تازہ ترین

مذہبی مقامات میں بھی پانی کا بحران،پائپیں زنگ آلودہ و حوض خستہ حال

خشک سالی پانی کی کمی کا سبب، نئے پروجیکٹوں پر کام شروع :حکام  ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے بیشتر علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی کمی کے باعث مقامی آبادی کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ پانی کی عدم دستیابی سے عورتوں، بچوں و بزرگوں کو کوسوں دور جاکر نالوں سے پانی لانا پڑتا ہے اس دوران درجنوں مذہبی مقامات میں بھی پانی کی قلت پائی جاتی ہے۔ ڈوڈہ، گھٹ، گندنہ، کاستی گڑھ،مرمت، عسر، چرالہ کاہرہ، بھالہ، بھدرواہ، چلی پنگل، بھلیسہ و بونجواہ سے کئی عوامی وفود نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سینکڑوں اسکیمیں ناکارہ ہو چکی ہیں جبکہ درجنوں پانی کے حوض و ٹنکیاں ناقابل استعمال بن چکے ہیں اور محکمہ جل شکتی سے بار بار رجوع کرنے کے بعد بھی عملی اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کو کافی پریشانی کا سامنا ہے۔ تحصیل کاہرہ سے آئے ایک وفد نے بتایا کہ بٹوگڑہ، کنو، ملانوں، ہلارن، درمن و دیگر

گول میں محکمہ دیہی ترقی کا احتساب کرنے کا عوامی مطالبہ طول پکڑنے لگا

گول//گو ل میں محکمہ دیہی ترقی کی جانب سے پنچایتی سطحوں پر جہاں نریگا سکیم کے تحت خزانہ عامرہ سے لاکھوں روپے نکالے ہیں وہیں پنچایتی نمائندوں پر دوستوں ، رشتہ داروں اور احباب کو خوش رکھنے کے لئے بھی خزانہ عامرہ کو لوٹنے میں کوئی کسر باقی نہ رکھنے کا الزام عائد کیاجارہا ہے ۔ محکمہ دیہی ترقی گول پرالزام ہے کہ اس طرح سے لاکھوں یہاں تک کہ کروڑوں روپے کا خرد برد ہوا ہے اور آج بھی لوگ اُن ندی نالیوں کے لئے محکمہ سے استدعا کرتے ہیں جن کے نام محکمہ نے پہلے ہی لاکھوں روپے نکالے ہیں ۔ گول بلاک میں تمام پنچایتوں کا یہی حال ہے ۔ اگر چہ محکمہ دیہی ترقی سے کئی لوگوں نے آر ٹی آئی کے ذریعے رپورٹ بھی مانگی تھی لیکن محکمہ صحیح رپورٹ دینے سے قاصر ہے جس سے تاثر ملتاہے کہ محکمہ اپنے کرتوتوں پر پردہ ڈالنے کے لئے لوگوں کو صحیح رپورٹ پیش نہیں کرتے بلکہ ٹال مٹول کر کے ہر سال میں ایک ایک کام کو دکھاتے ہیں جبکہ

ڈی سی کشتواڑ نے پی ایم جے اے صحت رجسٹریشن کی صورتحال کا جائزہ لیا

کشتواڑ ، // ڈپٹی کمشنر (ڈی سی) کشتواڑ اشوک شرما نے ضلع میں حکومت کے پرچم بردار آیوشمان بھارت پردھان منتری جان آروگیا یوجنا (AB-PMJAY) SEHAT اسکیم کے نفاذ کا جائزہ لینے کے لئے متعلقہ افسران کی ایک میٹنگ کی صدارت کی۔اجلاس کو بتایا گیا کہ 103 سی ایس سی ضلع بھر میں کام کر رہی ہیں جس میں لوگ اسکیم کے تحت فوائد حاصل کرنے کے لئے اپنا اندراج کرتے ہیں اور اب تک ضلع میں 90000 افراد کو رجسٹرڈ کیا جا چکا ہے۔میٹنگ میں ، ڈی سی نے باقی مستفید افراد کی خدمت کے لئے اندراج کی سہولیات میں اضافہ کرنے پر زور دیا۔انہوں نے سی ایم او کو ہدایت کی کہ وہ اسکیم کے تحت فیصد فیصد کوریج کے لئے لوگوں میں شعور اجاگر کرنے کے لئے عوامی سطح پر آگاہی مہم چلائیں۔ انہوں نے اسکیم کے بارے میں بڑے پیمانے پر آگاہی پیدا کرنے کے لئے ASHA ورکرز ، VLWs وغیرہ سمیت فیلڈ لیول ورکرز کو متحرک کرنے کی بھی ہدایت کی۔مزید برآں ، VLEs ک

