ملک میں کورونا کیسوں میں22252کا اضافہ،، اموات کی تعداد 20 ہزارسے متجاوز

نئی دہلی//ملک میں کورونا وائرس کے یومیہ کیسز دودن تک 24 ہزار سے زیادہ رہنے کے بعد گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس میں کسی حد تک کمی واقع ہوئی ہے ، لیکن اس عرصہ میں 467 افراد کی ہلاکت سے اموات کی مجموعی تعداد 20 ہزار سے متجاوز کر گئی ہے۔ منگل کو مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کی طرف سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا وائرس کے22252 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ، جو گذشتہ ہفتے کے بعد سے سب سے کم ہیں۔ آج ملنے والے کیسز سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد719665 ہوگئی ہے۔ ہفتہ کے روز 22771نئے کیسز درج ہوئے۔ اتوار کو 24850اور پیر کو24248 کیسز تھے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی زد میں آنے سے 467 افراد کی موت کے ساتھ ہی ہلاک شدگان کی تعداد بڑھ کر20160 ہوگئی ہے ۔  

کورونا وائرس

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس عالمی وبا کے 712920لاکھ کیسز کے ساتھ اس وبا سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک کی فہرست میں امریکہ اور برازیل کے بعد تیسرے نمبر پر آ گیا ہے ۔ مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے پیر کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق پورے ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 24,248 نئے کیسز سامنے آئے ہیں جس میں اب تک متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد712920ہو گئی ہے ۔اسی عرصے کے دوران کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 20073ہوگئی ہے جبکہ اس مہلک وبا سے نجات پانے والوں کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے اوراب تک کل6579153افراد شفایاب ہوچکے ہیں۔ ملک میں ابھی کورونا وائرس کے 2,53,287فعال کیسز ہیں۔مہاراشٹر میں سب سے زیادہ متاثرہ کورونا کی وبا سے متاثرہ افراد کی تعداد دو لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے ۔ وائرس کے معاملے میں دوسرے مق

ماسک نہ پہننے کی سزا

حیدرآباد//تلنگانہ میں کورونا معاملات میں اضافہ کا سلسلہ جاری ہے ۔ ریاست بھرمیں 23 مارچ سے ابھی تک ماسک نہ لگانے والے 70 ہزار845 افراد کے خلاف پولیس نے آرٹیفشل انٹلی جنس کے ذریعہ معاملات درج کئے ہیں۔ واضح رہے کہ ماسک نہ لگانے والوں کے خلاف نیشنل ڈیزاسٹرایکٹ کے تحت معاملات درج کرنے کے ساتھ ساتھ ایک ہزارروپئے جرمانہ عائد کیا جارہا ہے ۔یواین آئی

ملک میں لیبارٹریوں کی تعداد1105پہنچ گئی

نئی دہلی// پورے ملک میں کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرنے والے لیب کی تعداد مسلسل بڑھتے ہوئے 1105 ہو گئی ہے ۔ انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (آئی سی ایم آر) کی جانب سے پیر کو جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹے میں کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرنے والے لیب کی فہرست میں مزید پانچ لیب کا اضافہ ہو گیا ہے ۔ ان میں سرکاری لیب کی تعداد 788 اور پرائیویٹ لیب کی 317 ہے ۔ اس وقت حقیقی تعداد آر ٹی پی سی آر مبنی ٹیسٹ لیب 592 (سرکاری 368، پرائیویٹ 224) ہے جبکہ ٹرونیٹ مبنی ٹسٹ لیب کی تعداد 421 (سرکاری 387، پرائیویٹ 34) اور سی بی این اے اے ٹی مبنی ٹیسٹ لیب 92 (سرکاری 33، پرائیویٹ 59) ہیں۔ ان 1105 لیب نے 05 جولائی کو کورونا وائرس کے کل 1,80,596 سیمپل کا ٹیسٹ کیا۔ اس طرح اب تک کل 99,69,662 سیمپل کا ٹیسٹ کیا جا چکا ہے ۔  

ویکسین کاانسانی ٹرائل آج شروع

سرینگر//ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے قہر کے درمیان 7 جولائی سے بھارت بایوٹیک کے ذریعہ تیار کردہ ویکسین کا ہیومن ٹرائل شروع ہونے والا ہے۔ بہار کی راجدھانی پٹنہ واقع ایمس کو کورونک ویکسین ٹرائل کے لیے ملک کے 12ویں ادارہ کی شکل میں منتخب کیا گیا ہے۔ ویکسین کا ٹرائل تین حصوں میں کئے جانے کی بات سامنے آ رہی ہے اور اس ویکسین کو لے کر ڈاکٹر کافی پرامید ہیں۔ پٹنہ ایمز کے سپرنٹنڈنٹ سی ایم سنگھ نے بتایا کہ پہلے فیز میں سیفٹی کے ساتھ کم لوگوں پر ہی ٹرائل کیا جائے گا۔ اس میں کامیابی ملنے کے بعد دوسرے اور تیسرے فیز کا ٹرائل ایمز کے ڈاکٹروں اور ویکسین بنانے والی کمپنی یعنی بھارت بایو ٹیک کے ساتھ مرکزی صحت محکمہ کے افسران و سائنسداں کی دیکھ رکھ میں کیا جائے گا۔  

حکومت چین کے سلسلے میںحقائق چھپا رہی ہے :کانگریس

نئی دہلی//کانگریس نے چین کے ساتھ وزیر اعظم نریندر مودی کے ذاتی تعلقات ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے پیر کو کہا کہ حکومت سرحد کی حفاظت اور چین کی سررمایہ کاری کے سلسلے میں حقائق چھپا رہی ہے ۔ کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے آن لائن پریس کانفرنس میں کہا کہ مودی کی پالیسی چین کے حامی کی ہے اور گذشتہ پانچ برسوں میں چین کی کمپنیوں کی بھاری سرمایہ کاری ہوئی ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ریاست میں مختلف شعبوں میں چین کی کمپنیوں نے تقریباً 47 ہزار کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی ہے ۔ کھیڑا نے کہا کہ مودی نے گجرات کا وزیر اعلیٰ رہتے ہوئے چین کی قیادت کے ساتھ ذاتی تعلقات بنائے جس کا اظہار انہوں نے کئی بارکیا ۔ ملک کے عوام چین کی اشیاء کا بائیکاٹ کر رہے ہیں جبکہ حکومت اہم شعبوں میں چین کی سرمایہ کاری کو فروغ دے رہی ہے ۔ کانگریس کے رہنما نے کہا کہ سرحد پر چین کی فوج کے قبضے پر حکومت غلط حقائق رکھ رہی ہے

تازہ ترین