازہ ترین