ملک میں کورونا متاثرین کی تعداد 51۔93لاکھ اور ہلاکتیں 36۔1لاکھ سے زائد

نئی دہلی// ملک میں لگاتار تین دن تک کورونا وائرس کے فعال کیسوں میں اضافے کے بعد ہفتہ کو پھر اس میں کمی آئی ہے۔ مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کےمطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کوروناوائرس کے41322 نئے کیس رپورٹ ہوئے جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد 93.51 لاکھ سے زائد ہوگئی۔ ملک کے اندر کورونا ہلاکتوں کی تعدادایک لاکھ36ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے۔ نئے کیسوں کے مقابلہ میں شفایاب ہونے والے مریضوں کی زیادہ تعداد کی وجہ سے ایکٹیو کیس میں 615 عدد کی کمی آئی ہے جس سے یہ تعداد 454940رہی۔  

ملک کی سالمیت پر کوئی سمجھوتہ نہیں : راجناتھ سنگھ

سرینگر//مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ مشرقی لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن اور ہند ۔پاک سرحدوں پر تعینات بھارتی فوج کو بھر پور انداز میںجواب دینے کی کھلی چھوٹ ہے۔ ہندوستان ٹائمز لیڈرشپ سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے راجناتھ سنگھ نے کہاکہ  چین اور ہندوستان کے مابین سرحدی تنازعہ حقیقی کنٹرول لائن تبدیل کرنے کی کسی بھی کوشش سے مؤثر انداز میں نمٹنے کیلئے مسلح افواج کو ایک آزاد ہاتھ دیا گیا ہے ۔انہوںنے کہا کہ میںملک کے عوام کو یقین دینا چاہتا ہوںکہ چاہئے لداخ ہو یاں پاکستان سے لگنے والی سرحدیں ہوں ، ہمارے فوج اُس پار سے ہونے والی ہر کارروائی کا بھر انداز میں جواب دے رہی ہے اور ملک کی سالمیت اور سیکورٹی کو نقصان پہنچنے کی کوئی بھی کوشش کو کامیاب نہیںہونے دیں گے ۔راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ’میں سب کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی حکومت بھارت کی خودمختاری

مودی ویکسین بنانے والی تین کمپنیوں کا دورہ کریں گے

نئی دہلی//دنیا بھر میں کورونا ویکسین کا بے صبری سے انتظار کیا جارہا ہے، اس کی تیاری کس مرحلے میں ہے اور وہ کب تک بازار میں دستیاب ہوگی، اس بارے میں معلومات حاصل کرنے کے لیے وزیر اعظم نریندر مودی ہفتہ کے روز ویکسین بنانے والی تین کمپنیوں کا دورہ کریں گے۔وزیر اعظم کے دفتر نے بتایا کہ مسٹر مودی احمد آباد کی ویکسین بنانے والی زیڈس بایوٹیک پارک، حیدرآباد میں واقع بھارت بائیوٹیک اور پونے کی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کا دورہ کریں گے۔ اس سے وزیر اعظم کو کورونا ویکسین کی تیاری مرحلے اور اس سے متعلق چیلنجوں کے بارے میں معلومات حاصل ہوں گی۔وزیر اعظم کے دفتر نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ''وزیر اعظم نریندر مودی کورونا وائرس کی ویکسین بنانے کے عمل کا جائزہ لینے کے لئے خود کل تین شہروں کا دورہ کریں گے۔ وہ احمد آباد کے زیڈس بائیوٹیک پارک، حیدرآباد میں بھارت بائیوٹیک اور پونے میں سیرم انسٹی ٹیوٹ

