حوصلہ بڑھانے اور ماحول مثبت بنانے میں کھلاڑی تعاون کریں:مودی

نئی دہلی/وزیراعظم نریندرمودی نے کھلاڑیوں سے کورونا کی وبا کے دوران ملک کا حوصلہ بڑھانے اور ماحول مثبت بنانے میں تعاون کرنے کی اپیل کرتے ہوئے جمعہ کو کہا کہ چیلنجوں کا سامنا کرنے کی صلاحیت ،خود کو ڈسیپلن کرنا اور خود پر اعتماد اس وائرس کے انفیکشن کا مقابلہ کرنے کے لئے بے حد ضروری ہے ۔مسٹر مودی نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ مشہور کھلاڑیوں کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا،‘‘کورونا وائرس پوری انسانیت کا دشمن ہے اور حالیہ حالات کی حساسیت کا پتہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ دوسری جنگ عظیم کے بعد پہلی بار اولملپک کھیلوں کو ملتوی کیاگیا ہے ۔اس وبا سے پیدا مشکلات کی وجہ سے ومبلڈن جیسے کئی دیگر اہم بین الاقوامی کھیلوں کا انعقاد اور کرکٹ سے متعلق انڈین پریمئر لیگ جیسے گھریلو کھیلوں کا انعقاد کی پہلے سے طے مدت میں تبدیلی کرنے پر مجبور ہونا پڑا۔وزیر اعظم نے کھیل کے میدان پر شاندار کارکردگی کا مظاہرہ ک

۔2014 کے دورہ انگلینڈ نے مجھے توڑ دیا تھا: وراٹ

 نئی دہلی/ دنیا کے بہترین بلے باز اور رن مشین سے معروف ہندستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی نے انکشاف کیا ہے کہ 2014 کے دورہ انگلینڈ کی ناکامی نے انہیں مکمل طور پر توڑ دیا تھا لیکن انہوں نے اس مایوسی سے نجات حاصل کر کے اپنے کیریئر کو سنوارا۔وراٹ نے جمعرات کو انگلینڈ کے سابق کپتان کیون پیٹرسن کے ساتھ انسٹاگرام پر بات چیت میں یہ انکشاف کیا۔ وراٹ نے 2014 کے دورہ انگلینڈ پر پانچ ٹیسٹ میچوں میں 134 رن بنائے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ دورہ ان کے کیریئر کا بدترین دور تھا اور یہ ایسا اس لئے بھی تھا کیونکہ وہ ٹیم کو ترجیح دینے کی جگہ اپنی ذاتی کارکردگی کو بہتر بنانے میں زیادہ دھیان دے رہے تھے ۔ہندوستانی کپتان نے کہا کہ 2014 کا انگلینڈ دورہ میری زندگی کا بدترین دور تھا۔ یہ ایک ایسا وقت تھا جب آپ بطور بلے باز جانتے ہوں کہ آپ ناکام ہوں گے اور رن نہیں بنا پائیں گے ۔ وہ ایسا وقت تھا جب مجھے لگ رہا

تازہ ترین