تازہ ترین

کانگریس کی ریلی کے خلاف عرضی دائر

جے پور//راجستھان میں عالمی وبا کورونا کے بڑھتے کیسز اور اس کے نئے ویرینٹ اومیکرون پر ممکنہ خطرے کے درمیان، کانگریس کی مہنگائی کو لے کر دارالحکومت جے پور میں 12 دسمبر کو مجوزہ ریلی کی مخالفت ہونے لگی ہے اور اسی کا شاخسانہ ہے کہ ہائی کورٹ میں اس بابت مفاد عامہ کی عرضی دائر کی گئی ہے ۔ ایڈوکیٹ راجیش موتھا نے عدالت میں مفاد عامہ کی عرضی دائر کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کانگریس کی ریلی میں جمع ہونے والے بھیڑ سے کورونا پھیلنے کا خطرہ ہے ، اس کی سماعت 6 دسمبر کو ہوگی۔ عرضی میں کہا گیا ہے کہ ریلی کے انعقاد سے کورونا کا خطرہ بڑھنے کا خدشہ ہے اور تیسری لہر کے ممکنہ خطرے کے درمیان ایسی تقریبات سے کورونا پھیل سکتا ہے ۔  

’ ان فنیٹی فورم‘2021 کاافتتاح

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے ڈیجیٹل لین دین اور بینکنگ نظام سے اس میں آئی تبدیلیوں کا حوالے دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان نے دنیا کو دکھادیا ہے کہ وہ ٹیکنالوجی کو اپنانے میں سب سے آگے ہے ۔وزیراعظم نریندر مودی نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ مالیاتی ٹکنالوجی کے قائدانہ فورم ، ’ ان فنیٹی فورم ‘کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ کرنسی کی تاریخ میں زبردست ارتقا دیکھنے کو ملا ہے ۔وزیراعظم نے بتایا کہ پچھلے سال ہندوستان میں پہلی بار، اے ٹی ایم سے نقد پیسے نکالنے کے مقابلے موبائل سے زیادہ ادائیگیاں کی گئیں۔مکمل طور پر ڈیجیٹل بینک جن کا کوئی فزیکل برانچ آفس نہیں ہے ، پہلے ہی ایک حقیقت بن چکے ہیں اور ان میں سے کچھ بینک ایک دہائی سے بھی کم عرصہ میں عوامی مقام بنے ہیں۔ وزیراعظم مودی نے کہا کہ 2014  میں صرف 50 فیصد ہندوستانیوں کے پاس بینک اکاؤنٹ تھے ، لیکن گزشتہ سات سال کے دوران ہندوستان

پارلیمنٹ کاسرمائی اجلاس

نئی دہلی// اپوزیشن جماعتوں کی طرف سے لوک سبھا میں زبردست ہنگامے کے دوران حکومت نے کل 'سینٹرل ویجیلنس کمیشن (ترمیمی) بل 2021' کو منظوری دے دی، جس میں سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کے ڈائریکٹروں کی میعاد میں پانچ سال کی توسیع کی گئی ہے ۔ جیسے ہی اسپیکر اوم برلا نے وزیر اعظم کے دفتر میں وزیر مملکت جتیندر سنگھ سے بل کو ایوان میں پیش کرنے کے لیے کہا کانگریس اور ترنمول کانگریس سمیت اپوزیشن جماعتوں کے اراکین نے اس کی سخت مخالفت کی اور کہا کہ حکومت سی بی آئی اور ای ڈی پر شکنجہ کس کر ایجنسی کو کنٹرول کرنے کی کوشش کررہی ہے ۔کانگریس کے ادھیر رنجن چودھری، کے سریش اور ششی تھرور نے اس بل کی سخت مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پارلیمنٹ کے اجلاس کے آغاز سے چند دن پہلے بغیر بحث کیے اس سلسلے میں آرڈیننس لے کر آئی اور اس نے سب سے پہلے یہی غلط کام کرکے

آلودگی پرقابوپانے ٹاسک فورس تشکیل

نئی دہلی //مرکزی حکومت نے دہلی۔این سی آر میں جاری فضائی آلودگی کے سلسلے میں ایک ٹاسک فورس تشکیل دی ہے۔ مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ میں حلف نامہ داخل کرکے اس کی جانکاری دی ہے۔ جمعہ کو سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران سالیسٹر جنرل تشار مہتا نے بتایا کہ آلودگی سے نمٹنے کے لیے حکومت نے انفورسمنٹ ٹاسک فورس اور فلائنگ اسکواڈ تشکیل دیا ہے۔ یہ ٹاسک فورس پانچ ارکان پر مشتمل ہے اور اسے قانون سازی کے اختیارات دیے گئے ہیں۔ ٹاسک فورس کو سزا اور روک تھام کے لئے قانون سازی کے اختیارات دیئے گئے ہیں۔مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ میں دیے گئے اپنے حلف نامہ میں کہا کہ 17 فلائنگ اسکواڈ براہ راست انفورسمنٹ ٹاسک فورس کو رپورٹ کریں گے۔   

تازہ ترین