اقتدارمیں آئے تو کسان مخالف تینوں قوانین ختم کردیں گے: سونیا - راہل

نئی دہلی// کانگریس صدر سونیا گاندھی اور سابق صدرراہل گاندھی نے کسانوں کی تحریک کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ اقتدارمیں آنے پر حال ہی میں پاس کسان مخالف تینوں قوانین کو پھاڑکر ردی کی ٹوکری میں پھینک دیں گے کانگریس پارٹی شعبہ مواصلات کے سربراہ رندیپ سنگھ سرجے والا نے جمعہ کے روز یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ مسز گاندھی اور مسٹرراہل گاندھی نے وعدہ کیا ہے کہ جب کانگریس مرکز میں اقتدار سنبھالے گی تو وہ پہلے کسان مخالف قوانین کو ختم کردے گی۔انہوں نے کہا کہ کانگریس شروع سے ہی ان تینوں قوانین کی مخالفت کرتی رہی ہے۔ ان قوانین کی مخالفت کرنے پر ان کے ممبران پارلیمنٹ کو پارلیمنٹ میں معطلی کا بھی سامنا کرنا پڑا۔ جن ریاستوں میں کانگریس کی حکومتیں ہیں، وہاں کسانوں کوان قوانین کی وجہ سیکوئی نقصان نہ ہو اسی لئے ان کے تحفظ کیلئے الگ سے قانون بنایا جارہاہے۔کانگریس ترجمان نے کہا کہ کسانوں کا تعلق کسی خاص پار

ارنب کے خلاف الزامات قائم نہیں ہوتے: سپریم کورٹ

نئی دہلی//عدالت عظمی نے ریپبلک ٹی وی کے چیف ایڈیٹر ارنب گوسوامی کو خودکشی پر اکسانے کے معاملے میں دی گئی عبوری ضمانت کی تفصیلی وجوہات جمعہ کے روز بتائی، جس کے مطابق مہاراشٹرا پولس کے ذریعہ درج ایف آئی آر سے بادی النظر میں ان کے خلاف الزام ثابت نہیں ہوتا ہے۔عدالت نے اپنے 55 صفحات پر مشتمل فیصلے میں واضح کیا ہے کہ ارنب گوسوامی کو دی گئی عبوری ضمانت بمبئی ہائی کورٹ میں ان کی زیر التواء درخواست ضمانت کو نمٹائے جانے تک جاری رہے گی۔ اتناہی نہیں بلکہ اگر ہائی کورٹ کا فیصلہ ارنب کے خلاف آتا ہے، تب بھی انہیں ہائی کورٹ کے فیصلے کے دن سے چار ہفتوں تک عبوری ضمانت کا تحفظ حاصل رہے گا۔جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ اور جسٹس اندرا بینرجی کی ڈویژن بنچ نے 11 نومبر کو ارنب اور دو دیگر ملزمان کو عبوری ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اپنے فیصلے کی تفصیلی وجوہات بعد میں جاری کرے گی۔عدالت نے آج ا

ملک میں کورونا کیس93لاکھ اورہلاکتیں 1.35 لاکھ سے متجاوز

نئی دہلی// ملک میں کوروناوائرس کے 43 ہزار سے زیادہ نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں جس متاثرہ مریضوں کی تعداد 93 لاکھ سے متجاوز کر چکی ہے جبکہ ایکٹیو کیسز کی شرح میں اضافہ مسلسل جاری ہے۔ مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران43082 نئے کیس رپورٹ ہوئے جس سے کورونا متاثرہ افراد کی تعداد 93.09 لاکھ ہوگئی۔ فعال کیسوںکی تعداد 3211 ہوگئی ہے جبکہ نئے کیس بڑھ کر 4.55 لاکھ ہوگئے۔  اسی عرصے کے دوران39379 مریض صحت مند ہوئے جس سے شفایاب ہونے والے مریضوں کی مجموعی تعداد 87.18 لاکھ سے زائد ہوچکی ہے۔  اسی عرصے میں 492 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ اموات کی تعداد بڑھ کر 1،35،715 ہوگئی ہے۔ ملک میں ایکٹیو کیسوں کی شرح بڑھ کر 4.89 فیصد،شفایابی کی شرح 93.65 جبکہ اموات کی شرح اب بھی 1.46 فیصد ہے۔  

