تازہ ترین

ملک میں کورونا کے93337 نئے کیس، اب تک 85 ہزار سے زائد ہلاکتیں

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس کے کیسوں میں دو دن کے دوران اضافے کے بعد گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران نئے کیسوں میں کچھ کمی واقع ہوئی ہے اور93337نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں جس سے کورونا متاثرین کی تعداد 53 لاکھ سے زائد ہوگئی ہے جبکہ اسی عرصہ میں ریکارڈ95880 افراد شفایابی کے ساتھ ہی جان لیواوبا سے صحت مند ہونے والے مریضوں کی مجموعی تعداد بڑھ کر 42 لاکھ سے زیادہ ہوگئی۔ جان لیوا وبا سے صحت مند افراد کی تعداد کے لحاظ سے ہندوستان نے امریکہ کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ دنیا کے سبھی ممالک کے مقابلہ میں ہندوستان میں کورونا کے شفایاب مریضوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔  

ملک میں کورونا کے 96424 نئے کیس

نئی دہلی //جمعرات کو ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں سب سے زیادہ اور ریکارڈ اضافے کے بعد گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایک بار پھر 96،424 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جس سے کورونا متاثرین کی تعداد 52 لاکھ سے متجاوز ہوچکی ہے جبکہ اسی عرصہ کے دوران ریکارڈ 87،472 افراد کی شفایابی سے صحتیاب مریضوں کی تعداد بڑھ کر 41 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے ۔جمعہ کو مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کی جانب سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران متاثرہ مریضوں کی تعداد 96،424 سے بڑھ کر مجموعی تعداد 52،14،677 ہوگئی۔ اس سے قبل جمعرات کو سب سے زیادہ (97،894) نئے کیسزرپورٹ ہوئے جبکہ اس سے پہلے دو دن میں نئے کیسز میں کمی آئی تھی۔اسی عرصے کے دوران 87 ہزار سے زیادہ مریض صحت مند ہوئے ہیں جس سے کورونا سے شفایابی حاصل کرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 41،12،551 ہوگئی ہے ۔ اسی مدت کے دوران مزید 1174 مریضوں ک

وزیر اعظم کی ماسک پہننے اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھنے کی اپیل

 نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے سالگرہ کی مبارکباد پیش کرنے والوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ان سے اپیل کی کہ وہ کورونا وائرس (کووڈ۔ 19) کے وبا کو دیکھتے ہوئے ماسک پہنیں اوردو گز کا جسمانی فاصلہ رکھیں۔مسٹر مودی کی 70 ویں سالگرہ جمعرات 17 ستمبر کو تھی اور انہیں اس موقع پر بہت سارے مبارکباد کے پیغامات موصول ہوئے اور ان کے بہت سارے خیر خواہ ان سے اس بارے میں جاننا چاہتے تھے کہ انہیں اس موقع پر ان سے کیا توقع ہے ، تومسٹر مودی نے کورونا کے خلاف تمام احتیاطی تدابیر اختیار کرنے ، اپنی قوت مدافعت بڑھانے کے علاوہ اپنی صحت بنانے میں تعاون دینے کی اپیل کی کہ وہ اپنے ملک اور گھر کو صحت مند بنانے میں اپنا کردار ادا کریں۔ مسٹر مودی نے ٹویٹ کیا ‘‘بہت سے خیر خواہوں نے یہ جاننا چاہا ہے کہ میں اپنی سالگرہ کے موقع پر ان سے کیا توقع کرتا ہوں ، مجھے ان سے ماسک پہننے ، جسمانی فاصلہ برقرار

