تازہ ترین

ہندستان ایک ارب ٹیکہ کاری کی طرف گامزن

نئی دہلی//سیاسی مخالفت، افواہ، توہم پرستی، بنیادی ڈھانچے کی کمی اور بین الاقوامی تجارتی دباو اور جغرافیائی رکاوٹوں کے باوجود ہندستان کووڈ ٹیکہ کاری مہم ایک ارب کووڈ ٹیکے لگانے کے جادوئی اعدادوشمار کو حاصل کرنے والا ہے ۔تازہ اعدادو شمار کے مطابق منگل کو ہندستان میں 99کروڑ سے زیادہ ٹیکے لگائے جاچکے ہے ۔ ملک کی تقریباً 95فیصد اہل آبادی کو کووڈ کا ٹیکہ لگایا جاچکا ہے ۔ یہ آبادی یوروپی یونین کے تمام ممالک اور پورے امریکہ کی مجموعی آبادی کے تقریباً برابر ہے ۔اعدادوشمار میں کہا گیا ہے کہ ریاستوں کو اب تک 102کروڑ ٹیکوں کی فراہمی کی جاچکی ہے جبکہ دس کروڑ سے زیادہ ٹیکے فراہمی کے عمل میں ہیں۔مرکزی صحت کے سکریٹری راجیش بھوشن نے آن لائن کووڈ ویکسینیشن مہم کی پیش رفت اور حیثیت کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ قوم ایک ارب کووڈ ویکسین کی فراہمی کے قریب ہے ’ تمام ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں می

اُتراکھنڈ میں بارشوں سے تباہی

نینی تال// اتراکھنڈ کے کوماؤں ڈویژن کے نینی تال اور الموڑہ اضلاع میں گزشتہ تین دنوں سے جاری بارش کے قہرسے 29 افراد کی موت ہوگئی ہے جبکہ ایک شخص لاپتہ ہے ۔اس بارش کے قہر سے سب سے زیادہ نقصان نینی تال ضلع میں ہوا ہے ۔ اس ضلع میں 25 افراد کی بارشوں سے پیش آئے حادثات کی وجہ سے موت ہوئی ہے ۔ رام گڑھ بلاک کے جھوتیا-سکونا گاؤں میں نو مزدوروں زندہ دفن ہوگئے ۔ بتایا جا رہا ہے کہ سڑکوں کے بند ہو جانے سے اسٹیٹ ڈیزاسٹر رسپانس فورس (ایس ڈی آر ایف) اور نیشنل ڈیزاسٹر رسپانس فورس (این ڈی آر ایف) کی ٹیمیں یہاں نہیں پہنچ پائی ہیں ، جس کی وجہ سے راحت رسانی کے کام سرانجام نہیں دیے جا رہے ہیں ۔سٹیٹ ڈیزاسٹر ریلیف فورس (ایس ڈی آر ایف) اتراکھنڈ میں گزشتہ دو دنوں سے مسلسل بارش کی وجہ سے ندیوں میں پانی کی سطح میں اضافے کی وجہ سے لینڈ سلائیڈنگ کے حادثوں پھنسے ہوئے لوگوں کو بچانے میں مصروف ہے ۔ ایس ڈي آر ایف کے

یو پی اسمبلی انتخابات

لکھنؤ//یواین آئی//کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے اعلان کیا ہے کہ ان کی پارٹی اترپردیش میں اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں 40فیصدی خواتین کو ٹکٹ دے گی۔محترمہ واڈرا نے منگل کو پارٹی کے ریاستی دفتر پر پریس کانفرنس میں کہا کہ اترپردیش کی سیاست میں خواتین کی شراکت داری بڑھانے اور انہیں بااختیار بنانے کے لئے کانگریس نے یہ اہم فیصلہ کیا ہے ۔ یہ فیصلہ ریاست کی ہر اس خاتون کے لئے ہے جو تبدیلی چاہتی ہے انصاف چاہتی ہے اور ایسا اسی وقت ممکن ہے جب اس میں یکسانیت اور سماجی سیکورٹی کا احساس پیدا ہوسکے ۔انہوں نے کہا کہ کانگریس کی لڑائی انتخاب میں کسی خاص پارٹی سے نہیں بلکہ ایک نئے طریقے کی سیاست کو بنانے کے لئے ہے ۔

سابق مرکزی وزیر بابل سپریہ لوک سبھا کی رکنیت سے مستعفی

 کلکتہ//سابق مرکزی وزیر بابل سپریہ نے کل لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا کی رہائش گاہ پر ملاقات کرکے آسنسول سے پارلیمنٹ کی رکنیت سے استعفیٰ نامہ سونپ دیا ہے ۔ترنمول کانگریس میں شامل ہونے کے بعد انہوں نے کہا تھا کہ چوں کہ وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر آسنسول سے لوک سبھا کے رکن منتخب ہوئے ہیں۔اس لئے وہ استعفیٰ دیں گے ۔ساتھ ہی انہوں نے کہا تھا کہ چوں کہ لوک سبھا کے اسپیکر سے ملاقات کیلئے وقت نہیں مل رہا ہے اس لئے اس میں تاخیر ہوررہی ہے ۔