راج کوٹ کے کووڈ اسپتال میں خوفناک آتشزدگی، 5 ہلاک ، 28 زخمی

راج کوٹ// گجرات کے شہر راج کوٹ کے مالویہ نگر علاقے میں واقع ایک کووڈ اسپتال میں گذشتہ نصف شب خوفناک آتشزدگی میں پانچ افراد ہلاک اور 28 زخمی ہوگئے۔ تھانہ انچارج کے این بھوکان نے بتایا کہ آنند بنگلہ چوک کے قریب واقع تین منزلہ ادے شیوانند کووڈ سینٹر اسپتال کی پہلی منزل پر اچانک آگ بھڑک اٹھی۔ اسپتال میں کل 33 مریض داخل تھے۔ واقعہ میں آئی سی یو میں داخل 11 مریضوں میں سے 5 کی موت ہوگئی ، جبکہ آئی سی یو کے دیگر 6 مریضوں سمیت 28 افراد جھلس گئے۔ جھلسے ہوئے افراد کو دوسرے اسپتالوں میں داخل کرایا گیا ہے۔ فائر ڈیپارٹمنٹ کے اہلکاروں نے بتایا کہ فائر فائٹرز نے آگ لگنے کی اطلاع ملتے ہی چھ فائر بریگیڈ گاڑیوں کے ساتھ موقع پرپہنچ گئے۔ آگ بجھانے والے عملے نے آج صبح تقریبا چھ گھنٹے کی مشقت کے بعد آگ پر قابو پالیا۔ آگ لگنے کی وجوہات کا پتہ لگایا جا رہا ہے۔  

ہندوستانی بحریہ کا مگ 29 طیارہ گر کر تباہ ، ایک پائلٹ لاپتہ

نئی دہلی// بحریہ کا ایک ٹرینی مگ 29 لڑاکا طیارہ گذشتہ شام بحیرہ عرب کے اوپر گر کر تباہ ہوگیا۔ طیارے کے ایک پائلٹ کو بچا لیا گیا ہے جبکہ دوسرے کی تلاش کے لئے مہم جاری ہے۔ بحریہ کے ترجمان نے جمعہ کوبتایا کہ طیارہ جمعرات کی شام تقریبا 5 بجے گر کر تباہ ہوا جب وہ گوا کے قریب بحیرہ عرب کے اوپر پروازکررہا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ جمعہ کی صبح ایک پائلٹ کو ڈھونڈ لیا گیا ہے جبکہ دوسرے کی تلاش کے لئے ہیلی کاپٹروں اور جنگی جہازوں کے ساتھ آپریشن شروع کردیا گیا ہے۔ حادثے کے اسباب کی تحقیقات کے احکامات جاری کردیئے گئے ہیں۔ یاد رہے کہ گزشتہ ایک سال میں مگ 29 طیارے کے حادثے کا یہ تیسراواقعہ ہے۔ اس سے قبل پچھلے سال 16 نومبر اور 23 فروری کو مگ 29 طیارہ گرکرتباہ ہوا تھا۔ بحریہ کا بیڑا 40 مگ 29 جنگی طیاروں پر مشتمل ہے۔ دو انجن والا مگ۔29 روس میں تیار کیا گیا ہے اور یہ طیارہ بحریہ کے ہنسا بحری اڈے

ملک میں دوسرے دن بھی 44 ہزار سے زائد نئے معاملات، 524ہلاکتیں

 نئی دہلی//ملک میں دوسرے دن بھی کورونا وائرس(کووڈ19) کے 44 ہزار سے زیادہ نئے کیسز سامنے جس سے فعال کیسزکی تعداد ساڑھے چار لاکھ سے زیادہ ہوگئی مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کے مطابق گزگشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 44،489 نئے کیسز سامنے آئے جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد 92.66 لاکھ سے زائد ہوگئی۔ ایکٹیو کیسز کی تعداد 7598 سے بڑھ کر مجموعی 4.52 لاکھ سے زیادہ ہوگئی۔ اسی مدت کے دوران 36،367 مریض شفایاب ہوئے جس سے جان لیوا کورونا وائرس کو شکست دینے والوں کی تعداد اب بڑھ کر 86.79 لاکھ سے زائد ہوگئی ہے۔ اسی مدت میں 524 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ اموات کی تعداد 1 لاکھ 35 ہزار 223 ہوگئی ہے۔ ملک میں ایکٹیوکیسز کی شرح بڑھ کر 4.88 فیصد، شفایابی کی شرح 93.66 جبکہ اموات کی شرح اب بھی 1.46 فیصد ہے۔ملک میں جان لیوا اور مہلک ترین عالمی وبا کووڈ۔19 سے سب سے زیادہ متاثر ریاست مہاراشٹر ہ

