تازہ ترین

ملک میں کورونا کے سرگرم معاملات میں پھر کمی واقع

نئی دہلی//ملک میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس (کووڈ۔19) کے سرگرم معاملوں میں پھر سے کمی آئی ہے اور سرگرم معاملوں کی شرح کم ہوکر 4.85 فیصد پر آگئی ہے ۔ملک میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران سرگرم معاملوں میں 4047 کی کمی آئی ہے جس سے یہ تعداد کم ہوکر 4,39,747 رہ گئی ہے ۔ گزشتہ کچھ دنوں سے سرگرم معاملوں میں مسلسل کم آرہی تھی لیکن جمعہ کو اس تعداد میں 491 کا اضافہ ہوا تھا۔ اس دوران ملک میں کورونا کے معاملے 90.50 لاکھ سے زیادہ ہوگئے ہیں لیکن اطمینان کی بات یہ ہے کہ اس بیماری سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور صحتیاب ہونے کی شرح بڑھ کر 93.67 فیصد آگئی ہے ۔وزارت صحت وخاندانی فلاح وبہبود کی وزارت کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 46,232 نئے معاملے سامنے آئے اور متاثروں کی تعداد بڑھ کر 90.50 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے ۔ اس دوران 49,715 مریض صحتیاب ہوئے ہیں

۔2022 میں پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس نئی عمارت میں ہوگا

 نئی دہلی// پارلیمنٹ کی نئی عمارت کا سنگ بنیاد اگلے ماہ ہونے اور آزادی کی 75 ویں سال گرہ کے بعد 2022 کا سرمائی اجلاس کا انعقاد نئی عمارت میں ہونے کا امکان ہے ۔لوک سبھا صدر اوم برلا نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ پارلیمنٹ کی نئی عمارت کے لئے کام شروع ہوچکا ہے ۔تعمیراتی کام میں اس بات کا پورا دھیان رکھا جائے گا کہ فضا اور صوتی آلودگی نہ ہو اور نہ ہی حالیہ عمارت میں پارلیمنٹ کی کارروائی یا انتظامیہ کام کاج میں رخنہ پڑے ۔انہوں نے کہا کہ اکتوبر 2022 تک یہ نیا پارلیمنٹ ہاؤس بن کر تیار ہوجائے گا اور آزادی کی 75ویں سالگرہ کے موقع پر پارلیمنٹ کا اجلاس نئی عمارت سے چلایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی سنگ بنیاد کا پروگرام منعقد کیا جائے گا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے واضح کیا کہ سنگ بنیاد دسمبر میں ہی ہوجائے گا۔مسٹر برلا نے کہا کہ موجودہ پارلیمنٹ تقریبات کے انعقاد کے لئے زیادہ موث

۔320 کروڑ کی لاگت سے 28 فوڈ پروسیسنگ یونٹس کے پروجیکٹوں کی منظوری

 نئی دہلی// حکومت نے 320.33کروڑ روپے کے پروجیکٹ کوسٹ سے بنائی جانے والی 28 فوڈ پروسیسنگ یونٹس کو منظوری دی ہے ۔دس ریاستوں میں منظور شدہ ان پروجیکٹوں سے 10 ہزار سے زائد افراد کو روزگار ملے گا۔ ان میں شمال مشرقی ہندوستان کے چھ منصوبے بھی شامل ہیں۔ ہفتہ کے روز فوڈ پروسیسنگ انڈسٹری کے مرکزی وزیر نریندر سنگھ تومر کی زیرصدارت منعقدہ میٹنگ میں فوڈ پروسیسنگ یونٹوں کو منظوری دی گئی۔ اس میٹنگ میں مرکزی وزیر مملکت برائے فوڈ پروسیسنگ انڈسٹریز رامشور تیلی بھی موجود تھے ۔ منصوبوں کے پروموٹرس نے بھی ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ حصہ لیا۔ فوڈ پروسیسنگ یونٹوں کے قیام کے لیے پردھان منتری کسان سنپدا یوجناکے تحت تین مئی 2017 کو فوڈ پروسیسنگ اور تحفظ کی صلاحیت پیدا کرنے / توسیع اسکیم کومنظورکیا گیا تھا۔ اس اسکیم کا بنیادی مقصد پروسیسنگ اور تحفظ کی صلاحیتوں کی تعمیر اورموجودہ فوڈ پروسیسنگ یونٹس کی جدت طرازی/

امیت شاہ کاشاندار استقبال ، چنئی پہنچے

چنئی //بی جے پی کے سینئر رہنما اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ آئندہ چار پانچ مہینوں کے دوران ہونے والے تمل ناڈو اسمبلی انتخابات سے قبل ریاست کے دو روزہ دورے پر ہفتہ کو یہاں پہنچے۔مسٹر شاہ کی حکمت عملی کو حال ہی میں ختم ہونے والے بہار انتخابات میں قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کی کامیابی میں بہت اہم سمجھا جاتا ہے۔ تمل ناڈو میں اس کامیابی کو دہرانے کے ارادے سے ، بی جے پی مسٹر شاہ کے دورے کے لئے ایک مضبوط بنیاد فراہم کرنا اور انتخابات میں اپنا نشان چھوڑنا بہت اہم سمجھتی ہے۔مسٹر شاہ کی آمد پر ، ریاست کے وزیر اعلی اور حکمراں اے آئی اے ڈی ایم کے کے شریک کنوینر ای کے پلاینی سوامی ، نائب وزیر اعلی اور اے آئی اے ڈی ایم کے کنوینر اے پنیرسلوم اور سینئر وزرا کے علاوہ ریاستی بی جے پی صدر ایل مورگن ، پارٹی کے سینئر رہنما ایل گنیشن اور پارٹی انچارج سی ٹی روی نے ہوائی اڈے پر ان کا استقبال کیا۔ریاست

ریاست کے دیگر حصوں میں لوکل ٹرین چلانے کی حکومت نے اجازت دی

 کلکتہ//کالی پوجا سے قبل کلکتہ شہر اور مضافات میں لوکل ٹرین سروس شروع ہونے کے بعد اب مغربی بنگال حکومت نے ریاست کے دوسرے حصوں میں بھی لوکل ٹرین چلانے کی اجازت دیدی ہے۔اس سے قبل مغربی بنگال حکومت نے کلکتہ و مضافات میں لوکل ٹرین چلانے کی اجازت دی تھی۔مگر دوسرے حصوں میں لوکل ٹرین چلانے کی اجازت نہیں دئیے جائے کی وجہ سے مقامی لوگ ناراض تھے۔عوامی ناراضگی کے پیش نظر اب بنگال حکومت نے ریلوے کو خط لکھ کر دیگر علاقوں میں لوکل ٹرین چلانے کی اجازت دی ہے۔تاہم ، ریلوے کے حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ ابھی تک کلیئرنس موصول نہیں ہوئیہیں۔اس وقت مرشدآباد۔بردوان ، برداون۔صاحب گنج۔ٹٹو کٹوا۔عظیم گنج کے درمیان لوکل ٹرین نہیں چل رہی ہے۔بہرام پور کے رکن پارلیمنٹ ادھیر چودھری نے وزیر ریلوے کو خط لکھ کر لوکل ٹرین چلانے کا مطالبہ کیا تھا۔کانگریس کے ایم ایل اے ملٹن راشد نے وزیر اعلی ممتا بنرجی کو خط لکھ کر ضلع ب