ڈبل انجن کی حکومت ہوتی ہے تو کام بھی دوگنی رفتار سے ہوتا ہے:مودی

گورکھپور//وزیر اعظم نریندر مودی نے اترپردیش کے گورکھپور میں گذشتہ 20سال سے کھاد کارخانہ بند پڑے رہنے کے لئے گذشتہ حکومتوں کی منشی کو خاطی قرار دیتے ہوئے منگل کو کہا کہ مفاد عامہ کے کاموں کے لئے حکومت کی سوچ جب ایماندار ہوتی ہے تو کوئی بھی روکاوٹ نہیں ڈال سکتا مودی نے یہاں کھاد کارخانہ، نو تعمیر شدہ ایمس اور آئی سی ایم آر کے جدید ریسرچ سنٹر سمیت دیگر ترقیاتی پروجکٹوں کا افتتاح کرتے ہوئے کہا’ جب غریب۔ استحصال زدہ۔محروم طبقات کی فکر کرنے والی حکومت ہوتی ہے تو وہ محنت بھی کرتی ہے نتائج بھی لا کر دکھاتی ہے۔   انہوں نے کہا کہ گورکھپور میں کھاد کارکھانہ، ایمس اور میڈیکل ریسرچ سنٹر کا شروع ہونا یہ پیغام دے رہا ہے کہ جب ڈبل انجن کی حکومت ہوتی ہے تو کام بھی تیز ہوتا ہے ۔جب سوچ ایماندار ہوتی ہے تو کوئی بھی روکاوٹ نہیں ڈال سکتا ہے۔ اس موقع پر اترپردیش کی گورنر آنندی بین پٹیل،

دفاع میں شراکت داری کیلئے ہند روس وزرائے خارجہ کی بات چیت

 نئی دہلی//ہندستان اور روس نے پیر کو دفاعی شعبے میں تعاون اور شراکت داری کو مضبوط بنانے کے لیے چار سمجھوتوں، معاہدوں اور پروٹوکول پر دستخط کیے ، جس میں فوج کے لیے 6 لاکھ اے کے ۔203 اسالٹ رائفلیں خریدنے کاسودا بھی شامل ہے ۔دفاعی ذرائع نے بتایا کہ ان سمجھوتوں، معاہدوں اور پروٹوکول پر یہاں سشما سوراج بھون میں فوج اور فوجی تکنیکی کمیشن سے متعلق ہندوستان-روس بین الحکومتی کمیشن کی 20ویں میٹنگ کے دوران تبادلہ خیال کیا گیا جس کی صدارت وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ اور روسی وزیر دفاع سرگئی شوئیگو نے کی۔اس دوران ان سمجھوتوں، معاہدوں اور پروٹوکول پر دستخط بھی کیے گئے ۔ دونوں ممالک کے وزیر سطحی ٹو پلس ٹو مذاکرات وزیر اعظم نریندر مودی اور روسی صدر ولادیمیر پوتن کے درمیان سالانہ چوٹی کانفرنس سے پہلے ہوئی۔دونوں فریقین نے ملاقات کے بعد کلاشنکوف سیریز کے چھوٹے ہتھیاروں کے معاہدے میں ترمیم کے پروٹوکول پر

ناگا لینڈ ہلاکتیں

نئی دہلی//یو این آئی// وزیر داخلہ امت شاہ نے کل ناگالینڈ کے واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ حالات کشیدہ مگر کنٹرول میں ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کی حکومت اس واقعہ میں ہلاک ہونے والوں کے کنبوں کے تئیں اپنی گہری تعزیت کا اظہار کرتی ہے ۔پیر کو ایوان زیریں لوک سبھا میں اس بارے میں بیان دیتے ہوئے مسٹر شاہ نے کہا کہ حکومت وہاں کے حالات پر قابو پا کر ماحول کو پرسکون کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور اس کے لیے وہ خود ریاستی حکومت کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں۔ مرکزی حکومت کے شمال مشرقی امور کے ایک سینئر افسر کو موقع پر بھیجا گیا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی اس واقعہ کی تحقیقات کے احکامات دیتے ہوئے ایک ماہ میں رپورٹ پیش کرنے کا کہا گیا ہے ۔واقعہ کی تفصیلی معلومات دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فوج کو ایک گاڑی سے عسکریت پسندوں کی نقل و حرکت کی اطلاع ملی تھی، اس لیے اس کے کمانڈوز نے مشکوک جگہ پر پہنچ کر گا