کورونا علاج،جانچ کی شرح طے کرنے سے متعلق عرضی کی سماعت دو ہفتے ملتوی

نئی دہلی//سپریم کورٹ نے ملک کے نجی اسپتالوں میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے علاج کی زیادہ شرح اور ملک میں آر ٹی پی سی آر اسکریننگ کی شرح کے متلاشی طلب کرنے کی درخواست کی سماعت جمعرات کے روز ملتوی کردی۔چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس وی رما سبرمنیئم پر مشتمل ڈویژن بنچ نے کہا کہ علاج کی قیمت اتنی زیادہ نہیں ہونی چاہئے کہ لوگ صحت کی دیکھ بھال کے فوائد حاصل نہ کرسکیں۔ تاہم، عدالت نے آج متعلقہ معاملے پر تفصیلی سماعت منعقد کرنے سے قاصر ہونے کا اظہار کیا۔بنچ ابھیشیک گوینکا اور پیشہ سے ایک وکیل اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اجے اگروال اور دیگر درخواست گزاروں کے ساتھ مشترکہ سماعت کررہی تھی۔مسٹر گوئنکا نے نجی اسپتالوں میں کورونا کے علاج کے لئے بھاری فیس وصول کرنے پر رول لگانا اور اس کی زیادہ سے زیادہ فیسیں طے کرنے کی درخواست کی ہے۔ درخواست گزار کا موقف ہے کہ نجی اسپتال ک

ملک بھر میں محنت کشوں کی ہڑتال، کسانوں کا احتجاج

نئی دہلی//جمعرات کے روزملک بھر میں مزدور اور کسان تنظیموں کے کارکنان مرکزی حکومت کی مبینہ عوام دشمن پالیسیوں کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے اور ملک کے مختلف مقامات پر دھرنا احتجاج شروع کیا۔ بائیں بازو کی حمایت یافتہ 10 سنٹرل لیبر یونینوں کی کال پر منعقدہ اس ہڑتال میں بھارتیہ جنتا پارٹی حامی بھارتیہ مزدور سنگھ شامل نہیں ہے۔ مزدور سنگھ نے اس احتجاج و مظاہرہ کو سیاست سے متاثر قرار دیا ہے۔ بینک ورکرز بھی محنت کشوں کی ہڑتال میں شامل ہیں، جس سے ملک بھر میں بینکنگ خدمات متاثر ہیں۔ مرکزی ٹریڈ یونینوں کی اس ایک روزہ ملک گیر ہڑتال میں مختلف سرکاری، نجی اور کچھ غیر ملکی بینکوں کے چار لاکھ ملازمین شرکت کررہے ہیں۔10سینٹرل لیبر تنظیموں میں انڈین نیشنل ٹریڈ یونین کانگریس (آئی این ٹی سی یو)،آل انڈیا ٹریڈ یونین کانگریس (اے آئی ٹی یو سی)، ہند مزدور سبھا (ایچ ایم ایس)، سینٹر فار انڈین ٹریڈ یونینز(سی آئی ٹ

