ہمیں فی الحال کورونا کے ساتھ ہی رہنا پڑے گا:عمران طاہر

نئی دہلی/جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی عمران طاہر کا کہنا ہے کہ یہ مشکل وقت ہے جس کی وجہ سے کورونا وائرس کے سبب بہت کچھ تبدیل ہورہا ہے ۔پاکستانی نژاد جنوبی افریقی لیگ اسپنر عمران طاہر نے کہا کہ لگتا ہے ہمیں فی الحال کورونا کے ساتھ ہی رہنا پڑے گا اور تماشائیوں کے بغیر کرکٹ میچوں کا انعقاد عجیب لگے گا لیکن اس کے علاوہ دیگر کوئی چارہ نہیں ہے ۔کرکٹ کہیں سے تو شروع کرنی ہی ہے تو یہ قدم اٹھانا ہی پڑے گا ۔تماشائیوں کے بغیر کرکٹ کا ہونا کافی عجیب لگے گا۔ عمران طاہر کا کہنا ہے کہ یہ ایسی صورت حال ہے جس پر ہمارا کنٹرول نہیں ہے ۔مگر ہمیں کرکٹ شروع کرنے کے لیے ایسا کرنا پڑے گا۔ عمران طاہر نے کہا کہ میچ کے دوران خوشی کا جشن منانے سے خود کو روکنا خاصا مشکل ہوگا، کچھ کھلاڑیوں کا جشن منانے کا انداز قدرتی ہوتا ہے ان کے لیے خود کو روکنا مشکل ہوگا۔عمران طاہر نے کہاہے کہ بابر اعظم اور وراٹ کوہلی دونو

کورونا بحران: مصری فٹبالر ’مٹھائی کا ٹھیلا‘ لگانے پر مجبور

قاہرہ/ کورونا وائرس کی عالمگیر وبا نے معروف مصری فٹبالر کو مالی بحران کے باعث ٹھیلے پر مٹھائیاں بیچنے پر مجبور کر دیا۔ عالمگیر قرار دی جانے والی مہلک ترین کووڈ-19 کی وبا نے جہاں بڑی بڑی معیشتوں کو مالی بحران سے دوچار کیا، وہیں مصر سے تعلق کھنے والے کلب فٹبالر مہروز محمود کو بھی معاش کی خاطر گلیوں میں سامان فروخت کرنے پر مجبور کردیا۔مہروز محمود مصر کے بنی سیف کلب کے لیے دفاعی پوزیشن میں فٹبال کھیلتے تھے جو ملک کا دوسرا بڑا کلب ہے لیکن ان فٹبال کلبوں کو بھی کورونا وائرس کی وبا نے بری طرح متاثر کر دیا ہے۔ ان دنوں مہروز محمود مصر کی مصروف ترین مارکیٹ میں واقع ایک مٹھائی کی دکان میں مٹھائیاں فروخت کر رہے ہیں تاکہ اس وبائی ایام کے دوران اپنے اہل خانہ کا گزر بسر چلا سکیں۔غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ مصری فٹبالر کو اپنے کلب کے لیے کھیلنے پر ماہانہ بنیادوں پر دو ڈالر ملتے تھے پھر بھی فٹبالر نے

تازہ ترین