وسیم رضوی نے جتیندر نرائن سنگھ تیاگی نیا نام اختیار کرلیا

لکھنو//یو این آئی// اپنے متنازعہ بیانات پر اکثر سرخیوں میں رہنے والے شیعہ سنٹرل وقف بورڈ کے سابق صدر وسیم رضومی نے پیر کو سناتن مذہب اپنا لیا۔رضوی نے یہ اطلاع خود ایک ویڈیو میں جاری کی۔ غازی آباد کے ڈاسنا میں ایک مندر میں یتی نرسمہانند سرسوتی نے انہیں سناتن مذہب قبول کرایا۔رضوی نے کہاکہ مذہب تبدیلی کی یہاں پر کوئی بات نہیں ہے ، جب مجھ کو اسلام سے نکال دیا گیا تب یہ میری مرضی ہے کہ میں کس مذہب کو قبول کروں۔ سناتن مذہب دنیا کا سب سے پہلا مذہب ہے اور اس میں اتنی اچھائیاں ہیں جو کسی دوسرے مذہب میں نہیں ہیں۔ اسلام کو میں نے کبھی مذہب نہیں سمجھا۔ ہر جمعہ کو جمعہ کی نماز میں میرے اور یتی نرسمہانند کے سرپر انعام کی رقم بڑھا دی جاتی ہے ۔ا س لئے میں اپنی مرضی سے آج سناتن مذہب اپنا رہا ہوں۔اس موقع پر یتی نرسمہا نند سرسوتی نے کہاکہ وسیم رضوی تیاگی برادری سے جڑیں گے ۔ رضوی کا نام اب جتیندر نارائن س

ملک کی پہلی خاتون ماہر نفسیات شاردا مینن فوت

 چنئی//یو این آئی// ملک کی پہلی خاتون ماہرنفسیات اور شیزوفرینیا ریسرچ فاؤنڈیشن کی بانی شاردا مینن کا اتوار کی شام کو انتقال ہو گیا۔ وہ 98 برس کی تھیں ۔منگلورو میں پیدا ہونے والی محترمہ مینن نے اسی شہرمیں رہ کراپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد مدراس میڈیکل کالج سے گریجویشن کیا اور بنگلور کے این آئی ایم ایچ اے این ایس میں نفسیات کے شعبے میں تربیت حاصل کی۔ وہ طویل عرصے تک مینگلورو میں واقع انسٹی ٹیوٹ آف مینٹل ہیلتھ کی سربراہ رہیں ۔ محترمہ مینن نے 1984 میں شیزوفرینیا ریسرچ فاؤنڈیشن (اسکارف انڈیا) کی بنیاد رکھی۔ انہیں سنہ 1992 میں مرکزی حکومت نے پدم بھوشن سے نوازا تھا۔  

پارلیمنٹ ممبروں کیلئے ہیلتھ چیک اپ کیمپ

نئی دہلی//یواین آئی// ایوان زیریں لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا نے پیر کو پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں ارکان پارلیمنٹ کے لئے ایک ہیلتھ چیک اپ کیمپ کا افتتاح کیا۔یہ ہیلتھ چیک اپ کیمپ 10 دن تک جاری رہے گا اور اس میں موجودہ اور سابق ممبران پارلیمنٹ اپنی صحت کی جانچ کرا سکیں گے ۔ اس موقع پر مرکزی وزیر صحت اور خاندانی بہبود من سکھ مانڈویہ بھی موجود تھے ۔ ایوان بالا کے ڈپٹی چیئرمین ہری ونش، مرکزی وزراء پرہلاد جوشی اور ارجن رام میگھوال نے بھی افتتاحی تقریب میں شرکت کی۔ ہیلتھ چیک اپ کیمپ میں ماہرین کی خدمات حاصل ہوں گی۔

تازہ ترین