شدید ٹھنڈ میں کسانوں پر پانی کی بوچھار بیحد نا انصافی:راہل

نئی دہلی//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کم از کم امدادی رقم کے مطالبے کے سلسلے میں مظاہرہ کرنے والے کسانوں پر شدید ٹھنڈ میں پانی کی بھوچھار کرنے کو نا انصافی بتاتے ہوئے جمعرات کو کہا کہ حکومت احتجاج کرنے والے کسانوں کی بات سننے کے بجائے ان کی آواز کو دبا رہی ہے مسٹر گاندھی نے ٹویٹ کیا’’کسانوں سے امدادی قیمت چھیننے والے قانون کے احتجاج میں کسانوں کی آواز سننے کے بجائے بی جیپی حکومت ان پر شدید ٹھنڈ میں پانی کی بوچھار مارتی ہے۔ کسانوں سے سب کچھ چھینا جارہا ہے اور صنعت کاروں کو تھال میں سجا کربینک،قرض معافی،ایئرپورٹ،ریلوے اسٹیشن بانٹے جارہے ہیں۔کانگریس کے محکمہ مواصلات کے سربراہ رندیپ سنگھ سرجے والا نے کہا کہ انصاف مانتے کسانوں کے سینے پر پڑنے والی لاٹھیاں بی جیپی راج کے کفن میں آخری کیل ثابت ہون گی اورجیت کسانوں کی ہی ہوگی۔انہوں نے کہا،’’شدید ٹھنڈ کے درمیان

پڈوچیری میں’نوار‘طوفان سے تباہی

پڈوچیری // سمندری طوفان ’نوار‘نے پڈوچیری میں بڑے پیمانے پر تباہی مچا ئی ہے ،طوفان سے متعدد مقامات پر درختوں اور بجلی کے کھمبے اکھڑنے کی اطلاعات ہیں۔ سمندری طوفان ’نوار‘نے بدھ کی رات تمل ناڈو کے ضلع ولپورم کے مرکنم کو عبور کیا۔ پڈوچیری کے ایجل نگر ، وینکٹ نگر ، بالاجی نگر اور دیگر نشیبی علاقوں میں سیلاب آ گیا ہے۔ کچھ مکانات سیلاب کی زد میں ہیں ، جس کی وجہ سے لوگ گھروں سے نکلنے سے قاصر ہیں۔ لیفٹیننٹ گورنر کرن بیدی نے واٹس ایپ پوسٹ میں بتایا ہے کہ صرف گرینڈ بازارپولیس ایریا سے سات درخت گرنے کے واقعات کی اطلاع ملی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ رینبو نگر میں ایک گھر میں بے ہوشی کی حالت میں ایک بوڑھی خاتون اور بچے کو بچایا گیا ہے۔ بارش کے دوران پڈوچیری کے متعدد علاقوں میں بجلی کی فراہمی میں خلل پڑا، جسے بحال کردیا گیا ہے۔ سمندری طوفان کے نتیجے میں جان و مال کے

ملک میں کورونا متاثرین کی تعداد92.66لاکھ،135223 اموات

نئی دہلی// جمعرات کو صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 44489نئے کیس رپورٹ ہوئے جس سے کورونا وائرس متاثرین کی تعداد 92.66 لاکھ سے زائد ہوگئی۔ وہیں، صحت مند مریضوں کی تعداد 86.79 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے ، جبکہ 524 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ اموات کی مجموعی تعداد135223 ہوگئی۔ اس وقت ملک میں کوروناوائرس کے 4،52،344 ایکٹیو کیس موجود ہیں۔ ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران جان لیوا کورونا وائرس (کووڈ۔19) سے سب سے زیادہ ہلاکتیں دہلی ، مہاراشٹر اور مغربی بنگال میں ہوئی ہیں۔ اسی عرصہ کے دوران قومی دارالحکومت دہلی میں کووڈ 19 سے سب سے زیادہ(99) افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ اسی مدت کے دوران مہاراشٹر میں 65 اور مغربی بنگال میں 51 کورونا مریضوں کی موت ہوگئی۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں اس مہلک وبا سے 524 افراد لقمہ اجل بن