پرتمولہ گول میں گیس سلینڈر پھٹنے سے مچاکہرام

گول//گزشتہ شام کو پرتمولہ علاقہ میں طارق احمد ولد عبدالرحیم لوہار ساکنہ پرتمولہ، وارڈ نمبر 7شام کو اچانک گھر میں موجود گیس سلینڈر نے آگ پکڑ لی جس وجہ سے کافی افرا تفری کا ماحول پیدا ہوا ۔ اس دوران رہائشی مکان کے دو کمروں کو آگ سے نکال پہنچا اس دوران وہاں پر موجود لوگوں نے فوری طو رپر گیس سلینڈرکو کسی طریقے سے باہر پھینک دیا اور فوری طو رپر فائر بریگیڈ کو بلایا ۔ کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے مقامی سرپنچ مشتاق احمد نے بات کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں نے کافی محنت کی اور فائر برگیڈ بھی جلدی سے پہنچی جس وجہ سے مکان کو زیادہ نقصان ہونے نہیں دیا اور افراد خانہ کو بھی کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ رہائشی مکان کے دو کمروں کو نقصان پہنچا ہے باقی اشیاء کو جل گئی ۔ انہوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ اس غریب شخص کی امداد کی جائے ۔ 

ضلع رام بن میں کووڈ رہنما اصولوں کی پاسداری کے تحت نماز عید کی سینکڑوں تقریبات

بانہال //کووڈ انیس کے رہنما اصولوں کی سخت پاسداری کے تحت ضلع رام بن کے شہر و گام میںبدھ کے روز نمازعید کے سینکڑوں اجتماعات منعقد ہوئے اور ہزاروں کی تعداد میں فرزندان توحید نے کووڈ ایس او پیز کو اپناتے ہوئے شدید بارشوں میں گاوں ، قصبوں اور تحصیل صدر مقامات کی چھوٹی بڑی مساجد میں نماز عید ادا کی ۔ کووڈ انیس کی وبائی صورتحال کے پیش نظر حکام نے لوگوں کو عیدگاہوں کے بجائے مقامی مساجد میں اول وقت میں ہی نماز عید ادا کرنے کی اپیل کی تھی اور ائمہ مساجد اور مساجد کمیٹیوں نے ان احکامات کو عملی جامہ پہنایا اور ضلع رام بن کی تقریبا تمام مساجد میں نماز عید اولین اوقات میں صبح ساڑھے آٹھ بجے سے پہلے پہلے  ہی ادا کی گئی اور اس موقع پرکووڈ کے تمام تر احتیاطی تدابیر کو عملایا گیا تھا  ۔ ضلع رام بن میں نماز عیدالا ضحی کا سب سے بڑا اجتماع مرکزی جامع مسجد بانہال میں منعقد ہوا جہاں سینکڑوں کی تعدا

کووڈ ایس اوپیز کی خلاف ورزی پر20ہزار کا جرمانہ

رام بن //ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کے نفاذ کے لئے مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے متعدد خلاف ورزی کرنے والوں کو چہرے کے ماسک پہنے بغیر گھومنے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر جرمانہ عائد کیا۔نفاذ کرنے والی ٹیموں نے اپنے اپنے دائرہ اختیار میں معائنہ کے دوران 19ہزار700 روپے جرمانہ وصول کیا۔ انفورسمنٹ افسران نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ چہرے کے ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ وہ اپنے قریبی سی وی سی میں کوویڈ ویکسی نیشن ڈوز لیں۔ ضلع امیونائزیشن آفیسرڈاکٹر سریش نے بتایا کہ ضلع رام بن میں مزید 1507 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی خوراکیں فراہم کی گئیں۔چیف میڈیکل آفیسرڈاکٹر محمد فرید بھٹ کی طرف سے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق محکمہ صحت نے 1214 نمونے جمع کیے ہیں جن میں 310 آر ٹی-پی سی آر اور 904 آر اے ٹی نمونے شامل ہیں ، اس کے علاوہ ضلع میں ٹیک

ضلع کشتواڑ میں منریگا کے نفاذ پر تشویش

کشتواڑ // سینئر سماجی کارکن اجیت بھگت نے مہاتما گاندھی قومی دیہی روزگار گارنٹی ایکٹ کے نفاذ پر تشویش کا اظہار کیا۔ انہوںنے کہا کہ ضلع   کشتواڑ میںجاب کارڈ جاری کئے گئے ہیں لیکن کام کو الاٹ نہیں کیا گیا ہے۔ اس کے نتیجے میں غریب تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوانوں کے لئے جاب کارڈ کی کوئی ضمانت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ باغبانی اور محکمہ زراعت کی حالت بھی ایسی ہی ہے،بہت سارے کاشتکار ہیں جو اپنے علاقے میں باغات تیار کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں لیکن کوئی امداد فراہم نہیں کی جارہی ہے۔ باڑ لگانے کے لئے کوئی خاردار تار نہیں ، پولی تھین کے احاطے / گرین ہاؤسز ان لوگوں کو مہیا کیے گئے ہیں ، جن کے اپنے باغات ہیں جس کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا ہے۔ بھگت نے منریگاکے تحت اجرت میں 204 سے بڑھا کر 500 روپے روزانہ کرنے اور غربت کی لکیرکے نیچے رہنے والوں کے جاب کارڈ تیار کرنے کا مطالبہ بھی کیا تاکہ معاشر