مسابقتی امتحانات اور کشمیر ی اُمیدوار

 وادیٔ کشمیر کی مردم خیز بستی میں زرخیز نسل نو گزشتہ تیس برسوں سے تیغوں کے سائے میں پل کر جوان ہوچکی ہی۔گزشتہ تیس برسوں سے چل رہے نامساعد حالات کی وجہ سے ایک غیر یقینی صورتِ بن چکی ہے۔ وادی میں کبھی ہرتال،کبھی کرفیو،کبھی کریک ڈاون،کبھی لاک ڈاون،کبھی انکاونٹر اور کبھی اور کوئی نا خوش گوار واقعہ رونما ہونے کی وجہ سے تعلیمی ادارے اکثر مقفل رہتے ہیں۔ چنا نچہ اس شورش زدہ علاقہ میں گزشتہ کہیں دہائیوں سے زندگی کے جملہ شعبہ جات کے ساتھ ساتھ تعلیمی شعبہ بْری طرح سے متا ثر ہوچکا ہے۔ہزاروں نوجوان طرفین کی تنا تنی کی وجہ سے اپنی تعلیم مکمل نہیں کرسکے۔ ایک طرف سے سیاسی اْتھل پتھل اور دوسری طرف سے تعلیمی اداروں میں تد ریسی عملہ کی کمی،بہتر تعلیمی ماحول کی عدم دستیابی اور غربت و عسرت کے باوجود بھی وادی کے ہزاروں طلباء ہر سال مختلف امتحانات میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے اپنی قابلیت کا لوہا منوا رہے

’بکھرے رنگ ‘

''بکھرے رنگ'' ڈاکٹر عقیلہ کے خوبصورت افسانوں کا مجموعہ ہے۔ ڈاکٹر عقیلہ دل والوں کے شہر یعنی دلّی سے تعلق رکھتی ہیں۔ دہلی یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کرنے کے بعد آپ جموں وکشمیر کے ضلع راجوری کی یونیورسٹی بابا غلام شاہ بادشاہ میں بحیثیت معلمہ کم کر رہی ہیں۔ ڈاکٹر عقیلہ کا یہ پہلا افسانوی مجموعہ ہے جو منظر عام پر آیا ہے۔ اس کتاب کے کل صفحات 141 ہیں اور یہ مجموعہ حسب ترتیب گیارہ افسانوں پر مشتمل ہے۔پیڑ کا جن، بکھرے رنگ، قاتل، طلاق، فریب، آخر میں نے پا لیا تجھے، سرجو، چھوٹی سی محبت، شادی کا تحفہ، پچھتاوے کا  بھنور اور چال۔ ان سبھی افسانوں میں کسی نہ کسی سماجی پہلو کو بڑے دلچسپ انداز میں پیش کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ افسانہ نگار چونکہ عورت ہیں، اس لئے ان افسانوں میں خواتین کے مسائل کو ابھارنے کی بھر پور کوشش کی گئی ہے۔ ان افسانوں کو پڑھنے کے دوران قاری کبھی زور زور ٹھاٹھے ما

جذبات اور منطق

جذبہ (Emotion)اُردو میں عربی سے ماخوذ لفظ ہے جس کے معنی کشش یا کھنچاو کے ہیں۔جذبات جمع ہے جذبہ کی او ر جذبہ اُس وقت پیدا ہو تا ہے جب بیرونی عوامل(Factors)انسانی شعور کو اپنے اندر جذب کر لیتے ہیں۔مثال کے طور پر عشق ایک جذبہ ہے او ر یہ اُس وقت تک اپنا صحیح اثر نہیں دکھا سکتا جب تک یہ انسانی شعور کو اپنے اندر جذب نہ کرلے۔ ہم ہر لمحہ کسی نہ کسی جذبہ کے تجرِبے سے گزر رہے ہوتے ہیںیا کوئی جذباتی کیفیت محسوس کر رہے ہوتے ہیں۔ یہ جذبات یا احساسات دو قسم کے ہوتے ہیں…مثبت یا منفی(Positive or Negative) اور  تعمیری یا تخریبی (Constructive or Destructive) ۔ انسان کی خوشی ، راحت او ر کامیابی میں در حقیقت اُس کے جذبات یا جذباتی کیفیات سب سے اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ جذبات ہو نا کوئی بُری چیز نہیں ہے۔ آخر ایمان بھی تو ایک جذبہ ہی ہے۔لیکن جذبات میں بہہ کر کوئی غلط قدم اُٹھانا غلط ہے۔جذباتی

تازہ ترین