کوروناوائرس کی روکتھام | یکم دسمبر سے نئے رہنماخطوط لاگوہوں گے

نئی دلی //چندریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد میں اضافہ کے بعد بدھ کو مرکزی سرکار نے تمام ریاستوں اورمرکزی زیر انتظام علاقوں میں کورونا وائرس کو قابومیں کرنے کیلئے ایک ماہ  تک دوبارہ لوگوں کی نقل و حرکت محدود اور بھیڑ بھاڑ کو قابو کرنے اور وائرس کی روکتھام کیلئے نئے رہنما خطوط جاری کئے ہیں۔ نئے رہنما خطوط کے تحت ریاستوں اور یوٹیز کوریڈزونوں کے دائرے میں آنے والے علاقوں میں رات کا کرفیو نافذ کرنے کی اجازت دی گئی ہے لیکن ریڈزون کے باہر آنے والے علاقوں میں پابندیاں عائد کرنے سے قبل مرکزی سرکار سے مشورہ کرنا ہوگا۔ مرکزی سرکار نے اپنے تازہ رہنما خطوط میں کہا ہے کہ ریاستوں اور یوٹیز کو 72گھنٹوں کے دوران کورونا متاثرین کے رابطوں کا پتا لگانا ہوگا جبکہ ان کی قرنطین سہولیات، علاج و معالجہ فراہم کرنے کی ذمہ داری مقامی انتظامیہ پر عائد ہوگی۔ رہنما خطوط

ملک میں کورونا کا قہر جاری، 44376نئے کیس،481ہلاکتیں

نئی دہلی// ملک میں پھر 44 ہزار سے زیادہ کورونا کے نئے کیس سامنے آنے سے فعال کیسوں میں اضافہ ہوا ہے حالانکہ بازیابی کی شرح جزوی کمی کے ساتھ 93.72 فیصد ہے۔ مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران44376 نئے کیس سامنے آئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 92.22 لاکھ ہوگئی ہے۔ نئے کیسز کے ساتھ فعال معاملات میں 6079 اضافہ ہو۔ اس مدت کے دوران37816مریض صحت مند ہوئے۔ کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد بڑھ کر 8.64 لاکھ ہوگئی ہے۔ اسی عرصے میں مزید 481 مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ اموات کی تعداد بڑھ کر134699 ہوگئی ہے۔ ملک میں فعال کیسز کی شرح 4.82 فیصد تک جا پہنچی ہے جبکہ اموات کی شرح ابھی 1.46 فیصد ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا نے دہلی میں ایک بھیانک شکل دکھائی اور سب سے زیادہ 6224 نئے کیس سامنے آئے۔ مہاراشٹر اور کیرالہ بالترتیب 5439 اور 5420 نئے کیسوں کے ساتھ دوسرے

کانگریس کے 71 سالہ لیڈر احمد پٹیل کا انتقال

نئی دہلی// کانگریس کے سینئر رہنما احمد پٹیل کا بدھ کی صبح ساڑھے تین بجے انتقال ہوگیا۔ انہیں گروگرام کے میدانتا اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں انہوں نے اپنی آخری سانس لی۔ علاج کے دوران ان کے کئی اعضا نے کام کرنا بند کردیا تھا۔ ان کے بیٹے فیصل پٹیل نے ٹویٹر پر اپنے والد کے انتقال کی اطلاع دی۔ فیصل نے لکھا”ایک ساتھ کئی اعضا نے کام کرنا بند کردیا تھا جس کی وجہ سے ان کا انتقال ہوگیا۔ اپنے سبھی خیر خواہوں سے اپیل کرتا ہوں کہ اس وقت کورونا وائرس کے اصولوں پر سختی سے عمل کریں اور سماجی دوری کے سلسلے میں پرعزم رہیں اور کسی بھی اجتماعی انعقاد میں جانے سے بچیں۔“  پٹیل کی عمر71سال تھی اور وہ ایک مہینے پہلے کورونا وائرس سے متاثر ہوئے تھے۔انہیں 15 نومبر کو میدانتا اسپتال کے آئی سی یو میں داخل کرایا گیا تھا۔ سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر رہے پٹیل کی پیدائش 21 اگست 19

