اخروٹ کا معیار بڑھانے کی کوشش

 سرینگر //اخروٹ کے معیار کو بڑھانے کیلئے محکمہ باغبانی نے شمالی ،جنوبی اور وسطی کشمیر میں تین اعلیٰ معیار کی نرسریاں قائم کی ہیں جس کے سبب اخروٹ کے معیار اور پیداوار میں بہتری آئے گی ۔محکمہ باغبانی کے ڈائریکٹر اعجاز احمد بٹ نے ان نرسریوں کا جائزہ لینے کیلئے ز ائورہ ، اور چندی گام کا دورہ کیا ،جبکہ جمعرات کو اننت ناگ کی براک پورہ نرسری کا معائنہ کیا ۔معائنہ کے دوران انہوں نے ان نرسریوں میں کام کرنے والے ملازمین کی خوصلہ افزائی کی اور عملہ کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے بھی نوازا ۔ضلع ہاٹیکلچر افسر اننت ناگ نے اس موقعہ پر ناظم باغبانی کو جانکاری فراہم کرتے ہوئے کہا کہ ضلع میں 11ہزار 9سو 41ہیکٹر اراضی پراخروٹ کی پیداوار ہوتی ہے اور اس کی سالانہ پیداوار 4لاکھ 66ہزار 5سو 22 میٹرک ٹن ہے ۔ڈائریکٹر باغبانی کو مزید بتایا گیا ہے کہ مالی سال 2019.20 کے دوران 72000کلونل روٹ سٹاک محکمہ کی

پی ایچ ڈی چیمبرآف کامرس کے اہتمام سے ویب نار

سرینگر// پی ایچ ڈی چیمبر آف کامرس کی  طرف سے منعقدہ وئب نار کے دوران مقامی کاروباریوں سے لیکر بین الاقوامی کاروباریوں  تک نے اس بات کو تسلیم کیا کہ گزشتہ ایک برس سے کشمیر کی معیشت کو ایک بڑا دھچکہ لگا ہے،جس سے باہر نکلنے کیلئے  خطے کیلئے معاشی پیکیج کا اعلان کیا جانا چاہے۔درمیانی اور چھوٹی صنعتوں کیلئے سرکاری اسکیموں قرضوں کے متبادل ذرائع  کے تحت فوائد کی حصولیابی کیلئے پی ایچ ڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کی جانب سے جمعرات کو ایک وئب نار منعقد ہوا،جبکہ اس ویب نار کا مقصد سرکاری و دیگر متبادل اسکیموں سے کس طرح استفادہ حاصل کیا جاسکے۔ وئب نار کا ایک اور مقصد یہ بھی تھا کہ شرکاء کو پی ایچ ڈی چیمبر کی طرف سے چھوٹی و درمیانہ  درجے کی صنعتوں کے رہنمائی مرکز کی جانب سے’’ایم ایس ایم ای‘‘ کی رہنمائی اور دستیاب مالی اسکیموں سے متعلق جانکاری و

جے کے بینک کی چھوٹے قرضداروں کو راحت

   سرینگر// مرکزی سرکار کی طرف سے جاری راحتی پیکیج کا دائرہ مزید وسیع کرتے ہوئے جموں و کشمیر بینک نے اہل مدرا شیشو قرضداروں کوسود پر 2فیصد سبسڈی فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس مراعاتی اسکیم کا مقصد اُن چھوٹے قرضداروں کے قرضوں پر شرح سود میں مزید 2فیصد سبسڈی دینا ہے جنہوں نے مُدرا شیشو کے تحت بینک سے پچاس ہزار روپے تک کے قرضے حاصل کئے ہیں۔ لیکن ایسے قرضے 31مارچ2020کو NPAزمرے میں نہیں ہونے چاہئے اور جہاں قرضدار ماہانہ سود کی ادائیگی باقاعدگی کے ساتھ کر رہا ہو، اُن تک یہ سبسڈی پہنچائی جائے گی۔ واضح رہے کہ پردھان منتری مُدرا یوجنا  کے تحت تین طرح کے قرضے دیئے جاتے ہیں جن میںپچاس ہزار روپے تک شیشو قرضے کہلاتے ہیں، پچاس ہزار روپے سے لیکر پانچ لاکھ تک کے قرضے کشور کہلاتے ہیں اور پانچ لاکھ سے دس لاکھ روپے تک کے قرضے ترون قرضے کہلاتے ہیں۔ان میں مُدرا شیشو قرضے سب سے زیادہ اہمیت ک

تازہ ترین