راجیہ سبھا میں ایم پی فنڈ کو بحال کرنے کا مطالبہ کیا گیا

نئی دہلی// کورونا وائرس کی عالمی وبا سے نمٹنے کے لئے مالی مشکلات کی وجہ سے ممبران پارلیمنٹ اور وزرا کی تنخواہوں میں 30 فیصد کٹوتی کی حمایت کرتے ہوئے راجیہ سبھا میں جمعہ کے روز اراکین نے مطالبہ کیا کہ حکومت ایم پی فنڈ کو بحال کرے تاکہ  متعلقہ پارلیمانی حلقوں میں ترقیات اور عوامی مفادات کے کام ہوسکے ۔راجیہ سبھا میں اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہ، بھتے اور پنشن (ترمیمی) بل 2020 اور وزراء کی تنخواہ اور بھتے (ترمیمی) بل 2020 پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے ایوان میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد نے کہا کہ حکومت کو ایم پی فنڈ بند نہیں کرنا چاہئے ۔یہ رقم بہت بڑی نہیں ہے اور یہ عوامی فلاح و بہبود میں خرچ ہوتی ہے ۔ ایم پی فنڈ سے چھوٹی سڑکیں اور پل بنائے جاتے ہیں۔بہت سے علاقوں میں ایم پی فنڈ سے ایمبولینس خریدی گئی ہے ۔ یہ عوام کا پیسہ ہے اور عوام پر ہی خرچ کیا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ واحد اسکی

راہل کی مودی پرتنقید

نئی دہلی//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کا نریندر مودی حکومت پر حملہ بلا روک ٹوک جاری ہے اور جمعہ کے روز انہوں نے کوروناواریئر کا ڈیٹا نہیں ہونے کے معاملے میں گھیرا ۔وایناڈ کے رکن پارلیمنٹ مسٹر گاندھی نے ٹویٹ کیا ‘‘ ڈیٹا سے پاک مودی سرکار، تھالی بجانے ،دیا جلانے سے زیادہ ضروری ہے ان کا تحفظ اور احترام ۔ مودی سرکار کورونا واریئر کی اتنی توہین کیوں’’۔ واضح رہے کہ مرکزی وزیر مملکت برائے صحت اور خاندانی بہبود اشونی کمار چوبے نے کورونا واریئرکے ڈیٹا کے متعلق راجیہ سبھا میں کہا تھا کہ طبی خدمات ریاستی حکومت کے ماتحت ہیں۔ اس لئے مرکز کے پاس اس تعلق سے کوئی اعداد وشمار نہیں ہیں ۔یواین آئی ۔  

کسانوں کے متعلق بلوں پر ریاستوں سے مشاورت نہیں کی گئی : چدمبرم

نئی دہلی//کانگریس کے سینئر رہنما اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے لوک سبھا میں کسانوں سے متعلق دو بلوں کی منظوری کے سلسلے میں پنجاب اور ہریانہ کے کسانوں کے احتجاجی مظاہرے پر جمعہ کے روز کہا یہ عوام اور حکومت کے مابین فاصلے کو ظاہر کرتا ہے اوراس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریاستوں سے مشاورت نہیں کی گئی ہے ۔ مسٹرچدمبرم نے آج کئی ٹویٹ کئے ۔ انہوں نے کہا کسانوں کے متعلق دو بلوں کو لوک سبھا نے منظوری دے دی ہے ۔ پنجاب اور ہریانہ کے کسان احتجا جی مظاہرے کر رہے ہیں ۔ یہ عوام اور حکومت کے مابین فاصلے کو ظاہر کرتا ہے ۔کانگریس لیڈر نے کہا ‘‘ دونوں بل ہمارے سابق فوڈ سیکیورٹی نظام کے تین التزام کو چیلنج کرتے ہیں۔ وہ ہیں ، منیمم اسپورٹ پرائس (ایم ایس پی) ، پبلک پروکیورمنٹ اور پبلک ڈسٹری بیوشن سسٹم (پی ڈی ایس) ۔انہوں نے کہا ‘‘ تمل ناڈو کے کسانوں نے مجھے بتایا کہ وہ1150 روپے کے ایم ایس

تازہ ترین