ہر شخص کو ویکسین فراہم کرنا حکومت کی ترجیح: مودی

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ حکومت کووڈ ویکسین تیار کرنے کے عمل پر کڑی نگرانی کر رہی ہے اورتمام شہریوں کو اسے آسانی سے میسر کرانا ان کی ترجیح ہے-انہوں نے کہا کہ جس طرح کووڈ کے خلاف مہم میں ہر شخص کی زندگی کو بچانا حکومت کی ترجیح رہی ہے اب بھی اس کا زور ویکسین فراہم کرکے ہر شخص کی جان بچانے پر ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ویکسین کے منفی اثرات کے بارے میں افواہیں پھیلائی جاسکتی ہیں لہذا سرکاری مشینری اور باقی سب کو مل کر لوگوں کو حقیقی صورتحال سے آگاہ کرنا ہوگا۔مختلف ریاستوں میں کووڈ انفیکشن میں اضافہ کے پیش نظر، مسٹر مودی نے آج ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ آٹھ متاثرہ ریاستوں اور مرکزی علاقوں کے وزرائے اعلی سے ایک میٹنگ کی۔ اجلاس میں کووڈ انفیکشن کی صورتحال ، اس سے نمٹنے کے لئے تیاری اور انتظامیہ سے خصوصی تبادلہ خیال کیا گیا۔ نیز لوگوں کو ویکسین کی فراہمی ، تقسیم اور فراہمی جیسے

کوروناکے نئے کیسز میں تیزی تھم گئی ، فعال معاملات میں بھی کمی واقع

نئی دہلی//ملک میں کورونا کیسوں میں تیزی پچھلے کچھ دنوں سے کم ہوگئی ہے اور اس بیماری میں مبتلا افراد کی تعداد میں اضافے نے فعال کیسوں کو کم کیا ہے اور اس کی شرح کم ہوکر پانچ فیصد کے قریب رہ گئی ہے۔پچھلے پانچ دن سے ، کورونا انفیکشن کے 45 ہزار کیس آ رہے تھے ، لیکن منگل کو نئے معاملات میں کمی واقع ہوئی اور یہ تعداد 38 ہزار سے کم رہی۔مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 37،975 نئے کیس سامنے آئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 91.77 لاکھ ہوگئی ہے۔ اس مدت کے دوران ، 42،314 مریض صحت مند ہوگئے ، جس کے نتیجے میں فعال معاملات میں 4819 کی کمی واقع ہوئی ہے اور اس کی تعداد بڑھ کر 4.38 لاکھ ہوگئی ہے۔ اسی عرصے میں ، 480 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 1،34،218 ہوگئی ہے۔ملک میں زیر علاج مریضوں کی شرح کم ہوکر 4.78 ہوگئی ہے اور بازیابی کی شرح 93.76 فیصد ہے

کیجریوال کی مرکز سے 1000 اضافی آئی سی یو بستر محفوظ رکھنے کی اپیل

نئی دہلی// دہلی میں کورونا وائرس کا قہر بڑھنے کے درمیان وزیر اعلی اروند کیجریوال نے منگل کے روز مرکزی حکومت سے سرکاری اسپتالوں میں 1000 اضافی آئی سی یو بیڈ محفوظ رکھنے کی اپیل کی ہے۔وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ ملاقات میں مسٹر کجریوال نے دہلی میں کورونا وائرس کے بڑھنے کے خدشے کے پیش نظر یہ اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دارالحکومت میں کورونا وائرس کے معاملے بڑھنے کے پیچھے آلودگی بھی ایک بڑی وجہ ہے۔وزیراعلیٰ کے دفترکے مطابق وزیر اعلی نے پڑوسی ریاستوں میں پرالی جلانے سے ہونے والی آلودگی سے نجات کے لئے وزیر اعظم سے مداخلت کرنے کی اپیل کی۔وزیر اعلی نے کہا کہ دہلی میں کورونا وائرس کی تیسری لہر کے اثرات رہنے تک مرکزی سرکاری اسپتالوں میں اضافی ایک ہزار آئی سی یو بستردہلی کے لیے محفوظ رکھنے کی درخواست کی ہے۔مسٹر مودی عالمی وبا کورونا وائرس سے فی الحال سب سے زیادہ متاثرہ ریاستوں کیرالہ، مغربی

تازہ ترین